خبر نامہ نمبر 1463/2019
کوہلو24اپریل ۔ صوبائی وزیر صحت میر نصیب اللہ خان مری نے اپنے حلقے کوہلو میں کھلی کچہری کا انعقاد کیا جس میں لوگوں نے بڑی تعداد میں شرکت کی صوبائی وزیر نے عوام کے مسائل سن کرانہیں فوری حل کرنے کے لئے احکامات جاری کئے اس موقع پر میر نصیب اللہ مری نے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ عوام کے مسائل حل کرنے کے لئے سنجیدہ اقدامات کررہے ہیں ہماری اولین کوشش ہے کہ عوام کو زندگی کے تمام بنیادی سہولیات میسر ہوں جس کے لئے صوبے میں جام کمال خان کی سربراہی میں حکومت اقدامات کررہی ہے عوام کے مفاد کے لئے مختصر وقت میںاچھے اورمثبت فیصلے کئے ہیں جس سے لوگوں کو روزگار اورعلاقوں میں ترقی آئے گی پاکستان تحریک انصاف صوبے میں مثبت تبدیلی کیلئے کوشاں ہے خود کو عمران کا سپاہی اور عوام کا خادم سمجھتا ہوں ۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبر نامہ نمبر 1464/2019
لورالائی 24اپریل۔صوبائی وزیر صنعت وتجارت حاجی محمد خان طور اتمان خیل نے کہاہے کہ ترقی کے سفر میں تمام علاقوں کو یکساں ترجیح دی جائے گی ۔ عوام کو بلارنگ و نسل وبلا کسی تعصب کے تمام سہولیات فراہم کی جائیگی۔صحت تعلیم پینے کے صاف پانی کی فراہمی کیلئے تمام دستیاب وسائل بروئے کار لائے جارہے ہیں ۔ صوبے میں امن و امان کے قیام کی بدولت ہی معاشرہ ترقی کی طرف گامزن ہوسکتا ہے ۔صوبے میں موجودہ امن و امان قائم رکھنے کیلئے سیکورٹی ادارے مبارکباد کے مستحق ہیںصوبائی حکومت اور سیکورٹی اداروے ایک پیج پر ہیں۔عوام پر بھی یہ ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ سیکورٹی اداروںکے ساتھ ہر ممکن تعاون کو یقینی بنائیں تاکہ ہمارا صوبہ امن کا گہوارہ بن کر ابھرے اور عوام ترقی کے عمل میںبھر پور طریقے سے شامل ہوکر اپنا مثبت کردار اد ا کریں ان خیالا ت کا اظہار انہوں نے لورالائی میں مختلف وفود سے بات چیت کے دوران کیا جنہوں نے صوبائی وزیر سے ان کے دفتر میں ملاقات کی تھی انہوںنے کہا کہ ہم ایسی ترقی چاہتے ہیں جس سے ملک و ملت ترقی کی راہ پر گامزن ہوجائے ترقی کے سفر میں تمام علاقوں کو یکسان ترجیح دی جائے گی اور عوام کو بلارنگ و نسل وبلا کسی تعصب کے تمام سہولیات فراہم کی جائیگی۔عوام کوبنیادی حقوق کی فراہمی حکومت کی آئینی ذمہ داری ہے اور حکومت اپنی یہ ذمہ داری ہر صورت میں پورا کرے گی عوام کو صحت تعلیم پینے کے صاف پانی کی فراہمی کیلئے تمام دستیاب وسائل بروئے کار لائے جارہے ہیں جس کے ثمرات بہت جلد عوام تک پہنچناشروع ہوجائیں گے ا انہوں نے کہاکہ ہماری کوشش ہے کہ ترقی کے سفر میں تمام اضلاع کو ساتھ لے کر آگے بڑے حکومت ان علاقوں پر خصوصی توجہ مرکوز کررہی ہے جنہیں ماضی میں بری طرح نظر انداز کیا گیا انہوںنے کہا کہ عوام نے ہم پر جس اعتماد کا اظہا ر کیاہے اسے قطعا ًٹھیس نہیںپہنچنے دیں گے اور عوام سے کیے گئے تمام وعدوں کی تکمیل کیلئے پوری ایمانداری سے اپنی کوشش جاری رکھیں گے انہوں نے کہا کہ موجودہ صوبائی حکومت عوامی فلاح و بہبود کے تمام منصوبوں کو جلد مکمل کرنے کیلئے ہرممکن اقدامات کر رہی ہے انہوں نے کہاکہ لورالائی شہر میں پینے کے صاف پانی کا 90فیصد مسئلہ حل کر دیا 10فیصد پر کام جاری ہے ،دوسرے مر حلے میں ضلعی ہیڈ کوارٹر ہسپتال میں سہولیات کی فراہمی اورڈاکٹر وں اور اسٹاف کی حاضری کو یقینی بنانا اور ضلع بھر میں مراکز صحت کی بحالی اور تیسرے مرحلے میں تعلیمی اداروں کے حوالے سے اقدامات کریں گے ،تعلیم کے حوالے سے صوبائی وزیر نے کہا کہ والدین اپنے بچوں کو سکولوں میں داخل کروا کر صوبے کی ترقی اور خوشحالی میں اپنا کردار ادا کریں تعلیم پر توجہ نہ دینے کے باعث صوبہ ترقی کی دوڑ میں پیچھے رہ گیا ہیں تعلیم کی بہتری پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا اساتذہ اپنی ڈیوٹی کو یقینی بنائیں صحت کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ ضلع لورالائی ڈسٹرکٹ ٹیچینگ ہسپتال کو جلد فعال کیا جائے گا تاکہ غریب عوام کو صحت کی سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنایا جا سکے مزید ڈاکٹر ز تعینات کر کے اسٹاف کی کمی کو پورا کیا جائے گا ۔صوبائی حکومت تعلیم،صحت وپینے کے صاف پانی اور دیگر بنیادی سہولیتیں فراہم کرنے کیلئے سنجیدہ اقدامات کر رہی ہے تاکہ عوام کو زیادہ سے زیادہ ریلیف ملیں ،انہوں نے کہا کہ اس مرتبہ حلقہ انتخاب کی پسماندگی کو ختم کرنے کیلئے دستیاب وسائل کو بروئے کار لا کر علاقے میں برابری کی بنیاد پر ترقیاتی عمل جاری رکھا جائے گا ۔وزیر اعلیٰ بلوچستان میر جام کمال کی ٹیم میںشامل وزراء،مشران ،پارلیمانی سیکرٹریزصوبے کے عوام کے ساتھ مخلص ہے بلکہ عوام کی مشاورت سے ضلع لورالائی کے غیر ترقیاتی علاقوں کو ترقی میں شامل کریں گے ،ترقیاتی منصوبے عوامی امنگوں کے مطابق شروع کئے جائیں گے تاکہ علاقے کے پسماندگی کا جلد از جلد خاتمہ ممکن ہو سکے ہم عوامی لوگ ہے عوام کی خدمت ہمارا نصب العین ہے ہم نے ماضی میں بھی علاقے کی تعمیر و ترقی علاقے کی خوشحالی عوام کی معیار زندگی کو بہتر بنانے کیلئے ہرممکن کوشش کی ہے جس کی بدولت مسائل کے حل کیلئے ہمیں دوبارہ منتخب کر کے بھیجا تاکہ ہم ان کے مسائل حل کر سکیں۔انہوں نے کہا کہ گزشتہ دور میں بے انصافی کی گئی اور یہاں کے بجٹ کو دوسرے اضلاع میں استعمال کیا گیا جس سے یہاں کے عوام کی حق تلفی ہوئی ،انہوں نے کہا کہ ہم عوامی نمائندے ہیں اور عوام کو جواب دہ ہیں ہر فورم پر ان کے مفادات کی جنگ لڑیں گے ۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبر نامہ نمبر 1465/2019
کوئٹہ 24 اپریل ۔کھیل کسی بھی معاشرے میں نوجوان نسل کی کردار سازی میں اہم کردار ادا کرتے ہیں صحت مند معاشرے کے قیام کیلئے کھیل اور کھلاڑیوں کو سہولیات فراہم کرنا ضروری ہے تاکہ کھلاڑی اپنے صوبے اور ملک کا نام روشن کر سکیں ۔ ان خیالات کا اظہار صوبائی مشیر کھیل و ثقافت عبدالخالق ہزارہ نے بلوچستان فٹبال ایسو سی ایشن کی جانب سے بلوچستان ڈی سرٹیفکیٹ کو چنگ کورس کی اختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ انہوںنے کہا کہ ترقی یافتہ ممالک میں کھیلوں کو بہت زیادہ ترجیح دی جاتی ہے صوبہ میں کھیلوں کے فروغ کے لئے موجودہ حکومت ٹھوس اقدامات اٹھار ہی ہے کھیل کے میدان آباد ہوں گے تو معاشرے میں صحت مند انہ سر گرمیوں کو فروغ ملے گا اور ترقی ہوگی ایک ایسا میکنیزم بنائیں گے جس میں محکمہ کھیل سے منسلک تمام ادارے اس کے پابند ہوں نوجوانوں کے لئے یوتھ پالیسی بنا رہے ہیں تاکہ زیادہ سے زیادہ نوجوان صوبے اور ملک کی ترقی میں اپنا کردار ادا کر سکیں انہوںنے کہا کہ کوشش ہے کہ کھلاڑیوں کے ساتھ ساتھ کو چنگ اسٹاف اور آفیشلز کو بھی اچھی سہولیات فراہم کی جائیں تاکہ ہمیں مزید اچھے کھلاڑی میسر آسکےں ۔ صوبائی مشیر کا مزید کہنا تھا کہ ماضی میں جان بوجھ کر کھیلوں کے میدان ویران کردیئے گئے جس سے معاشرے میں منفی سوچ پر وان چڑھی اور اس کے باعث ہمیں کافی نقصان پہنچا انہوںنے واضح کہا کہ اب ایسا نہیں ہونے دیا جائے گا ماضی میں جنہوں نے کرپشن بد عنوانی اور نا انصافی کرکے جو ظلم کیا اس سے صوبے کو ناقابل تلافی نقصان ہوا میرٹ کی پامالی سے ہر شعبہ متاثر ہوا لیکن ہم کسی کے ساتھ نا انصافی نہیں ہونے دیں گے سب کو انصاف ملے گا ٹیلنٹ کو آگے لے جائیں گے اور کھلاڑیوں کی بھر پور حوصلہ افزائی کی جائے گی۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبر نامہ نمبر 1466/2019
کوئٹہ 24 اپریل ۔ بلوچستان صوبائی اسمبلی کی مجلس قائمہ کمیٹی برائے محکمہ صحت و بہبود آبادی کا اجلاس چیئر پرسن ڈاکٹر ربابہ خان بلیدی کی زیر صدارت منعقد ہوا ۔ اجلاس میں وزراءصوبائی اسمبلی ظہور احمد بلیدی ، محمد عارف محمد حسنی ، زبیدہ خیر خواہ و دیگر متعلقہ آفیسران نے شرکت کی ۔ اس موقع پر اراکین کمیٹی نے بلوچستان اعصابی صحت بل (2019) میں غور و خوض کے بعد مختلف ترامیم کی منظوری دی ۔ مذکورہ بل قبائلی علاقوں کے علاوہ پورے صوبے میں نافذ العمل ہے ۔ وزیر خزانہ و اطلاعات ظہور احمد بلیدی نے محکمہ صحت کودر پیش مالی مسائل کو حل کرنے کی یقین دہانی کی اس بل کا مقصد صوبے میں کمزور اعصابی صحت میں پیش آنے والے واقعات جیسے کہ قتل خودکشی وغیرہ کی ماہرین کی مدد سے وجوہات معلوم کرکے ان کی روک تھام کیلئے اقدامات اٹھانا ہے کمیٹی کی چیئرپرسن ڈاکٹر ربابہ خان بلیدی نے کہا کہ اس بل میں ترامیم کرکے دوسرے صوبوں کیلئے مثالی بنا ئیں گے ۔ بعد ازاں محکمہ صحت کے حکام کو ہدایت کی گئی کہ آئندہ اجلاس میں محکمہ سے متعلق امور کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی جائے جبکہ اراکین کمیٹی بل پرآئندہ اجلاس میں مزید غور و خوض کریںگے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبر نامہ نمبر 1467/2019
کوئٹہ 24 اپریل ۔ سیکریٹری محکمہ ترقی نسواں سائرہ عطا ءنے کہا ہے کہ معاشرے میں خواتین کو بااختیار بنانے، عورتوں پر تشدد کے خلاف اور ان کی ذہنی و معاشرتی بہبود کی بحالی کیلئے خدمات سر انجام دینے، خواتین کو ہر قسم کے تشدد کے خلاف امتیاز ی سلوک برتنے والے تمام فورم کو ختم کرنا اور عارضی طور پر گھریلو تشدد کی شکار خواتین کو طبی و قانونی امداد اور معاشرے میں ہر سطح پر آگاہی فراہم کرنا اشد ضروری ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے صوبائی اسٹینڈنگ کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا ۔ اجلا س میں عورت فا¶نڈیشن کے علا¶ الدین خلجی، یو این وومن سوشل ویلفیئر اور مختلف سماجی تنظیموں کے عہدیداروں نے شرکت کی ۔ سیکریٹری محکمہ ترقی نسواں نے کہا کہ صوبے میں شہید بے نظیر بھٹو وومن سینٹر اینڈ شیلٹر ہوم کوئٹہ سبی اور خضدار میں خواتین کیلئے خدمات سر انجام دے رہے ہیں اور خواتین کو ان کے حقوق کے حصول میں قانونی مدد فراہم کرنے کے ساتھ ساتھ انتہائی راز داری سے ذہنی اور جسمانی تحفظ فراہم کررہے ہیں ۔ خواتین کو ان کے حقوق سے محروم کرنے سے بہت سے معاشرتی مسائل جنم لیتے ہیں خواتین ہماری آبادی کا نصف حصہ ہیں ان کو مالی او ر سیاسی طور پر با اختیار کرنا چاہیئے معاشرے میں خواتین کا کردار بہت اہم ہے وہ زندگی کے ہر شعبے میں انسانیت کی فلاح و بہبود کیلئے کلیدی کردار ادا کررہی ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ خواتین کے حقوق اور ترقی کیلئے ہر فورم پر آوز اٹھائی گئی ہے اور ان کے حقوق کیلئے معاشرے میں آگاہی مہم کی ضرورت ہے تاکہ خواتین کے مسائل ہر سطح پر حل ہو سکیں ۔ اجلاس کے اختتام پر سائرہ عطاءنے تمام شرکاءکا شکریہ ادا کیا اجلاس میں عورت فا¶نڈیشن یو این وومن کے طلحہ ، محمد اشرف ، ریحانہ لہڑی ،رخسانہ بلو چ اور دیگر نے شرکت کی ۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبر نامہ نمبر 1468/2019
خضدار 24اپریل ۔کمشنر قلات ڈویژن حافظ طاہر نے کہاہے کہ ہمارے لئے یہ باعث اطمینان ہے کہ تعلیم بہتر انداز میں پروان چڑھ رہی ہے ،ہماری بچیاں شعبہ تعلیم میںاعلیٰ مقام کمانے کی دوڑ میںشامل ہیں ، جس طرح بیٹیوں کی تعلیمی صلاحیتوں میں نکھا ر آیا ہے جوکہ حوصلہ افزااور خوش آئندہ ہے ، آج بلوچستان میں بھی خواتین مقابلے کے امتحان میں کامیابی حاصل کرکے اعلیٰ عہدوں پر فائز ہورہی ہیں ، حکومت کی جانب سے طالبات میں لیپ ٹاپ کی تقسیم بھی ان کی حوصلہ افزائی کے لئے ضروری جو انہیں دی جارہی ہے،سردار بہادر خان وومن یونیورسٹی خضدار کیمپس کے لئے الگ اراضی مختص کررہے ہیں ، جس پر کام ہورہاہے ان خیالات کا اظہار انہوںنے سردار بہادر خان وومن یونیورسٹی خضدار کیمپس کی طالبات میں وزیراعظم اسکیمات کے تحت لیپ ٹاپ تقسیم کرنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اس موقع پر ایڈیشنل کمشنر ریونیو انجینئر عائشہ زہری ، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر خضدا رعبدالقدوس اچکزئی ، ڈائریکٹر سردار بہادر خان وومن یونیورسٹی خضدار کیمپس مظفر لانگو ، ایلیمنٹری کالج خضدار کی پرنسپل زاہدہ مصطفی ودیگر بھی موجود تھے ۔پرنسپل مظفر لانگو، اسسٹنٹ رجسٹرار فائزہ بی بی، نائمہ نے بھی خطاب کیا ۔ لیپ ٹاپ تقسیم کرنے کی تقریب سے کمشنر قلات ڈویژن حافظ طاہر و دیگر مہمانوں نے 35طالبات میں لیپ ٹاپ تقسیم کیئے ۔اور خواتین اساتذہ میں سرٹیفکیٹ تقسیم کر دیئے ، جب کہ مہمانوں میں شیلڈ تقسیم کردیا گیا ۔لیپ ٹاپ پرائم منسٹر اسکیم کے تحت ہائر ایجوکیشن کمیشن کی جانب سے میرٹ کی بنیادپر طالبات میں تقسیم کیئے گئے ۔سرداربہادر خان وومن یونیورسٹی کیمپس کے اسٹاف منظوراحمد قلندرانی ، عرفان حسن مینگل ، انجینئرمنصوراحمد ، ذیشان عمرانی ، سمیت دیگر اساتذہ اور اسٹاف کے اراکین موجود تھے ۔ کمشنر قلات ڈویژن حافظ طاہرنے کہاہے کہ صوبہ تعلیم ہی کے ذریعے ترقی کرسکتا ہے ، اس کے لئے ضروری ہے کہ تمام طبقات مل کر اپنے کردار کو نبھائیں، میں بچیوں سے کہو نگا کہ وہ تعلیم پر خصوصی توجہ دیں مطالعہ کریں ، اور بھر پور انداز میں تعلیم کی جانب متوجہ ہوں ۔آج ہماری بچیاں پڑھ رہی ہیں اور اعلیٰ صلاحیتوں کے حامل مقام حاصل کرنے میں بھی پیش پیش ہیں ،ہمارے درمیان ایڈیشنل کمشنر ریونیو انجینئر عائشہ زہری بھی موجود ہیں ،اور وہ آپ بچیوں کے لئے رول ماڈل ہیں جنہوں نے کافی محنت کی اور آج اس مقام تک پہنچی ہیں لہٰذا آپ لکھیں پڑھیں اور اپنی صلاحیتوں کو مزید اجا گر کریں انہوںنے کہاکہ حکومت طالبات کی سرپرستی کرکے انہیں نہ صرف تعلیم کے مواقع مہیا کررہی ہے بلکہ ان کی حوصلہ افزائی کرکے انہیں لیپ ٹاپس کی سہولت دے رہی ہے اور حکومت کی جانب سے یہ اقدامات مستقبل میں بھی اسی طرح جاری رہیں گی۔انہوںنے کہاکہ سردار بہادر خان وومن یونیورسٹی خضدار کیمپس کے لئے الگ اراضی مختص کررہے ہیں ، جس پر کام ہورہاہے ،تاکہ خضدار میں اس جامعہ کو مستقل بنیادوں قائم کرکے یہاں مزید تعلیم عام کی جائے ۔پرنسپل سردار بہادر خان وومن یونیورسٹی خضدار کیمپس مظفرخان لانگو نے کہاہے کہ سردار بہادر خان وومن یونیورسٹی خضدار کیمپس اس ریجن کی نئی نسل کے لئے ایک بنیادی تعلیمی مرکز ہے،نئی نسل کو خضدار میں تعلیم مل رہی ہے ، اور یہاں کئی طالبات کو اسکالر شپ بھی مل رہی ہے انشاءاللہ ہمارا مستقبل روشن اور تابناک ہے ایک پڑھی لکھی نئی نسل تیار ہوگی ، اس ادارے میں معیار و میرٹ بلند وبالا ہوگا ۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبر نامہ نمبر 1469/2019
ؒ لورالائی 24اپریل۔ڈپٹی کمشنرلورالائی کاشف نبی نے اپنے عہدے کا چارج سنبھال کر کام شروع کردےا ۔انہوں نے چارج سنبھالنے کے بعد ڈپٹی کمشنر آفس کے افسران و اہلکاروں سے ملاقات کی ۔ اس موقع پر انہوں نے افسران اور اہلکاروں کو ہدایت دیتے ہوئے کہا کہ وہ وقت کی پابند کریں اور سرکاری فرائض میں غفلت کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی تمام ملازمین اپنی حاضری کو یقینی بناتے ہوئے لوگوں کے مسائل کو جلد از جلد حل کرنے کیلئے اقدامات کریں تاکہ عوام کا سرکاری اداروں اور امور پر اعتماد بحال ہوسکے سرکاری ملازمین عوام کے خادم ہوتے ہیں ۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبر نامہ نمبر 1470/2019
لورالائی 24اپریل۔گزشتہ ادوار میں اقتدار کیلئے حکمرانی کیلئے جہاں جنگیں شدومد سے کی جاتی تھیں تو ایسے ہی حملوں ،قبضوں کے دوران کتاب خانوں ، لائبریریوں پر قبضے کو بھی بنیادی اور گزیر گردانا جاتا تھا اس عمل سے کتاب کی طاقت کی اہمیت کا اندازہ لگایا جا سکتا ہے کتاب قومی اقدار میں کلیدی حیثیت کاحامل ہے۔ کتابوں کی اقدار قوموں کیلئے اہم ہوا کرتی ہے اور بنیادی اقدار کو بذریعہ علم ہی جانا جاتا ہے اور علم کے عمل میں کتاب کا سہارا لیا جاتا ہے ،علم کیلئے کتب کے مطالعہ کا عمل لازم وملزوم ہے۔ مدارس ،سکول ،کالجز یقینا طالبعلم کوعلم کی دہلیز پر لا کھڑا کرتے ہیںاور پھر شوق ،ذاتی لگن ،جذبے سے مطالعہ کے ذریعے علمی ارتقائی عمل عروج کی طرف لے جانا ہوتا ہے اور کتاب بینی کے ذریعے ذہنی جمود کو توڑا جاتا ہے۔ ان خیالات کا اظہار بلوچستان انسٹیٹیوٹ آف آئی ٹی اینڈ مینجمنٹ سائنسز لورالائی کے ریکٹر انجینئر سید اورنگ زیب نے ادراہ اہذا میںکتب بینی کے عالمی دن کی مناسبت سے منعقد ہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوںنے کہا کہ کتب بینی کا عالمی دن ہر سال منایا جاتا ہے کتاب اور انسان کا ایک قدیم تعلق ہے اور عصر حاضر میں کتب بینی کی روایات دم توڑتی جا رہی ہے ،کتاب کی اہمیت سے کسی صورت انکار نہیں کیا جا سکتا ،آج انٹرنیٹ کو کتاب بینی کے خاتمے کا موجب قرار دیا جا رہا ہے مگر ایک حقیقت یہ بھی ہے کہ انٹر نیٹ نے ہی تما م کتب کو انسان کی دہلیز پر پہنچا دیا ہے استعفادہ کرنا ہمارا کام ہے کتب بینی اور اشاعت کتب کیلئے کام کرنے والے لوگوں کا وجود کسی نعمت سے کم نہیں ،تقریب سے سید ظاہر شاہ اور محمد انور لون نے بھی خطاب کیا اور کتاب اور کتب بینی کی اہمیت پر روشنی ڈالی۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبر نامہ نمبر 1471/2019
پشےن24اپریل۔ ڈپٹی کمشنر میجر (ر) اورنگزیب بادینی نے کہا کہ ضلع پشےن میں قیام امن کی صورتحال تسلی بخش ہے اس میں خلل ڈالنے والوں کو معاف نہیں کیا جائیگا آفیسران عوام کے خادم ہیں حاکم نہیں ضلع میں سرکاری مشینری عوامی فلاح و بہبود کیلئے استعمال میں لایا جائے سرکاری کاموں میں سست روی قبول نہیں ہے سرکاری ملازمین کو ڈیوٹی ہر حال میں کرنی ہوگی غفلت برتنے والوں کو کوئی رعایت نہیں دی جائیگی سفارش کلچر کا دور گزر گیا عوام کی جان ومال کی تحفظ سمیت انہیں ہر حال میں ساتھ دینا ہوگاان خیالات کا اظہار انہوں نے تمام محکموں کے ذمہ داران کے اعلیٰ سطحی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر اے ڈی سی (جنرل) امین اللہ ناصر اے ڈی سی (ر) فیصل فہیم یوسفزئی اسسٹنٹ کمشنر عارف زرکون کے علاوہ دیگر ضلعی افسران بھی موجود تھے ۔ڈپٹی کمشنر اورنگزیب بادینی نے کہا کہ محکمہ تعلیم میںغیر حاضر اساتذہ سے اٹھارہ لاکھ روپے کٹوتی پر محکمہ تعلیم داد کے مستحق ہے سرکاری اراضیوں پر قبضہ سے متعلق تفصیلات طلب کرلی گئی جس کے خلاف کارروائی کی جائیگی اور سرکاری کوارٹروں میں غیر سرکاری اشخاص کا قبضہ کسی صورت قبول نہیں بلکہ سرکاری کوارٹروں کو قبضہ ختم کرکے متعلقہ محکموں کے سپردکیا جائے گا محکمہ صحت سے اکثر شکایات ملتی ہے کہ محکمہ صحت کی اراضی پر بھی قبضہ ہوا ہے جس پر خاموش نہیں رہیں گے ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ نیشنل ایمرجنسی ہے پولیو ایک ناسور اور خطرناک مرض ہے جسکی تدارک کیلئے ہر طبقہ کر کو کردار ادا کرنا ہوگاعوام اپنے بچوں کو پولیو کے قطرے ضرور پلائیںمہم میں خلل ڈالنے والوں کیخلاف فوری کارروائی ہوگی ڈپٹی کمشنر نے تمام محکموں سے مشینری اور حاضر و غیر حاضر ملازمین کی رپورٹ طلب کرلی گئی ضلع پشےن کے وہ سرکاری دفاتر جن کی دیواروں پر وال چاکنگ کی گئی ہو وہ کسی رعایت کے مستحق نہیں سرکاری گاڑیاں کسی ذاتی ملکیت نہیں انہیں استعمال میں لایا جائے انہوں نے کہا کہ جن محکموں میں مرمت کے کاموں کی ضرورت ہو وہ ہمیں مرمت سے متعلق تحریری طور پر آگاہ کریں جسکی بناءپر متعلقہ محکموں کے اعلیٰ حکام سے مرمت کی مد میں رقم مختص کیا جائیگا سرکاری کاموں میں کوتاہی برداشت نہیں کریں گے انہوں نے کہا کہ تمام محکموں کے آفیسران ہم میں سے ہیں کوئی بھی آفیسر اپنے آپکو تنہا ءنہ سمجھے لیویز اور پولیس دونوں تحفظ دینے کا نام ہے جو ہر فورم اور مشکل میں آپکے ساتھ رہیں گے ڈپٹی کمشنر کی بی اینڈ آر کو انڈر کنسٹرکشن اسکیمات کو فوری مکمل کرنیکی ہدایت کرتے ہوئے تمام محکمے کو نامکمل اسکیمات کی تفصیل دینے کی ہدایت کردی انہوں نے اجلاس میں چند محکموں کے آفیسران کی غیر حاضری پر برہمی کا اظہارکیا۔ انہوں نے کہا کہ آفیسرز کلب کا قیام کا مقصد سرکاری آفیسران کی جسمانی فٹنس میں بہتری اور انکی موجودگی یقینی بنانا ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
پریس ریلیز
کوئٹہ 24 اپریل ۔ سراج منیر ویلفیئر ٹرسٹ کے زیر اہتمام محفل قرات کے سلسلے میں فائنل آج مورخہ 25/4 کو خانہ فرہنگ ایران کلچر سینٹر میں شام 5 بجے ہوگا۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Post comment