خبر نامہ نمبر3522/2018
کوئٹہ 24دسمبر :۔ وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے کرسمس کے موقع پر مسیحی برادری کو دلی مبارکباد پیش کی ہے، اپنے ایک تہنیتی پیغام میں وزیراعلیٰ نے کہا ہے کہ حضرت عیسیٰ ؑ کے یوم پیدائش کی مناسبت سے منایا جانے والا یہ دن مسلمانوں کے لئے بھی مبارک ہے اور مسلمان بھی مسیحی برادری کی خوشیوں میں برابر کی شریک ہیں، انہوں نے کہاکہ دنیا بھر کو دہشت گردی اور امن وامان کی صورت میں درپیش سنگین خطرات سے نمٹنے کے لئے حضرت عیسیٰ ؑ کے امن وسلامتی کے پیغام کو عام کرنے کی ضرورت ہے، وزیراعلیٰ نے کہا کہ مسیحی برادری ملک وقوم کی تعمیر وترقی کے لئے اپنی تمامتر صلاحیتیں بروئے کار لارہی ہے اس حوالے سے ان کا کردار قابل تحسین ہے، حکومت مسیحی برادری کے حقوق کے تحفظ کو یقینی بنارہی ہے، ملازمتوں میں اقلیتوں کے لئے مختص کوٹہ پر عملدرآمد کیا جارہا ہے اور مسیحی برادری سمیت ملک اور بلوچستان میں بسنے والی دیگر تمام اقلیتوں کو اپنی مذہبی عبادات کی ادائیگی کی مکمل آزادی حاصل ہے جس کی مثال دنیا بھر میں نہیں ملتی۔ وزیراعلیٰ نے مسیحی برادری پر زور دیا ہے کہ وہ اپنی خوشیوں میں ان افراد کو بھی شریک رکھیں جو کرسمس منانے کی استطاعت نہیں رکھتے اور اپنی عبادات میں ملک وقوم کے استحکام اور خوشحالی کے لئے خصوصی دعائیں مانگیں۔
()()()
خبر نامہ نمبر3523/2018
کوئٹہ 24دسمبر :۔ وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے کہا ہے کہ اس وقت حکومت کی تمامتر توجہ خشک سالی سے متاثرہ علاقوں میں امدادی سرگرمیوں اور غذائیت کی کمی کے مسئلے پر قابو پانے پر مبذول ہے، اس ضمن میں ایک ٹاسک فورس کا قیام عمل میں لایا جارہا ہے جس کی سربراہی وہ خود کریں گے۔ ٹاسک فورس میں عوامی نمائندے، متعلقہ صوبائی اور وفاقی اداروں کے حکام اور ڈونرز اداوں کے علاوہ سول سوسائٹی کی نمائندگی بھی ہوگی تاکہ ایک جامع پالیسی مرتب کی جاسکے، ٹاسک فورس متاثرہ علاقوں میں قلیل مدتی، وسط مدتی اور طویل مدتی منصوبے شروع کرنے کے لئے سفارشات تیار کرے گی جن پر عملدرآمد سے خشک سالی کے اثرات اور غذائیت کی کمی کے مسائل کو دیرپا بنیادوں پر حل کیا جاسکے گا، ان خیالات کا اظہار انہوں نے عالمی ادارہ صحت اور یونیسف کے نمائندوں پر مشتمل وفد سے بات چیت کرتے ہوئے کیا جس نے وفاقی پارلیمانی سیکریٹری نیوٹریشن ڈاکٹر نوشین حامد اور ڈبلیو ایچ او کے ریجنل ایڈوائزر نیوٹریشن ڈاکٹر ایوب الجوالدی(Dr Ayoub Al-jawaldeh) کی قیادت میں ان سے ملاقات کی۔صوبائی وزیر صحت میر نصیب اللہ مری بھی اس موقع پر موجود تھے۔ ملاقات کے دوران صوبے کے مختلف اضلاع میں خشک سالی کی صورتحال اور غذائیت میں کمی کے مسئلے کا جائزہ لیا گیا اور ڈبلیو ایچ او کی جانب سے ان مسائل سے نمٹنے کے لئے صوبائی حکومت کو بھرپور تعاون کی یقین دہانی کرائی گئی، وزیراعلیٰ نے کہا کہ حکومت صحت اور تعلیم کے شعبوں کی بہتری کے ذریعہ عوام کو صحت اور تعلیم کی بہتر سہولتوں کی فراہمی کے لئے ٹھوس بنیادوں پر اقدامات کررہی ہے، ڈویژنل اور ضلعی ہسپتالوں کو فعال کیا جارہا ہے اوران ہسپتالوں میں سرجری کی سہولتوں کا آغاز کردیا گیا ہے، وزیراعلیٰ نے کہاکہ صوبے میں نیوٹریشن ایمرجنسی بھی نافذ کی گئی ہے جبکہ زچہ وبچہ کی شرح اموات پر قابو پانے کے لئے ہنگامی بنیادوں پر اقدامات کئے جارہے، ہیں، انہوں نے کہا کہ عوام کو غذائیت کے حوالے سے آگاہی کی فراہمی بھی ضروری ہے، خشک سالی، غذائیت کی کمی اور زچہ وبچہ کی صحت کے حوالے سے عالمی ادارہ صحت سمیت یونیسف اور دیگر ڈونرز اداروں کی معاونت خوش آئند ہے، حکومت کے متعلقہ ادارے ڈونرز ایجنسیوں سے مکمل تعاون کریں گے۔
()()()

خبر نامہ نمبر3524/2018
کوئٹہ 24دسمبر :۔ وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے کہا ہے کہ قائداعظم محمد علی جناح کے زریں اصول اتحاد، تنظیم اوریقین محکم پاکستان کو ایک مستحکم ریاست بنانے کی بنیاد فراہم کرتے ہیں، ان اصولوں پر عملدرآمد کی جتنی ضرورت آج ہے شاید اس سے پہلے کبھی نہیں تھی، بابائے قوم کے تصور کے مطابق پاکستان میں رواداری، روشن خیالی اور جمہوریت کو فروغ دے کر ہی ہم ا نہیں خراج عقیدت پیش کرنے کا حق ادا کرسکتے ہیں، ان خیالات کا اظہار انہوں نے قائداعظم محمد جناح کے یوم پیدائش پر اپنے ایک پیغام میں کیا ہے، وزیراعلیٰ نے کہا کہ آج وطن عزیز کو جن چیلنجوں کا سامناہے ان سے نمٹنے کے لئے ضروری ہے کہ ہم اپنی صفوں میں مکمل اتحاد برقرار رکھیں اور بابائے قوم کے زریں اصولوں کو اپنا نصب العین سمجھتے ہوئے ان پر عمل پیرا ہوں، انہوں نے کہا کہ پاکستان کے روایتی دشمن نے ہمارے وطن کو عدم استحکام سے دوچار کرنے کی سازشیں شروع کررکھی ہیں، تاہم پوری قوم اتحاد واتفاق کے ذریعہ ان سازشوں کو ناکام بنانے کے لئے پرعزم ہے، وزیراعلیٰ نے کہا کہ ہمارے آباواجداد نے بیش بہا قربانیوں کے بعد یہ ملک حاصل کیا اور بلوچستان سمیت ملک بھر کے عوام ان قربانیوں کو رائیگاں نہیں جانے دیں گے، انہوں نے کہا کہ بابائے قوم کو بلوچستان اور یہاں کے لوگوں سے خصوصی محبت تھی، قیام پاکستان کے بعد بلوچستان کی ریاستوں کی پاکستان میں شمولیت ان کی دیرینہ خواہش تھی جس کے لئے وہ خود بلوچستان تشریف لائے اور یہاں کے اکابرین سے کامیاب ملاقاتیں کیں جن کے نتیجے میں یہ ریاستیں اپنی مرضی اورخواہش کے مطابق پاکستان کا مضبوط حصہ بن گئیں، وزیراعلیٰ نے کہا کہ قائداعظم محمد علی جناح نے اپنی زندگی کے آخری ایام زیارت میں گزارے جو بلوچستان اور یہاں کے لوگوں سے ان کی انسیت کا مظہر ہے، وزیراعلیٰ نے کہاہے کہ آج کے دن ہمیں عہد کرنا چاہئے کہ ہم سیاسی اور گروہی اختلافات کو پس پشت ڈال کر ملک کے استحکام اور قومی اتحاد کے فروغ کے لئے اپنا بھرپور کردار ادا کریں گے اورقائداعظم کے تصور کے مطابق ایک مستحکم جمہوری اور خوشحال پاکستان کی منزل حاصل کرکے رہیں گے۔ 
()()()
خبر نامہ نمبر3525/2018 
کوئٹہ24دسمبر۔صوبائی وزیر خزانہ میر محمد عارف محمد حسنی نے کہا ہے کہ امن و امان کی صورتحال میں بہتری ، جرائم کی روک تھام اور سماجی تحفظ موجودہ صوبائی حکومت کی اولین ترجیحات میں شامل ہیں۔ صوبے میں امن و امان کی صورتحال کی بہتری میں جہاں مختلف سیکیورٹی اداروں کی محنت و کوششیں شامل ہیں وہیں محکمہ پولیس کی خدمات اور قربانیوں سے کوئی انحراف نہیں کرسکتا ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روزا پنے دفتر میں ایڈیشنل آئی جی پولیس چوہدری منظور اور اے آئی جی پولیس سہیل شیخ سے بات چیت کے دوران کیا۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ محکمہ پولیس کو جدید خطوط پر استوار کیا جائے گا اور محکمے کو درپیش مسائل کے حل کیلئے ضروری اقدامات کئے جائیں گے تاکہ پولیس کی کار کردگی میں مزید اضافہ ہوسکے ۔ انہوں نے کہا کہ بلوچستان پولیس و دیگر سیکیورٹی اداروں نے لازوال قر بانیاں دے کر جس جوانمردی سے دہشت گردعناصر کا مقابلہ کرکے اس دھرتی کیلئے اپنے خون کا نذرانہ پیش کیا ہم ان کی اس عظیم قربانی کوسلام پیش کرتے ہوئے انہیں تاحیات یاد رکھیں گے ۔ اس موقع پر ایڈیشنل آئی جی نے صوبائی وزیر کو محکمہ پولیس کی جانب سے کیے جانے والے مختلف اقدامات کے بارے میں آگاہ کیا ۔ جبکہ درپیش مالی مسائل بھی زیر بحث آئے اس موقع پر جبکہ صوبائی وزیر نے انہیں یقین دہانی کرائی کہ وہ محکمہ کو درپیش مالی مسائل کے حل کیلئے ہر ممکن تعاون کریں گے۔
()()()

خبر نامہ نمبر3526/2018 
کوئٹہ24دسمبر۔نیشنل گیمز کے انعقاد کو ممکن بنا ئیں گے ۔ نیشنل گیمز کو منعقد کرکے پیغام دینگے کہ بلوچستان محفوظ ہے یہاں بلا خوف و خطر کھیلوں کے مقابلے و ثقافتی پروگرام اصلاحی پروگرام منعقد ہو رہے ہیں ۔ ان خیالات کا اظہار صوبائی مشیر کھیل و ثقافت عبدالخالق ہزارہ نے گزشتہ روز 40 واں آل ہزارہ باڈی بلڈنگ مقابلے کے دوران کھلا ڑیوں سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ انہوں نے نوجوان کھلاڑیوں پر زو ردیتے ہوئے کہا کہ وہ نیشنل گیمز میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں قومی گیمز کے انعقاد سے نہ صرف صوبے بلکہ ملک کا نام روشن ہوگا انہوں نے کہا کہ ٹیلنٹ کو آگے لے جائیں گے اور کھلاڑیوں کی بھر پور حوصلہ افزائی کی جائے گی تاکہ وہ مزید بہتر کار کردگی کا مظاہرہ کریں انہوں نے باڈی بلڈنگ ایسو سی ایشن کے نمائندوں کو یقین دلایا کہ حکومت صوبے میں باڈی بلڈنگ کی ترقی و ترویج اور کھلاڑیوں کوتربیت کی فراہمی کیلئے بھی مؤثر اقدامات کرے گی۔ 
()()()
خبر نامہ نمبر3527/2018 
کوئٹہ24دسمبر۔پائیدار ترقی کے اہداف کا حصول اکیسویں صدی کی بنیادی ضرورت ہے تاکہ غربت ،تعلیم ، توانائی ، ماحول ، خوراک ، آبادی اور افراد قوت میں اضافے جیسے بنیادی عوامل کا اہداف ممکن ہوسکے ۔ ان خیالات کاا ظہارصوبائی وزیر زراعت انجینئر زمرک خان اچکزئی نے صوبائی اسمبلی میں منعقدہ یو این ڈی پی ( UNDP) کے زیر اہتمام پائیدار ترقی کے اہداف (SDGs) پارلیمنٹری ٹاسک فورس بلوچستان اسمبلی کے ایک روزہ تعریفی ورکشاپ سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ پچھلے پندرہ سال سے ملینیم ڈیو یلپمنٹ (MDGS) اہداف پر خاطر خواہ اہداف پورے نہ ہونے سے مزید پندرہ سال پائیدار ترقی کی اہداف (SDGs) پر کام کرنے کی اشد ضرورت ہے تاکہ بلوچستان میں اسکے مقررہ اہداف جن میں شرح خواندگی میں اضافہ غربت میں کمی ، ماحول کو گرین ہاؤسز گیس سے پاک کرنا ، متوازن غذا کی فراہمی آبادی کو قابو کرنا اور افرادی قوت کو مزید بہتر بنایا جاسکے ۔ انہوں نے کہا کہ کل سترہ مقررہ اہداف ملے جن کا ممکنہ زندگی کو اپنانے میں معاون اور مدد گار ثابت ہوگا۔ ان کے ساتھ ساتھ دیگر ممبران اسمبلی ، فضل آغا سکندر ایڈووکیٹ ، ملک نصیر شاہوانی اختر حسین لانگو نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے پائیدار ترقی کے اہداف کے حصول کو وقت کا اہم تقاضہ کہا اور بلوچستان کی پسماندگی کو ترقی میں بدلنے کیلئے اسے اقوام متحدہ کے اس خصوصی پروگرام کی اہمیت پر سیر حاصل بحث کی ۔ اسکے علاوہ خواتین ممبر صوبائی اسمبلی بلوچستان بشریٰ رند ، ایڈو وکیٹ زینت شاہوانی ، شاہینہ کاکڑ اور فریدہ رند نے بھی اس حوالے سے اپنے خیالا ت کا اظہار کیا ۔ دیگر مقررین میں ذوالفقار درانی ، عارف حسین شاہ ، داؤد نگیال اور سیکریٹری اسمبلی نے بھی ایک روزہ تعریفی ورکشاپ سے اپنے خیالا کا اظہار کیا جس سے پائیدار ترقی کے اہداف کے ممکنہ حصول پر ایک پر یزنٹیشن بھی دی گئی جس کے ذریعے (SDGs)بلوچستان میں اس حوالے سے کار کردگی کا جائزہ پیش کیا گیا۔ 
()()()
خبر نامہ نمبر3528/2018
قلعہ سیف اللہ24دسمبر :۔ اسسٹنٹ کمشنر ریونیوژوب ڈویژن /سیکرٹری ریجنل ٹرانسپورٹ اتھا رٹی حضرت ولی کاکڑ نے کوئٹہ قلعہ سیف اللہ روڈ پر مسافر بسوں کے روٹ پر مٹ ،ڈرائیوروں کے لائسنس ،سرچ بتیاں اور گاڑیوں کی کنڈیشن چیک کیں۔ انہوں نے اس موقع پر گاڑیوں پر لگی سرچ لائیٹس اتروائیں اور ڈرائیوروں کو تاکید کی کہ وہ تیز لائیٹیں استعمال نہ کریں جس سے دوسروں کو تکلیف نہ ہو مالکان کو چاہیے کہ 2006ء سے پہلے ماڈل والی پرانی گاڑیوں کی جگہ نئی گاڑیاں چلائیں انہوں نے کہا کہ حکومت ٹرانسپورٹرز اور مسافروں کو ہر ممکن سہولیات کی فراہمی کو ممکن بنا رہی ہے ۔لورالائی ڈیرہ غازی خان اور لورالائی قلعہ سیف اللہ روڈ کی تعمیر کا کام آخری مراحل میں ہے جس سے ٹرانسپورٹرز اور مسافروں کو سہولیات کی فراہمی میں مدد ملے گی انہوں نے کہا کہ عدالت حالیہ کا ٹرانسپورٹ کے حوالے سے کئے گئے احکامات پر سختی سے عمل درآمد کرایا جائیگا ۔
()()()
خبر نامہ نمبر3529/2018 
نصیرآباد24دسمبر :۔کمشنر نصیرآبادڈویژن عثمان علی خان کاسول ہسپتال ڈیرہ مر ادجمالی کا اچانک دورہ ،چلڈرن وارڈ،ایکسرے روم،آئی پی ڈی،میل وارڈ اور اوپی ڈی سمیت دیگر شعبوں کا معائنہ کیا اورڈاکٹروں سمیت دیگر عملے کی حاضری چیک کی ،ان کے ہمراہ ایم ایس ڈاکٹرایازحسین جمالی بھی تھے جنہوں نے کمشنر کو سول ہسپتال اوردیگر درپیش مسائل کے متعلق آگاہی فراہم کی کمشنر نصیرآباد ڈویژن عثمان علی خان نے کہاکہ فرائض منصبی میں غفلت ہرگزبرداشت نہیں کی جائے گی ڈاکٹرز، پیرامیڈیکل سٹاف سمیت د یگر ملازمین اپنی حاضری کو ہرصورت یقینی بنائیں کوئی کوتاہی پائی گئی تو ان کے خلاف محکمانہ کاروائی عمل میں لائی جائے گی ۔انہوں نے کہاکہ عوام کو صحت کی سہولیات کی فراہمی ہرصورت یقینی بنائی جائے دوردرازعلاقوں سے آنے والوں کوبہترطبی امدادفراہم کی جائے حکومت تعلیم اور صحت سمیت دیگر شعبوں میں مزید بہتری لانے کیلئے تمام وسائل بروئے کارلارہی ہے مختلف وبائی امراض سے بچاؤ کیلئے ہرممکن اقدامات کو یقینی بنایا جارہاہے ہماری بھر پور کوشش ہے کہ وزیراعلیٰ جام کمال خان کی ہدایت کی روشنی میں صوبے کی عوام کو صحت مندانہ سہولیات کی فراہمی کیلئے کئے گئے اقدمات کو عملی جامعہ پہنایا جاررہا ہے تاکہ زیادہ سے زیادہ عوام مستفید ہوسکے اورسرکاری ہسپتالوں میں بہترین سہولیات کی فراہمی ممکن ہوسکے ۔
()()()
پریس ریلیز 
لورالائی24دسمبر :۔صوبائی وزیر صنعت وتجارت حاجی محمد خان طور اتمانخیل ،صوبائی مشیر لائیوسٹاک مٹھا خان کاکڑ،ڈپٹی اسپیکر بلوچستان اسمبلی سردار بابر خان موسیٰ خیل،صوبائی وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی سردار عبدالرحمن کھیتران ،ایم پی اے قلعہ سیف اللہ مولوی نور اللہ ،ایم پی اے دکی سردار مسعود لونی ،ایم این اے سردار اسرار ترین ،ڈپٹی کمشنر لورالائی حبیب الرحمن کاکڑ ،ڈپٹی کمشنر دکی عبدالناصر دوتانی ،ڈپٹی کمشنر بارکھان سہیل ہاشمی ،ڈپٹی کمشنر موسیٰ خیل منیر احمد خان کاکڑ ،ڈپٹی کمشنر ژوب عبدالجبار بلوچ ،ڈپٹی کمشنر قلعہ سیف اللہ سیف اللہ کھیتران ،ڈپٹی کمشنر شیرانی عبدالخالق مندوخیل، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر اعجاز احمد ،ڈائریکٹر ایجوکیشن ملا محمد عمر،ڈپٹی ڈائریکٹر انفارمیشن سید تنویر اختر ، ایکسین پی ایچ ای جہانگیر شاہ ،ایکسین بی اینڈ ار جہانزیب کاکڑ،ایکسین ایریگیشن ایس ای، ارشادعلی جمالی ،ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر جمال الدین اتمانخیل ،ڈپٹی ڈائریکٹر واٹر منیجمنٹ نور محمد غلزئی ، ڈپٹی ڈائریکٹر سوشل ویلفیئر گل محمد کاکڑ ،اسسٹنٹ ڈائریکٹر امیر جان لونی ،ڈسٹرکٹ سپورٹس آفیسر سید ظفر اللہ شاہ ،اسسٹنٹ کمشنر بوری میجر فیاض علی ،اسسٹنٹ کمشنر ریوینو حضرت ولی کاکڑاور دیگر ژوب ڈویژن آفیسران نے کمشنر ژوب ڈویژن بشیر احمد خان بازئی اور سیکرٹری اربن پلاننگ شیر خان بازئی کی والدہ کی وفات پر گہرے دکھ اور غم کا اظہار کرتے ہوئے دعا کی کہ مرحومہ کو اللہ تعالیٰ جنت الفردوس میں جگہ دے اور پسماندگان کو صبر جمیل عطا فرمائے۔ 
()()()

پریس ریلیز 
کوئٹہ 24 دسمبر ۔ وفاقی پبلک کمیشن کے تحت محکمہ موٹروے پولیس میں پیٹرول آفیسر کی خالی آسامیوں کیلئے ٹیسٹ کا انعقاد کیا گیاابتدائی طور پر بلوچستان سے تعلق رکھنے والے مرد / خواتین امیدواروں نے ڈرائیونگ فزیکل اور پیشہ ورانہ مہارت کے ٹیسٹ میں حصہ لیا جس میں 53 مرد اور 10 خواتین امیدوارشامل تھے اسں موقع پر بلوچستان موٹروے پولیس ڈی آئی جی ویسٹ زون عبدالحئی بلوچ اور ایس ایس پی سیکٹر کمانڈر موٹروے پولیس سکھر سرور بھیؤودیگر متعلقہ آفیسران بھی موجود تھے موٹروے پولیس نے یہ ٹیسٹ فیاض سنبھل پولیس لائن ھیڈ کوارٹر میں منعقد کئے جس کے بعد تمام ٹیسٹ کی رپورٹ فیڈرل پبلک کمیشن کو ارسال کئے جائیں گے جو بعد ازاں کمیشن کی ویب سائٹ پر حتمی نتائج شائع کئے جائیں گے۔
()()()
پریس ریلیز 
کوئٹہ 24 دسمبر ۔کیڈ ٹ کالج مستونگ کے سیکنڈ یئر کلا س کے 55 طلباء پر مشتمل ایک وفد کالج کے سینئر پروفیسر ارشاد گل اور ایڈ جو ٹنٹ میجر مسعود احمد کی قیادت میں گزشتہ دنوں آل پاکستان کے مطالعاتی دورے پر اسلام آباد ، ایبٹ آباد ، مری ، لاہور اور ملک کے دیگر حصوں میں گیا اسلام آباد میں طلبات وزیر اعظم پاکستان عمران خان ، بی این پی کے سربراہ اختر جان مینگل پارلیمنٹ ہاؤس اسلامک یونیورسٹی اور دیگر اہم مقامات اور لاہور میں اہم تعلیمی اداروں اور واہگہ بارڈر کا مطالعاتی دورہ کیا لاہور میں طلباء کے ایک وفد گورنر پنجاب سے خصوصی ملاقات کی گورنر کو کالج کی طرف سے شیلڈ پیش کی۔ واپسی پر بہاول پور ،نور محل کا خصوصی دورہ کمانڈنٹ کرنل احسام نے کروایا ارشاد گل نے انہیں کالج کی شیلڈ پیش کی ۔ کیڈٹ کالج مستونگ کے پرنسپل پروفیسر ڈاکٹر غلام حسین سرپرہ کی ہدایت پر تشکیل دیئے جانے والے اس مطالعاتی دورے میں طلباء کے ہمراہ کالج کے اساتذہ پروفیسر ارشاد گل لیکچرر راشد احمد ، ایڈ جوٹنٹ میجر مسعود احمد ، حاجی ممتاز سرپرہ اور نور احمد بنگلزئی شامل تھے ۔ 
()()()

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Post comment