خبر نامہ نمبر 323/2019
کوئٹہ30جنوری۔ گورنر بلوچستان امان اللہ خان یاسین زئی نے کہا ہے کہ اند ھیرے اور تاریکی میں علم و شعور کی روشنی بکھیرنے ، نوجوان نسل کے اذہان کو جدید علمی چھان بینی سے منور کرنے میں اہل علم و دانش کے ساتھ ساتھ پبلشرز کا بھی اہم کردار ہے ۔ جدید انسانی ضرورتوں سے ہم آہنگ تحقیقی و تخلیقی کتابوں کے مطالعے سے انسانیت کو زندگی کے صحیح اور سیدھے راستے پر چلنا آسان ہو جا تا ہے ۔ انہوں نے اس بات پر افسوس کا اظہار کیا کہ ارتقاء اور ترقی کے سفر میں انسان تو بہت آگے نکل گیا مگر انسانیت پیچھے رہ گئی ۔ ضروری ہے کہ تمام متعدل اور ترقی پسند اہل فکر و قلم آگے آئیں اور معاشرے میں کتاب اور صاحب کتاب کی قدر و منزلت میں اضافے کیلئے بھر پور کردار ادا کریں تاکہ انسان اور انسانیت دونوں ترقی اور خوشحالی کی راہ پر گامزن ہوسکیں ۔ ان خیالات کاا ظہار انہوں نے بلوچستان کے مایہ ناز پبلشر اور سیلز اینڈ سروسز کے مالک منصور بخاری سے ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ ملاقات کے دوران بلوچستان کی ہر یونیورسٹی میں نصابی اور غیر نصابی کتابوں کی بک شاپ قائم کرنے ، گورنر ہاؤس کوئٹہ وقتاً فوقتاً کتب میلے کا انعقاد یقینی بنانے اور معاشرے میں کتب بینی کے فروغ دینے کے حوالے سے بھی تبادلہ خیال کیا گیا ۔ گورنر نے کہا کہ معاشرے میں منفی رویوں اور غلط فہمیوں کی بجائے محبت و یگانگت کے پرچار کی اشد ضرورت ہے تاکہ ہم سب مل جل کر ایک خاندان کی طرح اپنے صوبے کو ترقی و خوشحالی کی اور امن استحکام کی جانب لے جائیں۔ 
()()()
خبر نامہ نمبر 324/2019
کوئٹہ30جنوری۔گورنر بلوچستان امان اللہ خان یاسین زئی سے بدھ کے روز گورنر ہاؤس کوئٹہ میں سریاب ، بروری اور ہزار گنجی کے زمینداروں پر مشتمل وفد نے ملاقات کی جس کی قیادت حاجی بابا جان شاہوانی کر رہے تھے ۔ وفد بی این پی ( مینگل ) کے صوبائی اسمبلی کے رکن ملک نصیر شاہوانی ، میر سکندر شاہوانی ، حاجی باسط لہڑی ، ملک اقبال شاہوانی ، آغا عبدالقادر شاہ کرانی ، لالا عبدالغفار اور عزیز اللہ شاہوانی پر مشتمل تھا ۔ وفدسے بات چیت کرتے ہوئے گورنر بلوچستان نے کہا کہ قومی پیداوار بڑھانے اور معیشت کو استحکام بخشنے میں زمینداروں کا کلیدی کردار ہے ۔ گزشتہ تین چار عشروں کی مسلسل خشک سالی سے بالخصوص زمیندار کئی مشکلات سے دوچار ہوئے اور زیر زمین پانی کی سطح نیچے گرنے سے ان کے مسائل و مصائب میں مزید اضافہ ہوا ہے ۔ زمینداروں کو درپیش مشکلات کے حوالے سے گورنر نے ہر ممکن تعاون کی یقین دہانی کرائی ۔ 
()()()
خبر نامہ نمبر 325/2019
کوئٹہ30جنوری۔گورنر بلوچستان امان اللہ خان یاسین زئی نے کہا ہے کہ معاشی ترقی و خوشحالی کیلئے معاشی و تجارتی سر گرمیوں کو فروغ دینا اولین شرط ہے ۔ مضبوط معاشی نظام ہی عوام کی شرکت و شمولیت کا متقاضی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ صوبائی حکومت عوام کو معیشت و تجارت کے مواقع فراہم کرنے کیلئے پر عزم ہے ۔ ان خیالا ت کااظہار انہوں نے ملک امان اللہ مہتر زئی کی قیادت میں مسلم باغ اور قلعہ سیف اللہ کے افراد پر مشتمل وفدسے بات چیت کرتے ہوئے کیا ۔وفد نے گورنر بلوچستان کو مسلم باغ اور بادینی کے زمینداروں کو درپیش مشکلات ، قلت آب کے مسائل اور بالخصوص سرحدی تجارت کے فرو غ کے حوالے سے گورنر بلوچستان کو آگاہ کیا ۔ گورنر نے ان کے مسائل و مشکلات کو غور اور توجہ سے سنا اور ان کے حل کیلئے ہر ممکن تعاون کا یقین دلایا ۔ 
()()()
خبر نامہ نمبر 326/2019
کوئٹہ 30 جنوری :۔صوبائی مشیر کھیل وثقافت عبدالخالق ہزارہ نے کہا ہے کہ صوبے میں نوجوان نسل کو تفریحی سہولیات کی فراہمی کیلئے صوبائی حکومت تمام تر دستیاب وسائل بروئے کار لارہی ہے۔ نوجوانوں کو تعلیم کے ساتھ ساتھ صحت مندانہ سر گرمیوں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لینا چاہیئے نوجوان ہمارا قیمتی اثاثہ ہیں۔ ان خیالا ت کا اظہار انہوں نے وحدت میو زیکل اکیڈمی کے ایک وفدسے بات چیت کرتے ہوئے کیا جنہوں نے گزشتہ روز یہاں ان سے ملاقات کی ۔ صوبائی مشیر نے کہا کہ وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کے وژن کے عین مطابق صوبے میں کھیل و ثقافت اور سیاحت کے شعبوں کے فروغ کے لئے ایک جامع حکمت عملی کے تحت مؤثر اقدامات کئے جارہے ہیں انہوں نے کہا کہ ثقافت ہماری پہچان ہے اس کے فروغ اور ترقی و ترویج کے لئے ہر ممکن کام کیا جائے گا صوبائی مشیر نے موسیقی سے وابستہ نوجوانوں کو یقین دلایا کہ انکی ہر سطح پر حوصلہ افزائی کی جائیگی تاکہ وہ اس شعبے میں بھی نہ صرف صوبے بلکہ ملک کا نام دنیا بھر میں روشن کر سکیں موجودہ صوبائی حکومت عملی اقدامات پر یقین رکھتی ہے جسکے بہت جلد مثبت اثرات قوم کے سامنے آنا شر وع ہوجائیں گے۔ 
()()()
خبر نامہ نمبر 327/2019
کوئٹہ 30 جنوری :۔ ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر (جنرل ) نصیب اللہ کاکڑ کی زیر صدارت بلوچستان پنشنرزویلفیئرایسوسی ایشن کے مالیاتی امور میں حائل رکاوٹوں اوردیگر مسائل کے حل کے حوالے سے ایک اجلاس منعقد ہوا جس میں میجر ریٹائرڈ منیر بادینی، میجر ریٹائرڈ الطاف احمد،ایس پی محمد ندیم، کیپٹن ریٹائرڈ یونس درانی، سپریٹنڈنٹ( جنرل) احمد رضا ہاشمی اور دیگر ریٹائرڈ فوجی افسران اور ریٹائرڈ ملازمین بھی موجود تھے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ ریٹائرڈ فوجی ملازمین کے مسائل کے حل کے سلسلے میں ایک کمیٹی تشکیل دی جائے گی جو کہ پنشنرز کے مالیاتی امو ر ،ان کے بچوں کے تعلیمی وظائف اور دیگر مسائل کو ترجیح بنیادوں پر حل کرے گی ڈاکخانوں کے ذریعے ریٹائرڈ فوجی ملازمین کی تنخواہوں کی ادائیگی کو بروقت یقینی بنانے کے سلسلے میں جنرل پوسٹ ماسٹر سے بھی رابطہ کیا جائے گا۔ اور ریٹائرڈ ملازمین کے بچوں کو لوکل اور ڈومیسائل کی سہولیات فراہم کرنے کے لیے ایک مخصوص دن مقرر کیا جائے گادوران ملازمت شہید ہونے والے فوجی ملازمین اور ریٹائرڈ ہونے والے ملازمین کے بچوں کو تعلیمی وظائف فراہم کرنے کے سلسلے میں ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ سے بھی بات کی جائے گی ریٹائرڈ ملازمین کے تمام جائز مطالبات اور مسائل کے حل کے لئے ممکنہ اقدامات اٹھائے جائیں گے اور ملازمتوں کی فراہمی کے حوالے سے حکومتی مقررکردہ بالائی عمرکی حد میں اضافہ کروانے کی بھرپور کوشش کی جائے گی تاکہ ریٹائرڈ ہونے کے بعد بھی فوجی ملازمین کسی بھی محکمے میں ملازمت کے لئے باآسانی درخواستیں جمع کرا سکیں کیونکہ ریٹائرڈفوجی ملازمین قوم کا سرمایہ ہیں اور انکے تجربات سے استفادہ حاصل کیا جا سکتا ہے اجلاس میں کہا گیا کہ فوجی ریٹائر ملازمین کے لیے ہمارے آفس کے درواز ے ہروقت کھلے ہوئے ہیں۔
()()()
پریس ریلیز
کوئٹہ 30جنوری :۔انکواری کمیٹی ( زیر دفعہ 21ما نز ایکٹ 1923) مورخہ 2جنوری 2019ء کو زمیندار کول کمپنی چما لنگ جس میں 5کان کن فوت ہوگئے تھے ۔ اس سلسلے میں چیئر مین زربت خان کی سربراہی میں اجلاس منعقدہوا اورجس میں کمیٹی نے باقاعدہ کام کا آغا ز کردیا ۔اس سلسلے میں کمیٹی نے زمیندار کول کمپنی چما لنگ کے متا ثرہ مائن کا معائنہ کیا اور حادثات سے متعلق شو اہد اکٹھے کیے ۔اس کے علاوہ اگر کوئی شخص حا دثے سے متعلق کمیٹی کو بیان دینا چاہتا ہے تو وہ ڈائر یکٹریٹ آف ما ئنز لنک سریاب روڈ کوئٹہ (ڈائریکٹر) کے دفتر میں اپنا بیان مورخہ 4فروری کو صبح 10بجے سے دوپہر 3بجے تک ریکا رڈ کر اسکتا ہے ۔تاکہ انکو ائر ی رپورٹ سیکرٹر ی مائنز کو بروقت جمع کرایا جاسکے ۔
()()()

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Post comment