خبرنامہ نمبر1099/2022
کوئٹہ09 مارچ۔وزیراعلیٰ بلوچستان میر عبدالقدوس بزنجو بدھ کے روز بلوچستان عوامی پارٹی کے رہنما میر عبدالرو¿ف رند کی رہائش گاہ گئے جہاں انہوں نے ان سے ان کے والد میر محمد علی رند کے انتقال پر تعزیت کی۔ وزیراعلیٰ نے مرحوم کی روح کے ایصال ثواب اور بلند درجات کے لیے فاتحہ خوانی کی۔ صوبائی وزیر میر محمد خان لہڑی، صوبائی مشیر لالا رشید بلوچ او ر پارلیمانی سیکریٹری مٹھا خان کاکڑ بھی اس موقع پر موجود تھے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1100/2022
کوئٹہ 09مارچ؛۔وزیر اعظم کے قومی سلامتی کے مشیر ڈاکٹر معید یوسف اور چیف سیکرٹری بلوچستان مطہر نیاز رانا کی زیر صدارت نیشنل سیکیورٹی پالیسی کے حوالے سے اجلاس منعقد ہوا جس میں سیکیورٹی پالیسی کے خدوخال اور اس پر صوبے میں عملدرآمد کو یقینی بنانے کا جائزہ لیا گیا۔ اجلاس میں ایڈیشنل چیف سیکریٹری داخلہ محمد ہاشم غلزئی، آئی جی پولیس محسن حسن بٹ، سیکرٹری خزانہ حافظ عبد الباسط، سیکرٹری ایمپلیمینٹیشن عبداللہ خان، سیکرٹری سوشل ویلفئیر عبدالطیف کاکڑ، سیکرٹری پاپولیشن ویلفئیر یاسر خان، کمشنر کوئٹہ ڈویڑن سہیل الرحمن بلوچ جبکہ ڈویڑنل کمشنرز، ڈی ائی جیز، ڈپٹی کمشنرز اور ڈی پی اوز نے بذریعہ وڈیو لنک شرکت کی۔ ڈاکٹر معید یوسف نے کہا کہ قومی سلامتی پالیسی ایک جامع قومی سکیورٹی فریم ورک کے تحت شہریوں کے تحفظ، سکیورٹی اور وقار کو یقینی بنائے گی شہریوں کے تحفظ کی خاطر پالیسی کا محور معاشی سکیورٹی ہوگا اور معاشی تحفظ ہی شہریوں کے تحفظ کا ضامن بنے گا۔ انہوں نے کہا کہ پالیسی کا بنیادی مقصد شہریوں کو تحفظ فراہم کرنا ہے اور یہ پالیسی تمام اسٹیک ہولڈرز کی باہمی مشاورت سے تیار کی گئی ہے اور اس میں معاشی تحفظ کو بنیادی اہمیت دی گئی ہے انہوں نے کہا کہ پاکستان کی سکیورٹی اس کے شہریوں کی سکیورٹی سے وابستہ ہے اور پاکستان کسی بھی اندرونی اور بیرونی خطرات سے نمٹنے کے لیے پوری طرح سے تیار ہے۔ اجلاس میں صوبے میں حالیہ دہشتگردی واقعات کا بھی جائزہ لیا گیا۔ اس موقع پر ڈپٹی کمشنر کوئٹہ نے پالیسی کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی۔ ڈاکٹر معید یوسف نے کہا شہریوں پر مبنی اس سکیورٹی پالیسی کو یقینی بنانے کے لیے نیشنل سکیورٹی پالیسی نے معاشی سکیورٹی کو مرکز میں رکھا ہے۔ مضبوط معیشت اضافی وسائل پیدا کرے گی جو بعد میں منصفانہ طور پر تقسیم کیے جائیں گے تاکہ عسکری اور انسانی سکیورٹی کو فروغ دیا جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ اس میں بنیادی طور پر فوڈ سیکیورٹی، قومی وسائل کی سیکیورٹی، ملک کے لیے اندرون و بیرونی خطرات، اس کے علاوہ تیل کے ذخائر کتنے ہیں، مزید ذخائر کتنے تلاش کرنے کی ضرورت ہے، ملک میں پانی کی ضرورت کتنی ہے اور آئندہ برسوں میں کتنے وسائل کی ضرورت ہوگی اور ان کو کیسے استعمال میں لایا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اس پالیسی کے تحت نیشنل سیکیورٹی کمیٹی کی چھتری صوبائی حکومتیں اقدامات کریں گے جبکہ اس پالیسی پر عمل درآمد کے حوالے سے رپورٹنگ کا ایک میکنزم بھی وضع کیا جائے گا جس سے پالیسی پر عمل درآمد کے حوالے سے نظر رکھی جائے گی۔ چیف سیکرٹری نے کہا کہ ملک کو اپنی توجہ معیشت کو بہتر کرنے، بچوں کو تعلیم دینے اور عوام کے معیار زندگی کو بہتر کرنے پر لگانی چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ معاشی استحکام کے لیے علاقائی اتحاد اور تعاون بہت ضروری ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1101/2022
کوئٹہ 09 مارچ ۔  صوبائی محتسب بلوچستان کا ادارہ عوام کو فوری اور مفت انصاف کی فراہمی میں مصروفِ عمل ہے ،سرکاری اداروں میں مشکلات کے شکار لوگوں کی داد رسی اور انہیں انصاف فراہم کرنے کے ساتھ ساتھ سماج دشمن عناصر کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی کرنا محتسب ادارے کا نصب العین ہے لہذٰا اس ضمن میں ضلع جھل مگسی کے علاقہ جل کاریز مگسی سے جے وی ٹیچر موتی رام نے صوبائی محتسب کو درخواست دی تھی کہ وہ گورنمنٹ بوائز مڈل سکول واہی رامن میں اپنی خدمات انجام دے رہا ہے 23 اگست 2021 کو ڈی ای او جھل مگسی نے انکے سکول کا دورہ کیا جہاں سکول میں ان کی غیر موجودگی پر ڈی ای او نے ان کے اس مہینے کی تنخواہ سے کٹوتی کروائی، درخواست گزار نے اپنے غیر حاضری کے متعلق بتایا کہ اس روز سے میں دو دن کی اتفاقی رخصت پر تھا جس کی تصدیق سکول کے ہیڈ ماسٹر  نے بھی کی، صوبائی محتسب کے احکامات کی روشنی میں انویسٹیگیشن آفیسر نور اللہ خان کاکڑ نے ڈی ای او جھل مگسی کو نوٹس جاری کرتے ہوئے وضاحت طلب کی، بعد ازاں ڈی ای او جھل مگسی نے اپنے تحریری جواب میں آگاہ کرتے ہوئے لکھا کہ صوبائی محتسب کے احکامات پر عملدرآمد کرتے ہوئے شکایت کنندہ موتی رام کو تنخواہ سے کٹوتی کی گئی رقم کی واپسی کیلئے یقین دہانی کرائی گئی ہے، دریں اثناء اپنے شکایت کے ازالے پر درخواست گزار موتی رام نے صوبائی محتسب کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ ان کے ادارے کی محنت اور کوششوں سے پریشان عوام کی داد رسی ممکن ہو رہی ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1102/2022
لورالائی09مارچ۔ڈپٹی کمشنرلورالائی ڈاکٹر عتیق الرحمن نے کہا ہے کہ صوبے بھر میں تعلیمی معیار کو مزید پروان چڑ ھانے کیلئے حکومت سنجید گی کے ساتھ اقدامات کررہی ہے اور صوبے بھر میں بچوں اور بچیوں کو اسکول میں داخل کروانے کیلئے خصوصی مہم چلارہی ہے تاکہ عوام زیادہ سے زیادہ اپنے بچوں کو سکولوں میں داخل کروا ئیں او ر صوبے سے جہالت کا خاتمہ کرنے میں حکومت کی مدد کریں ان خیالات کا اظہار ڈپٹی کمشنر لورالائی ڈاکٹر عتیق الرحمن شاہوانی نے گذشتہ روز سکول داخلہ مہم کے حوالے سے اپنے دفتر میں ایک اعلی سطح کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا،اجلاس میں ڈسڑکٹ ایجوکیشن آفیسر فیمیل فوزیہ د±رانی، ڈپٹی ڈسڑکٹ آفیسر ایجوکیشن داد محمد اور دیگر متعلقہ آفیسران نے شرکت کی۔ ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر عتیق الرحمن نے کہا کہ ضلع بھر میں تعلیمی ماحول کو مزید تقویت دینے کے لئے ہم سب کو ملکر کام کرنے کی اشد ضرورت ہے تاکہ ہماری نئی نسل علم کے ہتھیار سے لیس ہو کر مزید ترقی کرسکے انہوں نے کہا کہ غیر حاضر اساتذہ کسی صورت برداشت نہیں کیے جائیں گے، ان کے خلاف محکمانہ کاروائی کے ساتھ ساتھ تنخواہوں کی کٹوتی کو بھی یقینی بنایا جائے اس لئے غیر حاضر اساتذہ کو چاہئے کہ وہ نیک نیتی کے ساتھ اپنے فرائض منصبی نہایت خوش اسلوبی کے ساتھ سرانجام دیں، ہمیں ضلع بھر کے بچے بچے کوتعلیم کے زیورسے آراستہ کرنا ہے آفیسران کو چاہیے کہ وہ اسکولوں میں تعلیمی عمل کے جائز ے کئے سکولوں کا وزٹ کریں دریں اثناء داخلہ مہم کے حوالے سے ڈپٹی کمشنر نے اپنے دفتر سے ایک پرہجوم پریس کانفرنس سے خطاب کیا پریس کانفرنس سے خطا ب کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنرڈاکڑ عتیق الرحمن نے کہا کہ جیسا کہ سب کو معلوم ہے کہ نئے تعلیمی سال 2022کا آغاز ہوچکا ہے اس لئے سکو ل داخلہ مہم کے حوالے سے ضلعی انتظامیہ اور محکمہ تعلیم لورالائی نے ضلع تحصیل کلسٹر اورسماجی تنظیموں کے تعاو¿ن سے بچیوں او ربچوں کو زیادہ سے زیادہ تعداد میں سکول میں داخل کروانے کی کوشیش کر یں گے،صوبائی حکومت اور محکمہ تعلیم کی جانب اس سال ضلع لورالائی میں چار ہزار پانچ سو گیارہ 4511بچے بچیوں کو سکول داخل کروانے کا ہدف دیا گیا ہے ضلعی انتظامیہ اور محکمہ تعلیم ضلع لورالائی اس ہدف کوحاصل کرنے کیلئے ایجوکیشن سپورٹ پروگرام UNICFF))پر فارمنس منیجمنٹ یونٹ کلسٹرہیڈزسماجی تنظیموں والدین کمیٹیوں کے ساتھ ملکر کوشش کریں، ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر عتیق الرحمن نے تمام پرنٹ و الیکڑ ونیکس میڈ یا کے نمائندو ں سے اپیل کی کہ وہ ہر بچہ سکول داخلہ مہم کو کامیاب بنانے کیلئے روزانہ کی بنیاد پر اپنے نیوز چینل اخبارت و رسائل میں عوامی آگاہی مہم کے حوالے خبریں چلائیں، میں اس کے ساتھ ساتھ تمام سیاسی پارٹیوں کے نمائندوں،سماجی کارکنوں،وکلاء برادری اور معاشرے کے تما م مکاتب فکر کے نمائندوں سے گذارش کرتا ہوں کہ سکول داخلہ مہم کو کامیاب بنانے کیلئے اور اس مہم کے بارے میں عوامی شعور پید اکرنے کیلئے محلے محلے اور گھر گھر مہم چلائیں، ڈپٹی کمشنرڈاکٹر عتیق الراحمن نے کہا کہ ہم یونیسف کے ساتھ ملکر ان کے تعاون سے سکولوں کی بہتری منصوبے کے تحت ضلع بھر کے سکولو ں میں پینے کے پانی کی فراہمی، واش رومز کی دوبارہ بحالی اور سکولوں میں مرمت وغیر ہ کے کام کروائیں گے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1103/2022
کوئٹہ 09مارچ ۔ محکمہ قانون و پا رلیمانی امور حکومت بلو چستان کے ایک اعلامیہ کے مطابق حکام بالا کی پیشگی منظور ی سے ظہوراحمد بلو چ اسسٹنٹ ایڈوکیٹ جنرل کی مدت ملازمت میں 22دسمبر 2021ءسے دو سال کی توسیع کردی گئی ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1104/2022
کوئٹہ 09مارچ؛۔صوبائی وزیر لائیو سٹاک اکبر آسکانی سیکرٹری لائیوسٹاک ڈیری ڈاکٹر لائیو سٹاک ڈاکٹر غلام رسول تاجل اور ڈائریکٹر لائیوسٹاک کوئٹہ محمد انور حریفال کی ہدایت پر ڈپٹی ڈائریکٹر لائیوسٹاک کوئٹہ ڈاکٹر قطب خان بلوچ کی زیر نگرانی ڈاکٹر محمد ابراہیم مینگل اور دیگر سٹاف نے پنجپائی کے علاقے میں جانوروں کے لیے فری ویٹرنری میڈیکل کیمپ کا انعقاد کیا جس میں کثیر تعداد میں مال داروں نے اپنی جانوروں کے ساتھ شرکت کی جو کہ ہزاروں کی تعداد میں تھی دوران کیمپ جانوروں کو کرم کش ادویات دی گئیں اور انہیں موسمی بیماریوں سے بچاو¿ کے لیے ویکسین کی گئیں تمام جانوروں کو کانگو وائرس سے بچاو¿ کے ٹیکے اور اینٹی بائیوٹک انجیکشن بھی فراہم کی گئیں دوران کیمپ ڈاکٹر قطب خان بلوچ نے مالداروں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ محکمہ لائیوسٹاک تمام مالداروں کے لئے ہمہ وقت حاضر ہے اور مالداروں کو بھی چاہیے کہ وہ موسم کے لحاظ سے اپنے جانوروں کو وقت پر ویکسین کروائیں اور ہروقت محکمہ لائیو اسٹاک کے عملے سے رابطے میں رہیں اس کے علاوہ انہوں نے ماداروں کو ان کی جانوروں کے لئے خوراک وغیرہ کے لیے بھی مفید مشورے دیے آخر میں تمام ماداروں نے ڈپٹی ڈائریکٹر قطب خان اور انکی ٹیم کا شکریہ ادا کیا اور ان سے درخواست کی کہ آئندہ بھی ایسے فری ویٹرنری میڈیکل کیمپ کا انعقاد کیا جائے تاکہ ہم مالداروں کو اس سے سہولیات میسر ہوسکیں۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1105/2022
کوئٹہ09مارچ۔ ڈائریکٹر جنرل کھیل درا بلوچ نے کہا ہے کہ صوبائی حکومت مارشل آرٹس فیسٹیول سمیت صوبے بھر میں کھیلوں کی سرگرمیوں کے لیے جامع حکمت عملی کے تحت اقدامات اٹھارہی ہے۔کیونکہ صوبے میں کھیلوں کو فروغ دے کر ہم اپنی آنے والی نسلوں کو صحت مند اور تندرست ماحول فراہم کرسکتے ہیں ان خیالات کا اظہار انہوں نے آل پاکستان مارشل آرٹس فیسٹیول کے افتتاح کے موقع پر منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ موجودہ صوبائی حکومت صوبے میں اپنے کھلاڑیوں کے لیے صوبائی اور قومی سطح کے کھیلوں کے مقابلے منعقد کروارہی ہے فٹبال،وومن کرکٹ ، بیڈمنٹن اوراسکواش جیسے بڑے ایونٹس کے انعقاد سے کھلاڑیوں کو آگے آنے اور اپنی صلاحیتوں کو اجاگر کرنا کا موقع ملا۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے صوبے کی کھیل کے شعبے میں بین الاقوامی شناخت ہے۔مارشل آرٹس میں ہمارے کھلاڑیوں نے بین الاقوامی مقابلوں میں کئی اعزازات حاصل کیے ہیں جوکہ انتہائی فخر کی بات ہے۔تقریب کے شرکاءسے خطاب کرتے ہوئے ڈی جی اسپورٹس کا کہنا تھا کہ بلوچستان میں کھیلوں کے میدان میں بے پناہ ٹیلنٹ موجود ہے انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت مارشل آرٹس کے صوبائی اور قومی سطح کے ٹورنامنٹس منعقد کراکر نوجوانوں کو آگے آنے کا موقع فراہم کریگی۔ انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت اپنے کھلاڑیوں اور نوجوان کی ہر سطح پر حوصلہ افزائی کے لیے تمام تر وسائل بروئے کار لارہی ہے انہوں نے کہا کہ ماضی میں کھیلوں کے شعبے کو ہمیشہ نظر انداز کیا گیا جس سے میدانوں میں ویرانی چھائی اور نوجوان نسل گمراہی کی جانب راغب ہوئے لیکن موجودہ صوبائی حکومت کی کھیل دوست پالیسیوں کی وجہ سے آج میدان آباد اور صوبہ امن کی جانب لوٹ رہا ہے۔ اس موقع پر کھلاڑیوں اور شائقین کثیر تعداد میں موجود تھے ۔اس موقع پر ڈائریکٹر جنرل اسپورٹس درا بلوچ نے آل پاکستان مارشل آرٹس فیسٹیول کا باقاعدہ افتتاح کیا۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿

خبرنامہ نمبر1106/2022
حب 09مارچ۔گڈانی شپ بریکنگ یارڈ میں ایس اوپیز کی خلاف ورزی پر ڈائریکٹر جنرل انوائرمنٹل پروٹیکشن ایجنسی بلوچستان کے احکامات کی روشنی میں ڈپٹی ڈائریکٹر ای پی اے لسبیلہ عمران کاکڑ نے Deewan ship Recycling pvt ltd پر تین لاکھ روپے جرمانے کا نوٹس جاری کردیا ہے ڈپٹی ڈائریکٹر ای پی اے لسبیلہ کے جاری کردہ ہینڈآﺅٹ میں کہا گیا ہے کہ گڈانی شپ بریکنگ یارڈ کے پلاٹ نمبر 58 پر دوران کام ایس اوپیز اورانوائرمنٹل پروٹیکشن ایکٹ 2012 کے سیکشن 25 کی خلاف ورزی پر شپ بریکنگ یارڈ کے پلاٹ مالک کے خلاف قواعد وضوابط کے تحت کارواءاور جرمانہ عاِئد کرکے پلاٹ پر کام بند کردیا گیا ہے ہینڈ آﺅٹ کے مطابق پلاٹ مالک کو ایک ہفتے کے اندر جرمانے کی ادائیگی اور محنت کشوں کی ہیلتھ اینڈ سیفٹی کے رہنما اصولوں کو یقینی بنانے کا حکم دیا گیا ہے عدم ادائیگی جرمانہ یارڈ کے پلاٹ مالک کو روزانہ ایک لاکھ روپے اضافی جرمانہ عائد اور پلاٹ کو سیل کیا جائیگا۔واضح رہے کہ ڈائریکٹر جنرل ای پی اے ابراہیم بلوچ نے گزشتہ دنوں گڈانی شپ بریکنگ یارڈ دورے کے موقع پر یارڈ میں کام کرنے والے محنت کشوں کی ہیلتھ اینڈ سیفٹی کے حوالے سے ریگولیٹری اتھارٹی کے ایس اوپیز پر سختی سے عملدرآمد یقینی بنانے کے احکامات جاری کئے تھے اور پاکستان شپ بریکرز ایسوسی ایشن نے ڈی جی ای پی اے کو یقین دہانی کراءتھی کہ انڈسٹری کی بہتری اور محنت کشوں کی ہیلتھ اینڈ سیفٹی کے لئے ایس او پیز پر عملدرآمد کیا جائیگاڈائریکٹر جنرل انوائرمنٹل پروٹیکشن ایجنسی ابراہیم بلوچ کا کہنا ہے گڈانی شپ بریکنگ یارڈ کے پلاٹ نمبر 58 پر لنگر انداز ناکارہ بحری جہاز کو توڑنے کیلئے گیس فری حتمی این او سی تاحال جاری نہیں کی گئی ہے ناکارہ بحری جہاز کی جوائنٹ انسپکشن ہونا باقی ہے شپ بریکر کو صرف کولڈ ورک کی اجازت دی گئی تھی اور اس نے ای پی اے ایکٹ 2012 کے سیکشن 25 اور ماحولیاتی تحفظ کے مروجہ قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہوئے بغیر اجازت کے جہاز توڑنے کا کام شروع کیا جس پر کارواءکی گئی ان کا کہنا ہے کہ شپ بریکنگ یارڈ میں ایس اوپیز کی خلاف ورزی قطعا برداشت نہیں کی جائیگی۔ڈی جی ای پی اے ابراہیم بلوچ کا کہنا ہے کہ محکمہ ماحولیات نے جہاز توڑنے کے لیے حتمی اور گیس سے پاک این او سی جاری نہیں کیا، وضاحت کی گئی ہے کہ متعلقہ حکام کولڈ ورک کے لیے این او سی صرف شپ بریکر کو جاری کرتے ہیں جو جہاز کو غیر قانونی طور پر لایا تھا۔ سخت محنت اور جہاز کو ختم کرنا جس کو متعلقہ حکام نے اختیار نہیں دیا تھا۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
پریس ریلیز
گوادر9 مارچ ۔مدرسہ تعلیم القرآن والسنہ ابلسینن والنسات کالونی وارڈ مسجد نعیم گوادر کے زیر اہتمام ایک سادہ مگر پروقار تقریب بہ سلسلہ ختم بخاری شریف وتکمیل القرآن الکریم کے سلسلے میں پروگرام منعقد ہوئی جس میں شعبہ حفظ و عالمیت سے فارغ ہونے والے طلبہ کی دستاربندی کی گئی تقریب کے مہمان خاص حضرت مولانا شیخ لحدیث محمد یوسف افشانی اور تقریب کی صدارت حاجی یحییٰ نے کی تقریب میں مفتی مختار،مفتی ریاض الحق ویگر نے بھی بیان کیااس پروقار تقریب میں شعبہ حفظ اور عالمیت سے فارغ ہونے والے طلبہ کی دستار بندی کی گئی تقریب میں طلباء وطالبات کے علاوہ کثیر تعداد میں لوگوں کی ایک بڑی تعداد نے شرکت کی۔ جبکہ علما نے بھی اپنے خطاب میں طلباءوطالبات کی حوصلہ افزائی کی مقررین نے قرآن مجید کی تعلیمات اور انسانیت کی فلاح اور اللہ پاک کے حکم بنی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کے سنت پر عمل کرنے پر تفصیلی روشنی ڈالی اور کہا کہ انتشاروافتراق کے موجودہ دور میں نوجوان نسل کو دینی تعلیم سے روشناس کروانا بہت ضروری ہوچکا ہے۔ معاشرہ میں جس تیزی سے بے حیائی ، عریانی ، فحاشی اور لادینیت کو فروغ مل رہا ہے۔ ان حالات میں ہم آقرن وحدیث کے تعلیم کو عام کرکے ہی اپنی نئی نسلوں کو بچاسکتے ہیں مررسہ تعلیم القرآن والسنہ ابلسینن والنسات کالونی وارڈ مسجد نعیم گوادر سے 7 حافظہ ،6عالمہ درس نظامی جبکہ 14 حافظ اور 21 نازاں طلباوطالبات نے اپنی کورس مکمل کیے اور انھیں سند فراغت دی گئی ہے تقریب سے مولانا عبدالقدس نے ختم بخاری کی درس دی جبکہ تقریب کااختتام پر حضرت مولانا شیخ لحدیث محمد یوسف افشانی نے عالم اسلام کے مسلمانوں اور ملک کی سربلندی کے لئے دعا کیا
﴾﴿﴾﴿﴾﴿

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Post comment