خبرنامہ نمبر1114/2022
کوئٹہ 10مارچ: چیف سیکرٹری بلوچستان مطہر نیاز رانا کی زیر صدارت محکموں میں خالی آسامیوں کو پر کرنے کے حوالے سے اجلاس منعقد ہوا۔ اجلاس میں چیئرمین سی ایم آئی ٹی عبدالصبور کاکڑ اور ایس ایم بی آر ارشد مجید شریک تھے۔ اجلاس میں یہ طے پایا گیا کہ صوبے میں مختلف آسامیوں کو میرٹ اور شفافیت کے ذریعے پر کرنے کے لئے تمام دستیاب وسائل بروئے کار لائے جائیں گے۔ چیف سیکرٹری نے کہا کہ حکومت نوجوانوں کو خالی آسامیوں پر روزگار فراہم کرنے کیلئے شفافیت پر یقین رکھتی ہے اور اس کیلئے ٹھوس اقدامات کرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ میرٹ اور شفافیت سمیت صوبے کی تعمیر و ترقی اور نوجوانوں کو میرٹ پر روزگار کی فراہمی پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ نوجوانوں کو میرٹ پر روزگار فراہم کرنا صوبائی حکومت کی اولین ترجیح ہے۔ انہوں نے کہا کہ سرکاری اسامیوں پر بھرتی کے پورے عمل کو صاف شفاف بنائےں گے اور میرٹ کو ہر صورت مقدم رکھا جائے گا تاکہ نوجوانوں کا صوبائی محکمانہ انتظامیہ پر اعتماد بحال ہو۔ انہوں نے کہا کہ صوبے میں خالی آسامیوں پر بھرتیوں میں واضح اور شفافیت پر مبنی پالیسی اختیار کی جائیگی۔چیف سیکرٹری نے کہا کہ محکموں میں خالی آسامیوں کو میرٹ پر بھرتیوں کے لیے چیئرمین سی ایم آئی ٹی کی سربراہی میں ایک اعلیٰ سطحی کمیٹی تشکیل دے دی گئی ہے جس میں ایس ایم بی آر ارشد مجید ،سیکرٹری ایس اینڈ جی اے ڈی عبدالرحمن بزدار، ایڈیشنل چیف سیکرٹری داخلہ محمد ہاشم غلزئی، چیئرمین بی آر اے پسند خان بلیدی، ممبر سی ایم آئی ٹی غلام علی بلوچ اور زاہد سلیم شامل ہیں جو مختلف خالی آسامیوں پر بھرتیوں کی شفافیت پر مبنی عمل کی نگرانی کریں گے۔ چیئرمین سی ایم آئی ٹی نے بھرتیوں میں شفافیت کے سلسلے میں آج اہم اجلاس طلب کرلیا ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1115/2022
کوئٹہ 10مارچ: چیف سیکرٹری بلوچستان مطہر نیاز رانا کی زیر صدارت صوبے میں یوریا کھاد کی اسمگلنگ کی روک تھام کے حوالے سے اجلاس منعقد ہوا اجلاس میں ایڈیشنل چیف سیکریٹری داخلہ محمد ہاشم غلزئی ، آئی جی پولیس محسن حسن بٹ ، کمشنر کوئٹہ سہیل الرحمن بلوچ ، ڈپٹی کمشنر کوئٹہ عرفان نواز میمن، کرنل 12 کور وجاہت جبکہ ڈویڑنل کمشنرز اور ڈپٹی کمشنرز نے بذریعہ وڈیو لنک شرکت کی۔ چیف سیکرٹری نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یوکرین پر روسی حملہ یقیناً کھاد کی عالمی منڈی کو متاثر کرے گا اور کھاد کی قلت پیدا ہوسکتی ہے جس سے کھاد کی صوبے سے اسمگلنگ ہونے کا خدشہ ہے۔ انہوں نے ہدایت کی کہ صوبے کے اندرونی اور خارجی راستوں پر کڑی نظر رکھی جائے تاکہ صوبے سے کھاد کی اسمگلنگ کا تدارک کیا جاسکے۔ انہوں نے کھاد کی زخیرہ اندوزی کرنیوالوں کے خلاف کارروائی کی بھی ہدایت کی۔ چیف سیکرٹری نے کہا کہ یوریا کھاد کی اسمگلنگ روکنے کے لیے بلوچستان بارڈرز اور مختلف شاہراہوں پر موبائل چیک پوسٹیں قائم کیے جائیں اور یہ چیک پوسٹیں صرف کھاد کی اسمگلنگ کی روک تھام کیلئے ہونگی۔ انھوں نے کہا کہ ملک کے دیگر صوبوں میں لمپی اسکن بیماری پھیل گئی ہے جس سے سینکڑوں جانور مر گئے ہیں اور یہ بیماری ایک جانور سے دوسرے جانوروں میں منتقل ہوتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت نے دوسرے صوبوں کے متاثرہ علاقوں سے جانوروں کی نقل و حرکت پر پابندی عائد کی ہے اور اس کے لیے صوبے میں دفعہ 144 بھی نافذ کردی گئی ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1116/2022
دکی10مارچ۔ڈپٹی کمشنرعظیم کاکڑکی خصوصی ہدایت پررسالدار لیویز فورس اسراراحمد ترین نے لیویز فورس کے جوانوں کی ڈیوٹیاں دکی کے امن و امان کو برقرار رکھنے کیلئے اے ایریا میں لگائی گئی ہیں،گزشتہ شب لیویز نفری کے ہمراہ دوران گشت باغ لیز ایریا میں موبائل فون اور موٹرسائیکل چھیننے والے دو چوروں کا طاقب کرکے انہیں گرفتار کیا،گرفتار ہونیوالے چور زاہد ولد احمد جان قوم میٹی ناصر سکنہ ناصرآباد اور حبیب ولد صالح محمد قوم بارکزئی سکنہ نصیب آباد سے ایک عدد ٹی ٹی پستول اورکوئلے کے مزدوروں سے چھینے گئے پانچ عدد موبائل فون برآمد کرلئے گئے،مزید تفتیش کرنے پر ملزمان کی نشاندہی پر کوئلے کے مزدوروں سے چھینے گئے موٹرسائیکل سی جی 125 ماڈل 2021 اور ایک عدد سی ڈی 70 موٹرسائیکل ملزمان کے گھروں سے برآمد کرلئے گئے،جبکہ مزید تفتیش ابھی جاری ہے رسالدار لیویز اسرار احمد ترین نے کہا کہ لیویز فورس دکی کے عوام کو ہر طرح کا تحفظ دینے کیلئے کوشاں ہے اور ڈپٹی کمشنر عظیم کاکڑ کی ہدایت پر دکی سے جرائم پیشہ افراد کا خاتمہ کرینگے،انہوں نے کہا کہ تفتیش مکمل ہونے پر ملزمان کو پولیس کے حوالے کردیا جائیگا۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1117/2022
کوئٹہ 10مارچ۔ڈپٹی کمشنر کوئٹہ کے ایک اعلامیہ کے مطابق کوئٹہ شہر میں دودھ کی ڈیری فارم پر ہول سیل قیمت 111 روپے جبکہ ریٹیل ریٹ دکانوں پر 125روپے فی لیٹر مقرر کردیاگیا ہے اس حواسے سے دکانداروں سے کہا گیا ہے کہ مقررہ قیمت پر دودھ فروخت جبکہ پرائس لسٹ نمایاں جگہ پر آویزاں کریں شہریوں سے کہا گیا ہے کہ مقررہ قیمت سے زائد ادائیگی نہ کریں خلاف ورزی کی صورت میں متعلقہ دکاندار اور ڈیری فارم کے خلاف سخت قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1118/2022
کوئٹہ 10مارچ۔محکمہ کالجز و ہائیر اینڈ ٹیکنیکل ایجوکیشن حکومت بلوچستان کے اعلامیہ کے مطابق کاشف نبی ڈپٹی سیکرٹری ایڈمن کا تبادلہ کرکے انہیں قائمقام ایڈیشنل سیکرٹری ڈیولپمنٹ جبکہ محمد انور لودھی ڈپٹی سیکرٹری جوڈیشل کا تبادلہ کرکے انھیں ڈپٹی سیکرٹری ایڈمن تاحکم ثانی تعینات کردیا گیا ہے
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1119/2022
زیارت10مارچ۔ڈپٹی کمشنر زیارت حبیب نصیر کی زیر صدارت ڈسٹرکٹ ایجوکیشن گروپ کا اجلاس منعقد ہوااجلاس میں ڈسٹرکٹ افسر ایجوکیشن عبدالفیاض کاکڑ،،ڈپٹی کنزرویٹر حسیب کاکڑ،ڈی ایچ او ڈاکٹر انور مندوچیل ،ڈپٹی ڈائریکٹر محمد عظیم ،ڈی او فیمیل نے شرکت کی اجلاس میں مختلف فیصلے کئے گئے اجلاس میں داخلہ مہم،کرونا ویکسینیشن اور ٹری پلانٹیشن کے حوالے سے مختلف فیصلے کئے گئے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ بارہ سال سے اوپر بچوں کو کرونا ویکسینشن کے بغیر داخلہ نہیں ملے گا،اس موقع پر ڈپٹی کمشنر زیارت حبیب نصیر کو ڈسٹرکٹ افسر ایجوکیشن عبدالفیاض کاکڑ نے بریفنگ بھی دی۔اجلاس سے ڈپٹی کمشنر زیارت حبیب نصیر نے خطاب کرتے ہوئے کہا تمام اسکولوں میں درخت لگائیں جائیں اور شجر کاری مہم کو کامیاب بنانے میں کردار ادا کریں شجر کاری مہم کو کامیاب بنانے کے لیے تمام مکاتب فکر کے افراد کو کردار ادا کرنا ہوگا۔انہوں نے کہا کہ کورونا ایک خطرناک مرض ہے اس کے خاتمے صرف ویکسینشن سے ہوسکتی ہے تمام والدین اپنے بارہ سال سے اوپر کے تمام بچوں کی ویکسینیشن ضرور کریں اس سلسلے میں ویکسینشن نہ کرنے والے بچوں کو داخلہ نہیں دیا جائے۔انہوں نے کہا کہ تعلیم یافتہ اقوام دنیا پر حکمرانی کررہے ہیں تعلیم ترقی کا زینہ ہے معیاری تعلیم کو فروغ دیکر ہم ملک کو ترقی کی راہ پر گامزن کرسکتے ہیں،تمام والدین کی زمہ داری ہے کہ وہ اسکول داخلہ مہم کو کامیاب کریں اور اپنے بچوں کو اسکولوں میں داخل کریں بچے ہمارا مستقبل ہے مسقبل کے معماروں کو زیور تعلیم سے آراستہ کرنا ہم سب کی زمہ داری ہے
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1120/2022
خیبر پختونخوا10مارچ۔ اسپیشل اسسٹنٹ برائے اطلاعات بیرسٹر سیف علی خان سے ایڈیشنل سیکرٹری اطلاعات نصیر خان مندوخیل کی قیادت میں محکمہ تعلقات عامہ بلوچستان کے فدد نے ورلڈ بینک کے اشتراک سے گورنس اینڈ پالیسی پروجیکٹ کے حوالے سے ملاقات کی۔ملاقات میں ڈائریکٹر جنرل خیبر پختونخوا، امداد اللہ، ڈائریکٹرنورالہادی،ڈپٹی ڈائریکٹربلوچستان  وقاص شاہین،انفارمیشن آفیسر عدیل احمد ،کمپیوٹر پروگرامر جاوید اقبال،اورgppسے مہوش،بجاربلوچ، طارق خان ودیگر متعلقہ حکام نے شرکت کی۔ وفد سے گفتگو کرتے ہوئے اسپیشل اسسٹنٹ برائے اطلاعات بیرسٹر سیف اللہ خان نے کہا کہ محکمہ اطلاعات و تعلقات عامہ کے جملہ امور کو جدید خطوط پر استوار کرنے کی ضرورت ہے۔ محکمے حکومتی تشہیر کے ساتھ عوام کو درپیش مسائل کی نشاندہی بھی کریںاورمختلف سماجی مسائل کے بارے میں شعور دینے کے لئے مو¿ثر انداز میں استعمال کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ جدید دور میں عوام کو حکومت کے عوامی فلاح و بہبود کے اقدامات کے بارے میں حقیقت  پر مبنی معلومات کی فراہمی یقینی بنائیںاور محکمہ اطلاعات کے روایتی انداز کا ر کو یکسر تبدیل کرکے جدید دور کے تقاضوں اور عوامی توقعات سے ہم آہنگ بنانے کے لئے ایک قابل عمل پلان تشکیل دینا قابل ستائش ہے۔ ایڈیشنل سیکرٹری اطلاعات بلوچستان نصیر خان مندوخیل نے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ابلاغ عامہ کے شعبے میں رونما ہونے والی تیز رفتار تبدیلیوں کی وجہ سے درپیش چیلنجز سے نمٹنے کے لئے محکمہ اطلاعات کو روایتی انداز سے ہٹ کر کام کرنا ہوگا جس کے لئے محکمے کے جملہ امور میں جدید عصری تقاضوں کے مطابق اصلاحات اور تبدیلیوں کی اشدضرورت ہے۔ محکمہ اطلاعات کو حکومت اور عوام کے درمیان رابطے کا ایک اہم ذریعہ قرار دیتے ہوئے انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ اس اہم ذمہ داری سے عہدہ برآ ہونے کے لئے محکمہ اطلاعات کو پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا کے ساتھ ساتھ سوشل میڈیا پر بھی بھر پور توجہ دینے اور ابلاغ کے اس شعبے میں مہارت حاصل کرنے کی ضرورت ہے ۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1121/2022
کوئٹہ۔ 10 مارچ پارلیمانی سیکرٹری قانون و پارلیمانی امور و چئیرپرسن وویمن پارلیمنٹرین کاکس فورم ڈاکٹر ربابہ خان بلیدی سے جمعرات کو یہاں مشیر برائے محنت و افرادی قوت نوابزادہ میر گہرام خان بگٹی اور ایم پی اے قادر نائل نے ملاقات کی اور بلوچستان میں لیبر لاز ، ہیلتھ اور پرو وویمن لیجسلیشن سمیت مختلف شعبوں میں ہونے والی قانون سازی اور گورننس سے متعلق تبادلہ خیال کیا،  ڈاکٹر ربابہ خان بلیدی نے کہا کہ بلوچستان کے قبائلی علاقوں سمیت جملہ دیہی و شہری علاقوں میں قانون کی بالا دستی اور مفاد عامہ سے متعلق ضروری قوانین کی تشکیل اور عمل درآمد کے حوالے سے کام جاری ہے اور تمام انتظامی محکموں اور پبلک سیکٹر کے اداروں کی رہنمائی و قانونی معاونت کے امور بطریق احسن جاری ہیں انہوں نے کہا کہ خواتین ، نوجوانوں مزدور و محنت کش افراد  سمیت نظر انداز طبقات  کو ترقی کے یکساں مواقع فراہم کرنے کے لئے اقدامات کو موثر بنایا جارہا ہے اور اس ضمن میں تمام اراکین اسمبلی کے مابین اتفاق رائے سے زیر التو مسودہ قانون پر پیش رفت کے لئے کوششیں کی جاررہی ہیں اس موقع پر نوابزادہ میر گہرام خان بگٹی نے کہا کہ بلوچستان کے قبائلی معاشرے میں خواتین کو عزت و احترام کا مثالی مقام حاصل ہے اور ازدواجی معاملات زندگی میں تلخی اور علیحدگی کی صورت میں مردوں کو پابند کیا جاتا ہے کہ وہ خواتین کو اپنی استعداد کے مطابق  روز مرہ اخراجات کی ادائیگی کو یقینی بنائیں انہوں نے کہا کہ تعلیم اور شعور کے ذریعے ہی پائیدار  ترقی کی بنیاد رکھی جاسکتی ہے نوابزادہ میر گہرام خان بگٹی نے بحثیت رکن بلوچستان اسمبلی ایکٹ کے تحت بلوچستان اسمبلی میں قائم فورم ڈبلیو پی سی  فرینڈ بننے پر رضا مندی کا اظہار کرتے ہوئے پرو وویمن لیجسلیشن سمیت انسانی حقوق کے تحفظ کیلئے ہونے والی قانون سازی میں بھرپور حمایت کا یقین دلایا ڈاکٹر ربابہ خان بلیدی نے مشیر لیبر و مین پاور نوابزادہ میر گہرام خان بگٹی اور ایم پی اے قادر نائل کی جانب سے نوجوانوں،  خواتین اور نظر انداز طبقات سے متعلق کی جانے والی قانون سازی میں حمایت پر ان کا شکریہ ادا کیا اور بلوچستان کے عوام کی بہتری کے لیے اجتماعی اقدامات پر مشترکہ موقف اپنانے کا عزم ظاہر کیا .
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
پریس ریلیز
کوئٹہ 10مارچ ۔ آل بلو چستان کلرک اینڈ ٹیکنکل ایمپلاز ایسویشن کے مرکز ی چیئرمین شکرخان رئیسانی ،شازیہ شاہوانی، نو شابہ ابڑواور نورین سلطان نے پر نسپل پولی ٹیکنیک گرلز کالج مہر نگار بلو چ سے ملا قات کی اور ملا زمین کے مسا ئل سے آگا ہ کیا جس پر پر نسپل نے یقین دھا ئی کر ائی کہ ملا زمین کے مسا ئل کو تر حجی بنیا د پر حل کئے جا ئینگے بعد میں چیئرمین نے ایسوسی ایشن کی طرف سے مبارک باد دی اور ان کے ساتھ مکمل تعاون کر نے کی یقین دھائی کرائی جس پر پر نسپل کا شکریہ بھی اداکیا ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Post comment