خبرنامہ نمبر3244/2018
کوئٹہ 24نومبر:۔صوبائی مشیر تعلیم حاجی محمدخان لہڑی نے ہفتے کے روز کوئٹہ سمیت ضلع مستونگ اور کچھی کے مختلف سکولوں کا اچانک دورہ کیا۔ ان میں گورنمنٹ گرلز ماڈل سکول پولی ٹیکنیک بی بی زیارت گورنمنٹ ہائی سکول نواب اکبر خان بگٹی سریاب ملز گورنمنٹ بوائز ہائی سکول سپیزنڈ ضلع مستونگ گورنمنٹ بوائز سکول کولپور ضلع کچھی گورنمنٹ گرلز ہائی سکول کولپور شامل ہیں۔اس موقع پر صوبائی مشیر تعلیم حاجی محمد خان لہڑی نے کہا کہ صوبے کی ترقی کیلئے تعلیم نہایت اہمیت کا حامل ہے اور اقوام عالم کے مقابلے میں کھڑے ہونے کے لئے تعلیم کی اہمیت سے انکار ممکن نہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ہمیں ایک بہتر اور مثالی معاشرے کی تشکیل کے لیے تعلیم کے فروغ اور اسکی افادیت کو سمجھنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ موجودہ صوبائی حکومت تعلیم کے معیار میں بہتری اور جدت لانے کے لئے کوشاں ہے۔ اور وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان تعلیم کے شعبے کی ترقی میں خصوصی دلچسپی رکھتے ہیں اس موقع پر انہوں نے بعض سکولوں میں بعض غیر حاضر اساتذہ کے خلاف محکمانہ کارروائی عمل میں لانیکے احکامات بھی جاری کیے۔ دورے کے دوران انہوں نے طلباء سے مختلف سوالات بھی کیے انھوں نے گورنمنٹ گرلز مڈل سکول پولی ٹیکنیک بی بی زیارت کے اسٹاف کو ڈیوٹی پر حاضر پاکر مسرت کا اظہار کیا اور امید اظہار کیا کہ سکول کا عملہ آئندہ بھی ایسی محنت اور اخلاص سے اپنے فرائض سرانجام دیتی رہے گی۔صوبائی مشیر تعلیم گورنمنٹ ہائی سکول نواب اکبر خان بگٹی سریاب ملز کے اچانک دورے کے موقع پر جماعت دہم کے طلباء کے اعزاز میں منعقدہ تقریب میں شریک ہوئے اس موقع پر طلباء نے انہیں اپنے درمیان پا کر خوشگوار حیرت کا اظہار کیا۔ طلباء نے مشیر تعلیم کے ساتھ گروپ تصویریں بھی بنائی اس موقع پر مشیر تعلیم حاجی محمد خان لہڑی طلبا میں گھل مل گئے اور ان سے مختلف امور پر بات چیت کی انہوں نے اپنے پیغام میں طلبہ کو بھرپور محنت، خلوص نیت اور جانفشانی سے اپنی تعلیم جاری رکھنے کی ہدایت کی۔
()()()
خبرنامہ نمبر3245/2018
خضدار24نومبر:۔بلوچستان ریذیڈینشنل کالج خضدار کے تعلیمی سال 2019کے لئے جماعت ہشتم میں داخلوں کا آغاز ہوچکا ہے داخلہ کا اشتہار 10نومبر کے مختلف اخبارات میں شائع ہوچکا ہے پراسپیکٹس اور داخلہ فارم الائیڈ بینک کی مقررکردہ شاخوں میں دستیاب ہیں امیدواروں کی سہولت کے لئے داخلہ فارم کالج کی ویب سائٹ www.brck.edu.pkسے بھی ڈاؤن لوڈ کئے جاسکتے ہیں ویب سائٹ سے ڈاؤن لوڈ کئے جانے والے فارم کے ساتھ مبلغ 2000روپے کا بینک ڈرافٹ بنام پرنسپل قابل ادائیگی الائیڈ بینک خضدار منسلک کریں۔ داخلہ فارم جمع کرانے کی آخری تاریخ 26دسمبر 2018ہے مزید معلومات دفتری اوقات کے دوران فون نمبر 0848 412323.0848 412311پر حاصل کئے جائے سکتے ہیں۔
()()()

خبرنامہ نمبر3246/2018
کوئٹہ 24نومبر:۔صوبائی وزیر پی ایچ ای اینڈ واسا حاجی نور محمد خان دمڑ نے کہا کہ میں اپنے انتخابی حلقے کے عوام اور پورے بلوچستان کی خد مت کرنا اپنا فرض سمجھتا ہوں مجھے اپنے علاقے کے لوگوں کے مسائل کا بخوبی ادراک ہے۔عوام کی حقیقی خدمت کرنا عوامی نمائندوں کا شیو ہ اور ان کے کردار کا مظہر ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے ضلع ہرنائی کے آفیسروں سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہاکہ ہر محکمے کے افیسر کا یہ فرض بنتا ہے کہ اپنے متعلقہ شعبے میں ضلع کے عوام کی مسائل حل کرنے کیلئے شب وروز محنت کریں تاکہ ہمارے لوگوں کے ضلعی سطح پر چھو ٹے چھوٹے مسائل ان کے دیلیز پر حل ہوسکے۔ انہوں نے ضلع ہرنائی کے آفیسروں پر زور دیا کہ لوگوں کے مسائل حل کرنے کیلئے کسی کی کوتائی برداشت نہیں کرینگے۔قبل ازیں صوبائی وزیر حا جی نور محمد خان دمڑ ایک شمو لیتی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بلوچستان عوامی پارٹی کی مقبو لیت میں بہت جلد اضا فہ ہورہا ہے اس لیے لوگ مختلف پارٹیوں کو چھوڑ کر ہماری پارٹی میں شمو لیت اختیار کررہے ہیں۔انہوں نے ضمن میں کہا کہ عوامی نیشنل پارٹی کے گزشتہ انتخابات میں ٹکٹ ہو لڈ ر باقی ترین سینکڑوں ساتھیوں سمیت آج بلوچستان عوامی پارٹی میں شمولیت اختیار کی۔صوبائی وزیر حاجی نورمحمد دمڑ نے اپنے انتخابی حلقے ہرنائی کے دورے کے موقع پر مختلف افراد کے گھرجاکر فاتحہ خوانی بھی کی۔لوگوں کی کثیر تعداد نے عوامی اجتماع میں شرکت پر مسر ت کا اظہار کیا۔
()()()
خبرنامہ نمبر3247/2018
کوئٹہ 24نومبر:۔ صوبائی کابینہ نے صوبے میں انستھیزیسٹ کی کمی پر قابو پانے کے لیے اہم اقدام اٹھا تے ہو ئے 17گریڈ کے ا ستھیزیسٹ کے لیے 10000 روپے اور گریڈ 18 کے لیے 15000 روپے ماہانہ الاؤنس کی منظوری دی ہے واضح رہے کی اسوقت صوبے کے سرکاری شعبہ کے اسپتالوں میں انستھیزیسٹ کی شدید کمی ہے اور آپریشن تھیٹر ہو نے کے باوجود ان اسپتالوں میں انستھیزیسٹ کی عدم موجودگی کے باعث سرجری نہیں کی جا سکتی۔وزیراعلیٰ بلوچستان نے اس صورتحال کی درستگی کے لیے ٹھوس اقدامات کرنے اور ڈاکٹروں کی ٹرانسفر پوسٹنگ کے حوالے سے جا مع پالیسی بنانے کی ہدایت کی ہے۔ انستھیزیسٹ کو اضافی الاؤنس کی فراہمی بھی پالیسی کا حصہ ہے جس سے صوبے کے اسپتالوں میں انستھیزیسٹس دستیاب ہونگے اور عوام کو سرجری کی سہولت انکے علاقوں میں مل سکے گی۔کابینہ نے محکمہ صحت میں انتظامی امور کی احسن طریقے سے ادائیگی کو یقینی بنانے کے لیے بعض دیگر اقدامات کی منظوری بھی دی ہے جن میں گریڈ 19 تک کی ٹرانسفر پوسٹنگ کا اختیار سیکریٹری صحت کو دیا جانابھی شامل ہے صوبائی حکومت کے ان اقدامات کو ڈاکٹروں اور عوام کی جانب سے سراہا جا رہا ہے۔
()()()

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Post comment