خبرنامہ نمبر1783/2022
کوئٹہ۔28 اپریل کنسلٹنٹ کوآرڈینیٹر بلوچستان تھنک ٹینک نیٹ ورک (BTTN) بریگیڈیئر آغا احمد گل (ر)نے کہا ہے کہ طلباءاور اساتذہ کے درمیان باہمی مکالمے کو فروغ دیاجائے اور اعلی تعلیمی اداروں میں خوف کے ماحول کے بجائے تہذیب امید اور دوستانہ ماحول کے ذریعے تعلیمی ترقی کے اہداف حاصل کئے جائیں اساتذہ کو سیاست میں ملوث ہونے اور طلباءکو جعلی ڈگریوں کے حصول سے باز رہنا چاہیے۔ اگر حقیقی تعلیم کو آگے بڑھانا ہے تو اس کلچر کا خاتمہ ضروری ہے۔ اگر اس ثقافت کو سماجی طور پر مسترد نہیں کیا گیا تو بلوچستان میں ایجوکیشن کا کوئی مستقبل نہیں ہوگا، ان خیالات کا اظہا رانہوں نے بلوچستان میں تعلیم کے ذریعے نوجوانوں کی ترقی” کے موضوع پر ایک روزہ سیمینارسے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر پینل میں مقررین کے طور پر اپنے اپنے شعبوں کے قابل ذکر ماہرین شامل تھے، جن میں ڈاکٹر فیض کاکڑ، ڈاکٹر کوثر ایس خان، مسٹر امجد رشید اور ڈاکٹر ایم سعادت بلوچ۔ سیمینار کی صدارت بریگیڈیئر آغا احمد گل (ر) نے کی۔ بریگیڈیئر (ر) آغا احمد گل نے مقررین کی جانب سے مدلانہ طور پر اور صاف گوئی سے بھرپور گفتگو کرنے پر ان کا شکریہ ادا کیا انہوں نے حال ہی میں بلوچستان کی صوبائی اسمبلی سے منظور کیے گئے ہائر ایجوکیشن ایکٹ کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ وائس چانسلر کے انتخاب کے انتخاب اور اعلی تعلیمی حکام کے ملازمتوں کو تحفظ فراہم کرنے کیلئے مزید اقدامات کی ضرورت ہے انہوں نے پرزور سفارش کی کہ تعلیم کو غیر سیاسی کیا جائے اور ایجوکیشن سسٹم کو میرٹ پر رکھا جائے ڈاکٹر کاکڑ نے بلوچستان میں تعلیم کے ذریعے نوجوانوں کی سماجی و اقتصادی ترقی کی ضرورت پر روشنی ڈالی۔ انہوں نے نشاندہی کی کہ بلوچستان میں تعلیم قومی سطح تک نہیں ہے، بین الاقوامی معیار کی کیا بات کی جائے اور فنی مہارتوں کو سیکھنے اور بڑھانے کے بجائے ڈگری حاصل کرنے پر توجہ دی جاتی ہے۔ انہوں نے ٹیکنالوجی اور پیشہ ورانہ تعلیم کے استعمال کی ضرورت پر زور دیا۔ ڈاکٹر کوثر ایس خان، اے کے یو کراچی میں کام کر رہے ہیں، جو کہ تعلیم کے فروغ کے لیے مختلف قومی اور بین الاقوامی تنظیموں کے ساتھ کام کرنے کا وسیع تجربہ رکھنے والے ماہرین تعلیم نے تعلیم کے ذریعے تہذیب کو فروغ دینے کے بارے میں حاضرین کو آگاہی دی انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ تعلیم سب کے لیے ہونی چاہیے اور باہمی احترام کی ثقافت کو فروغ دینا چاہیے۔ ڈاکٹر کوثر خان نے تعلیم کے شعبے میں تحقیق اور ترقی کی مشق کرنے کی ضرورت پر زور دیا اور نوجوانوں کو تعلیم یافتہ ہونے کی بنیاد کے طور پر خود کی عکاسی اور انسانیت کے بارے میں تعلیم دینے کی مستقل ضرورت پر زور دیا۔ طارقی فاونڈیشن کے سی ای او امجد رشید نے فنی اور پیشہ ورانہ تعلیم کی اہمیت اور صوبے میں اس کی اشد ضرورت پر روشنی ڈالی۔ انہوں نے کہا کہ حکومت بلوچستان کو چاہیے کہ وہ بلوچستان کے نوجوانوں کے لیے فنی تعلیم کو فروغ دے اور اسے اپ ڈیٹ کرے۔ انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ بلوچستان کے ہنر مند نوجوان بلوچستان کی سماجی و اقتصادی ترقی اور فلاح و بہبود میں اضافہ کریں گے۔آخر میں، یونیورسٹی آف بلوچستان کے ڈاکٹر میر سعادت بلوچ نے پاور پوائنٹ ڈسپلے کا استعمال کرتے ہوئے طلباءاور اساتذہ کے درمیان رابطے کی کمی اور امید کے بجائے خوف پر توجہ مرکوز کرنے کی وضاحت کی۔ انہوں نے اشارہ کیا کہ نوجوانوں میں بے روزگاری کی شرح 60 فیصد پر چھائی ہوئی ہے اور اسکول چھوڑنے والے نوجوانوں کی شرح بہت زیادہ ہے۔ انہوں نے تعلیم کے ذریعے بلوچستان کے نوجوانوں کی ترقی کے لیے مختلف طریقوں اور مزید فنڈز مختص کرنے کی تجویز دی۔ ڈاکٹر میر سادات نے بلوچستان کے شہری اور دیہی علاقوں کے بارے میں کچھ حقائق اور اعداد و شمار بتاتے ہوئے بلوچستان میں تشدد کی ہولناکیوں کو کم کرنے کے لیے تعلیم کو فروغ دینے کی ضرورت پر روشنی ڈالی۔ انہوں نے دلیل دی کہ چونکہ تعلیم تنقیدی اور تجزیاتی سوچ کی صلاحیتوں کو فروغ دیتی ہے، اس لیے یہ نوجوانوں کو حل پر مبنی نقطہ نظر کو فروغ دینے اور تشدد سے باز رہنے کی ترغیب دے گی۔ سپیکر نے کہا کہ ہمارے تعلیمی اداروں میں نصاب اور طریقہ کار کو دور حاضر کے تقاضوں کے مطابق تبدیل کرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے متوازی محکموں اور اداروں کے قریبی اور معاون کردار کے ساتھ تکنیکی اور پیشہ ورانہ تعلیم کو فروغ دینے پر بھی زور دیا۔۔ سیمینار کی اختتامی تقریب کے موقع پر مقرر نین اس عزم کا اظہار کیا کہ مستقبل میں بھی اس طرح کے مزید مباحثے ہوں گے جو بلوچستان کے نوجوانوں کی ترقی کے لیے کارآمد ثابت ہوں گے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1784/2022
دکی28اپریل۔ڈپٹی کمشنر دکی عظیم کاکڑ کی زیر صدارت چوری اور ڈکیتی کی وارداتوں کی روک تھام کے سلسلے میں اعلی سطحی اجلاس منعقد ہوااجلاس میں اسسٹنٹ کمشنر حضرت ولی کاکڑ،ایس ایچ او د محمد رفیق، ایڈیشنل ایس ایچ او عبداللہ باتوزئی،رسالدار میجر لیویز علی محمد شادوزئی،لیویز رسالدار اسرار احمد ترین اور لیویز تھانوں کے انچارج نے شرکت کی۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر عظیم کاکڑ نے کہا کہ روزانہ چوری اور ڈکیتی کی سات آٹھ وارداتیں رپورٹ ہوتی ہیں مگر پولیس اور لیویز کی کارکردگی نہ ہونے کے برابر ہے انہوں نے غیر حاضری پر 19 لیویز اہلکاروں کی دس سے بیس دن کی تنخوائیں کاٹنے کا حکم دیتے ہوئے کہا کہ آئندہ لیویز ایریا میں واردات رپورٹ ہونے پر متعلقہ انچارج سے پندرہ دن کی تنخواہ کاٹی جائیگی انہوں نے کہا کہ ایس ایچ او جرائم کا ایف آئی آر درج نہیں کرتا اور سائلین کو اطلاعی رپورٹ دینے کے لئے کہتا ہے جوکہ اب برداشت نہیں کی جائیگی،انہوں نے ہدایت جاری کی کہ آئندہ درخواست پر فوری طور پر ایف آئی آر درج کی جائے، وارداتوں کی روک تھام کے سلسلے میں گشت بڑھا کر دن رات کیا جائے اور اس سلسلے میں لیویز اور پولیس کی مختلف ٹیمیں تشکیل دی گئی جوکہ مشترکہ گشت کریگی،جبکہ اسسٹنٹ کمشنر حضرت ولی کاکڑ ان ٹیموں کی نگرانی کرینگے،انہوں نے کہا کہ چوروں اور ڈاکوں کے خلاف بلا امتیاز آپریشن کرکے انکے ٹھکانوں پر چھاپے مارے جائیں اور سخت سے سخت قانونی کاروائی کرکے ایف آئی آر درج کیا جائے۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آئندہ نااہلی دکھانے والے آفیسران کے خلاف بھی سخت کاروائی کی جائیگی، دکی شہر مکمل طور پر ڈیڑھ کلومیٹر ہے اس ایریا میں وارداتوں پر قابو نہ پانا پولیس اور لیویز کی ناکامی ہے آئندہ غفلت برداشت نہیں کی جائیگی۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1785/2022
لورالائی28 اپریل- ایس ایس پی لورالائی عرفان بشیراور ایس ڈی پی او اکبر علی بگٹی نے 17 دسمبر 2012 کو کوئٹہ میں دوران ڈیوٹی نامعلوم دہشتگردوں کی فائرنگ سے زخمی ہونے والے ڈسٹرکٹ پولیس لورالائی کے کانسٹیبل محمد اکبر کے گھر پہنچ گئے اور انکے عیادت کی ۔ایس ایس پی لورالائی کی جانب سے زخمی کانسٹیبل کو اپنی جانب سے راشن اور عیدی دی۔محمد اکبر کانسٹیبل 17 دسمبر 2012 کو دیگر ساتھیوں کے ہمراہ جناح روڈ منان چوک کوئٹہ گشت ڈیوٹی پر تھے کہ نامعلوم دہشتگردوں نے ڈائریکٹر جنرل تعلقات عامہ کو ٹارگٹ کیا اور پولیس پارٹی دہشتگردوں کا پیچھا کیا تھا جس پر دہشتگردوں کی فائرنگ سے ایک اے ایس ائی اور ایک کانسٹیبل شہید ہو گئے تھے جبکہ کانسٹیبل محمد اکبر کو گردن پر گولی لگنے سے شدید زخمی ہو گیا تھا اور زخمی کانسٹیبل اس وقت معذور ہے اور اپنے گھر پر زیرعلاج ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1786/2022
کوئٹہ 28اپریل :۔ سینٹرل پولیس آفس بلوچستان کوئٹہ کے جاری کر دہ ایک اعلامیہ کے مطابق تعیناتی کے منتظر اختر حیات خان (بی پی ایس-20) کوڈی آئی جی ٹیلی کمیونیکیشن بلوچستان کوئٹہ، تعیناتی کے منتظر ناصر مختار راجپوت (بی پی ایس-20) ڈی آئی جی اے ٹی ایف بلوچستان کوئٹہ تعینات ،ڈی آئی جی ٹیلی کمیونیکشن بلوچستان کوئٹہ محمد شہزاد آصف خان (بی پی ایس-19)اور ڈی آئی جی سی ٹی ڈی بلوچستان کوئٹہ کیپٹن (ر)جواد قمر (بی پی ایس-19)کو سینٹرل پولیس آفس کوئٹہ رپورٹ کرنے کی ہدایت کی گئی ہے جبکہ تعیناتی کے منتظر اعتزاز گورایہ (بی پی ایس-19)کو ڈی آئی جی سی ٹی ڈی بلوچستان کوئٹہ تعینات کر دیا گیا ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿

خبرنامہ نمبر1787/2022
کوئٹہ 28اپریل۔ ممبر قومی اسمبلی زبیدہ جلا ل نے اپنے ٹوئیٹر پیغام میں کر اچی بم دھما کہ کی مذمت کر تے ہو ئے کیا ہے کہ تشدد سے کبھی انصا ف نہیں ملتا ہے اس بے رحما نہ حملے میں جا ں بحق اور زخمی ہو نے والے اسا تذہ کے غمزادہ خا ندان سے تعزیت کا اظہا ر کرتے ہو ئے انھو ں نے کہا ہے کہ اس طرح کے و اقعا ت نا قا بل بر د اشت ہے جس کی مذمت کرتے ہیں ۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1788/2022
دکی 28اپریل۔و فا قی وزیر د فا عی پید و ار سردار اسرار خا ن ترین نے جا معہ کر اچی و اقعہ کی شدید الفاظ میں مذمت کر تے ہو ئے کہا ہے کہ د ہشت گردی کے خلاف جا ری جنگ میں پو ری قوم متحد ہے دہشت گر د اس طرح کے تخریبی کا رو ائیوں سے امن کو سیو تا ژ کر نے کی نا کا م کوشش کرر ہے ہیں ان پر و اضح کرنے چا ہتے ہیں کہ وہ کبھی اپنے نا پا ک عزائم میں کا میا ب نہیں ہو سکتے ہیں ا نہو ں نے کہاکہ مٹھی بھر د ہشت گرد اس طرح کے و اقعا ت سے اپنی مری ہو ئی سا کھ کو زندہ رکھنے کی نا کا م کو شش کر رہے ہیں جس میں وہ کھبی کا میا ب نہیں ہو نگے آخر میں انھوں نے جا ں بحق اور زخمی ہو نے والے ا سا تذہ کے خا ندانوں سے اظہا ر تعزیت کیا ہے اور زخمیوں کی جلد صحت یا بی بھی دعا کی ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1789/2022
کو ئٹہ 28اپریل۔ بلو چستان سے رکن قو می اسمبلی میرا حسا ن اللہ ریکی نے ایک بیان میں گزشتہ روز کے جا معہ کر اچی و اقعہ میں غیر ملکی اسا تذہ کو نشانہ بنا نے کی شد ید مذمت کرتے ہو ئے کہا ہے کہ حا لیہ و اقعہ کی مثا ل نہ پا کستان کے شا ندار تاریخ میں نہ بلو چ رو ایت میں ملتی ہے استاد صر ف استاد صر ف ا ستاد ہو تا ہے جن کا نہ کسی سیا سی جما عت اور نہ ہی سکیو رٹی دستے سے تعلق ہو تا ہے ان اسا تذہ کا مشن اور مقصد پا کستانی طلبہ کو علم کی زیو ر سے آراستہ کرنا تھا ان کا اور کو ئی دو سرا ایجنڈانہ تھا ہما ری بلوچی رو ایت میں تو مہمان اور اسا تذہ کو انتہائی عزت کی نگاہ سے دیکھا جا تا ہے اور انکی حفا ظت اپنی جا ن سے زیادہ ہوتی ہے گذشتہ روز کا و اقعہ اسلا م اور بلو چی دو نوں ر و ایات کے منا فی ہے جس کی جتنی مذمت کی جا ئے کم ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنا مہ نمبر1790/2022
کوئٹہ۔ 28 اپریل  ایوان بالا میں بلوچستان عوامی پارٹی کی رکن سینیٹرثناء جمالی نے چائنیز انسٹیٹوٹ آف کامرس ڈیپارٹمنٹ کراچی م میں ہونے والے دھماکے کی شدید الفاظ میں  مذمت کرتے ہوئے اسے انسانیت سوز واقعہ قرار دیا ہے بدھ کو جاری اپنے ایک بیان میں سینیٹر ثناء جمالی نے کہا کہ غیر ملکی قوتیں پاکستان کا امن تباہ کرنا چاہتی ہیں ملک میں ایک بار پھر سر اٹھاتی دہشت گردی پر سنجیدگی سے غور اور اس کے ادارک کی ضرورت ہے دہشت گردی کی ایسی کارروائیاں نیک شگون نہیں انہوں نے کہا کہ ملک میں قیام امن کے لئے پاک فوج قانون نافذ کرنے والے اداروں اور پوری قوم نے بیش بہا قربانیاں دی ہیں اور ہم نے ملک میں امن کے قیام کے لئے بھاری قیمت چکائی ہے کراچی جیسے واقعات امن کو تہہ و بالا کرنے کی سازش ہے ثناءجمالی نے کہا کہ دکھ کی اس گھڑی میں متاثرہ غمزدہ خاندانوں کے ساتھ ہیں اور خود کش دھماکے کے نتیجے میں زخمی ہونے والوں کی جلد صحت یابی کے لیے دعاگو ہیں۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1791/2022
کوئٹہ 28اپریل۔عدالت عالیہ بلوچستان کوئٹہ کے ایک اعلامیہ کے مطابق چیف جسٹس ہائی کورٹ بلوچستان کے احکامات پر بلوچستان ہائی کورٹ کوئٹہ، سبی اور تربت بنچز، ضلعی اور سیشن عدالتیں، خصوصی عدالتیں اور ٹربیونلز کی عید الفطر کی تعطیلات 02 مئی 2022 سے 05 مئی 2022 (پیر سے جمعرات) تک ہونگیں۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1792/2022
کوئٹہ 28اپریل،ڈپٹی کمشنر کوئٹہ شہک بلوچ نے کہا ہے کہ کتابوں کو بہتر دوست اور کامیابی کی کنجی بھی کہا جاتا ہے کتابوں کا مطالعہ ایک عام انسان کو عظیم انسان بنانے میں کلیدی کردار ادا کر سکتی ہے کتابیں دماغ کو روشن کرنے اور انسان میں شعور پیدا کرنے کے ساتھ ساتھ علم و آگہی کے دیپ بھی جلاتی ہے۔ کتابیں معلومات اور علم بڑھانے کا سب سے پائیدار اور مستند ذریعہ گردانا جاتا ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے بلوچستان ڈویلپمنٹ آرگنائزیشن کے تعاون سے گورنمنٹ پرائمری سکول یٹ روڈ میں نو تعمیر محترمہ نیازرانا ڈیجیٹل لائبریری کے افتتاح کے موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا اس موقع پر اسسٹنٹ کمشنر صدر ابراہیم شاہ ،پرنسپل یٹ روڈ پرائمری سکول دیگر اساتذہ اور عملہ بھی موجود تھے انہوں نے کہا کہ تعلیمی اداروں میں سہولیات کی فراہمی سے تعلیمی معیار میں بہتری سے ہی بچوں کے مستقبل سنوار سکتے ہیں ضلع بھر کے اسکولوں میں بنیادی سہولیات کے ساتھ ساتھ فرنیچر اورعمارتوں کی بہتری کے لئے ہر ممکن اقدامات کئے جا رہے ہیں انہوں نے کہا کے تعلیمی ماحول کی بہتری کیلئے اساتذہ اور والدین کا کردار اہمیت کا حامل ہے لہذا اساتذہ بچوں کے مستقبل کی خاطر تعلیم پر خصوصی توجہ مرکوز کریں انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت کوئٹہ میں مزیدچھ ڈیجیٹل لائبریز کے قیام کے منصوبے پر عمل پیرا ہے تاکہ طلباءکو بہترین تعلیمی ماحول فراہم کیا جاسکے انہوں نے کہا کہ کوئٹہ کے اسکولوں کے درپیش مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کیے جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ نئی نسل کو کتب بینی کا شوق اور موجودہ دور کے چیلنجوں سے نمٹنے کیلئے تمام تر ہر سہولت فراہم کر رہے ہیں طلباءو طالبات کو جدید دور کے تقاضوں کے مطابق ڈیجیٹلائزڈ علوم سے روشناس کرانا بے حدضروری ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1793/2022
کوئٹہ 28اپریل۔محکمہ نظم و نسق ملازمت ہائے عمومی حکومت بلوچستان کے مطابق بلوچستان بھر میں عیدالفطر کی تعطیلات 2مئی سے 05 مئی 2022ء ( سوموار تا جمعرات )ہونگی
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1794/2022
کوئٹہ 28اپریل۔محکمہ معدنیات اور معدنی وسائل حکومت بلوچستان کے ایک اعلامیے کے مطابق محکمہ کے اسسٹنٹ پرائیویٹ سیکرٹری (بی-16) عنایت اللہ عمر کی بالائی حد 60 سال کو پہنچ کر سرکاری ملازمت سے 04مئی 2022ءکو ریٹائر ہو جائیں گے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1795/2022
کوئٹہ 28اپریل۔محکمہ کالجز ہائیر اور ٹیکنیکل ایجوکیشن حکومت بلوچستان کے ایک اعلامیہ کے مطابق صوبے کے تمام کیڈٹ کالجز اور بی آر سی کالجوں کی عیدالفطر کی تعطیلات 26اپریل سے 08مئی 2022ءتک ہوں گی۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1796/2022
کوئٹہ 28اپریل۔محکمہ خزانہ حکومت بلوچستان کے جاری کردہ ایک اعلامیے کے مطابق صوبائی کابینہ کی پیشگی منظوری سے ای بڈنگ (e-biding)کا اطلاق یکم جولائی 2022ءسے ہوگا۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1797/2022
کوئٹہ 28اپریل۔عبدالقدوس اچکزئی نے محکمہ خزانہ حکومت بلوچستان میں بطور ایڈیشنل سیکرٹری چارج سنبھال کر کام شروع کر دیا ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1798/2022
کوئٹہ 28اپریل۔ممبر بلوچستان صوبائی اسمبلی سردار سرفراز ڈومکی نے گذشتہ روز جامعہ کراچی میں خودکش حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ اس واقعے میں چائینز ،اساتذہ اور مہمان کو نشانہ بنانا بلوچی روایات کے خلاف ہیں انہوں نے کہا کے بلوچی روایات میں کسی بھی مہمان کو نہایت قدر کی نگاہ سے دیکھا جاتا ہے اور ان کو دہشت گرد حملوں میں مارنے کا کوئی تصور نہیں ہے سردار سرفراز ڈومکی نے مزید کہا کہ دہشت گرد اپنے مذموم مقاصد میں قطعی طور پر کامیاب نہیں ہو سکتے اگر دہشت گردوں کا یہ خیال ہے کہ وہ ریاست پاکستان کو نقصان پہنچائیں گے تو یہ ان کی بھول ہے ہم پوری ریاست ایک پیج پر ہے اور ان دہشتگردوں کو شکست فاش دے کر دم لیں گے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1799/2022
کوئٹہ 28اپریل۔ٍسابق صوبائی وزیر میر فائق خان جمالی نے جامعہ کراچی کے ناخوشگوار واقعے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح کے واقعات ہمارے بلوچی تاریخ اور رسم و رواج کے بالکل منافی ہیں جس کا کسی صورت اجازت نہیں دی جا سکتی ہے انہوں نے کہا کہ چین پاکستان کا دیرینہ اور ہر مشکل گھڑی میں ساتھ دینے والا ایک آزمودہ دوست ہے یہ مسائل کے حل کا کوئی طریقہ نہیں ہے انہوں نے کہا کہ وہ اپنے بھائیوں سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ قومی دھارے میں آ جائیں اس طرح سے نہ کسی مسئلے کا حل ہو سکتا ہے اور نہ ہی کبھی نکلا ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1800/2022
کو ئٹہ 28اپریل۔ بلو چستا ن عو امی پا ر ٹی کے سینٹر د نش کما ر نے سما جی ر ابطہ و یب سا ئٹ ٹو ئٹر پیغا م میں کر اچی یو نیو رسٹی کو کسی بھی صو رت قبو ل نہیں کیا جا سکتا ہے ،یہ کھلم کھلا بر بریت ہے بے گناہ چا ئینز اسا تذہ پر حملہ اور وہ بھی کنفیو ش کے پیروکا روں پر جنکا نظریہ امن پیا ر اور انسا نیت کی خدمت ہے اور یہ اساتذہ کنفیو سش کے نظریا ت کے مطا بق ہما ری عو ام کو علم کی ر وشنی سے منو ر کر نے کے لیے آئے تھے ا نھو ں نے کہا ہے کہ یہ و اقعہ نہ صرف علم د شمنی بلکہ انسا نی د شمنی اور و طن دشمنی بھی ہے آخر میں انھو ں نے لو احقین سے دل ہمدردی کا اظہا ر کیا ہے اور زخمیوں کی جلد صحتیا بی کے لیے دعا کی ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1801/2022
کو ئٹہ 28اپریل۔صوبائی وزیر اکبر آسکانی نے گزشتہ روز کراچی یونیورسٹی میں چائنیز اساتذہ پر خودکش حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے اس واقعہ میں غیر ملکی اساتذہ اور مہمانوں کو نشانہ بنانا کو افسوس ناک قرار دیا ہے انہوں نے کہا کہ یہ حملہ بلوچی روایات کے بالکل خلاف ہے استاد صرف استاد ہے ان کا تعلق کسی سیاسی و عسکری ادارے یا نظریے سے نہیں ہوتے ان کا مقصد تعلیم دینا ہوتا ہے ان مہمان اساتذہ کا مقصد پاکستان کے نوجوان نسل کو تعلیم دینا تھا دہشت گردوں کی کارروائی اسلام اور بلوچی روایات کے بالکل منافی ہے اور دہشت گردوں کی اس کارروائی کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1802/2022
نصیرآباد 28اپریل۔سول ڈفنس نصیر آباد ڈویژن میں مختلف آسامیوں جن میں ٹیکنیشن بم ڈسپوزل اور اسٹینوگرافر کی آسامیوں کو پر کرنے کے لیئے تحریری طور پر امتحانات کمشنر نصیرآباد ڈویژن کی آفیس میں لئے گئے بڑی تعداد میں امیدواروں نے حصہ لیا جن سے کڑی نگرانی میں تحریری امتحان لیئے گئے زیر نگرانی کمیٹی ممبران نصیرآباد ڈویژن سے ڈویژنل ڈپٹی ڈائریکٹر سول ڈفینس عنایت اللہ بلوچ کمشنرنصیرآبادڈویڑنکا نمائندہ قاسم خان ڈومکی خزانہ آفیس نصیرآبادکانمائندہ حاجی نیازمحمد،کوئٹہ سے آئے ہوئے سلیکشن کمیٹی کے ممبر ڈپٹی ڈائریکٹر ایڈمن سول ڈفنس علی محمد زہری و دیگر سول ڈفنس آفیسران صالح محمد جلیل احمد مینگل و منیر احمد پر مشتمل تھی اس موقع پر سلیکشن کمیٹی کے ممبران اور ڈویژنل ڈپٹی ڈائریکٹر عنایت اللہ بلوچ نے کہا کہ موجودہ صوبائی حکومت ٹیکنیکل اور نان ٹیکنیکل کی خالی آسامیوں کو پر کرنے اور میرٹ کی بنیاد پر نوجوانوں کو روزگار کی فراہمی کے لئے عملی طور پر اقدامات کر رہی ہے تاکہ پڑھے لکھے نوجوان ملک و قوم کی احسن انداز سے خدمت کر سکیں اس عمل سے بے روزگاری کا خاتمہ ممکن ہو سکے گا اور عوام کو روزگار کے مواقع بھی فراہم ہو نگے ہماری بھر پور کوشش ہے کہ میرٹ کی بنیاد پر نوجوانوں کو روزگار فراہم کیا جا سکے.
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1803/2022
کو ئٹہ 28اپریل۔صوبائی وزیر مائنز اینڈ منرلز میں میر سکندر علی عمرانی نے گزشتہ روز واقعہ جامعہ کراچی کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ دہشتگردوں نے کراچی یونیورسٹی میں جن لوگوں کو ہدف بنایا ہے وہ چائنا سے تعلق رکھنے والے ہمارے مہمان اور اساتذہ تھے انہوں نے کہا کہ دہشت گردوں کا اساتذہ کو نشانہ بنانا لمحہ فکریہ ہے یہ دہشت گرد اساتذہ کو نشانہ بنا کر ہماری نسل کو تعلیم سے دور اور ریاست پاکستان کو غیر مستحکم کرنا چاہتے ہیں جس کی اجازت کسی صورت بھی نہیں دی جائے گی پاکستان چین کے تعلقات خراب کرنا چاہ رہے ہیں ان کے لئے یہ پیغام ہے کہ پاک چین دوستی لازوال ہےاور اس پر کسی قسم کا سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا۔امریکہ کے ملک کا تحفظ اور استحکام کیلئے پاک فوج کی قربانیاں اپنی مثال آپ ہے اور انشائ اللہ دہشت گردوں کو شکست دینے کے لیے پاک فوج ایک دفعہ پھر حرکت میں آئے گی اور ایسے تمام کاروائیوں اور اس میں پوری قوم ساتھ دے گی۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1804/2022
کو ئٹہ 28اپریل۔صوبائی پارلیمانی سیکرٹری برائے اطلاعات و سماجی بہبود محترمہ بشری رند نے کراچی واقعہ کو پہلا اور انوکھا واقعہ قرار دیتے ہوئے اس امر پر افسوس کا اظہار کیاکہ اس واقعے نے ہمارے ذہنوں میں گہرے نقوش چھوڑے ہیں بیرونی طاقتیں جو پاکستان کو کمزور کرنا چاہتی ہیں وہ ان کے ہاتھ کا کھلونا نہ بنائیں۔انہوں نے بلوچ خواتین سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ وہ سماج دشمن عناصر سے دور رہیں۔اور ہماری مائیں ،بہنیں اور بیٹیاں اپنے ملک کے خلاف کوئی قدم نہ اٹھائیں۔انہوں نے کہا کہ بحیثیت بلوچ بیٹی اور قبائلی عورت بلوچ خواتین بہادر ہوتی ہیں۔اور بلوچستان کی تاریخ میں لاتعداد بلوچ خواتین نظر آئیں گی جھنوں نے جنگوں میں حصہ لے کر وطن کا دفاع کیا ہے۔لہذا ہمیں اپنا نام مثبت پہلوو¿ں سے اجاگر کرنے کی ضرورت ہے انہوں نے کہا کہ ملک دشمن عناصر ملک میں عدم استحکام اور تشدد کو پروان چڑھانے کے لیے معصوم لوگوں کو استعمال کررہے ہیں۔لہذا بحثیت بلوچ خواتین ہمیں اپنے ملک کے لیے ایسے عناصر سے دور رہنا ہوگا۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1805/2022
کو ئٹہ 28اپریل۔شیلاباغ میں گزشتہ شب کامیاب کاروائی پر لیویز فورس کے انچارج محمد رمضان نائب رسالدار اور انکی ٹیم علی محمددفعدار اور لیویز سپاہی عبدالباری حیات اللہ جانان اور سلیمان کو آرمی برگیڈئیر کاشف نے دفتر بلاکر انکی حوصلہ افزائی کی اور کامیاب کاروائی پر لیویز فورس کے انچارج محمدرمضان اور ٹیم کو کو داد دینے کے ساتھ برگیڈئیر کاشف اور ڈپٹی کمشنر چمن کیپٹن (ر) جمعہ داد خان مندوخیل نے کیش انعامات سے نوازیں گزشتہ شب کامیاب کاروائی میں لیویز فورس نے موقع واردات پر دو ڈاکوں کو گرفتار کرکے انکے قبضے سے کلاشنکوف اور پسٹل برآمد کیں جو کہ انتظامیہ کو ایف سی کے اہلکار کی شہادت سمیت متعدد وارداتوں میں ملوث تھے اس موقع پر لیویز فورس کے جوانوں نے برگیڈئیر کاشف اور ڈپٹی کمشنر چمن کا شکریہ ادا کیا یقیناََ فورسز کے جوانوں کی اسطرح سرپرستی اور حوصلہ افزائی سے انکے حوصلے مزید بڑئینگے اور وہ آئندہ بھی جواں مردی سے اپنے فرائض ادا کرکے شہریوں کی جان و مال کی حفاظت کو یقینی بنائیں گے
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1806/2022
کوئٹہ 28اپریل۔سابق صوبائی وزیر اور بلوچستان عوامی پارٹی کے سینئر رہنما اور رکن صوبائی اسمبلی میر ظہور احمد بلیڈی نے کراچی یونیورسٹی میں چینی پروفیسررز پر حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے ایک ویڈیو پیغام میں کہا ہے کہ اس طرح کے دلخراش اور قابل مذمت واقعات سے نہ صرف صوبے کے لیے نقصان کا باعث بنتے ہیں تو دوسری جانب ملک کے لیے بدنامی کا سبب بھی بنتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جو لوگ اس طرح کے واقعات میں ملوث ہیں چاہے وہ ملک میں بیٹھے ہیں یا ملک سے باہر وہ بلوچستان کے ساتھ سنجیدہ ہے نہ ہی بلوچوں کے ساتھ سنجیدہ ہیں وہ صرف اور صرف باہر کے لوگوں کی ایما پر انتشار اور لاقانونیت پھیلا رہے ہیں اور وہ اپنے ان مذموم عزائم میں کبھی بھی کامیاب نہیں ہونگے اور ان کو منہ کی کھانی پڑے گی۔ یہ لوگ بربادی اور تباہی پھیلا رہے ہیں نوجوان ان کی باتوں میں ہر گز مت آئیں ، یہ ملک ہمارا اس کی تعمیر و ترقی میں اپنا کردار ادا کرنا چاہیئے کیونکہ اسی ملک سے ہماری پہچان ہے
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1807/2022
خاران28اپریل۔انسپکٹر جنرل آف پولیس بلوچستان محسن حسن بٹ کی ہدایت پربلوچستان پولیس کو بہتر سے بہترین اور تمام تر ریکارڈ کو مکمل اورکمپیوٹرائزڈ کرنے کا ایک بہترین اقدام کے سلسلے میںخاران پولیس خدمت مرکز کا افتتاح ڈی آئی جی رخشان رینج نزید احمد کرد نے کردیا ، اس موقع پر ایس پی خاران آصف حلیم، ADIG رخشان جناب داد محمد مینگل ، آفس سپرنٹنڈنٹ جمیل احمد کیازئی، PA احترام الحق مینگل بھی شریک تھے۔ اس حوالے سے ڈی آئی جی کو پولیس خدمت مرکز کی بابت بریفننگ دی گئی اور پولیس سوفٹوئیرز کے متعلق تفصیلات سے آگاہ کیا گیا۔ انہیں بتایا گیا کہ پولیس خدمت مرکز میں کریکٹر سرٹیفیکٹ، پولیس ویری فیکیشن ، کرایہ داران کا اندراج ، گھریلو ملازمین کا اندراج،گمشدگی کی اطلاعی رپورٹ ، تجدید ڈرائیونگ لائسنس لرنر ڈرائیونگ لائسنس اور بین الاقوامی ڈرائیونگ لائسنس کے اجرائکی سہولت سرانجام دے گا اس موقع پرڈی آئی جی نے اطمینان کا اظہار کیا اور اسٹاف کو مزید ہدایت کی کہ عوام کی خدمت میں کوئی کوتاہی برداشت نہیں کی جائے گی۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
پریس ریلیز
نصیرآباد 28اپریل۔ڈی آئی جی نصیر آباد کیپٹن ریٹائرڈ پرویز احمد چانڈیو نے جاری کردہ پریس ریلیز میں کہا ہے کہ عوام کی جان و مال کے تحفظ کے لئے محکمہ پولیس کے جوان اپنی ذمہ داریاں نہایت خندہ پیشانی کے ساتھ سرانجام دیں عوام کو پرسکون ماحول کی فراہمی ہماری اولین ذمہ داریوں کا حصہ ہے فرائض منصبی میں غفلت برتنے والے پولیس آفیسران کے خلاف سخت کاروائی عمل میں لائی جایے گی گزشتہ دنوں ڈیرہ مراد جمالی میں مزدور چوک پر علی خان پندرانی کے قتل اور منگولی میں عبدالفتح مگسی اور دودا خان لاشاری سمیت دیگر قتل ڈکیتی اور چوری کی وارداتوں پر سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے ڈی آئی جی نصیر آباد کیپٹن ریٹائرڈ پرویز احمد چانڈیو نے ڈی ایس پی سٹی ڈیرہ مراد جمالی گلاب خان شیخ، ایس ایچ او سٹی غلام علی کنڈرانی اور ایس ایچ او منگولی غلام قادر رند کو اپنے آ?فس میں طلب کرکے سخت برہمی کا اظہار کیا۔ ناقص کارکردگی پر ڈی ایس پی اور ایس ایچ اوز کو شو کاز نوٹس جاری کئے گئے پریس ریلیز میں ڈی آئی جی نصیر آباد کیپٹن ریٹائرڈ پرویز احمد چانڈیو کا کہنا تھا کہ عوام کے جان و مال کی تحفظ پولیس کی اولین ذمہ داری ہے جس میں کوتاہی کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی سٹی ڈیرہ مراد جمالی اور منگولی میں ہونے والے قتل کے واقعات افسوس ناک ہیں۔ بروقت کاروائی نہ کرنے پر ڈی ایس پی اور ایس ایچ او کو شوکاز نوٹس جاری کرکے ملزمان کی گرفتاری کے لئے سخت احکامات جاری کر دیئے ہیں۔ جلد پراگریس نہ کرنے اور عوام کو تحفظ فراہم نہ کرنے والے ایس ایچ اوز کے خلاف سخت کاروائی کے لئے ایس ایس پی نصیر ا?بادمیر حسین احمد لہڑی کوبھی ہدایات جاری کر دی گئی ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Post comment