خبرنامہ نمبر959/2022
کوئٹہ 02 مارچ۔اسپیکر صوبائی اسمبلی میر جان محمد خان جمالی سے صوبائی محتسب خواتین محترمہ صابرہ اسلام نے ملاقات کی۔اسپیکر صوبائی اسمبلی بلوچستان میر جان محمد جمالی نے خاتون محتسب کا اپنے ادارے سے اخلاص اور ان کی کاوشوں کو سراہا اسپیکر بلوچستان اسمبلی صوبائی محتسب خواتین برائے انسدادِ ہراسیت کو توانا اور آزادانہ فعالی کی یقین دہانی بھی کراتے ہوئے کہا کہ صوبے کے تمام اضلاع میں ہماری بیٹیوں اور بہنوں کو ہراساں کرنے کے حوالے سے انصاف کی فراہمی اور درندہ صفت کالی بھیڑوں کو قرار واقعی سزا دے کر معاشرے کو ان سے پاک کرنا اس ادارے کی اولین فرائض میں شامل ہے جس پر کوئی بھی سمجھوتا قابل قبول نہیں۔اس موقع پر صوبائی رکن اسمبلی عبدالواحد صدیقی کی اظہر خان اچکزئی سیکرٹری صوبہ اسمبلی طاہر شاہ کاکڑ ڈی جی کو آرڑنیٹئیر اسلم خان کاکڑ ڑ ڈپٹی ڈائریکٹر صوبائی محتسب خاتون محمد عبداللہ اور محمد ابراہیم کاکڑ بھی موجود تھے۔شرکاءنے اس بات پر زور دیا کہ عوام میں شعور اجاگر کرنے کے لیے خاتون محتسب کے ادارے کو آگاہی پروگرام اور خدمات تیز کرنے کے لئے ہر ممکن کوشش کرنی ہوگی تاکہ بلوچستان کے دور دراز علاقوں میں بھی ہراسمنٹ کے شکار خواتین بلا خوف و خطر اس ادارے سے مستفید ہوں اور انہیں بھی انصاف مل سکے۔ اسپیکر صوبائی اسمبلی نے محترمہ صابرہ اسلام کو اس ضمن میں پارلیمانی ممبران پر مشتمل ہراسمنٹ کمیٹی بنانے کی یقین دہانی کرائی اور 08 مارچ کو صوبائی اسمبلی میں ایک آگاہی پروگرام منعقد کرانے پر بھی اتفاق ہوا جس پر سیکرٹری صوبائی اسمبلی کوپروگرام منعقد کرانے کے احکامات بھی جاری کیے گئے۔صوبائی خاتون محتسب نے بتایا کہ ادارے کو معرض وجود میں آئے تقریبا تین سال ہو چکے ہیںاس عرصہ میں رجسٹر ڈ ،ڈسپوزآف اور انڈر انویسٹیگیشن کیسز زیر سماعت ہے آخر میں صوبائی محتسب خواتین نے اپنے ادارے کو درپیش مشکلات سے بھی آگاہ کیا جس پر اسپیکر بلوچستان اسمبلی نے انہیں حکومت کی جانب سے مکمل تعاون کی یقین دہانی کرائی۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر960/2022
جھل مگسی 02مارچ۔ضلع جھل مگسی میں طلباء کا مباحثہ، مضمون اور آرٹس مقابلہ منعقد ھوئے فائنل مقابلہ – بوائز/گرلز ہائی سکولوں کے ضلعی سطح کے مقابلے سرکٹ ہاو¿س گنداواہ میں منعقد ہوئے۔تقریب کے مہمان خصوصی ڈپٹی کمشنر جھل مگسی ڈاکٹر شرجیل نور تھے۔منعقدہ تقریب میں بچوں نے نعت .ملی نغمے اور ٹیبلو پیش کئے طلباءکے ذریعہ آرٹ ڈرائنگ چارٹ – مضمون لکھنا شامل تھا جیتنے والوں کو پہلے، دوسرے اور تیسرے نمبر پر آنے والو ں کو انعامات بھی دیے گئے۔ – طلباءسے اساتذہ و ڈپٹی کمشنر جھل مگسی ڈاکٹر شرجیل نور نے خطاب میں تعلیم کی اہمیت پر تفصیل کے ساتھ روشنی ڈالی مختلف مقابلوں میں جیتنے والے طلباءکو انعامات بھی دیئے گئے جبکہ مختلف کیٹیگریز میں جیتنے والے طلباءاگلے مرحلے میں آگے بڑھیں گے جو ضلع کی سطح منعقد کئے جائیں گے ڈپٹی کمشنر جھل مگسی ڈاکٹر شرجیل نور نے کہاکہ اس طرح کی سرگرمیوں سے بچوں میں مزید بہتر انداز سے تربیت ہوگی ضلعی انتظامیہ بچوں کو بہترین ماحول کی فراہمی کے لئے ہرممکن اقدامات کررہی ہے تاکہ ہمارا یہ مستقبل روز روشن کی طرح عیاں ہو آج کے اس جدید دور میں بچوں کو ہر طرح سے آگے لانا ہوگا جو وقت کی ضرورت بن چکا ہے انہوں نے کہاکہ بچوں کو اپنے ٹیلنٹ کو مزید ابھارنا ہوگا تاکہ ان کے اندر چھپی ہوئی صلاحیتوں کو مزید آگے لایا جاسکے کیونکہ مستقبل میں انہی بچوں کو ملک وقوم کی خدمت کرنی ہوگی تقریب کےآخر میں تمام شرکاءکے لئے ریفریشمنٹ کا بندوبست بھی کیا گیاتھا۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿

خبرنامہ نمبر961/2022
کوئٹہ 02 مارچ۔ڈپٹی کمشنر خضدار کے ایک حکم نامے کے مطابق خالد مجید، محمد شریف، ضیاءالرحمن ولد عبدالمجید ذات سمالانی سکنہ گجر تحصیل مشکے ضلع آواران کے لوکل سرٹیفکیٹ ان کی اپنی درخواست پر منسوخ کیا جاتا ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر962/2022
کوئٹہ 02مارچ۔محکمہ ثقافت سیاحت اور آرکائیوز حکومت بلوچستان کے ایک اعلامیہ کے مطابق بلوچستان پبلک سروس کمیشن کی سفارش اور مجاز حکام کی پیشگی منظوری سے عمران خان ولد گلاب خان اور محمد یوسف ولد حاجی کمال خان اسسٹنٹ ڈائریکٹر (بی پی ایس-17 ) کو ڈائریکٹوریٹ آف کلچر بلوچستان میں فوری طور پر تعینات کر دیا گیا ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر963/2022
کوئٹہ 02مارچ۔محکمہ ایس اینڈ جی اے ڈی حکومت بلوچستان کے ایک اعلامیہ کے مطابق وزیراعلیٰ بلوچستان نے رکن صوبائی اسمبلی محترمہ مستورہ بی بی کو تا حکم ثانی پارلیمانی سیکرٹری برائے بین الصوبائی رابطہ مقرر کر دیا ہے
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر964/2022
کوہلو 2 0مارچ۔ لیویز لائن کوہلو میں رسالدار میجر شیر محمد مری کی نگرانی میں ضلعی انتظامیہ کی جانب سے ایک پروقار تقریب کا انعقاد کیا گیا جس کے مہمان خصوصی ڈپٹی کمشنر کو ہلو قربان علی مگسی تھے تقریب میں لیویز اور سول سوسائٹی نے بڑی تعداد میں شرکت کی اس موقع پر جوانوں کی طرف سے بلوچی دریس و دیگر روایتی کھیل پیش کئے گئے اس موقع پر ڈپٹی کمشنر قربان مگسی اور میر نثار مری نے کہا آج کے دن کو منانے کا مقصد اپنے بلوچستان کو زندہ رکھنا زندہ قوموں کی نشانی ہے گوکہ ہم جدید دور میں ہیں لیکن اپنی ثقافت کو اجاگر کرنا ہماری زمہ داری ہے سب سے پہلے احمد اقبال کا مشکور ہوں کہ انہوں اس دن کو مختص کیا کہ ہر سال بلوچ 2مارچ بطور ثقافتی دن کےلئے منائیں ڈپٹی کمشنر کا مزید کہنا تھا کہ بلوچستان کی ثقافت امن کی ثقافت ہے پاکستان میں بسنے والی تمام قومیں ایک لڑی میں پروی ہوئی ہیں۔ انھوں نے مزید کہا کہ پاکستان کی دیگر ثقافتوں کی طرح بلوچ کلچر میں بھی محبت اور حب الوطنی کے خدوخال نمایاں ہیں بلوچستان کی ثقافت اپنی ایک منفرد حیثیت رکھتی ہے اور بلوچستان تہذیب و تمدن کا مسکن رہا ہے باشعور قومیں اپنی ثقافتی و روایتی اقدار اور تاریخی ورثے کا تحفظ کرتی ہیں۔ بلوچ کلچر ڈے امن اور یکجہتی کا پیغام لیکر آتاہے اس دن کو منانے کا مقصد ان تمام روایات، ثقافت، منفرد طرز زندگی کو بہتر سمجھنے اور اسے ہمیشہ زندہ رکھنے کی کوشش ہے۔ آج کا یہ دن ہمیں تمام مثبت اصولوں پر پوری طرح سے عمل پیرا ہونے کا درس دیتا ہے اور تخریبی سوچ کی نفی کرتے ہوئے تعمیری معاشرے کی تشکیل کی جانب راغب کرتا ہے ڈپٹی کمشنر کوہلو کا کہنا تھا کہ کوہلو کے لوگ بہادر اور رسم و رواج سے آشنا لوگ ہیں آخر میں ڈپٹی کمشنر نے قبائلی رہنماو¿ں کو شیلڈ پیش کئے اور فن کا مظاہرہ کرنے والے فنکاروں کو نقد انعام سے نوازا اس موقع پر لیویز فورس کی طرف سے سیکیورٹی کے خاطرخواہ انتظامات کئے گئے تھے تحصیلدار عبدالصمد مری، بالو خان مری,وڈیرہ بیورغ مری , تحصیلدار چیف شاہنواز مری ، تحصیلدار جلال خان مری یوتھ صدر مصری خان مری و دیگر موجود تھے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر965/2022
کوئٹہ 02مارچ۔سینئر صوبائی وزیر خزانہ نورمحمددمڑ نے بلوچ کلچر ڈ ے پربلوچ بھائیوں کو مبارکباد دی ہے۔ وزیر خزانہ نے اپنے پیغام میں کہا کہ بلوچستان کی ثقافت امن کی ثقافت ہے۔ جنوبی بلوچستان میں بھی بلوچ کلچر ڈے بھر پور طریقے سے منا یا جا رہاہے۔ انہوں نے کہا کہ بلوچ کلچر ڈے منانے کا مقصد محبت، بھائی چارے اور یگانگت کو عام کرنا ہے۔بلوچستان اور ملک کے دیگر حصوں میں بلوچ کلچر ڈے منا کر بین الصوبائی ہم آہنگی کو فروغ دینا چاہتے ہیں۔ اپنی ثقافت کو یاد رکھنے والی قومیں ہی ترقی کرتی ہیں۔ پاکستان میں بسنے والی تمام قومیں ایک لڑی میں پروئی ہوئی ہیں اور پاکستان کی دیگر ثقافتوں کی طرح بلوچ کلچر میں بھی محبت اور حب الوطنی کے خدوخال نمایاں ہیں۔ وزیر خزانہ نے کہا کہ بلوچستان کی ثقافت اپنی ایک منفرد حیثیت رکھتی ہے اور بلوچستان تہذیب و تمدن کا مسکن رہا ہے  انہوں نے کہا کہ بلوچ کلچر ڈے کی طرح دیگر ثقافتوں کے دن بھی بھرپور طریقے سے منائیں گے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر966/2022
کوئٹہ02مارچ۔پارلیمانی سیکرٹری برائے مذہبی امور ملک نعیم خان بازئی نے 2 0مارچ بلوچ کلچر ڈے کے مناسبت سے اپنے پیغام میں تمام بلوچ بھائیوں کو مبارک باد پیش کی ، اور پشتون بلوچ کو باہمی اتحاد اتفاق اور بھائی چارے سے وطن کے خدمت کرنے کا پیغام دیا،ملک نعیم خان بازئی نے کہا ، کہ ہم پشتون بلوچ بھائی بھائی ہے، ہمارے رسم و رواج و دستور ایک ہیں، ہم ہر خوشی سمیت دکھ درد میں ایک دوسرے کے ساتھ شانہ بشانہ کھڑے ہوں گے، اور ملکر ملک و قوم کی خدمت کریں گے،
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر967/2022
کوہلو 2 0مارچ۔بلوچ ثقافت ڈے کی مناسبت سے لیویز لائن کوہلو میں رسالدار میجر شیر محمد مری کی نگرانی میں ضلعی انتظامیہ کی طرف سے ایک پروقار تقریب کا انعقاد کیا گیا جس کے مہمان خصوصی ڈپٹی کمشنر کوھلو قربان علی مگسی تھے تقریب میں لیویز اور سیول سوسائٹی نے بڑی تعداد میں شرکت کی ہے اس موقع پر جوانوں کی طرف سے بلوچی دریس و دیگر روایتی کھیل پیش کئے گئے اس موقع پر ڈپٹی کمشنر قربان مگسی اور میر نثار مری نے کہا آج کے دن کو مناننے کا مقصد اپنے بلوچستان کو زندہ رکھنا زندہ قوموں کی نشانی ہے گوکہ ہم جدید دور میں ھیں لیکن اپنی ثقافت کو اجاگر کرنا ہماری زمہ داری ہے سب سے پہلے احمد اقبال کا مشکور ہوں کہ انہوں اس دن کو مختص کیا کہ ہر سال بلوچ 2مارچ بطور ثقافتی دن کےلئے منائیں ڈپٹی کمشنر کا مزید کہنا تھا کہ بلوچستان کی ثقافت امن کی ثقافت ہے پاکستان میں بسنے والی تمام قومیں ایک لڑی میں پروی ہوئی ہیں۔ انھوں نے مزید کہا کہ پاکستان کی دیگر ثقافتوں کی طرح بلوچ کلچر میں بھی محبت اور حب الوطنی کے خدوخال نمایاں ہیں بلوچستان کی ثقافت اپنی ایک منفرد حیثیت رکھتی ہے اور بلوچستان تہذیب و تمدن کا مسکن رہا ہے باشعور قومیں اپنی ثقافتی و روایتی اقدار اور تاریخی ورثے کا تحفظ کرتی ہیں۔ بلوچ کلچر ڈے امن اور یکجہتی کا پیغام لیکر آتاہے اس دن کو منانے کا مقصد ان تمام روایات، ثقافت، منفرد طرز زندگی کو بہتر سمجھنے اور اسے ہمیشہ زندہ رکھنے کی کوشش ہے۔ آج کا یہ دن ہمیں تمام مثبت اصولوں پر پوری طرح سے عمل پیرا ہونے کا درس دیتا ہے اور تخریبی سوچ کی نفی کرتے ہوئے تعمیری معاشرے کی تشکیل کی جانب راغب کرتا ہے ڈپٹی کمشنر کوہلو کا کہنا تھا کہ کوہلو کے لوگ بہادر اور رسم و رواج سے آشنا لوگ ہیں آخر میں ڈپٹی کمشنر نے قبائلی رہنماو¿ں کو شیلڈ پیش کئے اور فن کا مظاہرہ کرنے والے فنکاروں کو نقد انعام سے نوازا اس موقع پر لیویز فورس کی طرف سے سیکیورٹی کے خاطرخواہ انتظامات کئے گئے تھے تحصیلدار عبدالصمد مری، بالو خان مری,وڈیرہ بیورغ مری , تحصیلدار چیف شاہنواز مری ، تحصیلدار جلال خان مری یوتھ صدر مصری خان مری و دیگر موجود تھے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر968/2022
ٍگوادر02مارچ ۔ڈائریکٹر جنرل ادارہ ترقیات گوادر اور ڈپٹی کمشنر گوادر نے 02مارچ بلوچ کلچر ڈے کےموقع پر خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ بلوچ کلچر ڈے منانے کا مقصد ہمیں تمام بلوچی روایات ثقافت کو زندہ رکھناہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے ادارہ ترقیات گوادر ضلعی انتظامیہ سندھ بلوچستان انٹرنیشنل بزنس فورم پاکستان، اور میر عبدالغفور ویلفئیر ٹرسٹ کی جانب سے مشترکہ طور پر گوادر جی ڈی اے ماڈل پارک میں منعقدہ بلوچ کلچر ڈے کے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا ھے تقریب سے میر عبدالغفور ویلفیئر ٹرسٹ کے چیئرمین میر ارشد کلمتی، سندھ بلوچستان انٹرنیشنل بزنس فورم کے صدر ارشاد علی سمیت دیگر نے بھی خطاب کیا مقررین نے اپنے خطاب کہا ہے کہ بلوچ کلچر ڈے ہمیں محبت بھارئی چارے اور یگانگت کو عام کرنے اور محبت اور حب الوطنی کے خدو خال نمایاں کرنا کا بتاتا ہے انہوں نے کہا کہ نوجوان تعمیر پہلوو¿ں کو مدنظر رکھتے ہوئے گوادر سمیت بلوچستان بھر کی ترقی میں فعال کردار ادا کریں ۔ بلوچ کلچر ڈے گوادر سمیت ضلع بھر کے چھوٹے بڑے علاقوں میں نہایت جوش و جذبے کے ساتھ منایا گیاہے جس میں پسنی،جیوانی ،اورمارہ،پشکان،گنز اور دیگر شامل ہیں۔بلوچ کلچر ڈے کی مناسبت سے پارک میں مختلف قسم کے اسٹال لگائے گئے ہیں جو بلوچی ثقافتی روایت کے مطابق سجائے گئے ہیں۔ لوگوں کی بڑی تعداد اسٹالوں پر موجود ہیں اور دو مارچ کے پروگرام سے لطف اندوز ہورہے ہیں دو مارچ کلچر ڈے کے تقریب کا افتتاح جی او سی جنرل عنایت حسین، ڈپٹی کمشنر گوادر کیپٹن ریٹائرڈ جمیل احمد ڈاٹریکٹر جنرل ادارہ ترقیات گوادر مجیب الرحمٰن قمبرانی اور سندھ بلوچستان انٹرنیشنل بزنس فورم کے صدر ارشاد علی اور میر ارشد کلمتی نے فیتہ کاٹ کر باقاعدہ آغاز کردیا 2 مارچ کی مناسبت سے ماڈل پارک میں منعقدہ بلوچ کلچراورثقافت کے مختلف پہلوو¿ں کو اجاگر کیا جائے گا۔مہمانوں کو بلوچی ثقافتی پگڑی بھی پہنایا گیا۔ اسکول کے بچوں نے بلوچی دو چاپ بھی پیش کیا گیا۔ بلوچ فنکار اپنے فن کا مظاہرہ کیا اور بلوچی موسیقی میں فن کاروں نے اپنے اپنے فن کا مظاہرہ کیا اور داد وصول کیے
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر969/2022
گوادر02مارچ۔ادارہ ترقیات گوادر ، ضلعی انتظامیہ میر عبدالغفور کلمتی ویلفئیر ٹرسٹ اور سندھ بلوچستان انٹرنیشنل بزنس فورم کی اشتراک سے بلوچ ثقافتی دن کا پہلے دن شایان شان طریقے سے منایاگیابلوچ کلچر ڈے کے افتتاحی تقریب میں پاک آرمی جی او سی میجر جنرل عنایت حسین ، چیرمین گوادر پورٹ اتھارٹی نصیر خان کاشانی ، ڈپٹی کمشنر گوادر کیپٹن (ر) جمیل احمد ، ڈائریکٹر جنرل ادارہ ترقیات مجیب الرحمان قمبرانی ، گوادر کے معروف سیاسی شخصیت میر ارشد کلمتی ، سندھ بلوچستان انٹرنئشنل بزنس فورم کے ارشاد شاد نے شرکت کی۔ تقریب کے آخری حصے میں گوادر کے بزرگ سیاستدان سابق صوبائی وزیرمیر عبدالغفور کلمتی نے بھی شرکت کر کے مختلف اسکولوں کے کلچر اسٹالز اور تقریب میں حصہ لینے والے بچوں میں انعامات تقسیم کیے ادارہ ترقیات گوادر کے ڈائریکٹر جنرل مجیب الرحمان قمبرانی نے برزگ سیاستدان اور سابق صوبائی وزیر میر عبدالغفور کلمتی کو بلوچی ثقافتی پگڑی پاگ بھی پہنایا اس موقع پر میر ارشد کلمتی سمیت جی ڈی اے گوادر اور دیگر اداروں کے آفیسراں بھی موجود تھے
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر970/2022
سبی 02 مارچ ۔سبی کا تاریخی و ثقافتی میلہ مویشیاں واسپاں 2022 کی مناسبت سے آج بروز جمعرات پبلک پاک سبی میں خواتین اور بچوں کے لئے مینا بازار کا انعقاد کیا جا رہا ہے جس کے مہمان خصوصی اسسٹنٹ کمشنر سبی ثناءماہ جبیں عمرانی ہونگی مینا بازار میں خواتین اور بچوں کی دلچسپی کے حوالے سے مختلف سٹال لگائے گئے ہیں واضح رہے کہ ہر سال سبی میلہ کے آغاز کے ساتھ مینا بازار کا انعقاد بھی کیا جاتا ہے تاکہ خواتین اور بچوں کو تفریح کے وسیع مواقع میسر آسکیں۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر971/2022
کوئٹہ 02مارچ۔چیف جسٹس بلوچستان ہائی کورٹ جناب جسٹس نعیم اختر افغان نے زیر تعمیر جوڈیشل کمپلیکس سریاب میں پودا لگا کر شجر کاری مہم کا افتتاح کر دیا اس موقع پر بلوچستان ہائی کورٹ کے جسٹس ہاشم خان کاکڑ جسٹس محمد اعجاز سواتی جسٹس کامران خان ملاخیل جسٹس ظہیر الدین کاکڑ جسٹس عبداللہ بلوچ جسٹس نذیر احمد لانگو جسٹس روزی خان بڑیچ جسٹس عبدالحمید بلوچ رجسٹرار بلوچستان ہائی کورٹ راشد محمود سیشن جج سریاب جان محمد گوہر ایڈوکیٹ جنرل آصف ریکی ایڈوکیٹ صدر کوئٹہ بار ایسوسی اہشن اجمل کاکڑ اور وائس چیئرمین بار کونسل قاسم گاجیزئی موجود تھے چیف جسٹس بلوچستان ہائی کورٹ جناب جسٹس نعیم اختر افغان نے کہا کہ ماحولیاتی آلودگی کو کم کرنے کے لیے درخت لگانا بےحد ضروری ہے کیونکہ ہم عالمی تغیراتی تبدیلیوں کی وجہ سے انسان اور دیگر حیوانات کی زندگیوں کو شدید خطرات درپیش ہے لہذا ہر شخص شجر کاری مہم میں حصہ لیکر ایک درخت ضرور لگائے اور اس کی آبیاری نگہداشت اور حفاظت کو یقینی بنائیں تاکہ یہ درخت تناور ہوکر انسانی ماحول کو صاف ستھرا اور خوبصورت بنائے بعد ازاں چیف جسٹس بلوچستان ہائی کورٹ نعیم اختر افغان نے زیر تعمیر سریاب جوڈیشل کمپلیکس کا معائنہ بھی کیا اور کنٹریکٹر کو جلد از جلد تعمیر اور معیار کے حوالے سے ہدایات بھی دیں
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر972/2022
کوئٹہ : 2مارچ۔محسن حسن بٹ نے آج بلوچستان کے 34ویں انسپکٹر جنرل آف پولیس کے طور پر چارج سنبھال کر باقاعدہ طور پر کام شروع کر لیا۔ انہوں نے 1989میں محکمہ پولیس جوائن کیا اور چھ سال تک سندھ میں اے ایس پی کے عہدے پر خدمات انجام دیں 1996کو ان کا پنجاب تبادلہ ہو گیا 2004سے2008تک اس وقت کے وزیر اعظم شوکت عزیز کے ساتھ اپنی خدمات انجام دیں جبکہ موٹر وے میں اے آئی جی ٹریننگ بھی رہ چکے ہیں اس کے بعد صومالیہ امن مشن پر گئے 2013میں واپسی کے بعد انہیں ایف آئی اے میں تعینات کر دیا گیا اور 2017تک ایف آئی اے میں مختلف ڈائریکٹرز کے عہدوں پر خدمات انجام دیتے رہے 2017میں ایڈیشنل آئی جی پنجاب تعینات کیا گیا تھا جبکہ دسمبر2017 میں ممبر نیکٹا بنا دیا گیا 2018میں نگران وفاقی حکومت نے محسن حسن بٹ کو بلوچستان کا انسپکٹر جنرل آف پولیس تعینات کیا جو 13جون سے19فروری 2021تک بلوچستان میں بحیثیت انسپکٹر جنرل آف پولیس فرائض انجام دے چکے ہیں۔ موجود ہ وفاقی حکومت نے 23فروری 2022کو ایک بار پھر انہیں انسپکٹر جنرل آف پولیس بلوچستان تعینات کیا۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر973/2022
کوئٹہ : 2مارچ۔آئی جی پولیس بلوچستان محسن حسن بٹ سینٹرل پولیس آفس آمد پر پولیس آفیسران نے ان کا استقبال کیا. قبل ازیں انہیں پولیس کے چاق و چوبند دستے نے سلامی دی.انہوں نے اس موقع پر بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ بلوچستان میرے لئے نیا صوبہ نہیں۔ یہاں کے لوگ باوقار اور روایتی ہیں.انہوں نے کہ امن وامان کی بہتری کے لیے موجودہ وسائل کو بروئے کار لایا جائے گا. پولیس اور عام شہری کے مابین مربوط رشتے کو مضبوط بنائیں گے.تھانہ کلچر میں بہتری لاتے ہو ئے ایف آئی آر کا اندراج کے ساتھ شہریوں کے مسائل کے فوری حل کے لئے ترجیحی بنیادوں پر موجود میکیزم پر عملدرآمدکیا جائے گا. انہوں نے کہا کہ شہداءکے خاندانوں کی کفالت اور ان کی فلاح و بہبود کے حوالے سے ہر ممکن اقدامات کئے جا رہے ہیں. فورس کو جدید تربیت اور سہولیات کی فراہمی کے لئے کوشاں رہیں گے.انہوں نے آفیسر ان پر زور دیتے ہوئے کہا کہ عوام کے جان و مال کی تحفظ کو یقینی بنائیں اور مستقبل کے چیلنجوں سے نمٹنے کیلئے اپنی پیشہ ورانہ صلاحیتوں کو بروئے کار لایا جائے۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ میں جزا و سزا کا نظام موجود ہے جس کے تحت اچھی کارکردگی پر حوصلہ افزائی و انعام جبکہ سست روی کے شکار اہلکاروں کو خود احتسابی کے نظام کے تحت سزا دیا جائے گا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Post comment