HomeNews25-10-2019 Friday (File No.1)

25-10-2019 Friday (File No.1)

25-10-2019 Friday (File No.1)

خبرنامہ نمبر3602/2019
کوئٹہ25اکتوبر :۔صوبائی وزیر داخلہ میر ضیاءاللہ لانگو نے کہا کہ موجودہ حکومت عام آدمی کی فلاح بہبود اور ترقی کیلئے کوشاں ہے ۔ موجودہ حالات کو مد نظر رکھتے ہوئے کہا کہ محکمے پولیس اور لیویز روازنہ کی بنیاد پر گشت کو بڑھائیں۔تاکہ کسی نا خو شگوار واقعہ سے قبل از وقت نمٹا جائے۔ عوام کی جان ومال کا تحفظ سیکیورٹی اداروں پر فرض ہے امن وامان کی صورتحال کو مزید بہتر بنانے کیلئے سیکیورٹی انتظامات سخت کئے جائیں ،سیکیورٹی اہکاراپنے فرائض دیا نیدار ی کے ساتھ سر انجام دیں فرائض سے غفلت برتنے والوں کے خلاف سخت تادیبی کا روائی عمل میں لائی کائے گی۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے پولیس او رلیو یز افسران سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہاکہ پولیس اور لیویز افسران واہلکار اپنی استعداد کار کو مزید بڑھائیں اور اگر ا س سلسلے میں انہیں اگر دوسرے صوبوں میں بھی جانا پڑے تو جائیں تاکہ امن وامان کی صورتحال مزید بہتر ہو۔انہوں نے کہاکہ ملک وقوم کی خدمت کرنے کو اپنا فرض سمجھیں۔ ملک وقوم کو ترقی کی راہ پر گامزن کرنے کیلئے سیکیورٹی فورسز اور عوام ایک صفحے پر ہیں۔ عوام اور سیکیورٹی فورسز کی تعاون ہی سے ملک ترقی کے منازل طے کر پائے گا۔ہم ترقی کی طرف جارہے ہیں پاکستان اپنے پاوں پر کھڑ اہے عالمی دنیا میں پاکستان کو اہم مقام حاصل ہے۔ صوبائی وزیر داخلہ میر ضیاءاللہ لانگو نے مزیدہدایت دیتے ہوئے کہا کہ شہر کی داخلی راستوں پر اضافی ناکے قائم کرکے چیکنگ مزید سخت کریں تاکہ کسی بھی خو شگوار واقعہ کو بروقت روک تھام ممکن ہوسکے اس ضمن میں عوام قانون نافذ کرنے والے اداروں کے ساتھ بھرپور تعاون کریں۔اور مشکوک افراد کی بروقت قانون نافذ کرنے والے اداروں کواطلاع دے ۔ تاکہ جرائم پیشہ افراد اور ان کے سہولت کاروں کے خلاف کاروائی کرکے انہیں قانون کی گرفت میں لایا جا سکے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر3603/2019
سبی 25اکتوبر :۔ڈپٹی کمشنر سبی سید زاہد شاہ کی قیادت میں کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے حوالے سے ریلی نکالی گئی ریلی میں اسسٹنٹ کمشنر منیر احمد سومرو،سوشل ویلفئیر آفیسر دین محمد مری، دیگر ضلعی و انتظامی افسران اور طلباءکی کثیر تعداد میں شرکت کی ریلی کے شرکاءنے پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے جس میں کشمیریوں کے ساتھ بھرپور اظہار یکجہتی اور انڈین فوجیوں کی بربریت کے خلاف نعرے درج تھے ریلی مختلف شاہراہوں سے گزرتی ہوئی پریس کلب پہنچی خطاب کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر سبی سید زاہد شاہ نے کہا کہ حق کے حصول میں مشکلات ضرور ہیں پر ناممکن نہیں انڈیا کی بربریت اور ظلم زیادہ عرصہ نہیں چلے گا یقیناً وہ دن دور نہیں کشمیر بنے گا پاکستان اور کشمیریوں کی لازوال قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی انہوں نے کہا کہ پوری قوم اپنے کشمیری بہن بھائیوں کے ساتھ ہیں اس مصیبت کی گھڑی میں انہیں کسی صورت تنہا نہیں چھوڑا جائے گا انہوں نے کہا کہ تاریخ گواہ ہے کہ فتح ہمیشہ حق کی ہوتی ہے اور باطل بے پناہ طاقت رکھنے کے باوجود شکست سے دو چار ہوا ہے وہ دن دور نہیں کشمیری بھی آزاد فضا میں سانس لینگے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر3604/2019
کوئٹہ 25اکتوبر:۔صوبائی وزیر خزانہ میر ظہور احمد بلیدی کے زیرصدارت فنانس کمیشن کا پہلا اجلاس منعقد ہوا ۔کمیشن بلوچستان کابینہ کی منظوری سے تشکیل دی گئی ہے ۔ جس کا مقصد صوبے کے سات یونیورسٹیوں کے فنڈز کو طے شدہ فارمولے کے تحت تقسیم کو یقینی بناناہے اجلاس میں میر ظہور بلیدی نے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ صوبائی حکومت بنیادی تعلیم سے لے کر اعلی تعلیم کے فروغ کے لیے ترجیحی بنیادوں پر کام کر رہی ہے اس ضمن میں صوبے کے اعلیٰ تعلیمی اداروں کو ہر ممکن مالی امداد مہیا کی جارہی ہے چھوٹے بڑے تمام تعلیمی اداروں کے سربراہوں پر بھاری ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ ان فنڈز کو ایمانداری اور شفاف طریقے سے استعمال میں لائیں۔یہ صوبے کے طلباءو طا لبات کی امانت ہے اس سلسلے میں کسی قسم کی کوتاہی یا بد دیانتی برداشت نہیں کی جائے گی انہوں نے اجلاس کے شرکاءپر زور دیا کہ طے شدہ فارمولے کے تحت فنڈز یونیورسٹیوں کو دیے جا رہے ہیں اس ضمن میں کسی کو کسی قسم کا ابہام نہیں ہونی چاہیے سات یونیورسٹیوں کے درمیان فنڈز کی تقسیم میں طلباءکی تعداد کو اولیت دیتے ہوئے فنڈز کا 40 فیصد حصہ زیادہ طلبہ والے ادارے کو دئیے جائیں گے۔ جبکہ ادارے کی اعلی کارکردگی پر فنڈز کا بیس فیصد حصہ مختص کیا گیا ہے اجلاس میں کمیشن کے تمام ممبران شرکت کی۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر3605/2019
کوئٹہ 25اکتوبر :۔صوبائی مشیر وزیر اعلیٰ برائے لائیوا سٹا ک اینڈ ڈیری ڈیولپمنٹ مٹھا خان کاکڑ نے کہا کہ صوبائی حکومت نے محکمہ لائیو اسٹاک کو جدید خطوط پر استوار کرنے کے لئے ہر ممکن کوشش کر رہی ہے محکمہ لائیو اسٹاک کو ایک منافع بخش شعبہ بنا ئیں گے تاکہ صوبے میں روزگار کے مواقع پیدا ہوسکے ان خیالات کا اظہار انہوں نے اپنے آفس میں مختلف اسٹیک ہولڈرز سے بلوچستان لائیو اسٹاک ایکسپو 2019 کے حوالے سے بات چیت کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ بلوچستان کی تاریخ میں یہ پہلی بار ہے کہ صوبے میں لائیواسٹاک کے حوالے سے ایک شاندار ایکسپو منعقد کیا جارہا ہے جس میں ملکی اورغیر ملکی تاجر مالدار اور خاص کر ہمسایہ ممالک سے بڑی تعداد میں تاجر اور مختلف شعبوں کے لوگ شرکت کرینگے انہوں نے کہا کہ بہت سے ملکی اور غیر ملکی ریسرچرز نے بلوچستان کو لائیو اسٹاک کے لئے ایک اہم اور موزوں صوبہ قرار دیا ہے کیونکہ یہاں بے شمار چراگائیں ہیں جوکہ حیوانات کے لیے ضروری ہیں صوبائی مشیر نے کہا کہ آج کل گوشت چمڑا اور وون کا ڈیمانڈ بہت زیادہ ہے اگر ہم لائیو اسٹاک کو جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے حیوانات کے مختلف برانڈز متعارف کرایا جائے اور ان کے فوڈز اور میڈیسن مہیاءکیا جائے صوبے کے علاو¿ہ ملکی معیشت میں بھی ایک اہم کردار ادا کر سکتا ہے صوبائی مشیر نے کہا کہ آنے والے ایکسپو سے پبلک اور پرائیویٹ دونوں سیکٹرز اعتماد بڑھ جائیں گے جس سے صوبے کے چھوٹے مالدار اور زمیندار بھی مستفید ہو نگے ۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر3606/2019
کوئٹہ25اکتوبر۔بلوچستان صوبائی اسمبلی سیکرٹریٹ کے ایک اعلامیے کے مطابق بلوچستان صوبائی اسمبلی کی منظوری اور گورنر بلوچستان کی توثیق سے “دی بلوچستان چیر ٹیز( رجسٹریشن،ریگولریسن انیڈ فسیلٹشین )ایکٹ 2019ء24اکتوبر 2019ءسے نافذالعمل ہوگیا ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر3607/2019
کوہلو25اکتوبر :۔صوبائی وزیر صحت میر نصیب اللہ خان مری اپنے حلقے کوہلو کے دورے پر پہنچ گئے ہیں جہاں وہ ضلعی آفیسران ،قبائلی عمائدین اور عوام سے ملیں گے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿

خبرنامہ نمبر 3608/2019
کوئٹہ25اکتوبر:۔بلوچستان صوبائی بائی اسمبلی سیکرٹریٹ کے اعلامیہ کے مطابق گزشتہ روز صوبائی اسمبلی کے کمیٹی روم میں ایک نشست زیر صدارت چیئرمین کمیٹی ماجبین شیران منعقدہوئی۔جس میں ارکان کمیٹی شکیلہ نوید قاضی ، میر اسد بلوچ ثناءاللہ بلوچ ، نصراللہ زیر ے اور دنیش کمار شریک ہوئے۔ کمیٹی نے بلوچستان یونیورسٹی سے متعلق کیس کی تمام پہلوو¿ں کا جائزہ لیا اور متاثرین سے متعلق کچھ غور طلب مسائل کا جائزہ لیتے ہوئے ایک دفعہ پھر متاثرین سے التجا کی کہ وہ اس سلسلے میں کمیٹی سے اپنی تعاون کو یقینی بنائیں اور اپنے ساتھ ہونے والے ناخوشگوار واقعات کا تفصیل تحریری طور پر کمیٹی کے روبرو پیش کریں تاکہ کمیٹی کو تحقیقات کرنے اور اپنی سفارشات مرتب کرنے میں کوئی مشکل پیش نہ ہو سول سوسائٹی طلباءتنظیموں اور یونیورسٹی اسٹاف سے ایک بار پھر اپیل کرتی ہے کہ وہ اس سلسلے میں آگے بڑھ کر کمیٹی سے اپنی مکمل تعاون کو یقینی بنائیں۔ کمیٹی یقین دلاتی ہے کہ ایسے تمام افراد جو کمیٹی کے سامنے پیش ہو یا کوئی شہادت سامنے لائے ان کے نام صیغہ راز میں رکھے جائیں گےتا کہ کمیٹی ایک جامع سفارشات پر مبنی رپورٹ اسمبلی میں پیش کرسکیں۔کمیٹی نے واضح کی کہ ہر عام و خاص کے لئے ہمارے دروازے کھلے ہیں وہ آئیں اور تحریرا کمیٹی کو آگاہی دیں۔انہوں نے کہا کہ ہم بلوچستان کے ان غیور غیرت مندوں کو سلام پیش کرتے ہیں جو کمیٹی سے تعاون کر رہے ہیں کمیٹی ارکان نے یقین دلایا کہ کسی بھی فرد کے ساتھ کوئی ناانصافی نہیں ہوگی انہوں نے واضح کیا کہ جو افراد اس واقعے میں ملوث انہیں کسی صورت معاف نہیں کیا جائے گا۔اس لیے کمیٹی کی کوشش ہوگی کہ مسئلے کی تمام پہلوو¿ں کا باریک بینی سے جائزہ لیتے ہوئے تمام فریقین کو سن کر اپنی سفارشات مرتب کرے تاکہ انصاف کے تقاضے پورے ہوں۔کمیٹی کی اگلی نشست 28 اکتوبر بروز پیر ایک بجے دن اسمبلی کے کمیٹی روم میں منعقد ہوگی۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
پریس ریلیز
کوئٹہ 25اکتوبر :۔حاجی رحمان اللہ مرحوم کی صاحبزادی مولوی عبدالعزیز مرحوم کی بیوہ سمیع اللہ (باخبر)ہدایت اللہ عنایت اللہ رضاءاللہ خان کی ہمشیرہ محمد رفیق ( تعلقات عامہ )محمدحنیف محمد شفیق (فارسٹ)شعیب خان (کمپیوٹر اپر ئٹر تعلقات عامہ) محمد طارق اور محب اللہ کی والدہ طویل علالت کے بعد بقضائے الہیٰ انتقال کرگئیں نماز جنازہ مدرسہ تجوید اقرآن سرکی روڈ پر بعداز نماز عشاءادا کی جاءے گی جبکہ تدفین پشاوری قبرستان اللہ ڈنہ روڈ شالدرہ میں ہوگی فاتحہ خوانی پشتون آباد گلی نمبر اٹھارہ (د درزیانوگل) بالمقابل قبرستان ہوگی ۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
پریس ریلیز
کوئٹہ 25اکتوبر :۔بلوچستان ہاکی ایسوسی ایشن کے زیراہتمام اورڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر و فزیکل ٹیچرز ایسوسی ایشن کے تعاون سے انٹر اسکول ہاکی ٹورنامنٹ 2019 کے سلسلے میں جمعہ کے روز چار میچ کھیلے گئے۔پہلے میچ میں نواب اکبر بگٹی ہائی سکول نے تعمیر نو ماڈل سکول کو 0-1سے شکست دی دوسرے میچ میں جامع ہائی سکول نے صدام ہائی سکول کے خلاف 0-1 سے کامیابی حاصل کی جبکہ تیسرے اور آخری میچ میں وحدت کالونی ہائی سکول نے گورنمنٹ ہائی سکول جان محمد روڈ کو 0-2 سے زیر کیا۔جمعے کے روز کھیلے جانے والے میچز کے مہمانان خصوصی سابق نیشنل پلئیرز اسد نسیم ، عبدالعلی حاتم اور جنرل سیکٹری فزیکل ایجوکیشن عبدالشکور تھے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿

Share With:
Rate This Article
No Comments

Leave A Comment