Download

خبر نامہ نمبر 3271/2018
کوئٹہ 27 نومبر۔ گورنر بلوچستان امان اللہ خان یاسین زئی نے کہا ہے کہ ترقیاتی عمل ایک مشکل ، پیچیدہ اورصبر آزما پریکٹس ہے جس کی بدولت عوام کو درپیش مشکلات کی نشاندہی کی جاتی ہے ، محدود وسائل میں رہتے ہوئے ترجیحات کا تعین کرنا اشد ضروری ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ضروری ہے کہ پالیسیوں کی تشکیل میں کمیونٹی کی مشاورت اور شمولیت کو یقینی بنایا جائے تاکہ حکومت اور غیر سرکاری اداروں کے فنڈز کا صحیح استعمال ہو اور ترقیاتی منصوبے وقت مقررہ پر مکمل ہوں ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بلوچستان رولرسپورٹ پروگرام سے متعلق بریفنگ کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ گورنر نے اس موقع پر کہا کہ صوبے بھر کے عوام بالخصوص دور افتادہ اضلاع کے عوام سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کے اس ترقی یافتہ اور تیز رفتار دورمیں جدیدیت کے ثمرات سے محروم دیکھ کر دلی دکھ پہنچتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ خلق خدا کو آرام پہنچانا اور ان کے حقیقی مسائل و مصائب کا پائیدار حل ڈھونڈنا واقعی ایک عبادت ہے ۔ ترقیاتی منصوبوں پر عملدرآمد کو یقینی بنانے اور عوامی مسائل کے سائنسی طریقے سے نشاندہی کرنے کے حوالے سے گورنر نے ہر ممکن تعاون جاری و ساری رکھنے کی یقین دہانی کرائی تاکہ لوگوں کا معیار زندگی بلند کرنے کی کاوشوں کو پذیرائی حاصل ہو ۔ قبل ازیں گورنر بلوچستان کو بی آر ایس پی کے چیف ایگزیکٹو آفیسر نادر گل بڑیچ نے این آر ایس پی اور بی آر ایس پی کے نمائندوں کی موجودگی میں تفصیلی بریفنگ دی جس پر گورنر نے ان کی پوری ٹیم اور کار کردگی کو سراہا ۔ 
()()()
خبر نامہ نمبر 3272/2018
کوئٹہ 27نومبر ۔ صوبائی وزیر خزانہ میر محمد عارف محمد حسنی نے کہا ہے کہ بلوچستان میں مالی نظم و نسق کو بہتر بنانے اور مالی مشکلات پر قابو پانے کیلئے ضروری ہے کہ بلوچستان ریو نیو اتھارٹی ٹیکس نیٹ کو مزید بڑھانے کیلئے قانون سازی کرکے اور بی آر اے کو مزید با اختیار بنائیں تاکہ صوبے کی محصولات میں خاطر خواہ اضافہ ہوسکے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز اپنے دفترمیں چیئرمین بلوچستان ریو نیو اتھارٹی کے چیئرمین مصری لادھنی سے ملاقات کے دوران کیا۔ انہوں نے کہا کہ ادارے کی کار کردگی کو بہتر بنانے اور محکمانہ امور کو بہتر طور پر انجام دینے کیلئے ضروری ہے کہ بی آر اے کمشنر یٹ کیلئے زمین کی فراہمی ہو تاکہ اس کا دائرہ مزید وسیع کیا جاسکے ۔ انہوں نے کہا کہ صنعتی شہر حب اور گوادر میں بھی بی آر اے کے دفاتر قائم کیئے جائیں تاکہ ان علاقوں سے ریو نیو جمع کرکے صوبے کو مالی اعتبار سے مستحکم کیا جاسکے ۔ انہوں نے ہدایت کی کہ محکمانہ امور کی انجام دہی میں تیزی لائی جائے تاکہ زیادہ سے زیادہ محاصل جمع کرکے صوبے کو اقتصادی ترقی کی جانب گامزن کیاجائے دریں اثناء صوبائی وزیر خزانہ سے بلوچستان ایجو کیشن انڈومنٹ فنڈ ( BEEF) کے سی ای او ڈاکٹر رشید مسعود خان جعفر نے ملاقات کی ۔ اس موقع پر ڈاکٹر رشید مسعود نے صوبائی وزیر کو ادارے کی کار کردگی ضروریات اور آئندہ کئے جانے والے اقدامات کے بارے میں تفصیلاً سے آگاہ کیا جس پرصوبائی وزیر نے ان کی کار کردگی کو سراہتے ہوئے ادارے کی کارکردگی کو مزید بہتر بنانے کیلئے بھر پور تعاون کی یقین دہانی کرائی۔ 
()()()
خبر نامہ نمبر 3273/2018
کوئٹہ 27 نومبر۔ مشیر برائے ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن ملک نعیم خان بازئی نے منگل کے روز چیف ایگزیکٹو کیسکو بلوچستان عطا اللہ بھٹہ سے ملاقات کی ۔ملاقات میں صوبائی مشیر نے چیف ایگزیکٹو کیسکو کو اغبرگ ، نوحصار فیڈر میں بجلی کی لوڈ شیڈنگ ، وولٹیج کی کمی جبکہ کلی سملی کچلاک میں لوڈ شیڈنگ اور ٹرانسفارمر کی عدم موجودگی کے حوالے سے بات چیت کی کیسکو چیف نے صوبائی مشیر کی جانب سے متعلقہ علاقوں میں وولٹیج کی کمی ، لوڈ شیڈنگ اور ٹرانسفارمر کی جلد تنصیب کے حوالے سے یقین دہانی کراتے ہوئے کہا کہ ہنگامی بنیادوں پر مذکورہ مسائل کو حل کیا جائے گا اس موقع پر مشیر لائیو اسٹاک مٹھا خان کاکڑ بھی موجود تھے ۔ 
()()()
خبر نامہ نمبر 3274/2018
کوئٹہ 27نومبر ۔بلوچستان پبلک سروس کمیشن کے پریس ریلیز کے مطابق 23نومبر 2018 کو منعقد ہونے والے آن لائن ایم سی کیوز ٹیسٹ میں محکمہ صحت کی آسامی اسسٹنٹ اپٹو ٹسٹ ( بی ۔17) کے لئے عبدالحفیظ ولد فضل خان ،عائشہ حنیف بنت محمد حنیف ،اکمل خان ولد بخت محمد ، آمرہ ناصر بنت نصر اللہ ، آمنہ محمود بنت محمد احمد نواز ، گہرام ولد غلام نبی ، عنایت الہ ولد نعمت اللہ ، کلیم اللہ ولد بسم اللہ ، خدیجہ سعید بنت سعید احمد ، میر طاہر حسین ولد محمد خالد، رابعہ مریم بنت محمد ارشد ، رونابریالئی بنت عبدالکریم بریالئی ، سبینہ حسین بنت محمد حسین ، ثمرین جو کھیو بنت علی محمد جوکھیو ، شبیر حسین ولد گلاب خان اور شعیب انورولد محمد انور جبکہ محکمہ لائیو اسٹاک اینڈ ڈیری ڈیویلپمنٹ کی آسامی ویٹرنری آفیسر ( بی ۔ 17) کے لئے عابد علی ولد عبدالطیف ، امجد علی ولد محمد یعقوب ، انور شاہ ولد نور شاہ ، غلام نبی ولد ناصر علی ، عمران علی ولد سعید احمد، خدا روزی ولد احمدعلی ، خدا بخش ولد اللہ داد ، نصر اللہ ولد عبدالسلام ، ساجد عظیم ولد محمد عظیم اور شہاب غفور ولد عبدالغفور کامیاب قرار پائے ہیں ۔ تمام کامیاب امیدواروں کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ اپنی درخواستیں بمعہ تصدیق شدہ دستاویزات کے ہمراہ ایک ہفتہ کے اندر اندر کمیشن کی ریکروٹمنٹ برانچ میں جمع کرائیں ۔ جبکہ مذکورہ امیدواروں کے انٹر ویوز کی تاریخ کا اعلان بعد میں کیا جائے گا ۔ 
()()()
خبر نامہ نمبر 3275/2018 
کوئٹہ 27نومبر ۔ بلوچستان پبلک سروس کمیشن کے پریس ریلیز کے مطابق رضا محمد ولد محمد صدیق کی بطور اکاؤنٹنٹ ( بی ۔ 14) بلوچستان پبلک سروس کمیشن میں تعیناتی کی سفارش کی گئی ہے ۔ 
()()()
خبر نامہ نمبر 3276/2018
کوئٹہ 27نومبر ۔محکمہ خزانہ بلوچستان کے اعلامیہ کے مطابق بھنگر خان ( ٹی اینڈ اے / بی ایس ۔ 16) اسسٹنٹ اکاؤنٹنٹ ڈسٹرکٹ اکاؤنٹس آفس قلات کا تبادلہ کرکے انہیں اسسٹنٹ اکاؤنٹنٹ ( ٹی اینڈ اے / بی ایس ۔ 16) ڈسٹرکٹ اکاؤنٹس آفس جھل مگسی تعینات کیا گیا ہے ۔ 
()()()
خبر نامہ نمبر 3277/2018
کوئٹہ 27نومبر ۔ محکمہ سیکنڈری تعلیم حکومت بلوچستان کے اعلامیہ کے مطابق مسز الن بتور ایس ایس ٹی ( سائنس ) ( بی ۔ 17) ڈسٹرکٹ کوئٹہ کا استعفیٰ ان کی اپنی درخواست پر منظورکرلیا گیا ہے ۔ 
()()()
خبر نامہ نمبر 3278/2018
کوئٹہ 27نومبر ۔ حکومت بلوچستان کے اعلامیہ کے مطابق اورمجاز حکام کی منظوری سے لیاقت حسین ولد نور وز علی سٹینو گرافر ( بی ۔ 14) محکمہ ایس اینڈ جی اے ڈی کو 22مئی 2018 سے مسلسل غیر حاضر کی بناء پر بیڈ ایکٹ 2011 کے تحت سرکاری ملازمت سے برخاست کردیا گیا ہے ۔ 
()()()
خبر نامہ نمبر 3279/2018
کوئٹہ 27نومبر ۔ حکومت بلوچستان کے اعلامیہ میں اسد اللہ ولد غلامصطفی سابق نائب قاصد ٹرانسپورٹ سیکشن کی ناگہانی وفات پر گہرے رنج و غم کا اظہار کیا گیا ہے اعلامیہ میں مرحوم کی سرکاری خدمات کو سراہتے ہوئے دعا کی گئی ہے کہ اللہ تعالیٰ مرحوم کے درجات بلند فرمائیں او رپسماندگان کو صبر جمیل عطا کرے ۔ 
()()()
خبر نامہ نمبر 3280/2018 
نصیر آباد 27نومبر ۔ڈویژنل ڈائریکٹرسوشل ویلفیئر نصیرآباد محمدسلیم کھوسہ نے کہا ہے کہ سوشل ویلفیئرعوام کی فلاح بہودکے لئے ہروقت کوشاں ہے غریب مستحق افراد کی خدمت کرنے میں کوئی کسرنہیں چھوڑی جائے گی بچوں کی تعلیم، بے سہاراجوڑوں کی شادیاں کرانا،معذورافرادکی مالی امداد کرنااور بچوں کے تحفظ کیلئے ہمارامحکمہ پیش پیش ہے نصیرآباد ڈویژن میں جہالت کے خاتمے کیلئے اپنی تمام تر صلاحیتوں کو بروئے کارلایا جارہا ہے سکول سے باہر بچوں کو تعلیم کے زیوارسے آراستہ کرنے کیلئے ہنگامی بنیادوں پر کام کیا جارہا ہے انہوں نے کہا کہ نیوٹیک کے تعاون سے ضلع صحبت پوراورضلع جعفرآبادمیں تیس ،تیس پرائمری سکول کھولے جائیں گے جوجنوری سے اپنے کام کاآغازکردیں گے جہاں پر ساٹھ اساتذہ تعینات کئے جائیں گے جن کی مانیٹرنگ کیلئے دوسپروائزربھی اپنے فرائض سرانجام دیں گے بچوں کو تین سال میں پانچ سال کا کورس کرایا جائے گا تاکہ غریب اور ناداربچے بھی تعلیم حاصل کرکے ایک باکردار شہری بن سکیں اورعلاقے وصوبے کی خدمت کرسکیں ان خیالات کا اظہار انہوں نے محکمہ کے آفیسران اور علاقہ معتبرین سے ملاقات کے دوران بات چیت کرتے ہوئے کیا اس موقع پر سابقہ ڈویژنل ڈائریکٹرترقیات امداد علی ابڑوبھی موجودتھے انہوں نے بتایاکہ گزشتہ سال 25بے سہاراجوڑوں کی شادیاں کرائی گئیں اورانہیں تین لاکھ روپے کا گھریلوں سامان بھی دیا گیا ہماری کوشش ہے کہ غریب اوربے سہارابچیوں کی شادیاں کرائی جائیں تاکہ ان کے مسائل حل ہوسکیں جس کیلئے صوبائی حکومت نے صوبے بھرکیلئے 20کروڑروپے کی خطیررقم مختص کی ہے علاوہ ایں انہوں نے بتایاکہ معذورافرادنے کی فلاح بہبودکیلئے ہم کوشاں ہیں کم معذوری والے افرادکو ہنرمندی کاکام سکھایاجارہا ہے تاکہ وہ کسی پر بوجھ نہ بنیں اورآگے چل کر وہ اپنی مہارت سے اپنا اور اپنے گھروالوں کاپیٹ پال سکیں لاچارمعذورافراد کیلئے بے نظرانکم سپورٹ پرگرام کی طرح اے ٹی ایم کارڈزمتعارف کرائے جائیں گے تاکہ ان کی مالی امدادکی جاسکے اورماہانہ انہیں شفاف طریقے سے رقوم کی فراہمی ممکن ہو انہوں نے کہاکہ معذورافراداپنی رجسٹریشن محکمہ سوشل ویلفیئر سے کروائیں تاکہ سرکاری محکموں میں معذورکوٹے کو پرکرنے کیلئے ہمارے رجسٹرڈشدہ افراکو روزگارفراہم کیاجاسکے انہوں نے کہاکہ نصیرآبادمیں قائم لائبریری میں مختلف کتابیں فراہم کردی گئی ہیں اوچ پاورپلانٹ کی جانب سے704کتابیں اورتین کمپیوٹرفراہم کیئے گئے ہیں۔
()()()
خبر نامہ نمبر 3281/2018 
گوادر27نومبر ۔ ڈسٹرکٹ الیکشن کمشنر گوادر کے اعلامیہ کے مطابق ضلع کے عام و خاص کو اطلاع دی جاتی ہے کہ 31 دسمبر تک ووٹر لسٹوں میں تبدیلی کا سلسلہ جاری ہے اس حوالے سے اگر کوئی شخص اپنا اور اپنی فیملی کے ناموں کو الیکشن لسٹ میں درج کرانا چاہتے ہیں تووہ دفتر ہذاسے فارم نمبر 21 حاصل کرکے دفتر ہذا میں 31دسمبر جمع کرسکتے ہیں۔
()()()
خبر نامہ نمبر 3282/2018 
گڈانی27نومبر ۔ چےئرمین بی ڈی اے میجر ریٹائرڈ اکبر لاشاری اور کینیڈین فرم کے نمائندے حسین بخش بنگلزئی کے مابین گڈانی ماربل کو شراکت داری کی بنیاد پرچلانے کے حوالے سے معاہدہ برائے دستخط کی تقریب ماربل سٹی گڈانی میں منعقد ہوئی اس موقع پر ملکی صنعت کاروں ، مائنز انڈسٹری سے تعلق رکھنے والے صنعت کار جاوید جاموٹ ، اعجاز میمن ، شپ بریکرز ایسوسی ایشن کے رفیق سلام ، غنی میمن ،آصف خان ، حاجی احمد خان ، لسبیلہ انڈسٹریل اسٹیٹ ڈیولپمنٹ اتھارٹی کے ڈائریکٹر ماربل سٹی شفیق احمد قاسمی ،اے سی حب افتخار حسین ، ڈائریکٹر فنانس بی ڈی اے طالب مگسی ، انجینئر منیر احمد بزنجو اور بی ڈی اے لسبیلہ کے اے جی ایم طارق بلوچ بھی موجود تھے تقریب سے ڈائریکٹر بی ڈی اے کیپٹن جا وید اور کینیڈین فرم کے نمائندے حسین بخش بنگلزئی نے اپنے خطاب میں کہا کہ بیرون ممالک میں پاکستان کے ماربل کی ڈیمانڈ موجود ہے لیکن دنیا کی بہترین ماربل کی یہاں پیدوار کے باوجود ویلیوایڈڈ نہ ہونے کی بنیادی وجہ مارکیٹنگ کے مواقع میسر نہ ہونا ہے ، پرائیویٹائزیشن پالیسی کے تحت حکومتی منظوری سے بی ڈی اے نے کینیڈین فرم کیساتھ جوائنٹ وینچر کے ذریعے معاہدہ کیا ہے انشاء اللہ گڈانی لسبیلہ میں ماڈل ماربل فیکٹری آپریشنل کرکے دکھائیں ہرسال پچاس ٹرینیز کو تربیت فراہم کی جائیگی انھوں نے کہا کہ وزیر اعلی بلوچستان نواب جام کمال خان صوبے میں صنعتی ترقی کا جو وژن رکھتے ہیں بی ڈی اے اس وژن کے تحت ایسے سیکٹر اور مواقع پیدا کرنے میں کوشاں ہے تاکہ مائنز انڈسٹری اور ماربل کی صنعت سے وابستہ یہاں کے محنت کشوں اور صنعت کاروں کو انکی محنت کا ثمر اور ملکی صنعتی ترقی کا پہیہ تیز ہو،انھوں نے کہا کہ گڈانی ماربل سٹی 600ایکٹر پر مشتمل ہے جو ملکی انڈسٹریز کی ضروریات پوری کرنے کے حوالے سے حکومت کو خطیر ریونیو بھی فراہم کررہا ہے ۔
()()()
خبر نامہ نمبر 3283/2018 
گڈانی27نومبر ۔ وزیراعلیٰ بلوچستان نواب جام کمال خان کی خصوصی ہدایت پر ادارہ ترقیات بلوچستان کی زیر نگرانی سمندری کھارے پانی کو میٹھا بنانے کا آر او پلانٹ منصوبہ تکمیل کے مراحل میں پہنچ گیا ہے بلوچستان ڈیولپمنٹ اتھارٹی کے چےئرمین میجر ریٹائرڈ اکبر لاشاری اور ڈائریکٹر کیپٹن جاوید نے گڈانی شپ بریکنگ یارڈ میں ادارے کی زیر نگرانی جاری منصوبوں کا دورہ کیاانہوں نے 18 کروڑ روپے کی لاگت سے جاری ترقیاتی اور 12کروڑ روپے کی لاگت سے زیر تکمیل آراو پلانٹ منصوبوں کا معائنہ بھی کیا ، اس موقع پر ڈائریکٹر بی ڈی اے کیپٹن ریٹائرڈ جاوید ، ڈائریکٹر فنانس طالب مگسی ، پراجیکٹ انجینئر منیر بزنجو اور اے جی ایم طارق بلوچ بھی انکے ہمراہ تھے پراجیکٹ کنسلٹنٹ نے بریفنگ میں بتایا کہ منصوبہ تکمیل کے مراحل میں ہے اور 98 فیصدترقیاتی کام مکمل ہوچکاہے آئندہ ماہ دسمبر میں گڈانی آراو پلانٹ منصوبہ آپریشنل ہوگاجس میں یومیہ دولاکھ گیلن پانی گڈانی شہر اور شپ بریکنگ یارڈ کے تمام پلاٹوں کی ضروریات کے مطابق فراہم کریگا،،اس موقع پر چےئرمین بی ڈی اے نے کہا کہ گڈانی شپ بریکنگ یارڈ کی ریگیولیٹری اتھارٹی اس صنعت کی ماڈرنائزیشن پر کام کررہی ہے اور یہاں کام کرنے والے محنت کشوں کی ہیلتھ اینڈ سیفٹی کی تربیت فراہمی کیلئے عملی طورپر کوشاں ہے بی ڈی اے اپنی ریونیو کا 25فیصد یہاں کے ترقیاتی منصوبوں اور کمیونٹی ویلفیئر کے منصوبوں پر خرچ کریگا۔ چےئرمین بی ڈی اے نے پراجیکٹس سائٹ وزٹ کے معائنہ کیلئے آرکیٹیکٹ کی فوری خدمات حاصل کرنے کے احکامات جاری کئے ، انھوں نے گڈانی موڈ سے شپ بریکنگ یارڈ تک ناکارہ پلوں کی دوبارہ تعمیر ومرمت کے پی سی ون تیارکرنے کیلئے انجینئرز کو احکامات بھی جاری کیں ۔
()()()
پریس ریلیز 
کوئٹہ 27نومبر ۔ پہلی آلپگوت ورلڈ چیمپئن شپ جوکہ باکو آذربائیجان میں منعقد ہوئی چیمپئن شپ پاکستان سمیت19 ممالک کی ٹیموں نے شرکت کی ۔ پاکستان ٹیم کی قیادت پاکستان آلپگوت فیڈریشن کے صدر جلال الدین ترین اور فیڈریشن کے نائب صدر محمد قاسم نے کی ۔ چیمپئن شپ میں پاکستان ٹیم نے شاندار کھیل پیش کرتے ہوئے مختلف کیٹیگریز میں 3گولڈ ، 2سلورز اور 2 برانز میڈلز اپنے نام کیئے ۔ صوبہ بلوچستان سے تعلق رکھنے والے کھلاڑی عبدالمنان خان اچکزئی نے ایک گولڈ ، ایک سلور ، عزیز اللہ ایک گولڈ ، نصیب ایک گولڈ اور محمد کامران پرکانی ایک برانز میڈل اپنے نام کرنے میں کامیاب ہوئے جبکہ صوبہ پنجاب سے تعلق رکھنے والے کھلاڑی نذیر احمد نے ایک سلور اور سندھ کے محمد عبداللہ نے ایک برانز میڈل جیت کر پر پاکستان کاسر فخر سے بلند کیا ۔ ورلڈ چیمپئن شپ میں پاکستان ٹیم بلوچستان کے عزیز اللہ ، نصیب اللہ ، محمد کامران پرکانی ، پنجاب سے نذیر احمد اور سندھ سے محمد اللہ نے شرکت کی ۔ پاکستانآلپگوت فیڈریشن کے صدر جلال الدین ترین اور فیڈریشن کے نائب صدر محمد قاسم نے ورلڈچیمپئن شپ میں پاکستانی ٹیم کی کارکردگی کو سراہتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں کھیل نیا ہے اور ہمارے نوجوان کھلاڑیوں نے اس کھیل میں شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے اور نہ صرف اپنے صوبوں بلکہ پاکستان کا نام بھی روشن کیا ہے ۔ انہوں نے حکومت سے پر زور اپیل کی ہے کہ وہ ملک اورصوبے میں اس کھیل کے فروغ کے لئے فیڈریشن سے بھر پور معاونت اور تعاون کریں تاکہ ہمارے نوجوان کھلاڑی اس کھیل کی ترقی او ر ترویج کیلئے اپنا کردار ادا کرسکیں ۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے ملک میں ٹیلنٹ کی کمی نہیں انہوں نے ورلڈ چیمپئن شپ میں شریک پاکستان ٹیم کے کھلاڑیوں کو ان کی شاندار کار کردگی پر مبارکباد دیتے ہوئے امید ظاہر کی ہے کہ وہ آگے چل کر اسی طرح اپنے صوبے اور ملک کا نام روشن کریں گے۔ 
()()()
پریس ریلیز 
کوئٹہ 27نومبر ۔ نیشنل ہائی ویز اینڈ موٹر وے پولیس و یسٹ زون کوئٹہ کے ڈی آئی جی عبدالحئی بلوچ نے کہا ہے کہ کوئٹہ کراچی روڈ پر حادثات میں قیمتی جانیں ضائع ہورہی ہیں جن کو روکنا ہماری اولین ذمہ داری ہے موٹر وے پولیس حب اور اوتھل اور قلات کوئٹہ سیکشن پر حاد ثات کے روک تھام کیلئے اپنی ڈیوٹی سرانجام دے رہی ہے مگر اس کے ساتھ ساتھ عوام اور خاص طور پر کوئٹہ کراچی اور کوئٹہ آل پاکستان بس کمپنیوں کے مالکان اور ڈرائیور حضرات کی بھی یہ ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ ٹریفک قوانین پر پابندی کریں تاکہ حاد ثات سے بچا جاسکے ۔ بس کے ایکسیڈنٹ جان لیوا ثابت ہوتے ہیں اس سلسلے میں گزشتہ روز ار باز بس کمپنی کے انچارج میر وائس بڑیچ سے سیکٹر کمانڈر قلات اختر اچکزئی اور ڈی ایس پی ہیڈ کوارٹرز عاشق چوہان نے خصوصی ملاقات کی جس میں انہیں بتایا گیا کہ وہ اپنی کمپنی کے ڈرائیور حضرات کو ہدایت کریں کہ وہ بس احتیاط سے چلائیں اور تیز رفتاری ہر گز نہ کریں ۔ ٹریفک کے اصولوں پر پابندی ہم سب کی ذمہ داری ہے اور یہ حادثات کی روک تھام کا واحد حل ہے جبکہ موٹر وے پولیس ان بس کمپنیوں کے خلاف سخت قانون کارروائی کرے گی جو ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی کرتی ہیں اور تیز رفتاری کا مظاہرہ کرتی ہیں ۔ بس کمپنی کے انچارج نے یقین دہانی کراتے ہوئے کہا کہ بس ڈرائیوروں کو سخت تاکید کریں گے کہ وہ ٹریفک قوانین کا احترام ہر صورت کریں اور تیز رفتاری سے پرہیز کریں۔ 
()()()

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Post comment