خبرنامہ نمبر2107/2022
کوئٹہ 24مئی۔چیف سیکرٹری بلوچستان عبدالعزیز عقیلی سے پاکستان میں تعینات یونائٹڈ نیشنز ڈویلپمنٹ پروگرامز کے اسسٹنٹ ریذیڈنٹ ریپرزینٹیٹو امارہ درانی نے کوئٹہ میں ملاقات کی۔ اس موقع پر یو این ڈی پی کے ذوالفقار درانی، چیف آف سیکشن پی اینڈ ڈی فاروق شاہ بھی موجود تھے۔ یو این ڈی پی کے نمائندے نے چیف سیکرٹری بلوچستان کو یو این ڈی پی کی جانب سے بلوچستان میں مختلف ترقیاتی منصوبوں اور دیگر اقدامات کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ صوبے میں سروس ڈیلیوری میں بہتری، ٹریننگ پروگرامز، ساحلی علاقوں میں زلزلہ اور سونامی سے نمٹنے کی تیاری، بلوچستان کے طلباءو طالبات کو مختلف یونیورسٹیوں سے تربیت کی فراہمی، فشریز اور سیاحت کے فروغ کے منصوبوں پر کام اور معاونت فراہم کر رہے ہیں۔ چیف سیکرٹری بلوچستان نے اس موقع پر کہا کہ بلوچستان کے مختلف شعبوں بالخصوص سیاحت کے شعبے میں سرمایہ کاری کے روشن امکانات موجود ہیں۔ اگر ان پر توجہ دی جائے تو صوبے کے نوجوانوں کو روزگار کے مواقع میسر آسکیں گے۔ چیف سیکرٹری نے یو این ڈی پی کی بلوچستان کے مختلف شعبوں کی بہتری میں بلوچستان حکومت کو تعاون و معاونت کی فراہمی کو سراہتے ہوئے کہا کہ بلوچستان حکومت یو این ڈی پی اور اقوام متحدہ کی دیگر تنظمیوں کی جانب سے مختلف شعبوں کی ترقی اور کارکنوں کے استعداد کار میں اضافے اور دیگر کوششوں کو قدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے اور اس سلسلے میں حکومت بلوچستان ہر ممکن تعاون فراہم کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت لوگوں کا معیار زندگی کو تبدیل کرنے کی خواہاں ہے جس کیلئے تمام تر ضروری سہولتیں بشمول پانی، بہترین طبی سہولیات کی فراہمی ، معیاری تعلیم انفرااسٹرکچر ، ٹرانسپورٹ ، اور روزگار کے مواقع فراہم کرنے کیلئے اقدامات کر رہی ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر2108/2022
کوئٹہ 24مئی۔ترجمان حکومت بلوچستان فرح عظیم شاہ نے اپنے جاری بیان میں کہا ہے کچھ لوگ اپنے سیاسی عزائم کی تکمیل کے لئے ریاستی اداروں پر بے بنیادالزام تراشی کرتے ہیں جو کہ انتہائی قابل مذمت ہے پاکستان کی سلامتی اور استحکام افواج پاکستان کی مرہون منت ہے کسی کو یہ حق نہیں پہنچتا کہ ذاتی مفادات کے لئے قومی اداروں پرتنقید کرے دشمن یہی چاہتا ہے کہ ملک میں افراتفری کی کیفیت پیدا ہواور وہ اس سے فائدہ اٹھا سکے انہوں نے کہا کہ ملک کو درپیش بحرانوں سے نمٹنے کے لئے سیاسی بصیرت کا عملی مظاہرہ وقت کی اولین ضرورت ہے اور دشمن کا بیانیہ پھیلانے والے ہرگز پاکستان کے خیر خواہ نہیں ہوسکتے  پاکستان کو بحرانوں سے نکالنے کے لئے سب کو مل کر اپنا کردار ادا کرنا ہوگافواج پاکستان کے ساتھ پوری قوم شانہ بشانہ کھڑی ہے ، عوام کے صبر کا امتحان نہ لیا جائے پاکستان کا دفاع محفوظ ہاتھوں میں ہے اور ہم دشمن کی کوئی چال کامیاب نہیں ہونے دیں۔

﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر2109/2022
کوئٹہ 24 مئی – آئی جی پولیس بلوچستان محسن احسن بٹ کی خصوصی ہدایت پر بلوچستان بھر میں منشیات فروشوں اور انکے اڈوں کے خلاف کریک ڈاو¿ن کا سلسلہ جاری ہے اس سلسلے میں (مند) سوروں بازار میں ڈسٹرکٹ پولیس اور لیویز فورس نے مشترکہ طور پر کارروائی کرتے ہوئے متعدد منشیات کے عادی افراد کو گرفتار اور منشیات کے اڈوں کو مسمار کر دیئے اس حوالے سے آئی جی پولیس بلوچستان نے پولیس کو تمام اضلاع اور ڈویژن میں منشیات کے اڈوں اور منشیات فروشوں کے خلاف کارروائی کرنے کی ہدایت کی ہے اس سلسلے میں ضلعی انتظامیہ اور پولیس منشیات فروشوں کے خلاف موثر کارروائی کرنے کے ساتھ ساتھ منشیات کے عادی افراد کو گرفتار کر کے اصلاحی مراکز منتقل کر رہی ہیں انھوں نے کہا کہ منشیات جیسی لعنت سے چھٹکارا پانے کے لئے اپنے صوبے اور معاشرے میں پولیس کارروائیاں کررہی ہے تاکہ صوبے اور نوجوانوں کو منشیات سے پاک رکھا جاسکے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر2110/2022
کوئٹہ 24مئی۔بلوچستان ہائی کورٹ کے اعلامیوں کے مطابق چیف جسٹس بلوچستان ہائی کورٹ نے مختلف سیشنز ڈویڑنز میں سول و ماتحت عدالتوں کے لیے یکم جولائی 2022 تا 31 جولائی 2022 سے ہونے والی گرمیوں کی چھٹیاں ری شیڈول کر دی ہیں۔سیشن ڈویژنز لسبیلہ اور آواران کے لیے اب یہ چھٹیاں یکم جون 2022 تا 31 جون 2022، سیشن ڈویژنز نوشکی اور دالبندین کے لیے 18 جولائی 2022 تا 18اگست 2022 جبکہ ڈیرہ بگٹی کے لیے یہ 15 جولائی 2022 تا 15 اگست 2022 ہونگی۔

﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر2111/2022
کوئٹہ 24مئی۔بلوچستان ہائی کورٹ کے ایک اعلامیہ کے مطابق بلوچستان ہائی کورٹ کے بمقام سبی اور مکران بمقام تربت بنچز گرمیوں کی چھٹیوں کے سلسلہ میں دو ماہ تک سول معاملات کے لیے بند رہیں گی ان چھٹیوں کا اطلاق یکم جون 2022 سے 31 جولائی 2022 تک ہوگا اعلامیہ کے مطابق سبی اور تربت بنچز کے دفتری اوقات کار سموار تا جمعرات اور ہفتہ صبح 9 بجے تک دوپہر ایک بجے اور جمعہ کو صبح نو بجے تک دن بارہ بجے تک ہونگے جبکہ اتوار کو چھٹی ہوگی۔ اعلامیہ کےمطابق سبی بینچ (پر روسٹر) کورٹ کے اوقات کار سموارتا جمعرات اور ہفتہ صبح ساڑھے نو تا دن بارہ بجے اور جمعہ کو صبح ساڑھےنو تا صبح ساڑھے گیارہ بجے تک ہونگے جبکہ اتوار کو عدالت بند رہے گی۔مکران بمقام تربت (پر روسٹر )بینچ کے لئے عدالت کے اوقات کار سموار تا جمعرات اور ہفتہ صبح ساڑھے نو بجے تک دن بارہ بجے، جمعہ کو صبح ساڑھے نو تا صبح ساڑھے گیارہ بجے تک رہیں گے جبکہ اتوار کو عدالت بند رہےگی اعلامیہ میں مزید کہا گیا ہے کہ معزز وکیشن ججز چھٹیوں کے دوران مندرجہ بالا دونوں بنچز کے ضروری مقدمات پرنسپل سیٹ کوئٹہ میں سماعت کریں گے جب کہ مندرجہ بالا دونوں بنچز یکم اگست 2022 سے دوبارہ کھل جائیں گی
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر2112/2022
ژوب 24مئی۔کمشنر ژوب ڈویژن بشیر خان بازئی، سیکرٹری جنگلات دوستین جمالدینی ،ڈپٹی کمشنر ضلع شیرانی اعجاز احمد جعفر اور دیگر متعلقہ آفسران نے ضلع شیرانی میں چلغوزے اور زیتون کے جنگلات میں لگی آگ بجھانے کے لئے لگائے گئے امدادی کیمپ کا دورہ کیا اور جاری امدادی سرگرمیوں کا جا ئزہ لیا اس موقع پر مختلف محکموں کے آفسران نے اہلکاروں کی تعداد ،امدادی سامان کی تفصیل اور کئے اقدامات کے بارے آگاہ کیا کمشنر ژوب ڈویژن بشیر خان بازئی نے کہا کہ ضلع شیرانی میں چلغوزے اور زیتون کے نہایت قیمتی جنگلات ہیں جنہیں آگ سے بہت نقصان پہنچا ہے جس میں جانی نقصان سمیت بہت زیادہ مالی ،جانوروں اور جنگلی حیا ت کا نقصان بھی ہوا ہے تاہم حکومت اپنے وسائل کے مطابق ہرممکن مدد کررہی ہے دو ملکی اور ایک ایرانی طیارے کے علاوہ بڑی تعداد میں سرکاری مشینری بھی اور افرادی قوت بھی اس آپریشن میں مصروف عمل ہیں متاثرین میں امدادی سامان کمبل ٹینٹ چار پائی وغیرہ تقسیم کر رہے ہیں ۔سڑک بنانے کئے بلڈوزر کا کام کر رہاہے انہوں نے کہا کہ آگ تو بجھ گیا ہے تاہم آپریشن جاری رہےگا اور آگ پھیلنے کی بڑی وجہ انگارے ہیں جن کوختم کرنا ہوگا۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر2113/2022
ژوب 24مئی۔کمشنر ژوب ڈویژن شیر جان بازئی نے کہا کہ اس وقت سرلکی امدادی کیمپ میں ایمبولینسز واٹر ٹینکرز ادویات اور دیگر ضروری سامان موجود ہے لیکن اللہ کے فضل سے خطرہ ٹل گیاہے اور علاقہ مزید نقصانات سے بچھ گیا ہے تاہم احتیاطی طورپر تمام متعلقہ ادارے الرٹ اور کام میں مصروف ہیں ڈپٹی کمشنر شیرانی اعجاز احمد جعفر نے کہا کہ امدادپہنچ گیا ہے اور متاثرین میں تقسیم کی جارہی ہے جس سےطور غر ،سمزئی زرغون زور۔کوچنرئی اور دیگر کلیوں کے لوگوں میں تقسیم کی جائے گی انہوں نے کہا کہ آگ سے تقریبا 7،8 گاوں متاثر ہوئے ہیں سیکرٹری جنگلات دوستین جمالدینی نے کہا کہ محکمہ جنگلات کے آفسران اور اہل کار آگ بجھانے کے عمل میں آخر تک موجود رہے گی تاکہ دوبارہ اس طرح نقصان نہ ہوجائے جنگلات کی دوبارہ بحالی کےلئے بھی کام شروع کی جائےگی۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر2114/2022
کوئٹہ 24مئی۔ڈائیریکٹر جنرل ایکسائز، ٹیکسیشن اینڈ نارکوٹیکس نارتھ بلوچستان محمد جہانگیر کاکڑ نے محکمانہ بریفنگ کے دوران کہا کہ محکمہ ہذا اپنے تمام تر وسائل اور استعداد کار کو بروئے کار لاتے ہوئے اپنے مالیاتی اہداف کو حاصل کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ ایکسائز کو جدید خطوط پر استوار کرنے کی اشد ضرورت ہے جس میں ٹیکنولوجی کا کلیدی کردار ہے۔ خودکارانہ اصلاحات سے محکمہ کی سکت میں کافی بہتری آئے گی اور نظام کو درپیش کئی مسائل کا سدباب بھی ہوگا۔ مختلف ٹیکسز کی شرح وصولی کو بڑھانے اور اہداف کی تکمیل محکمے کی اولین ترجیح ہو گی اور اسکے حصول کے لئیے محکمے کی استعداد کا کو بڑھانے کے کئیے جامع اور مفصل سکیمات کا جائزہ لیا جائے گا۔ پراپرٹی ٹیکس محکمہ ہذا کے لیے بڑا چیلینج ہے جسکو حاصل کرنے کے لئے محکمہ اپنا پورا ذور لگائے گا اور اس ٹیکس کا حقیقی حصول تجویز کئے گئے اہداف کے کے مطابق صوبائی خزانہ کو کافی مدد دے گا۔ اس ضمن میں سروے آیندہ مالی سال میں وقت کے مطابق طے ہے اور اس سروے سے ٹیکس نیٹ نہ صرف بڑھے گا بلکہ صحیح اور جامع اہداف طے کرنے میں مدد گار بھی ہو گا۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر2115/2022
موسیٰ خیل24مئی۔ڈپٹی کمشنریاسرحسین نے کہاہے کہ پولیو کا خاتمہ قومی ذمہ داری ہے اس میں تمام طبقات کو مل کر اپنا کردار ادا کرناچاہیے مشترکہ کوششوں کے ذریعے پولیو مرض کا ہمیشہ ہمیشہ کے لئے خاتمہ ممکن ہوسکتا ہے،23مئی سے شروع ہونے والے پانچ روزہ پولیو مہم کو ہر صورت میں کامیاب بنایاجائیگا، تاکہ کوئی بھی بچہ پولیو کے قطرے پلانے سے نہ رہ جائے اور اس مرض کاخاتمہ ہوسکے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پولیومہم کے حوالے منعقدہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں ڈی ایچ اوڈاکٹرانورشبوزئی،این سٹاف آفیسرز،ایم اینڈای آفیسرپی پی ایچ آئی،ای پی آئی ٹیم اورتمام ہیڈآف ڈپارٹمنٹ کے آفیسران نے شرکت کی۔اس موقع پرڈی ایچ اوڈاکٹرانورشبوزئی ودیگر نے ڈپٹی کمشنرکو پانچ روزہ پولیو مہم سے متعلق بریفنگ دیتے ہوئے کہاکہ پورے ضلع بھرمیں پولیوکے قطرے پلانے کاجوہدف مقرر کیا گیا ہے اسی کے مطابق تمام یونین کونسلزمیں ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں، پولیو کی ٹیمیں شہری دیہی علاقوں قصبوں اور دور دراز پہاڑی علاقوں میں جاکر پیدائش سے لیکر پانچ سال تک کے عمر کے بچوں کوپولیوکے حفاظتی قطرے پلائیں گے،پولیو مہم کو کامیاب بنانے کے لئے تمام تر تیاریاں مکمل کردی گئی ہیں جس میں پولیوکے ٹیموں کوتمام سہولیات فراہم کردی گئی ہے۔ڈپٹی کمشنریاسرحسین نے کہاکہ تمام دیہی اور قصبوں تک پہنچ کر بچوں کو پولیو کے قطرے پلائیں،پولیو ایک موذی مرض ہے جب وہ ایک انسان کو اپاہج بنا دیتا ہے تو اس سے ایک خاندان بلکہ پورا معاشرہ ہی متاثر ہوتا ہے اپنی اجتماعی کوششوں کو بروئے کار لا کر اس مرض سے نجات حاصل کرنا ہوگا، اس موذی مرض سے قوم کی نئی نسل کو پاک کرکے ایک صحت مند معاشرہ تشکیل دینے میں کامیاب رہیں گے،انہوں نے سے سختی سے تاکید کی کہ جن محکموں کے ملازمین کی ڈیوٹی پولیو مہم میں لگائی گئی ہے اگر وہ اپنی ذمہ داری پوری نہیں کرتے ہیں تو ان کے خلاف سخت کاروائی عمل میں لائی جائیگی۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر2116/2022
کوئٹہ 24مئی۔بلوچستان تھنک ٹینک نیٹ ورک (BTTN) کی جانب سے آئی ٹی یونیورسٹی میں”بلوچستان کی جیو اسٹریٹجک اہمیت، بڑی طاقتوں کی سیاست اوراس کے اثرات کا انتظام”۔کے عنوان سے سیمینار کا انعقاد کیا گیا سیمینار میں بلوچستان کی مختلف پبلک سیکٹر یونیورسٹیوں بشمول BUITEMS کوئٹہ، SBK وومن یونیورسٹی کوئٹہ، یونیورسٹی آف تربت اور BUET خضدار کے وائس چانسلرز نے شرکت کی۔ تقریب میں سابق گورنر بلوچستان جسٹس (ر)امان اللہ یاسین زئی نے بھی شرکت کی جبکہ قائم مقام گورنر بلوچستان میر جان محمد خان جمالی مہمان خصوصی کے طور پر موجود تھے مختلف پس منظر سے تعلق رکھنے والے مقررین نے تھیم سے متعلق مختلف موضوعات پر اظہار خیال کیا۔ بریگیڈیئر آغا احمد گل (ر) نے سیمینار میں اپنے افتتاحی خطاب میں کہا، بلوچستان ایک جیو پولیٹیکل کرش زون میں واقع ہے جسے بڑی طاقتوں کے مسابقتی مطالبات کا سامنا ہے یہ ہمارے اہم قومی مفادات پر سمجھوتہ کیے بغیر تمام مسابقتی بڑی طاقتوں کو کنیکٹیوٹی فراہم کرنے کا ایک چیلنج ہے لیکن یہ ایک بہترین موقع ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں یہ سوچنے کی ضرورت ہے کہ ان میں سے ہر ایک کے لیے رکاوٹ بننے کے بجائے تمام بڑی طاقتوں کے لیے سہولت کار بن کر اس کا انتظام کیسے کیا جائے بی ٹی ٹی این) کے پہلے سیشن سے سابق سفیر اعزاز احمد چوہدری (DG ISSI) نے سیمینار کے انعقاد میں BTTN کی کوششوں کو سراہا۔ انہوں نے کہا کہ بلوچستان پر گفتگو کی کمی تھی اور بی ٹی ٹی این کا قیام اس سمت میں ایک اہم قدم ہے جو اس خلا کو پر کرنے میں مدد دے گا۔ بلوچستان میں بھارت کے کردار پر روشنی ڈالتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کلبھوشن یادیو واقعہ اس بات کا منہ بولتا ثبوت ہے کہ بھارت بلوچستان میں کیا کر رہا ہے اور ہم اس سے پیچھے نہیں ہٹ سکتے۔ڈاکٹر عطیہ علی کاظمی (سینئر پالیسی ریسرچ اینالسٹ، نسٹ) نے کہا کہ بلوچستان کی ترقی کے لیے ہمیں بلوچستان کے لوگوں کی سرزمین اور اقدار کو سمجھنا ہوگا۔ انہوں نے مزید کہا کہ جنوبی بلوچستان کے مسائل کے حل کے لیے ہمیں تمام اسٹیک ہولڈرز کے باہمی اتفاق رائے کی ضرورت ہے محترمہ ماریہ ملک (ڈائریکٹر ریسراچ بی ٹی ٹی این) نے اپنی گفتگو میں کہا کہ جنوبی بلوچستان میں سرگرم بلوچ علیحدگی پسندوں کو غیر دوست ریاستیں اپنے مفادات کے طور پر استعمال کر رہی ہیں جو چین کو ایک علاقائی طاقت کے طور پر نہیں دیکھنا چاہتیں جو موجودہ بالادستی یعنی امریکہ کو چیلنج کرتی ہے۔ اس تناظر میں، انہوں نے زور دے کر کہا کہ اگر جنوبی بلوچستان کے لوگوں کے حقیقی تحفظات کو بروقت اور مو¿ثر طریقے سے دور نہیں کیا گیا تو غیر دوست ریاستیں بلوچستان کے مسئلے کے طور پر اس صورتحال کا استحصال کرتی رہیں گی۔سابق گورنر بلوچستان اویس احمد غنی نے سیمینار سے خطاب میں موجودہ جغرافیائی سیاسی چیلنجوں سے نمٹنے کے لیے چین اور افغانستان کے ساتھ پاکستان کے سہ فریقی اتحاد کا مشورہ دیا۔ ڈاکٹر میر سعادت بلوچ نے جنوبی بلوچستان کے عوام اور حکومت کے درمیان رابطہ منقطع ہونے کو بلوچستان کے اہم مسائل میں سے ایک قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ جنوبی بلوچستان کے مسائل کے حل کے لیے ہمیں مختلف مسائل کے حوالے سے رد عمل کے بجائے فعال انداز اپنانے کی ضرورت ہے۔ ڈاکٹر سادات نے کہا کہ اگر جنوبی بلوچستان میں بے روزگار خاندانوں کو ریلیف فراہم کرنے کے لیے عالمی بنیادی آمدنی کا طریقہ کار اپنایا جائے تو یہ بی آئی ایس پی میں بلوچستان کا حصہ بڑھانے کے بجائے زیادہ موثر ہوگا۔ ڈاکٹر سادات نے کہا کہ جنوبی بلوچستان کے حوالے سے جو بیانیہ تیار کیا جاتا ہے وہ فطری طور پر بدنیتی پر مبنی ہے۔ اگر کوئی خاتون گرفتار ہوتی ہے تو سوشل میڈیا یہ نہیں کہتا کہ اسے گرفتار کر لیا گیا ہے بلکہ یہ کہتا ہے کہ اسے اٹھا لیا گیا ہے۔ اس نے اپنے خطاب کا اختتام مختلف سالوں میں جنوبی بلوچستان میں عسکریت پسندی کے اعداد و شمار کی تصویر کشی کی صورت حال کو دکھا کر کیا۔ انہوں نے کہا کہ اعداد و شمار سے ظاہر ہوتا ہے کہ جنوبی بلوچستان میں عسکریت پسندی کم ہو رہی ہے اور اس کے بارے میں صرف شور ہی بڑھ رہا ہے۔ڈاکٹر عبدالقادر بلوچ نے ایران پاکستان تعلقات کے امکانات کی نشاندہی کی اور بتایا کہ دونوں ممالک تجارت اور نقل و حرکت میں اضافے کے مواقع سے کیسے فائدہ اٹھا سکتے ہیں۔ ڈاکٹر عبدالقادر نے کہا کہ ہمیں ایران کے حوالے سے اپنی پالیسیوں کا از سر نو جائزہ لینے کی ضرورت ہے جو کہ آزادی کے وقت پاکستان کو تسلیم کرنے والا پہلا ملک تھا انہوں نے امید ظاہر کی کہ دونوں ممالک ایران اور پاکستان کے تعلقات کے سنہری دور کو دوبارہ زندہ کریں گے جو ہمارے درمیان 1950 اور 1960 کی دہائیوں میں تھا پینل چیئرز میں سے محترمہ فائزہ میر نے کہا کہ ہمیں پورے بلوچستان بلکہ بالخصوص جنوبی حصوں کی ترقی کے لیے مفاہمت اور تبدیلی کی پالیسیاں اپنانے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایک برش سے تصویر نہیں بنائی جا سکتی اس لیے ریاست کو چاہیے کہ وہ بلوچستان، فاٹا، کراچی اور دیگر تمام خطوں کے مختلف علاقوں کے لیے ان کے مسائل کے مطابق مختلف پالیسیاں اپنائے۔نیشنل کمانڈ اتھارٹی کے مشیر لیفٹیننٹ جنرل خالد احمد قدوائی (ر) نے بھی موضوع کے عنوان اور مناسبت سے مقررنین کی رائے اور تجاویز کو مفید قرار دیا۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر2117/2022
کوئٹہ24 مئی – پروجیکٹ ڈائریکٹر و کمشنر کوئٹہ ڈویژن سہیل الرحمن بلوچ نے کہا کہ وزیر اعلی بلوچستان کوئٹہ پیکج کے تحت شہر کی اہم سڑکیں سریاب روڈ، سبزل روڈ، سرکی روڈ اور انسکمب روڈ کی توسیع، تعمیر و مرمت اور دیگر منصوبوں پر کام کی رفتار کو تیز کرتے ہوئے حائل رکاوٹوں کو جلد از جلد دور کیا جائے تمام لائن سروسز ڈیپارٹمنٹ اپنی سروس لائنز کی منتقلی کو جلد از جلد مکمل کریں بالخصوص سریاب روڈ اور سبزل روڈ کی توسیع منصوبوں میں حائل رکاوٹوں کے حوالے سے کیسکو اور سوئی سدرن گیس کمپنی سروس لائنوں کی منتقلی کو 15 جون تک مکمل کریں مقررہ مدت تک کام مکمل نہ ہونے پر سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔مزکورہ سٹرکوں پر ترقیاتی کام کی رفتار میں مزید تیزی کیا جائے تاکہ بروقت تکمیل ممکن ہوسکے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے وزیر اعلی بلوچستان کوئٹہ پیکج میں شامل توسیعی منصوبوں پر کام کی پیش رفت اور حائل رکاوٹوں کو دور کرنے کے حوالے سے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا اس موقع پر ڈپٹی کمشنر کوئٹہ شہک بلوچ، ڈپٹی پروجیکٹ ڈائریکٹر محمد عابد، ایس ایس پی آپریشن عبدالحق عمرانی کے علاوہ متعلقہ لائن ڈیپارٹمنٹ کے آفیسران بھی موجود تھے اجلاس سے کمشنر کوئٹہ ڈویڑن نے کہا کہ ترقیاتی منصوبوں کے معیار اور پائیداری پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا ان منصوبوں کو مقررہ مدت میں مکمل کرنے کے لیے ہنگامی بنیادوں پر اقدامات اٹھائے جائیں انہوں نے کہا کہ یوٹیلیٹی سروسز فراہم کرنے والے ادارے مقررہ مدت پر اپنا کام مکمل کریں تاکہ منصوبوں پر کام تیز ہوسکے۔ انہوں نے ڈپٹی کمشنر کوئٹہ، اسسٹنٹ کمشنرز اور مجسٹریٹس صاحبان بھی کام کی نگرانی کو سہرا تے ہوئے کہا کہ ضلعی انتظامیہ حسن طریقے سے منصوبوں کی نگرانی کر رہی ہے جس سے کام میں حائل رکاوٹ دور اور کام کی رفتار تیز ہوگئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ انسکمب روڈ کے منصوبے پر تعمیراتی کام بھی عنقریب مکمل کرکے ٹریفک کے لیے کھل دیا جائے گا۔اجلاس میں منصوبوں میں حائل رکاوٹوں کو دور کرنے،کام کی پیش رفت اور دیگر مسائل کے حل کے سلسلے میں کئے گئے اقدامات کا بھی جائزہ لیا گیا۔

﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر2118/2022
تربت24مئی۔ عورت فاو¿نڈیشن اور ساو¿تھ ایشیا پارٹنرشپ پاکستان کے تعاون سے مقامی انتخابات میں خواتین کو نمائندگی فراہم کرنے کے حوالے سے ایک سیمینار ایس پی او آفس تربت کے مقام پر منعقد کی گئے اس دوران پروگرام میں ضلعی الیکشن کمیشنر عبدالعلیم تقریب کے مہمان خاص تھے جبکہ دیگر مہمانان میں آل پارٹیز کیچ کے کنوینر اور پیپلز پارٹی کے سرکردہ رہنما حاجی عبدالقدیر، جماعت اسلامی کی جانب سے غلام یاسین بلوچ، پاکستان پیپلز پارٹی کے ضلعی راہنما نواب شمبے زئی، نیشنل پارٹی کی جانب سے مشکور انور، جمعیت علماء اسلام کی جانب سے عبدالحفیظ مینگل، پاکستان نیشنل پارٹی عوامی کی جانب سے عبدالغفور کٹور اور خان محمد گچکی، ممتاز سماجی کارکن یار محمد ثاقب اور گلزار دوست بھی موجود تھے۔اس دوران تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈسٹرکٹ الیکشن کمیشن عبدالعلیم نے کہا کہ تمام سیاسی جماعتوں کو چائیے کہ وہ بلدیاتی انتخابات میں اپنی پارٹیز کی طرف سے خواتین کو بھرپور موقع دیں تاکہ ہمارے خواتین مقامی انتخابات میں کامیاب ہوکر اپنے علاقے کے لیے صحیح طریقہ سے کام کرسکیں۔ اس دوران انہوں نے غیر سرکاری تنظیموں پر زور دیتے ہوئے کہا کہ وہ انتخابی عمل میں خواتین کی شرکت کے لیے اپنا ایک موثر کردار ادا کریں اور پولنگ بوتھ میں خواتین کو پہنچانے کے لیے سرکاری اداروں سے مکمل مدد اور تعاون کریں۔انہوں نے امید کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ انہیں یقین ہے کہ بلدیاتی انتخابات میں خواتین کی شرکت سے ہمارے ملک کی سیاست میں مثبت اور گہرے اثرات مرتب ہونگے۔اس موقع پر آل پارٹیز کیچ کے کنوینر اور پیپلز پارٹی کے رہنما حاجی عبدالقدیر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ترپارکر میں ایک پسماندہ طبقے کے خاتون کو پارلیمنٹ میں منتخب کرواکر ہماری پارٹی نے ثابت کردیا کہ پیپلز پارٹی خواتین کی حقوق کے لیے بھرپور انداز میں اپنا کردار ادا کررہی ہے۔انہوں نے تمام سیاسی جماعتیں پر زور دیتے ہوئے کہا کہ ہمیں خواتین کی مخصوص نشستوں پر صرف بالاتر طبقے کو ٹیکٹس نہیں دینا چاہے بلکہ غریب اور پسماندہ طبقے کو بھی موقع دینا چاہے۔ اس دوران انہوں نے زور دیتے ہوئے کہا کہ ہمیں خواتین کی ذہن سازی کرنی چاہیے تاکہ ہمارے خواتین باری تعداد میں الیکشن میں حصہ لے سکیں۔اس دوران نیشنل پارٹی کی جانب سے مشکور انور نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ خواتین کو انتخابی عمل میں شامل کرنے کے لیے معاشرے کے ہر طبقے کو کردار ادا کرنا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے تعلیمی ادارے، سماجی اور سیاسی پلیٹ فارمز ہی ہمارے بنیادی نرسریاں ہیں اور ہمیں انہیں پلیٹ فارم پر خواتین کو موقع دینا چاہیے انہوں نے زور دیتے ہوئے کہا کہ سیاسی جماعتوں کو صوبائی اور مرکزی سطح پر خواتین کو نمائندگی دینا چاہیے تاکہ وہ مردوں کے شانہ بشانہ معاشرے کی ترقی کے لیے کام کر سکیں۔ اس دوران انہوں نے ذکر کرتے ہوئے کہا کہ نیشنل پارٹی نے حالیہ بلدیاتی انتخابات میں پڑھی لکھی خاتون کو ٹیکٹ جاری کرکے یہ ثابت کردیا ہے کہ نیشنل پارٹی خواتین کو انتخابی عمل میں شامل کرنے کے لیے کتنا سنجیدہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایک پڑھی لکھی خاتون ہی قوم کی ترقی میں اپنا موثر کردار ادا کرسکتا اس موقع پر پیپلز پارٹی کے ضلعی رہنما نواب شمبے زئی نے کہا کہ ہمیں خواتین کو گھروں کے اندر بنیادی حقوق کے علاوہ اور مساوی تعلیم اور سیاسی حقوق دینا ہوگا۔ اس دوران انہوں نے میرٹ کی بنیادوں انتخابی ٹیکٹوں کی تقسیم پر زور دیتے ہوئے کہا کہ ہمیں چاہیے کہ ہم ٹکٹوں کی تقسیم کے وقت ہم اپنے رشتے دار اور عزیز و اقارب کو ترجیح نہ دیں۔جمیعت علمائے اسلام کے راہنما عبدالحفیظ مینگل نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اسلام نے شریعت میں خواتین کو برابر حقوق دئیے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ایک باشعور اور سمجھدار خاتون ہی معاشرے کی اصلاح کے لیے کام کر سکتا ہے اور ہمیں چاہیے کہ ہم ایک پڑھی لکھی اور نوجوان خواتین کو موقع دیں تاکہ وہ ہمارے علاقے کی ترقی میں اپنا نمایاں کردار ادا کرسکیں۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے پی این پی عوامی کے خان محمد گچکی نے کہا کہ اقوام متحدہ کے چارٹر کے تحت خواتین کے حقوق کی واضح ہدایات موجود ہیں انہوں نے کہا کہ قانون سازی کرکے خواتین کے حقوق کی تحفظ کے لیے اقدامات کرنے چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ خواتین آگے آئیں ہم ان کے حفاظت کرینگے۔بعد ازاں پی این پی عوامی ہی کے عبدالغفور کٹور نے کہا کہ ہمیں خواتین کو برابری کا حقوق دینا ہوگا۔انہوں نے کہا کہ پورے میونسپل کارپوریشن میں جنرل نشستوں میں ایک خواتین ممبر کا الیکشن میں حصہ لینا ہمارے لیے لمحہ فکریہ ہے۔انہوں نے کہا کہ تمام سیاسی جماعتوں کو الیکشن میں خواتین کو بھرپور موقع دینا چاہیے۔اس موقع پر ممتاز سماجی کارکن یار محمد ثاقب نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں نوجوان اور تعلیم یافتہ خواتین کو انتخابی عمل میں شامل کرنے کے لیے موقع دینا چاہیے انہوں نے کہا مخصوص نشستوں کے علاوہ ہمیں جنرل نشستوں پر بھی خواتین کو نمائندگی دینی چاہیے۔آخر میں جماعت اسلامی کے راہنما غلام یاسین بلوچ نے خواتین کو انتخابی عمل میں شامل کرنے کے لیے نظام کی تبدیلی اور پارلیمنٹ کو بااختیار بنانے کی اہمیت پر زور دیاعلاوہ ازیں خواتین حقوق کے علمبردار اور وومن لوکل گورنمنٹ اسپیکر بختاور اختر ہے خطاب کرتے ہوئے خواتین کی ووٹ کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ خواتین ہمارے معاشرے کا 50 فیصد سے زیادہ حصہ ہیں اور ہم معاشرے کے اکثریتی طبقے کو نظر انداز کر کے آگے نہیں بڑھ سکیں گے انہوں نے تمام سیاسی پارٹیوں کے سربراہان پر زور دیتے ہوئے کہا وہ عورتوں کو اپنی سیاسی جماعتوں میں شامل کرکے انکو بھرپور نمائندگی فراہم کریں۔انہون نے کہا کہ ایک عورت ہی کسی دوسرے عورت کے مسائل کو سمجھ سکتی ہے۔قبل ازیں سیپ پی کے اہلکار مہرجان بلوچ نے خواتین حقوق کے حوالے سے اپنے تنظیم کے اغراض ومقاصد پر بھی روشنی ڈالی۔

﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر2119/2022
کوئٹہ 24مئی۔محمد جہانگیر کاکڑ نے ڈائریکٹر جنرل ایکسائز ،ٹیکسیشن اینڈ اینٹی نارکوٹکس۔نارتھ زون بمقام کوئٹہ کے عہدے کا چارج سنبھال کر کام شروع کردیا ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر2120/2022
جھل مگسی 24مئی ؛۔گندھاوا میں الیکشن کمیشن جھل مگسی کے زیر اہتمام ووٹ کی اہمیت الیکشن کمیشن کے ضابطہ اخلاق اور شعور آگاہی کے حوالے سے سیمینار کا انعقاد کیا گیا آگاہی سیمینار میں ریجنل الیکشن کمشنر عبداللہ ڈسٹرکٹ الیکشن کمشنر جھل مگسی سکندر جمالی الیکشن کمشنر جہل مگسی محمد ھاشم جمالی الیکشن آفیسر ہدایت اللہ جاموٹ اسسٹنٹ کمشنر محمد یار مگسی ایکس ای این غلام سرور اسسٹنٹ ریٹرننگ آفیسر سبحان مگسی ایس پی مشتاق احمد ایڈوکیٹ سمیت دیگر بلدیاتی امیدواران نوجوان کمیونٹی سماجی کارکنان اور مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد نے شرکت کی سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے ریجنل الیکشن کمشنر عبداللہ ڈسٹرکٹ الیکشن کمشنر جھل مگسی سکندر جمالی نے خطاب میں کہا کہ اس سیمینار کا مقصد عوام کو ووٹ کے متعلق آگاہی اور اس کی اہمیت کو اجاگر کرنا ہے اور الیکشن کمیشن کی جانب سے کے کیے گئے تمام اقدامات عوام سے شیئر کرنا ہے انتخابات میں حصہ لینے والے تمام امیدواران عوام میں ووٹ کی اہمیت کو اجاگر کریں تاکہ بلدیاتی انتخابات میں ووٹنگ کا ٹرن آو¿ٹ زیادہ سے زیادہ آئے ووٹ کی مدد سے بہترین سماج دوست شخصیات کا چناو¿ عمل میں لایا جاتا ہے لوکل گورنمنٹ الیکشن کے موقع پر قومی فریضے کی ادائیگی میں مرد خواتین زیادہ سے زیادہ اپنا کردار ادا کریں انہوں نے کہا کہ تمام امیدواران الیکشن کمیشن کے قوانین پر عمل پیرا ہوں الیکشن کمیشن آف پاکستان کے اس عمل کو کامیاب بنانے کے لیے ہر ممکن اقدامات کو یقینی بنایا جا رہا ہے الیکشن کمیشن کے پروگرام کے مطابق بلدیاتی انتخابات مقررہ وقت پر ہوں گے عوام انتخابات کے دن اپنے ووٹ کے استعمال کو یقینی بنائیں تاکہ جمہوری عمل مکمل ہو سکے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
پریس ریلیز
کوئٹہ 24مئی۔پاکستان چلڈرن ا کیڈمی کوئٹہ کے زیر اہتمام ایک روزہ تقاریب کا انعقاد مقابلہ حسن قرات،مقابلہ مضمون نویسی اور مقا بلہ آ راہش گل بتاریخ 26 مئی 2022 بروز جمعرات بوقت 10:30بجے صبح کو ایوانِ اطفال خوجک روڈ کوئٹہ میں ہو رہا ہے اس تقریب کے مہمان خصوصی صوبائی وزرائ اور اعلیٰ شخصیات ہوں گے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
پریس ریلیز
کوئٹہ 24مئی۔سمال انڈسٹریز آفیسر ویلفیئر ایسوسی ایشن کا اجلاس ڈائریکٹر سمال انڈسٹریز کی سربراہی میں منعقد ہوا۔جس میں متفقہ طور پر عبوری کابینہ کو تشکیل دیاگیا عبوری کابینہ میں زاہد علی کرد صدر،نقیب اللہ کاکڑ ،جنرل سیکرٹری سید حمید اللہ بطور نائب صدر غلام یاسین سینئر نائب صدر ،یاسر جمالی جوائنٹ سیکرٹری ،سیف اللہ سیکرٹری مالیات کامران رئیسانی پریس سیکرٹری ،رحمت اللہ کاکڑ ڈپٹی جنرل سیکریٹری شامل ہیں۔سمال انڈسٹریز آفیسر ویلفیئر ایسوسی ایشن کی عبوری کابینہ کا انتخاب محکمے ہذا کی ترقی اور ملازمین کے مسائل کو حل کرنے اور ترقی وفلاح لئے اپنے سارے وسائل بروئے کار لائے گا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Post comment