خبرنامہ نمبر1172/2022
کوئٹہ 15مارچ۔پارلیمانی سیکرٹری سماجی بہبود، غیر رسمی تعلیم و اطلاعات و نشریات محترمہ بشریٰ رند کی زیر صدارت بلوچستان عوامی انڈومنٹ فنڈ بورڈ کا اجلاس منعقد ہوا اجلاس میں سیکریٹری سماجی بہبود غیر رسمی تعلیم عبدالطیف کاکڑ ،ڈائریکٹر جنرل سماجی بہبود احسان اللہ، ڈا کٹر شیرزمان سماجی ورکر وممبر بورڈ ثناءدرانی کوئٹہ وائس کے ضیا الرحمن اور بورڈ کے دیگر ممبران اور متعلقہ حکام بھی موجود تھے اس موقع پر محترمہ بشریٰ رند نے شرکاءسے بات چیت کرتے ہوئے کہا ہے کہ بلوچستان عوامی انڈومنٹ فنڈ حکومت بلوچستان کی جانب سے نادار و مستحق مریضوں کے علاج معالجے کے لیے مالی معاونت کا جامع منصوبہ ہے جس میں سرطان امراض قلب جگری پیوندکاری تھیلیسیمیا سمیت دیگر متعدی بیماریوں کا علاج شامل ہیں ۔انہوں نے کہا کہ انڈومنٹ فنڈ کی ایک ایک پائی عوام کی امانت ہے اس کا دینداری کے ساتھ استعمال یقینی بنایا جائے اور کوشش کی جائے کہ زیادہ سے زیادہ مریض اسے استفادہ کر سکیں نادار اور مستحق مریضوں کی بروقت علاج ومعالجہ کے لیے محکمہ خزانہ فنڈ کی ریلیز کا عمل تیز کریں اس معاملے کو سنجیدہ لینے کی ضرورت ہے انہوں نے کہا کہ مریضوں کے بہترین علاج معالجے کے لئے ذاتی پسند ناپسند کی بجائے ماہرین پر مشتمل کمیٹی مریض کوریفرکریں کہ کس مریض کا علاج کس اسپتال میں زیادہ بہتر طریقے سے ہو سکتا ہے اس حوالے سے بضابط قواعد وضوابط مرتب کیے جائیں انہوں نے پینل میں شامل اسپتالوں کا دوبارہ جائزہ لینے کے لئے سکرٹری سماجی بہبود کی سربراہی میں ایک کمیٹی تشکیل دینے کی تاکید کی کہ وہ پینل میں شامل اسپتالوں کی کارکردگی کا جائزہ لے کر فیصلہ کریں کہ کونسا اسپتال بہترین علاج معالجہ فراہم کر رہا ہے اور کون سا نہیں ساتھ ہی ساتھ اس بات کو مدنظر رکھیں کہ کس اسپتال سے صوبے کے زیادہ سے زیادہ نادار مریض استفادہ کر سکتے ہیں اور اس حوالے سے تندرست ہو کر گھروں کو آنے والے مریضوں کی فیڈ بیک بھی لیں تاکہ عوام کے مفاد میں زیادہ بہتر اور جامعہ پالیسی مرتب کی جا سکیں بعد آ زاں بورڈ نے بلوچستان عوامی انڈومنٹ فنڈ میں بہتری کے لئے جدید ا صلاحات لانے اور مریضوں کو بہترین علاج معالجے کی سہولیات کی فراہمی کیلئے مختلف اقدامات کی متفقہ طور پر منظوری بھی دے دی گئی۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1173/2022
لورلائی 15مارچ۔ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر لورلائی یحی’ خان کاکڑ نے کہا کہ موجود ہ حکومت بچوں کو معیاری تعلیم وتربیت کی فراہمی پر خصوصی توجہ دے رہی ہے ۔سوشل میڈیا کا غلط استعمال ہماری نوجوان نسل کو تباہ کرسکتی ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے ایف سی پبلک سکول لورالائی میںانسانی زندگی میں سوشل میڈیا کی اہمیت اور نقصانات کے عنوان سے منعقد ہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا سیمینار میں پرنسپل ڈگری کالج بوائز لورالائی عبدالعزیز۔پروفیسر ڈگری کالج بوائز لورالائی انورضمیر،سعید احمد،پیر محمد کاکڑ ،دولت خان کاکڑ کے علاوہ سکولوں اور کالجوں کے طلباءنے شرکت کی۔ ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر یحی’ خان کاکڑ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سوشل میڈیا کا غلط استعمال کویڈ 19 سے زیادہ خطرناک ہے اور اسکے صحیح استعمال سے دشمن کو شکست بھی دی جا سکتی ہے آجکل میڈیا کے ذریعے جنگیں لڑیں جاتی ہیں ہمارے نوجوان دشمن کے وار کا جواب سوشل میڈیا پر دیں اور اس کی پروپیگنڈا کو توڑ دیں انہوں نے کہا کہ بہتر چیز عمل ہے ہمارے نوجوان آج سے یہ عہد کریں کہ سوشل میڈیا کا منفی استعمال نہیں کریں گے اسکے مثبت پہلو بروئے کار لائیں گے اور اس سے اپنے تعلیمی سلسلے کو آگے بڑھائیں اور مفادعامہ کے لیے بھی استعمال کریں گے سیمینار سے سعید احمد دولت خان کاکڑ اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿

پریس ریلیز
تربت 15مارچ ؛۔یونیورسٹی آف تربت کے شعبہ انگریزی میں نئے آنے طلبہ وطالبات کے استقبال میں ایک پروقار تقریب کا انعقاد کیا گیا۔اس موقع پر شعبہ انگلش کے تمام اساتذہ کرام اور طالب علم موجود تھے۔ سینئر طلبہ و طالبات نے شاندار تقاریر، ڈرامہ،خاکہ ، تخلیقی شاعری، مزاحیہ نغمے اور مختلف پرفارمنس کا مظاہرہ کرتے ہوئے تقریب کو یادگاربنایا۔ ہونہار طالب علموں نے اپنی تخلیقی صلاحیتوں کا مظاہرہ کرتے ہوئے تقریب کے شرکاءکومحظوظ کیا اور ان سے داد وصول کی۔اس موقع پر نئے آنے طلبہ وطالبات کو یونیورسٹی آف تربت سمیت شعبہ انگریزی کے اسکوپ کے بارے میں تفصیلی آگاہی بھی دی گئی۔ اس موقع پر استقبالبیہ خطاب کرتے ہوئے شعبہ انگلش کے سربراہ امجد حبیب نے نئے آنے والے طالب علموں کوتلقین کی کہ وہ اپنی تمام تر توجہ پڑھائی اورسیکھنے کے عمل پر مرکوزکرتے ہوئے یونیورسٹی میں نظم و ضبط اور یونیورسٹی کی صفائی ستھرائی اور گرینری کو برقرار رکھنے کے لئے بھی اپنابھرپورکرداراداکریں۔ا پنے استقبالیہ کلمات میں اسسٹنٹ پروفیسر ڈاکٹر شاہ میر نے طلباءکو محنت اور خلوص کے ساتھ اپنی پڑھائی مکمل کرنے کی تاکیدکی،جبکہ لیکچرار مظہر علی نے اظہار خیال کرتے ہوئے تحقیق اور انوویژن کی ضرورت واہمیت پر زور دیا۔ مقررین نے یونیورسٹی میں اس طرح کی تخلیقی تقاریب کے انعقاد میں تعاون اور حوصلہ افزائی کرنے پریونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر جان محمد کا شکریہ ادا کیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Post comment