HomeNews30-12-2019 Monday (File No.1)

30-12-2019 Monday (File No.1)

30-12-2019 Monday (File No.1)

خبرنامہ نمبر4392/2019
کوئٹہ 30دسمبر :۔انسپکٹر جنرل پولیس بلوچستان محسن حسن بٹ کی خصوصی ہدایت کی روشنی میں ڈپٹی انسپکٹر جنرل پولیس سبی رینج کیپٹن(ر) پرویز احمد چانڈیو نے عوام الناس کے مسائل سننے اور ان کے حل کے لیے ڈی آئی جی پولیس آفس میں کھلی کچہری کا انعقاد کیا اس موقع پر ایس ایس پی سبی ملک فاروق فیض لہڑی، ایس ایچ او سٹی آصف خجک، سابق یوسی چیئرمین حاجی دا¶د رند، حاجی عرض محمد چانڈیو، ملک عبدالرشید چانڈیو، میراسلم گشکوری قبائلی عمائدین معتبرین سمیت تمام تھانوں کے انچارج ٹریفک سارجنٹ، سول سوسائٹی کے نمائندوں اور شہریوں نے کثیر تعداد میں شرکت کی کھلی کچہری سے خطاب کرتے ہوئے ڈی آئی جی سبی رینج کیپٹن ریٹائرڈ پرویز احمد چانڈیو نے کہا کہ کھلی کچہری منعقد کرنے کا بنیادی مقصد ایک طرف لوگوں کو درپیش مسائل کو سننا اور ترجیحی بنیادوں پر حل کیلئے اقدامات تو دوسری جانب عوام اور پولیس کے درمیان تعلقات کو استوار کرنا ہے انہوں نے متعلقہ تھانوں کے سربراہان کو تاکید کرتے ہوئے کہا کہ وہ اپنے فرائض منصبی نیک نیتی سے انجام دیتے ہوئے لوگوں کے مسائل حل کریں تاکہ لوگوں کا محکمہ پولیس پر اعتماد بحال ہواور پولیس کا اپنا مورال بلند ہو انہوں نے کہا کہ شہداءکو سلام پیش کرتے ہیں جنہوں نے اپنی جان کی قربانی دے کر معاشرے میں امن و امان کی صورتحال برقرار رکھی انہوں نے کچہری کے شرکاءکو کہا کہ ان کو کسی بھی درپیش مسئلہ کے حل کے لیے ہم سے بھی براہ راست رابطہ کرسکتے ہیں۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر4393/2019
لورالائی30دسمبر:۔ قائمقام ڈی آئی جی ایس ایس پی جواد طارق نے کہا ہے کہ پولیس کے نوجوانوں نے ہمیشہ جوانمردی کے ساتھ دہشتگردی کا مقابلہ کر کے اپنے جانوں کا نذرانہ پیش کیا ہے اور آج بھی پولیس کے نوجوان کسی بھی جا رحیت اور امن وامان کو چیلنج کرنے والوں کا مقابلہ کرنے کیلئے چوکس ہیں مکمل امن و امان کے قیام اور آخری دہشتگرد کے خاتمے تک پولیس چھین سے نہیں بیٹھے گی ،ان خیالات کا اظہار انہوں نے ڈی آئی جی آفس میں کھلی کچہری کے انعقاد کے موقع پر بات چیت کرتے ہوئے کیا ۔جس میں شہر کے تمام انجمن تاجران کے نمائندے ،سیاسی پارٹیوں کے نمائندے قبائلی متعبرین اور صحافیوں نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔اس موقع پر اے ڈی آئی جی مجید دستی،ڈی ایس پی محمد آصف اور متعلقہ تھانوں کے ایس ایچ اوز اور پولیس کی بڑی نفری تعینات تھی اس موقع پر انجمن تاجران اور سیاسی پارٹیوں نے پولیس کی کارکردگی کی تعریف کی اور ایگل سکواڈ کی قربانیوں کا سراہا اور مختلف تجاویز بھی دی گئیں قائمقام ڈی آئی جی نے کہا کہ ایس ایس پی کے دفتر میں کمپلین آفس بنا یا جارہا ہے جس میں عوام کے شکایات درج کی جائیں گی جس پر فوری عمل درآمد ہوگا جبکہ خواتین کیلئے الگ شکایت سیل قائم کررہے ہیں جس میں خواتین کی شکایات درج کی جائیں گی ۔ انہوں نے کہا کہ سال 2019ءمیں چوری ،ڈکیتی اور قتل کے وارداتوں میں واضح کمی رہی ہے اور انشاءاللہ پولیس اشہاریوں کیلئے بھی گہرا تنگ کر رہی ہے اور بہت جلد گرفتاریاں عمل میں لائی جائینگی ،انہوں نے کہاکہ پولیس کی گاڑیوں کی حالت بہتر کی جائیگی اور پولیس نوجوانوں کو نئے موٹر سائیکل دئیے جائیں گے تاکہ گشت پر نکلنے والے فورس کو آسانی ہواورتمام فورس کو جدید اسلحہ سے لیس کیا جارہا ہے ،آخر میں انہوں نے کہا کہ پولیس اور ایگل فورس نے اپنے کئی بہادر سپاہی ملک پر نچھاور کئے ہیں ملک کی سلامتی اور امن وامان بحالی کیلئے پولیس کا ہر اہلکار اور آفیسر کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کرے گا پولیس کے جوانوں کو ملنی والی تربیت سے پولیس کا مورال مذید بلند ہوا ہے جس سے اب فورس دہشتگردی کی وارداتوں کا منہ توڑ جواب دینے کی بھرپور صلاحیت رکھتی ہے اس موقع پر انجمن تاجران اور سیاسی پارٹیوں کے نمائندوں نے ڈی آئی جی کو اپنے مکمل تعاو ن کا یقین دلایا۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر4394/2019
خضدار 30 دسمبر :۔خضدارمیونسپل کار پوریشن کی جانب سے خضدار میں ہفتہ صفائی مہم کا آغاز کردیا گیا،صفائی مہم کے دوران تجاوزات کا خاتمہ، ٹریفک کی روانی، سڑکو ں کے اطراف، گلی محلوں ِ،چوک و چوراہوں کی صفائی مہم کا حصہ رہے گی۔ پیر کے روز میونسپل کارپوریشن خضدار کے آفیسر وڈیرہ محمد صالح جاموٹ، اسسٹنٹ کمشنر خضدار محمد نعیم عمرانی،انجمن تاجران خضدار کے صدر حافظ حمیداللہ مینگل، نائب صدر بشیراحمد جتک نے صفائی مہم کا افتتاح کیا پہلے مرحلے میں قومی شاہراہ سے متصل چمروک سے دو تلوار تک صفائی کی گئی، تجاوزات کا خاتمہ کیاگیا اوردیگر تجاوزات ہٹانے کے لئے دکانداروں کو پابند کیا گیا اور شاہراہ پر جو رکاوٹیں تھیں انہیں ہٹایا گیا، جب کہ دکانداروں کو تنبیہ کی گئی کہ وہ تجاوزات کا خاتمہ کریں اور سڑکوں پر اضافی اشیاءنہ رکھیں۔ اس سلسلے میں میونسپل کارپوریشن خضدار کے آفیسر وڈیرہ محمد صالح جاموٹ سمیت دیگر آفیسرز تاجر نمائندوں اور انتظامی آفیسرز نے چمروک سے دوتلوار تک مارچ بھی کیا۔میونسپل کارپوریشن آفیسر وڈیرہ محمد صالح جاموٹ کا کہنا تھا کہ ہفتہ صفائی مہم کا مقصد شہر کی خوبصورتی کو بحال کرنا اور جتنے تجاوزات اور رکاوٹیں ہیں ان کو ہٹانا ہے، آج سڑکوں پر جو بجری، ریت، یا دیگر وزنی چیزیں رکھی ہوئی تھیں انہیں ہٹایا گیا،اور دکانداروں کو پابند کیا گیا کہ وہ سڑکوں پر تجاوزات نہ کریں اس سلسلے میں میونسپل کارپوریشن کی پوری مشینری اس صفائی مہم میں حصہ لے رہی ہے جب کہ عملے کو حاضر کردیا گیا ہے انہوں نے کہاکہ خضدار شہر میں برسوں سے پڑے کچرے کے ڈھیر ہٹائے جارہے ہیں جبکہ اسٹریٹ لائٹس بھی نصب کردیئے گئے ہیں اس سلسلے میں شہر کی خوبصورتی اور نظافت کو مد نظررکھ کر تمام تر وسائل بروئے کار لایاجارہاہے،انہوں نے کہاکہ ہمارے جہاں کہیں بھی نوٹس میں لایاجاتا ہے تو میونسپل کارپوریشن کا عملہ وہی پہنچ جاتا ہے، یہ ہمارا فرض بھی ہے اور ہماری ذمہ داریوں میں شامل بھی ہے کہ شہریوں کو کسی بھی دقت سے بچانے کے لئے بروقت ان کے گلی محلوں کی صفائی کو ممکن بنا کر انہیں کسی بھی قسم کی شکایت کا موقع نہ دیں۔ اس سلسلے میں آج سے خضدار شہر میں ہفتہ وار صفائی مہم کاآغاز کیا جارہاہے اس ہفتہ وار صفائی مہم کی ابتاءچمروک سے کی جائے گی اس سلسلے میں ہمیشہ شہریوں کا تعاون درکار ہے وہ نشاندہی کریں میونسپل کارپوریشن کا عملہ وہاں بروقت پہنچ جائیگا۔ میونسپل کارپوریشن خضدار کے آفیسر وڈیرہ محمد صالح جاموٹ کی جانب سے خضدار شہرکی رونق بحال کرنے کے لئے بڑے پیمانے پر صفائی مہم کا آغاز کردیا گیا ہے، اس سلسلے میں گلی محلوں کی صفائی کی جارہی ہے، میونسپل کارپوریشن خضدار کے تمام عملے کو اپنی ڈیوٹی پر حاضر ہے جب کہ دستیاب تمام مشینری صفائی کے امور پر لگا دیا گیا ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر4395/2019
نصیرآباد 30دسمبر :۔انسپکٹر جنرل آف پولیس بلوچستان کے احکامات پر عوام کی شکایات کے ازالے کے لیئے صدر پولیس تھانہ ڈیرہ مراد جمالی میں ایس ایس پی نصیر آباد عر فان بشیر کی زیر صدارت کھلی کچہری کا انعقاد کیا گیا کھلی کچہری میں سیا سی سماجی اور عوام نے کثیر تعداد میں شرکت کی کھلی کچہری میں عوام نے بڑی تعداد میں اپنی شکایات پیش کیں بعض شکایات کوا یس ایس پی نصیر آباد عرفان بشیر نے موقع پر ہی حل کرنے کے احکامات دیئے اور بعض شکا یات کو جلد از جلد حل کرنے کے لیئے پولیس آفیسران کو سختی سے ہدایات جا ری کیں کھلی کچہری میںاے ایس پی فہد حسین کھوسہ،ڈی ایس پی عبدالغفار سیلاچی، ڈی ایس پی خاوند بخش کھوسہ ،بلوچستان عوامی پارٹی نصیر آبادکے آرگنائزرغلام نبی عمرانی ،میر اکبر خان عمرانی ،سخی عبدالرﺅف لہڑی ،شہری ایکشن کمیٹی کے چیئر مین حافظ سعید بنگلزئی ،حاجی نثار احمد لہڑی ،مولانا داﺅد احمد نقشبندی،ایس ایچ او سٹی سکندر سعید عمرانی ، ایس ایچ او صدر حبیب اللہ لاشاری،ایس ایچ او محمد خان ،سمیت دیگر موجود تھے کھلی کچہری سے خطاب کرتے ہوئے ایس ایس پی نصیر آباد عر فان بشیرنے کہا کہ پولیس عوام کی جان و مال کو تحفظ فراہم کرنے کے لیئے ہمہ تن کوشاں ہے آج کی کھلی کچہری کے انعقاد کا مقصد یہی ہے کہ پولیس اور عوام کے درمیان غلط فہمیوں کا تدارک کیا جائے پولیس کے خلاف شکایات سننے کے بعد ان کے ازالے کے لیئے ہم کوئی کسر نہیں چھوڑیں گے عوام بلا خوف و خطر پولیس کی شکایات ہم تک پہنچائیں تاکہ عوام کی مشکلات اور پریشانی ختم ہو سکے انہوں نے کہا کہ نصیر آباد پولیس عوام کے لیئے کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کرے گی شکایات کا ازالہ ہونا ہماری کامیابی کی نشانی ہے انہوں نے کہا کہ پولیس عوام کی محافظ ہے عوام کے ساتھ کسی بھی پولیس آفیسر کا نا روا سلوک ہر گز برداشت نہیں کیا جائے گا ،عوام کو انصا ف کی فراہمی یقینی بنانے کیلئے ٹھوس اقدامات کئے جا رہے ہیں مستقبل قریب میں بھی عوامی شکایات سننے اور ان کے ازالے کے لیئے عوام سے میل جول کا یہ طریقہ جاری رہے گا انہوں نے کہا کہ علاقے میں امن و امان کی بحالی کے لیئے عوام کو چائیے کہ وہ پولیس کے ساتھ بھر پور تعاون کریں کیونکہ عوام کے تعاون کے بغیر محکمہ پولیس کوئی بھی کامیابی حاصل نہیں کر سکتی جرائم پیشہ افراد کی نشاندہی پر فوری ایکشن لیا جا رہا ہے ہمارا مقصد صرف عوام کو تحفظ فراہم کرنا ہے اور عوام کی خدمت ہی ہمارا نصب العین ہے ۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر4396/2019
کوئٹہ30دسمبر :۔محکمہ ایس اینڈ جی اے ڈی حکومت بلوچستان کے ایک اعلامیہ کے مطابق مجاز حکام کی منظوری سے بیرسٹر امیر رضا جمالی کو اعزازی بنیادوںپر چھ ماہ کی مدت کیلئے رابطہ معاون (LIAISIN ASSISTANT)تعینات کیا گیا ہے ۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر4397/2019
کوئٹہ 30دسمبر :۔عوام کو انصاف کی فراہمی کیلئے تمام صلا حیتیں بروئے کار لائی جائیں صوبائی محتسب کے ادارے کا مقصد سستے اور فوری ا نصاف کی فراہمی ہے ان خیالات کا اظہار صوبائی محتسب بلوچستان عبدالغنی خلجی نے صوبائی محتسب بلوچستان سیکرٹریٹ کے انو سٹی گیشن آفیسر ان کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہاکہ افسران بلا امتیاز عوام کی خدمت و قانون کی بلا دستی کواپنا نصب العین بنائیں ادارے میں آنے والی شکایات اور درخواستوںپر جلد ازجلد قانون کے مطابق کاروائی کی جائے ۔تحقیقا ت کے دوران بروقت جواب نہ دینے اور عوامی مسائل کے حل میں رکاوٹ ڈالنے والے حکو متی اداروں اور آفیسر ان کے خلاف قانون کے مطابق کاروائی کی جائے ۔انہوں نے مذید کہاکہ صوبائی محتسب بلوچستان کے ادارے کی جانب سے کیئے گئے فیصلوں پر عملدرآمد کرانے کیلئے قانون کے مطابق کا روائی کی جائے ۔ادار ے میں آنے والے تمام درخواست گزاروں کے ساتھ ہر ممکن تعاون کیاجائے حکومتی ادارے عوام کو سہو لیات فراہم کرنے کیلئے اقدامات کریں تاکہ عوام کو زندگی کی سہولیات میسر ہوسکیں ۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر4398/2019
کوئٹہ 30دسمبر :۔ کھیلوں کی ترقی اور کھلاڑیوں کو جدید طرز پر تربیت فراہم کر نے لیے صوبائی حکومت بھرپور اقدامات کر رہی ہے حکومت کھیل کے شعبے سے تعلق رکھنے والے تمام کھلاڑیوں کی ہر سطح پر حوصلہ افزائی کریگی ان خیالات کا اظہار صوبائی مشیر کھیل و ثقافت عبدالخالق ہزارہ نے کوئٹہ ڈسٹرکٹ لیگ چیمپئن شپ کے اختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر صوبائی مشیر نے کہا کہ کھیل میں تعصب کی کوئی گنجائش نہیں ماضی کے ناعاقبت اندیش اور غلط پالیسیوں کی وجہ سے نوجوان گمراہی کی جانب راغب ہوئی نوجوانوں کیلئے مثبت سرگرمی نہ ہونے سے معاشرتی برائیوں کا شکار ہو جاتے ہیں انہوں نے کہا کہ کھیلوں کی فروغ کیلئے ڈویژ نل ہیڈکوارٹر کی سطح پر سپورٹس کمپلیکس بنا رہے ہیں حکومت کو سپورٹس سے لگاو ہے ا نہوں نے کہا کہ میری کوشش ہے کہ اپنے تمام محکموں کیساتھ انصاف کر سکوں جو ذمہ داریاں مجھے سونپی گئی ہیں انکے کیساتھ ناانصافی نہ کروں انہوں نے کہا کہ تمام کھیلوں کے قومی سطح پر مقابلوں کا انعقاد کیا جائیگا۔کھیلوں کے مقابلوں کے انعقاد کا مقصد نوجونواں کو معاشرتی برائیوں سے دور رکھنا اور صحت مندانہ سرگرمیوں کو فروغ دینا ہے کھیل کے میدان آباد کرکے ہمیں انتہا پسندی شدت پسندی اور منفی سوچ کا خاتمہ کرنا ہے معاشرتی برائیوں اور نوجوانوں کی تفریح کیلئے اس طرح کے ایونٹ کا انعقاد ضروری ہے انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت کھیلوں کے فروغ کے لیے ترجیح بنیادوں پر اقدامات کر رہی ہے اور موجودہ بجٹ میں کھیلوں کی فروغ کے لیے سابقہ ادوار سے زیادہ رقم مختص کی گئی ہے تاکہ صوبے کے نوجوانوں کو کھیلوں کی بہترین اور جدید سہولتیں میسر آ سکیں انہوں نے کہا کہ ہم نے آج ثابت کر دیا ہے کہ ہم کھیل تعلیم ثقافت اور مثبت سرگرمیوں سے محبت کرنے والے لوگ ہیں ہمیں صوبے اور شہر کو کھیل، ثقافت اور تعمیری سرگرمیوں کے ذریعے امن و محبت کا گہوارہ بنانا ہے کھلاڑیوں اور کھیلوں کو حکومتی سرپرستی حاصل رہیگی حکومت انکے ساتھ ہر طرح کا تعاون کریگی تقریب کے آخر میں صوبائی مشیر نے ونر، رنر ٹیموں اور میچ آفیشلز میں ٹرافیاں اور انعامات تقسیم کیے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿

Share With:
Rate This Article
No Comments

Leave A Comment