خبرنامہ نمبر1204/2022
جھل مگسی 18مارچ۔ضلع جھل مگسی کی ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال گنداوہ میں محکمہ صحت کے عملے کو غذائی قلت، حفاظتی ٹیکوں اور پیدائشی مسائل کے بارے میں آگاہی ورکشاپ وسیشن کا انعقاد کیا گیا جس میں اس سیشن میں شرکت کرنے والے ملازمین کو کنگ سلمان کی جانب سے ہیلتھ میڈیسن اور آلات کے پیکج کی ترسیل بھی فراہم کی گئی اس پروگرام کا بنیادی مقصد تھا محکمہ ہیلتھ کے ملازمین کو بہتر سے بہتر انداز میں آگاہی فراہم کی جا سکے اس موقع پر ڈی ایچ او ڈاکٹر رخسانہ مگسی بھی موجود تھیں منعقدہ آگاہی ورکشاپ و سیشن سے ڈپٹی کمشنر جھل مگسی ڈاکٹر شرجیل نور نے اپنے خطاب میں کہاکہ اس تربیتی آگاہی ورکشاپ میں محکمہ ہیلتھ کے ملازمین کو کافی حد تک ان کی معلومات میں اضافہ ھوا ہوگا اور وہ بہتر انداز میں اپنے فرائض منصبی سرانجام دے سکیں گے۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح کے معلوماتی کورس سے حاصل ھونے والے تجربے سے ملازمین فیلڈ کے دوران اپنے فرائض احسن انداز سے سرانجام دے سکیں گے اس ٹریننگ کے ثمرات سے عوام کو بھی فائدہ پہنچائیں گے ہیلتھ ورکرز کو چاہیے کہ وہ عوام میں حفاظتی ٹیکوں کے متعلق زیادہ سے زیادہ شعور پیدا کریں تاکہ عوام اپنے بچوں کو ویکسین لگوا کر عمربھر بیماریوں سے بچائیں کیونکہ احتیاط علاج سے بہتر ہے اگر والدین ابھی سے اپنے بچوں کو مختلف خطرناک بیماریوں سے تحفظ کے لیے ویکسین لگائیں گے تو مستقبل میں ان کے بچے خطرناک وبائی امراض سے محفوظ رہ سکیں گے حکومت بلوچستان بچوں کو وبائی امراض سے بچانے کے لیے مفت میں ویکسین کروا رہی ہے اب والدین کی ذمہ داری ہے کہ وہ اپنے بچوں کو بیماریوں سے تحفظ کے لئے ویکسین لگوائیں اور حکومت کا ساتھ دیں۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1205/2022
سبی 18 مارچ ۔ڈپٹی کمشنر سبی سید زاہد شاہ کی صدارت میں زمینداروں اور کھاد ڈیلروں کا ایک اہم مشترکہ اجلاس منعقد ہوا اجلاس میں کرنل ایف سی بلال احمد، ضلعی افسران سمیت زمینداروں اور کھاد ڈیلروں کی کثیر تعداد نے شرکت کی اس موقع پر خصوصی طور پر یوریا کھاد کے بحران زمینداروں کو فراہمی اور سرکاری نرخ کا تفصیلی جائزہ لیا گیا اجلاس میں مشترکہ طور پر یوریا کھاد کی بوری کی قیمت 2100 روپے مقرر کی گئی اس موقع پر اجلاس کے شرکاءسے خطاب کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر سید زاہد شاہ نے کہا کہ شہر میں یوریا کھاد کی ذخیرہ اندوزی اور بلیک مارکیٹنگ کسی صورت برداشت نہیں کیا جائے گا اس عمل میں ملوث کھاد ڈیلروں کے خلاف سخت کاروائی عمل میں لائی جائے گی انہوں نے کہا کہ کھاد کے بحران کی وجہ سے زمینداروں کو انتہائی مشکلات کا سامنا کرنا پڑا اب انہیں مزید تکلیف کا سامنا نہیں کرنا پڑے گا بلکہ انہیں کھاد کی فراہمی اور رلیف دینے کے لیے تمام وسائل بروئے کار لائے جائیں گے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1206/2022
کوئٹہ 18مارچ ؛۔ چیئرپرسن بلوچستان کمیشن آف دی اسٹیٹس آف ویمن فوزیہ شاہین نے اپنے عہدے کا چارج سنبھال کر کام شروع کر دیا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Post comment