خبر نامہ نمبر 3514/2018
کوئٹہ 22 دسمبر۔وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے کہا ہے کہ حکومت صوبے کے بے روزگار انجینئرز کو روزگار کی فراہمی کے لیے اپنا کردار ادا کرے گی، سرکاری محکموں کے علاوہ صوبے میں قائم صنعتوں اور تعمیراتی شعبے میں کام کرنے والی کمپنیوں کو صوبے کے انجینئرز کو روزگار کی فراہمی کا پابند کیا جائیگا، ان خیالات کا اظہار انہوں نے بلوچستان انجینئرز ایسوسی ایشن کے وفد سے بات کرتے ہوئے کیا جس نے ایسوسی ایشن کے صدر عادل نصیر کی قیادت میں ان سے یہاں ملاقات کی، صوبائی وزراء میر اسد اللہ بلوچ، مٹھا خان کاکڑ اور اراکین اسمبلی میر اکبر آسکانی، اختر حسین لانگو اوردنیش کمار بھی اس موقع پر موجود تھے، وفد نے محکمہ مواصلات و تعمیرات سمیت دیگر تعمیراتی محکموں میں سینئر انجینئرز کی آسامیوں پر میرٹ کے مطابق سینئر انجینئرز کی تعیناتی پر وزیراعلیٰ کا شکریہ ادا کیا، وزیراعلیٰ نے کہا کہ حکومت تعمیراتی محکموں سمیت دیگر تمام اداروں میں گورنس کے ذریعے بہتری لانا چاہتی ہے، صوبے میں جاری تعمیراتی اور ترقیاتی عمل میں انجینئرز کا اہم کردار ہے، انہوں نے انجینئرز پر زور دیا کہ وہ ترقیاتی منصوبوں کو معیار کے مطابق مقررہ مدت کے اندر مکمل کریں تاکہ وسائل کا ضیاع نہ ہو اور عوام تک ان منصوبوں کے ثمرات پہنچ سکیں، وزیراعلیٰ نے کہا کہ حکومت صوبے کے معدنی و دیگر وسائل کی ترقی کے لیے جامع منصوبہ بندی کر رہی ہے، جس سے سرمایہ کاری اور صنعت کاری کو بھی فروغ ملے گا اور ان شعبوں میں انجینئرز کے لیے روزگار کے مواقع میسر ہونگے، گذشتہ روز بلوچستان منرلز ریسورس ڈویلپمنٹ بورڈ کا اجلاس منعقد کیا گیا ، جس میں معدنی شعبہ کی ترقی کے لیے اہم فیصلے کیے گئے، انہوں نے کہا کہ ڈپلومہ ہولڈر انجینئرز کے لیے انٹرن شپ کے مواقع بھی پیدا کئے گئے ہیں جس سے انہیں تجربہ حاصل ہوگا اور وہ بڑی کمپنیوں میں روزگار حاصل کرنے کے قابل ہو سکیں گے، انہوں نے کہا کہ حکومت سکل ڈویلپمنٹ کے ذریعے ہنر مند افرادی قوت میں اضافہ کرنا چاہتی ہے اس مقصد کے لیے بلوچستان سکل ڈویلپمنٹ کمپنی کا قیام عمل میں لایا جارہا ہے، جبکہ ووکیشنل ٹریننگ انسٹی ٹیوٹس کو بھی فعال کیا جا رہا ہے۔ 
()()()

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Post comment