خبرنامہ نمبر 352/2019
کوئٹہ 02فروری :۔وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان سے کوئٹہ گلیڈی ایٹر ٹیم کے منیجر اعظم خان، فاسٹ بالر انور علی اور کوئٹہ سے تعلق رکھنے والے کھلاڑی جلات خان نے ہفتہ کے روز یہاں ملاقات کی، صوبائی وزیر میر نصیب اللہ مری، مشیر کھیل و ثقافت عبدالخالق ہزارہ، مشیرتوانائی مبین خلجی، وزیراعلیٰ کے کوآرڈینیٹر بلال کاکڑ بھی اس موقع پر موجود تھے، ٹیم منیجرنے وزیراعلیٰ کو ٹیم کی کوئٹہ کے دورے سے متعلق آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ دورے کامقصد کوئٹہ گلیڈی ایٹر کی ٹیم کو کوئٹہ میں پذیرائی حاصل ہو اور مقامی کھلاڑیوں میں کرکٹ کھیلنے کے شوق میں اضافہ ہو، گلیڈی ایٹر کے کھلاڑیوں اور نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعلیٰ نے کہا کہ بلوچستان میں ٹیلنٹ کی کوئی کمی نہیں تاہم ٹیلنٹ آگے لانے کے لئے کھلاڑیوں کو مواقع فراہم کرنا انتہائی ضروری ہیں اور اس سلسلے میں بلوچستان حکومت کھیلوں کے فروغ اور کھلاڑیوں کی حوصلہ افزائی اور انہیں سہولیات کی فراہمی کے حوالے سے اقدامات اٹھارہی ہے، وزیراعلیٰ نے کہا کہ ملک کے دیگر حصوں کی طرح کرکٹ بلوچستان میں بھی بڑے شوق سے کھیلا جاتا ہے اگرپاکستان کرکٹ بورڈبلوچستان پر بھی توجہ دے تو یہاں سے بھی بہترین کھلاڑی ابھر کرقومی ٹیم میں اپنا حصہ بناسکتے ہیں، وزیراعلیٰ نے کہا کہ پی ایس ایل کی کامیابی سے ملک بھر میں کرکٹ کو مزید فروغ مل رہا ہے اور کوئٹہ گلیڈی ایٹر کی کارکردگی سے شائقین مطمئن نظر آتے ہیں، وزیراعلیٰ نے اس یقین کا اظہار کیا کہ کوئٹہ گلیڈی ایٹر میں بلوچستان کے کھلاڑیوں کو بھی مواقع فراہم کرنے کے ساتھ ساتھ صوبے میں ٹیلنٹ کی تلاش میں کیمپس لگائے جائیں جس سے ٹیلنٹ رکھنے والے کھلاڑی سامنے آسکیں گے، وزیراعلیٰ نے آئندہ پی سی ایل ٹورنامنٹ میں کوئٹہ گلیڈی ایٹر کی کامیابی کے لئے نیک خواہشات کا اظہار کرتے ہوئے حکومت کی طرف سے ہرممکن تعاون کی یقین دہانی کرائی۔ بعدازاں کوئٹہ گلیڈی ایٹرکے منیجر اعظم خان نے ٹیم کی طرف سے وزیراعلیٰ کو گلیڈی ایٹر کٹ اور بلا پیش کیا۔ 
()()()
خبرنامہ نمبر 353/2019
کوئٹہ 02فروری :۔وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے ہفتہ کے روز ایوب اسٹیڈیم کا دورہ کیا جہاں انہوں نے اپریل میں ہونے والے نیشنل گیمز کے سلسلے میں ہونے والے تعمیراتی کام کا معائنہ کیا، صوبائی وزیر میرنصیب اللہ مری، مشیر کھیل وثقافت عبدالخالق ہزارہ، وزیراعلیٰ کے کوآرڈینیٹر بلال کاکڑ اور سیکریٹری سی اینڈ ڈبلیو اکبر بلوچ بھی ان کے ہمراہ تھے۔ وزیراعلیٰ نے اسٹیڈیم کے مختلف حصوں فٹبال گراؤنڈ، مگسی بیڈمنٹن ہال، ہاکی گراؤنڈ، یوتھ ہاسٹل اور زیرتعمیر سوئمنگ پول کا معائنہ کیا، سیکریٹری سی اینڈ ڈبلیو اور متعلقہ ایکسیئن نے وزیراعلیٰ کو اسٹیڈیم میں جاری مختلف تعمیراتی منصوبوں سے متعلق بریفنگ دی، اس موقع پر وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ تعمیراتی کام کے معیار پر کوئی سمجھوتہ نہ کیا جائے جس سے ہمارے وسائل کا ضیاع ہواور تعمیرات کا فائدہ بھی نہ ہو، وزیراعلیٰ نے کہا کہ تعمیرات کے دوران غفلت نہ برتی جائے کیونکہ بعض اوقات ذرا سی غلطی یا بدنیتی سے پورے ڈھانچے کو نقصان کاسامنا کرنا پڑتا ہے، وزیراعلیٰ نے کہا کہ نیشنل گیمز کے کامیاب انعقاد اور کھلاڑیوں کو بہترین سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنانے کے لئے موثر اقدامات کئے جائیں اس سلسلے میں حکومت ہرممکن وسائل فراہم کرے گی، وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ ایوب اسٹیڈیم میں مختلف کھیلوں کے سلسلے میں آنے والے کھلاڑیوں کو بہترین سہولیات کی فراہمی کے لئے حکمت عملی وضح کی جائے اور کھلاڑیوں کیلئے باقاعدہ ممبر شپ کا نظام لایا جائے جس سے اسٹیڈیم میں بہتری آئے گی، بعد ازاں وزیراعلیٰ نے ایوب اسٹیڈیم میں کھیلنے والوں بچوں اور کھلاڑیوں کے ساتھ کرکٹ کھیلی اور کھلاڑیوں نے ان کے ساتھ سیلفیاں بنائیں، وزیراعلیٰ کو اپنے درمیان پاکر کھلاڑیوں میں خوشی کی لہر دوڑ گئی۔ 
()()()
خبرنامہ نمبر 354/2019
کوئٹہ 02فروری :۔وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے ہفتہ کے روز سنڈیمن سول ہسپتال میں قائم او پی ڈی کی نئی عمارت کا افتتاح کیا، صوبائی وزیر صحت میر نصیب اللہ مری، مشیر کھیل وثقافت عبدالخالق ہزارہ، وزیراعلیٰ کے کوآرڈینیٹر بلال کاکڑ بھی ان کے ہمراہ تھے، ہسپتال پہنچنے پر سیکریٹری صحت عبدالماجد اور میڈیکل سپرنٹنڈنٹ سول ہسپتال نے وزیراعلیٰ کا استقبال کیا، سیکریٹری سی اینڈ ڈبلیو اکبر بلوچ نے نئی تعمیر شدہ او پی ڈی عمارت کے حوالے سے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ حکومت کی خصوصی ہدایت پر اسے کم وقت میں مکمل کیا گیا ہے جس میں 1700سے 2000تک مختلف امراض کے مریضوں کو او پی ڈی کی سہولیات فراہم کی جاسکے گی، کام میں معیار اور جدید آلات کی تنصیب کو یقینی بنایا گیا ہے، وزیراعلیٰ نے او پی ڈی بلاک میں گائنی وارڈ، آرتھوپیڈک، یورولوجی، میڈیکل، جلد اور دیگر او پی ڈیز کا معائنہ کیا، اس موقع پر وزیراعلیٰ نے ہدایت کہ کہ او پی ڈی میں سی سی ٹی وی نیٹ ورک کی تنصیب کو جلد سے جلد یقینی بنایا جائے اور اس کے مینٹی ننس پر خصوصی توجہ دی جائے، وزیراعلیٰ نے کہا کہ ہمارا مقصد تھا کہ اوپی دی کی عمارت کو وقت پر مکمل کیا جائے تاکہ جلد عوام کو فائدہ ہو، صحت کی سہولیات کے حوالے سے حکومت ہر ممکن کوشش کررہی ہے اور نظام میں بہتری لانے کے لئے کوششیں جاری ہیں جس کے مثبت اثرات جلد سامنے آنا شروع ہوجائیں گے۔ 
()()()
خبرنامہ نمبر355/2019 
کوئٹہ 02فروری :۔صوبائی حکومت عوام کے مسائل حل کرنے میں سنجیدہ ہے ،بلوچستان کو ترقی کی راہ پر گامزن کررہے ہیں ،ملک کی ترقی کی راہیں بلوچستان سے ہوکر گزرتی ہیں۔ وفاقی حکومت بلوچستان کی ترقی کے لیے مزید کردار ادا کرے ،ہم عوامی مسائل کا حل چاہتے ہیں عوام کے مفاد کو نظر رکھ کر کام کریں گے ،عوامی منصوبوں کی بروقت تکمیل پر سمجھوتہ نہیں ہوگاان خیالات کا اظہار صوبائی وزیر پی ایچ ای ،واسا حاجی نورمحمد دمڑ نے بی آر ایس پی کے زیر اہتمام انجنئیرز کے ٹریننگ کے اختتام پر شرکاء میں شیلڈ اور سرٹیفیکٹ تقسیم کرنے کے موقع پر تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ پانی نعمت خداوندی ہے ،کوئٹہ کے عوام کو صاف پانی کی فراہمی یقینی بنائیں گے ،صاف پانی کی فراہمی کے لیے واٹر پلانٹ بنا رہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ ہمیں آنے والے نسلوں کے لیے قطرہ قطرہ پانی بچانا ہوگا۔انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت بلوچستان کے تمام علاقوں کی یکساں ترقی پر یقین رکھتی ہے ۔انہوں نے کہا عوام کو تعلیم ،صحت اور تمام شعبوں میں ریلیف فراہم کریں گے ،امن وامان ،روڈوں کی تعمیر ومرمت اور دیگر شعبوں پر بھرپور توجہ دے رہے ہیں ،موجودہ حکومت کی بہتر کارکردگی کی وجہ سے عوام جلد ہی تبدیلی محسوس کریں گے۔
()()()

خبرنامہ نمبر356/2019 
گوادر 02فروری:۔سپریم کورٹ آف پاکستان کے چیئرمین وائر کمیشن ایڈووکیٹ امان اللہ کنرانی نے کہاکہ گوادر کے لوگوں کو پینے کے صاف پانی کی فراہمی کو مستقل بنیادوں پر حل متعلقہ محکمے اپنی تمام تر صلاحیتوں کو بروئے کار لائیں خیالات کا اظہار انہوں نے گوادر میں پانی کے بحران سے متعلق اجلاس کی صدارت کے دوران بات چیت کرتے ہوئے کیاجلاس میں رکن قومی اسمبلی محمد اسلم بھوتانی رکن صوبائی اسمبلی میر حمل کلمتی ،ڈپٹی کمشنر گوادر کیپٹن ر محمد وسیم ادارہ ترقیات گوادر کے نمائندہ امان اللہ اسکانی پبلک ہیلتھ انجینئرنگ کے چیف انجینئر محمد عمران عالیانی و دیگر حکام نے شرکت کی اجلاس میں گوادر میں پانی کے بحران اور اس حل سے متعلق مختلف امور پر تبادلہ کیا گیا ہے اجلاس میں چیف انجینئر پبلک ہلیتھ نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ گوادر شہر کو پینے کے صاف پانی کی فراہمی کیلے روزانہ 12لاکھ گیلن پانی میرانی ڈیم سے ٹینکروں کے ذریعے فراہم کی جارہی ہے جبکہ ڈیڑھ لاکھ چینی پلانٹ اور،ڈیڑھ لاکھ ایف ڈبلیو او کے پلانٹ سے پائپ لائن ذریعیشہر کو،فراہم کی جارہی ہے جس پر ماہانہ 16کروڑ روپے لاگت آئی جبکہ اب تک گوادر شہر کوپانی کی فراہمی کے لئے پانچ ارب روپے خرچ ہوئے ہیں۔ اجلاس میں کمیشن کے چیرمین نے بتایا گیا ہیکہ اس وقت ضلع میں پانچ ڈیسالنیشن پلانٹ کے پیسے ریلیز ہوچکے ہیں لیکن دس سال سے زائد کا عرصہ گزرنے کے باوجود پلانٹس مکمل نہیں کیا۔ انہوں نے بتایا کہ ٹینکروں پر پیسہ ضائع کرنے کے بجائے شہر کیلئے مستقل بنیادوں پر پانی کی فراہمی کا جلد از جلد انتظامات کئے جائیں انہوں نے بتایا کہ سالانہ اربوں روپے خرچ کرنے کے باوجود لوگوں کو مستقل بنیادوں پر پانی کی فراہمی کے لئے کوئی منصوبہ نہیں ہورہی ہے اس موقع پر اجلاس کو بتایا گیا کہ گوادر میں پانی کے بحران سے نمٹنے کیلئے حکومت مختلف منصوبوں پر عمل درآمد کررہی ہے اس سلسلے میں گوادر اور گردونواح کے علاقوں میں پانی کی فراہمی کے لئے سوڈ ڈیم اور شادی کور ڈیم مکمل ہوچکے ہیں جبکہ سوڈ ڈیم کو گوادر شہر سے پائپ لائن کے ذریعے منلک کردی گی جبکہ شادی کور ڈیم کو گوادر سے منسلک کرنے کے لیے ٹینڈر طلب کردیا گیا ہیاس پر جلد کام شروع کر دی جائے گی دراثنا سپریم کورٹ آف پاکستان کے چیئرمین وائر کمیشن امان اللہ کنرانی نے سر بندن واٹر پلانٹ اور گوادر بندرگاہ کے احاطے میں موجود وائر پلانٹ کا بھی دور اور معائنہ کیا۔
()()()

خبرنامہ نمبر 357/2019
پسنی02 فروری:۔گورنمنٹ ہائیر سکینڈری سکول پسنی میں جماعت دہم کے اعزاز میں الوداعی پرتقریب کا انعقاد کیا گیا۔جس میں پرنسیپل زاہد پھلان سمیت۔ مختلف طبقہ فکر کے لوگوں نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔ الوداعی پروگرام کے مہمان خاص اسسٹنٹ کمشنر کیپٹن ر جمیل احمد اور پی این ایس مکران کمانڈنگ افسر کمانڈر لطیف اللہ تھے۔الوداعی پروگرام میں جماعت دہم کے اعزاز میں طالب علموں نے ملی نغمیاور تقاریر پیش کیے۔اسسٹنٹ کمشنر پسنی کیپٹن ر جمیل احمد،پی این ایس مکران کمانڈنگ افسر لطیف اللہ ،ڈسٹرکٹ آفیسر ایجوکیشن وھاب مجید، میجرعامر پاک آرمی،موٹروے افسر نزیر احمد، پرنسپل شکیل احمد،عزیز پیربخش نے طالب علموں کے الوداعی پروگرام کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کامیاب لوگ کھبی شکایت نہیں کرتے بلکہ کامیابی کے لیے کمٹٹڈ ہوتے ہیں۔ مقررین نے طلبا? کو تعلیم جاری رکھتے ہوئے اپنی منزل طے کرنے کا مشورہ دیا۔ انکا کہنا تھا کہ پسنی کے بچے بہت ہی ذہین اور محنتی ہیں وہ کسی بھی صوبے کے بچوں سے کم نہیں۔کمانڈر لطیف اللہ نے طلباء کو نصیحت کی کہ کامیاب ہمیشہ وہی ہوتے ہیں جو گرنے کے بعد پھر اٹھ کر رختِ سفر باندھ لیتے ہیں اور اپنی جدوجہد کو ن?ے سرے سے شروع کرتے ہیں۔اختتام میں اسکول کے پرنسپل زاہدپھلان نے تمام مہمانانِ گرامی کا شکریہ ادا کیا اور فارغ ہونے والے طلباء کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔اس موقع پر پی این ایس مکران کمانڈنگ افسر لطیف لطیف اللہ،اسسٹنٹ کمشنر کیپٹن ر جمیل احمد،میجر عامر پاک آرمی ،انٹرکالج پرنسیپل شکیل احمد،ڈسٹرکٹ افسر ایجوکیشن وہاب مجید،ایس ایچ او زاہد حسین،محمد منشاء چیف سپروائزر پی ایم ایس اے پسنی،موٹروے پولیس نزیر احمد،معروف گلوکار استادنورمحمد نورل،عزیزپیربخش، ستارحمل ،شاکررند اور دیگر مختلف طبقہ فکر سے تعلق رکھنے والے معززین نے بڑی میں شرکت کی۔
()()()

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Post comment