خبرنامہ نمبر1980/2022
کوئٹہ17مئی۔ وزیراعلیٰ بلوچستان میر عبدالقدوس بزنجو اورچیف سیکرٹری بلوچستان عبدالعزیز عقیلی نے گزشتہ روز کیڈٹ کالج مستونگ میں گیسٹروکی وباءکا سختی سے نوٹس لیتے ہوئے متعلقہ حکام کو ہدایت جاری کی ہے کہ اس بابت فوری طور پر ایک جامع رپورٹ مرتب کرکے ارسال کریں۔ اس حوالے سے یہ خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے کہ کالج میں آلودہ پانی پینے کی وجہ سے گیسٹرو کی وباء طلبہ میں پھیلی تھی جس سے تقریبائ9 طلبہ متاثر ہوئے تھے جنہیں علاج و معالجے کے لئے نواب غوث بخش رئیسانی ہسپتال مستونگ میں منتقل کردیاگیا ہے، جن کی حالت ابھی بہتر ہے۔ کالج میں وباءکے پھیلنے پرچیف سیکرٹری بلوچستان نے شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ طلبہ کی تعلیم و صحت کا پورا پورا خیال رکھا جائے، اس حوالے سے کسی بھی قسم کی غفلت اور کوتاہی ناقابل برداشت ہوگی۔انہوں نے وباءسے متاثرہ طلبہ کو علاج معالجے کی بہترین سہولیات فراہم کرنے کی ہدایت کی ہے اور آلودہ پانی کے نمونے چیک کرکے رپورٹ طلب کرلی ہے اور وجوہات کافوری طور پر سدباب کرنے کی بھی ہدایت جاری کر دی ہے۔ واضح رہے کہ کمشنر قلات ڈویڑن نے وباءکی خبر کے بعد وزیراعلیٰ بلوچستان اورچیف سیکرٹری کی ہدایت پر ڈپٹی کمشنر مستونگ ، ڈی ایچ او مستونگ، ایکسین پی ایچ ای اور کوئٹہ سے ماہرین صحت پر مشتمل ٹیم کو متاثرہ کالج کا دورہ کرنے اور رپورٹ جمع کرنے کے لئے ہدایات دی۔ حکام نے کالج میں نصب آر او پلانٹ کی زیر التوا اسکیم کا بھی معائنہ کیا جبکہ پرنسپل کیڈٹ کالج مستونگ کی خصوصی درخواست پرنواب غوث بخش رئیسانی ہسپتال کے ڈاکٹرز کو گیسٹرو کی وباءپر کنٹرول کرنے کی غرض سے کالج میں تعینات کردئیے گئے ہیں۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1981/2022
مستونگ۔ 17مئی۔۔ ڈسٹرکٹ ایجوکیشن گروپ کے فیصلوں کی روشنی میں گروپ کے چیئرمین ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر محمد ندیم شاہ بخاری کی زیر صدارت انکوائری کمیٹی کا اہم ایک اجلاس ڈی ای او آفس مستونگ میں منعقد ہوا. کمیٹی کے ممبران میں میں ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر احکام الدین ساتکزئی، ڈسٹرکٹ اکاونٹس آفیسر خالد خان مندوخیل، ڈی ای او فیمیل میڈم عائشہ بگٹی، آغا رحمت شاہ نے شرکت کی. انکوائری کمیٹی میں ڈسٹرکٹ مستونگ میں ڈیوٹی سے غیر حاضر اور فرائض میں غفلت برتنے والے اساتذہ انکوائری کمیٹی کے روبرو پیش ہوئے اور ان سے غیر حاضری پر جواب طلبی کی گئی. انکوائری کمیٹی کے سامنے مطمئن کن جواب نہ دینے اور انکوائری کمیٹی کے نوٹس دینے کے باوجود کمیٹی کے سامنے پیش نہ ہونے والے اساتذہ کیخلاف بیڈا ایکٹ 2011 کے تحت سخت کاروائی اور تنخواہوں سے کٹوتی کا فیصلہ کیا گیا. اس موقع پر ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ تعلیم ایک اہم شعبہ اور اساتذہ کا بچوں کے مستقبل سنوارنے میں بنیادی کردار ہوتا ہے لیکن بدقسمتی سے ضلع مستونگ میں اکثر اسکولوں کے اساتذہ اپنے فرائض میں غفلت و لاپروائی کا مظاہرہ کر رہے ہیں. جنکے خلاف سخت قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے گی. انھوں نے کہا کہ تعلیم کے بغیر کوئی بھی قوم ترقی نہیں کرسکتی جن قوموں نے تعلیم کی اہمیت کو سمجھ کر اس کی بہتری کیلئے کام کیا انھوں نے ترقی کے منازل طے کی ہیں. انھوں نے کہا کہ ڈپٹی کمشنر مستونگ سلطان بگٹی صاحب اس میں خصوصی دلچسپی رکھتے ہیں ڈپٹی کمشنر مستونگ سلطان محمد بگھٹی صاحب کی خصوصی ہدایات کی روشنی میں ضلعی انتظامیہ اور محکمہ تعلیم ملکر مستقبل کے ہونہاروں کو زیور تعلیم سے آراستہ کرنے کیلئے اقدامات اٹھا رہے ہیں جس کے تحت کسی بھی دباو¿ کے بغیر فرائض میں غفلت و لاپروائی برتنے والے اساتذہ کیخلاف قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے گی اور کسی قسم رعایت نہیں دی جائے گی.۔۔۔۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Post comment