Download

خبر نامہ نمبر 3259/2018
کوئٹہ 26نومبر۔ صوبائی وزیر خزانہ میرمحمد عارف محمد حسنی نے کہا ہے کہ صوبہ کی ترقی اور خوشحالی میں جہاں مختلف اہم معاملات میں بہتری اور سنجیدگی کی ضرورت ہے وہیں صوبے کے تمام اداروں میں موجوداعلیٰ آفیسران سے لے کر عام ملازمین محنت ، ایمانداری اور پیشہ وارانہ امور کو ذمہ داری سے انجام دینے کی سعی کریں گے تو ہمارا صوبہ جلد ہی ترقی کے منازل طے کرکے دیگر بڑے صوبوں کے برابر آکر ملک کی ترقی میں اہم کردار ادا کرسکے گا ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پیر کے روز محکمہ خزانہ کے اچانک دورے کے موقع پر آفیسران و دیگرسے بات چیت کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ کرپشن ، محکمانہ امور کی انجام دہی میں غفلت اور سرکاری وسائل کے بے دریغ استعمال نے اداروں کو نہ صرف تباہی کے دہانے تک پہنچادیا بلکہ اس مجرمانہ فعل نے عالمی سطح پر ملک و صوبے کی ساکھ کو متاثربھی کیا ہے ۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ موجودہ صوبائی حکومت وزیراعلیٰ کی قیادت میں اس عزم مسلسل پر ثابت قدم ہے کہ صوبے سے کرپشن، اقربا پروری اوررشوت ستانی کے ناسور کو جڑ سے ختم کرنا ہے لہٰذا اس حوالے سے محکمہ خزانہ کے تمام ملازمین اپنی فرائض منصبی انجام دینے میں کوتاہی نہ برتیں اور محکمے کی کارکردگی کو مزید بہتر بنانے کیلئے کوششیں تیز کریں انہوں نے کہا کہ فنانس ڈیپارٹمنٹ کے مختلف شعبوں کامعائنہ کرکے انہیں بہتری محسوس ہوئی لیکن انہیں اطمینان حاصل تب ہوگا جب فنانس ڈیپارٹمنٹ صوبے کا وہ مثالی محکمہ ہو جہاں سرکاری امور کے ساتھ ساتھ عوام کے مسائل فوری طور پر حل ہوں اور محکمے میں اقربا پروری ، رشوت اور سفارش کلچر کی ہر سطح پر حوصلہ شکنی ہوسکے ۔ انہوں نے کہا کہ محکمے میں موجود محنتی اور ایماندار آفیسر و دیگر میرے بھائیوں کی طرح ہیں اور ان کی محنت اور کاوشوں کو ہر سطح پر سراہا جائے گا جبکہ غفلت اور کرپشن میں ملوث عناصر کے خلاف سخت سے سخت کارروائی کی جائے گی۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ وہ اپنے اچانک دوروں کا سلسلہ جاری رکھیں گے اور ان دوروں کو ٹریژری کے دفاتر تک بھی بڑھایا جائے گا انہوں نے محکمانہ امور کی انجام دہی کے حوالے سے بتایا کہ فنانس ڈیپارٹمنٹ میں تمام معاملات میرٹ کے مطابق کئے جارہیں ہیں لہٰذا اس حوالے سے وہ کسی قسم کی سفار ش قبول نہیں کریں گے ۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ ڈیپارٹمنٹ کے تمام ملازمین محکمے کے کارکردگی بہتر بنانے کیلئے کیئے جانے والے اقدامات کو پایہ تکمیل تک پہنچانے میں ان کی معاونت کریں گے۔ دریں اثناء اس موقع پردیگر محکموں کے لوگوں نے صوبائی وزیر کو فنانس ڈیپارٹمنٹ میں حل طلب اپنے اپنے ضروری کام کو نمٹانے کے حوالے سے آگاہ کیا جس پر انہوں نے متعلقہ شعبوں کے ذمہ داروں کو ہدایت کی کہ وہ ان تمام سائلین کے جائز کاموں کو فوری طور پر نمٹا کر انہیں اطلاع کریں ۔ 
()()()
خبر نامہ نمبر 3260/2018
کوئٹہ 26نومبر۔سیکریٹری اطلاعات ہاشم ندیم نے محکمہ تعلقات عامہ اور سیکریٹریٹ اسٹاف کے تعارفی اجلاس میں اس بات کا اعادہ کیا کہ محکمہ اطلاعات کو فی الفور جدید بنیادوں پر استوار کرنے کی ضرورت ہے اور اس ضمن میں نہ صرف پرنٹ میڈیا بلکہ الیکٹرانک اور سوشل میڈیا کی اہمیت کو بھی ہر ممکن طور پر مفید آموز طریقے سے استعمال کیا جائے گا کیونکہ دور حاضر میں اخبار کی اہمیت اپنی جگہ مسلم ہے مگر جدید تقاضہ یہی ہے کہ حکومت کی پالیسی اور اچھے کاموں کی تشہیر کیلئے الیکٹرانک اور سوشل میڈیاکا بھر پور استعمال کیا جائے ۔اس ضمن میں ڈائریکٹر جنرل تعلقات عامہ کو واضح ہدایات جاری کی گئیں ہیں اور ہر ضلع کی سطح پر اطلاعات کے محکمے کو بھر پور فعال کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ دریں اثناء صوبائی وزیراطلاعات ظہور احمد بلیدی اور وزیر اعلیٰ بلوچستان کی منظوری کے فوری بعد وسط ترقی، دیرینہ پالیسی اور محکمے کی تر جیحات کو نئے خطوط پر استوار کرنے کی ضرورت پر بھی زور دیا گیا ۔ 
()()()
خبر نامہ نمبر 3261/2018
سبی26نومبر ۔ڈپٹی کمشنر سبی سید زاہدشاہ کی زیرصدارت پولیو مہم کے حوالے سے اجلاس منعقد ہوا اجلاس میں ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر سبی ڈاکٹر اکبر سولنگی ، میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹرہسپتال سبی ڈاکٹر سرور ہاشمی ، ڈپٹی ڈائریکٹر زراعت ڈاکٹر فضل احمد ، ڈسٹرکٹ ایجو کیشن آفیسر تعلیم سید مسعود احمد شاہ ، اسسٹنٹ پروفیسر گورنمنٹ بوائز کالج سبی بشیر احمد اور دیگر ضلعی آفیسران موجود تھے ۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر سبی سید زاہد شاہ نے کہا کہ پولیو ایک مہلک مرض ہے جس کے تدارک کیلئے ضروری ہے کہ بچوں کو پولیو کے قطرے ضرورپلوائے جائیں اس ضمن میں کسی بھی قسم کی غفلت کا مظاہرہ بچے کو زندگی بھر کیلئے اپاہج بنا سکتا ہے انہوں نے کہا کہ مانیٹرنگ کے حوالے سے جو اہلکار اور آفیسران اپنے فرائض انجام دے رہے ہیں انہیں تربیت فراہم کرنے کا پروگرام ترتیب دیاگیا ہے تاکہ وہ مزید مؤثر اور بہتر طریقے سے مانیٹرنگ کرسکیں انہوں نے پولیو کے عملے کو تا کید کرتے ہوئے کہا کہ جو بچے پولیو کے قطرے پینے سے رہ گئے ہیں انہیں فوری طور پورپولیو کے قطرے پلوائے جائیں انہوں نے تمام مکاتب فکر اور خصوصاً اساتذہ کرام سے اپیل کی کہ وہ والدین میں شعور اجاگر کریں تاکہ وہ اپنے بچوں کو پولیو کے قطرے ضرور پلوائیں قبل ازیں ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر ڈاکٹر اکبر سولنگی نے اجلاس کو پولیو مہم کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی ۔ 
()()()
پریس ریلیز 
کوئٹہ 26نومبر ۔ پاکستان چیسٹ سوسائٹی بلوچستان کے صدر ڈاکٹر شیرین خان اور جنرل سیکریٹری ڈاکٹر مقبول احمد لانگونے کہا ہے کہ پاکستان چیسٹ سوسائٹی بلوچستان کا اجلاس مورخہ 28 نومبر2018 بروز بدھ صبح دس بجے فاطمہ جناح چیسٹ ہسپتال بروری منعقد ہوگا ۔ اجلاس میں کراچی میں 17،18 نومبر 2018 کو منعقد ہونے والی سوسائٹی کی گورننگ کونسل کی میٹنگ کے فیصلوں کے حوالے سے بات ہوگی اور پاکستان چیسٹ سوسائٹی بلوچستان کے زیر اہتمام اپریل 2019 میں کوئٹہ میں ہونے والی نیشنل کانفرنس کے حوالے سے تفصیلی تبادلہ خیال کیا جائے گا اس سلسلے میں مختلف آرگنائز یشن کے تعاون اور مختلف امور کی انجام دہی کیلئے کمیٹیوں کی تشکیل کے حوالے سے ضروری فیصلے کئے جائیں گے ۔ تمام ممبران سے کہا گیا ہے کہ وہ مذکورہ اجلاس میں اپنی شرکت کو یقینی بنائیں ۔ 
()()()

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Post comment