خبرنامہ نمبر 1466/2019
کوئٹہ 22اپریل۔وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے اقوام متحدہ کے عالمی یوم کتب کے موقع پر سردار بہادر خان وویمن یونیورسٹی کو15لاکھ روپے کی گرانٹ کے اجراءکی منظوری دی ہے، یہ گرانٹ (پان ہیومینیٹی) ادارے کی جانب سے سردار بہادر خان وویمن یونیورسٹی کی لائبریری کے لئے تحفتہً فراہم کی جانے والی 30ہزار کتابوں کے کراچی پورٹ سے یونیورسٹی تک لانے کے اخراجات اور عالمی یوم کتب کے موقع پر تقریب کے انعقاد کی مد میں خرچ کی جائے گی۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر 1467/2019
کوہلو22اپریل۔ صوبا ئی وزیرصحت میر نصیب اللہ خان مری ہیڈ کوارٹر ہسپتال کوہلو کے دورے پر پہنچ گئے جہاں انہوں نے بچے کو پولیو کے قطرے پلا کر ضلع میں تین روزہ پولیو مہم کا افتتاح کیا ہے اس موقع پر ڈپٹی کمشنر کوہلو عبداللہ خان کھوسہ ،ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر ڈاکٹر شیر زمان مری ،ایم ایس ڈاکٹر عطااللہ مری ،پی پی ایچ آئی کے ڈی ایس ایم رفیق بزدار،میر نثار احمد مری و دیگر موجود تھے بعدازاں صوبائی وزیر نے ہسپتال کے مختلف شعبوں کا تفصیلی معائنہ کیا اور مریضوں کی عیادت کی ہے اس موقع پر صوبائی وزیر صحت میر نصیب اللہ خان مری نے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ کوہلو ہسپتال سمیت صوبے کے تمام ہسپتالوں کو فعال کیا ہے جہاں ادویات اور اسٹاف کی کمی تھی فوری اقدامات کرکے دور کیئے ہیں جبکہ اس حوالے سے مزید کام کیا جارہا ہے صوبے میں صحت اور تعلیم کی بنیادی سہولیات ہر شخص تک پہنچانے کی کوشش کررہے ہیں کیونکہ تعلیم اورصحت ہر شخص کی بنیادی ضرورت ہے بلوچستان کے اکثر ڈویژنل ہسپتالوں میں مریضوں کے آپریشن سسٹم20سال کے بعد فعال کیا ہے جلد صوبے کے دیگر ہسپتالوں کا دورہ کرکے مسائل دور کروں گا ہماری اولین ترجیح ہے کہ لوگوں کو بنیادی سہولیات میسر ہوں میر نصیب اللہ مری کا کہنا تھا کہ بلوچستان حکومت میں کوئی تبدیلی نہیں ہوگا البتہ چند محکموں کی کارکردگی بہتر نہ ہونے سے اُن کے سربراہان تبدیل ہوسکتے ہیںوزیر اعظم عمران خان اور وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کے ویژن کے مطابق بلوچستان میں ترقی کا سفر تیزی سے آگے بڑھ رہا ہے غیر حاضر اساتذہ اور ڈاکٹروں کے خلاف کارروائی ہوگاکوہلو میں سیلاب سے جو نقصان ہوا ہے سروے مکمل کرکے متاثرین کو جلد امداد بلاتفریق فراہم کیا جائےگا سیلاب کے دوران ضلعی انتظامیہ اور کوہلو کے صحافیوں نے اہم کردار ادا کیا ہے ہر مشکل وقت میں انشااللہ اپنے لوگوں کے ساتھ کھڑا ہوں گا۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر 1468/2019
کوئٹہ22اپریل ۔چیئر پرسن مجلس عمومی برائے قوائد انضباط کار و استحقاقات شاہینہ کاکڑ نے کہا ہے کہ معزز اراکین بلوچستان اسمبلی کو حاصل استحقاق سے متعلق آگاہی سے ہی معزز اراکین م¶ثر طریقے سے قانون سازی میں حصہ لے سکتے ہیں اور ان کو تفویض شدہ کام کی سر انجام دہی میں کوئی رکاوٹ پیش نہیں آئی گی ان خیالات کا اظہار انہوں نے کمیٹی کے منعقدہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا اجلاس میں رکن صوبائی اسمبلی زینت شاہوانی اور بلوچستان صوبائی اسمبلی کے اعلیٰ حکام نے بھی شرکت کی انہوںنے کہا کہ معزز اراکین کو چاہیئے کہ اپنے استحقاق سے متعلق علم و آگاہی حاصل کریں تاکہ اسمبلی کی کارروائی میں نمایاں کردار ادا کرسکیں اور آئینی امور سے متعلق بحث و مباحثہ میں کوئی دشواری درپیش نہ ہوانہوں نے کہاکہ کبھی بھی رکن اسمبلی کو اگر کوئی آئینی مسئلہ در پیش ہو اور اسمبلی کی کارروائی میں ان کو اس مسئلے پر بحث کیلئے وقت نہ ملے تو ایسے آئینی مسئلے کو کمیٹی کے رو برو زیر غور لانا چاہیئے تاکہ ان کی داد رسی ہوسکے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر 1469/2019
کوئٹہ 22اپریل۔بلوچستان ہائی کورٹ کے حکم پرکمشنر کوئٹہ ڈویژن اور سیکریٹری آر ٹی اے کوئٹہ کی ہدایت کی روشنی میں کوئٹہ شہر میں غیر قانونی ،جعلی اور دو نمبر رکشوں کے خلاف کریک ڈا¶ن کرتے ہوئے یونیورسٹی چوک سریاب روڈ ،بی ایم سی بروری روڈ ا ورفیصل ٹا¶ن میں 35 غیر قانونی رکشہ تحویل میں لے کر ٹریفک پولیس کے حوالے کرکے بندکردیئے گئے اور مختلف نوعیت کے 107 سے زائد رکشوں کے چالان بھی کیے گئے کارروائی کے موقع پر سپرنٹنڈنٹ آر ٹی اے کوئٹہ حمیداللہ محمد حسنی ، انسپکٹر ٹریفک پولیس غلام رسول کے علاوہ پولیس اور لیویز کا عملہ بھی موجودتھا سپرنٹنڈنٹ آر ٹی آے کوئٹہ نے کہا کہ یہ کارروائیاں بلوچستان ہائی کورٹ کے حکم، کمشنر کوئٹہ ڈویژن عثمان علی خان اور سیکرٹری آر ٹی اے کوئٹہ روحانہ گل کاکڑ کی ہدایت سے آئندہ بھی جاری رہیں گی لہٰذاتمام رکشہ ڈرائیوروں کو تنبیہ کی جاتی ہے کہ وہ اپنے اصل دستاویزات ہمراہ رکھیں تاکہ دوران چیکنگ پیش کیے جاسکیں بصورت دیگرقانونی خلاف ورزی پر انکے خلاف قانونی چارہ جوئی عمل میں لائی جائیگی اور رکشہ بھی بند کر دیا جائے گا۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر 1470/2019
کوئٹہ22اپریل ۔ ڈپٹی کمشنر جعفر آباد کے ایک اعلامیہ کے مطابق امداد علی ولد حق نواز پتہ شہید مراد کالونی ڈیرہ اللہ یار جھٹ پٹ جعفر آباد کا لوکل سر ٹیفکیٹ نمبر 749/LC/GB تاریخ اجراء07 اگست 2017 انکی اپنی درخواست پر منسوخ کیا جاتا ہے ۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر 1471/2019
کوئٹہ22اپریل ۔ محکمہ سماجی بہبود حکومت بلوچستان کے ایک اعلامیہ کے مطابق عصمت مشتاق زوجہ محمد مشتاق خان پرنسپل ریجنل ٹریننگ انسٹی ٹیوٹ کوئٹہ عمر کی بالائی حد تک پہنچنے پر 29 جولائی 2019 کو ریٹائرڈ ہوجائیں گی۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر 1472/2019
خضدار22اپریل ۔ڈپٹی کمشنر خضدار میجر (ر) محمد الیاس کبزئی نے کہاہے کہ خضدار میں صحت کی سہولیات کے لئے دستیاب وسائل کے اندررہتے ہوئے اقدامات اٹھارہے ہیں ،جس سے عوام کو فوری طبی امداد ملے گی ، خضدار میں ٹراما سینٹر کے قیام کی بنیاد رکھی گئی ہے جس کے تکمیل سے خضدار میں علاج معالجے کے نیا مرکز کااضافہ ہوگا ، خضدار میں قومی شاہراہ کے ساتھ ڈویژن پبلک کالج خضدار کے سامنے دوکروڑ سے زائد لاگت سے ٹراماسینٹرتعمیر کیا جارہا ہے جس کی تعمیر پر تیزی کے ساتھ کوششیں جاری ہیں ، ہماری کوشش تھی کہ خضدار کے عوام کی اس دیرینہ تمنا پوری کی جائے خضدار ویسے بھی شاہراہوں کے سنگم پر واقع ہے جہاں سے روزانہ ہزاروں گاڑیاں اندرونی بلوچستان ، سندھ اور کراچی کے لئے سفر کرتے ہیں اور حادثات پیش آنے کی وجہ سے فوری طبی امدادی مرکز کی بے حد ضرورت تھی تاہم اب ٹراما سینٹر کی صورت یہ ضرورت بھی پورے ہونے کو ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے میڈیا نمائندگان سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ ڈپٹی کمشنر خضدار میجر (ر) محمد الیاس کبزئی کا کہنا تھا کہ چند ہفتے قبل چیف سیکریٹری بلوچستان نے بھی ٹراما سینٹر کا معائنہ کرکے انہوں نے ٹراما سینٹر کے قیام پر خوشی اور اطمینان کا اظہار کیا تھا ، میں از خود ٹراما سینٹر کی تعمیر کا معائنہ کررہاہوں ا ور میری کوشش ہے کہ یہ معیاری انداز میں مکمل ہو اور طبی مرکز سے ہنگامی صورت میں عوام کو فائدہ ملے۔انہوں نے کہاکہ خضدار صوبے کا مرکزی ضلع ہے یہاں آبادی بھی کافی بڑھ چکی ہے جب کہ مصروف شاہراہوں کی وجہ سے خضدار میں آمدورفت میں بھی کافی حد تک اضافہ ہوچکاہے ، اس لیئے حادثات کی صورت میں مریضوں کو فوری علاج اور ان کی جان بچانے کے لئے اقدامات کی بے حد ضرورت تھی اور اس ضرورت کو پانے کے ہم قریب پہنچ چکے ہیں ، ٹراما سینٹر سے عوام کو بے حد فائدہ پہنچے گا انہوں نے کہاکہ صوبائی حکومت عوام کو علاج و معالجے کی سہولیات کی فراہمی کے لئے دستیاب وسائل کے اندررہتے ہوئے اقدامات اٹھارہی ہے حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ جو ہیڈ کوارٹرز ہسپتال ہیں ان کی ادویات کے کوٹے میں اضافہ کیا جائے اور ان ہسپتالوں میں بنیادی سہولیات فراہم کیئے جائیں۔ اس سلسلے میں بھر پور اقدامات اٹھائے جارہے ہیں۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر 1473/2019
گوادر 22اپریل ۔ تبلیغی اجتماع کی تیاریوں کے حوالے سے کمشنر مکران کیپٹن (ر) طارق زہری کی زیر صدارت ایک اہم اجلاس ڈپٹی کمشنر گوادرکے آفس میں منعقد ہوا۔ اجلاس ڈپٹی کمشنر گوادر کیپٹن ر محمد وسیم ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ریونیو میجر ر فیاض علی سمیت تبلیغی اجتماع کے منتظمین نے شرکت کی اجلاس میں تبلیغی اجتماع کے تیاریوں سے متعلق مختلف امور پر تبادلہ خیال کیا گیا اور تمام انتظامات کو حتمی شکل دے دی گئی اجلاس میں کہاگیا تبلیغی اجتماع میں قافلوں کی صورت میں پہنچنے والی گاڑیوں کی آمدورفت اورپارکنگ کیلئے جامع ٹریفک پلان مرتب کیا گیاہے تاکہ کسی بھی جگہ ٹریفک کا مسئلہ نہ ہو۔ پارکنگ اسٹینڈز کے علاوہ کہیں پارک کرنے کی اجازت نہیں ہوگی۔اجلاس میں بتایا گیا کہ اس سے پہلے گوادر اجتماع 2012کو منعقد ہوا اور اس سال گوادر اجتماع کی تاریخ کااعلان راونڈ اجتماع جنوری 2019کو کیا گیا تھا۔ اجلاس کے شرکاء نے سائٹ کا دورہ بھی کیا اور فیصلہ ہوا کہ پولیس سیکیورٹی پلان تیار کرے گا جس میں مطلوبہ تعداد میں اہلکار اور افرادی قوت مہیا کیا جائے گا تا کہ متوقع 50ہزار کے لگ بھگ شرکاءکو بہتر سہولیات فراہم کی جاسکےں۔ ضرورت کی تحت مز ید اہلکار آئی جی آفس سے طلب کیا جا ئے گا۔ خاصادار یا رضاکار سیکیورٹی جو اجتماع شورا کی جانب سے تعینات کیے جاتے ہیں وہ ان تمام افراد کا رجسٹریشن کیا جا ئے گا اور پولیس کی جانب سے انہیں آئی ڈی کارڈ ایشو کئے جائیں گے۔ اجلاس میں موٹروے پولیس کو بھی ہدایت کی گئی کہ وہ اس خاص سرگرمیوں کے دوران اپنی گشت کو مزید وسعت دیں اور اور گشت کو بڑھائیں مقامی پولیس اور لیویز اہلکاروں کے ساتھ رابطہ کر کے دن اور رات کے مختلف شفٹ کا پلان بنائیں تا کہ اس موقع پر رش کہ وجہ سے مختلف حادثات کی روک تھام کیا جاسکے کیونکہ اس طرح کے موقعوں پر شاہراہوں پراکثر حادثات رونما ہوتے رہے ہیں، جو وی آئی پی اور علماءحضرات کوسٹل آئی وے سے اجتماع میں شرکت کے لئے آ رہے ہیں انہیں بزی ٹاپ سے اجتماع گاہ تک آنے اور جانے پر اے ٹی ایف سیکیورٹی پروٹوکول دیا جائے گا جس کے لئے تمام پٹرولنگ گاڑیاں اپنی فرائض کو مکمل ذمہ داری کے ساتھ سر انجام دیں۔ اجتماع گاہ کے اندر کسی قسم سلینڈر، سلینڈر گیس لے جانے کی اجازت نہیں ہوگی اور داخلی راستوں پرمامور اہلکاروں کو تنبہ کیا گیا کہ کہ وہ اجتماع گاہ کے اندر ایسے کسی قسم کا کوئی چیز اندر لے جانے نہ دیں جو نقصان کا باعث بنے تبلیغی اجتماع کی سختی سے نگرانی کرے تاکہ کسی بھی قسم ناخوشگوار واقعہ پیش نہ آئے۔ ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر کو ہدایت کی گئی کہ وہ اجتماع گاہ اور ہائی ویز پر کیجولٹی اور میڈیکل ایڈ سنٹر کے قیام کا منصوبہ بندی کریں ضرورت کے تحت اضافی ایمبولینس تربت اور گوادر سے طلب کریں۔ جبکہ اجتماع گاہ میں فائر برگیڈ کا عملہ نیوی کی سہولیات کے ساتھ ہر وقت تیار رہیں گے۔ 25 اپر یل کواجتماع کی اختتام اور دعا 9 بجے تک یقینی بنایا جائے تا کہ وہ وقت پر اختتام پذیر ہو سکیں تا کہ دودراز سے آئے ہوئے لوگ طلوع آفتاب سے اپنی سفر کا اہتمام کر سکیں۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر 1474/2019
نصیر آباد 22اپریل۔کمشنر نصیرآباد ڈویژن جاوید اختر محمود نے بچوں کو پولیو کے قطرے پلا کر نصیر آباد ڈویژن میں انسداد پولیو مہم کا باقاعدہ آغاز کر دیا اس موقع پر ڈی ایچ او نصیرآبادعبد المنان لا کٹی ایم ایس ڈاکٹر ایاز حسین جما لی ڈبلیو ایچ او کے ایریا کوآرڈینیٹر ڈاکٹر رفیق گھنیہ این ایس آفیسر ڈاکٹر عبدالغفار سولنگی اے ڈی سی عبدالحمید تھہیم ڈاکٹر منظور احمد ابڑو سمیت دیگر ڈاکٹرز موجود تھے اس موقع پر کمشنر نصیرآباد ڈویژن جاوید اختر محمود نے کہا کہ پولیو کے خلاف جاری جنگ میں ہمیں بڑھ چڑھ کر حصہ لینا ہے تاکہ اس موذی اور خطرناک مرض کو جڑ سے ختم کیا جائے جو ہمارے بچوں کو عمر بھر کی معذوری میں مبتلا کر رہا ہے صوبائی حکومت پولیو کے خاتمے کے لیے اپنے تمام وسائل برو ئے کار لا رہی ہے ہم سب پر لازم ہے کہ ہم مل کر پولیو کی جنگ میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں اس میں کسی قسم کی کوتاہی یا لاپرواہی ہرگز برداشت نہیں کی جائے گی کیونکہ یہ ہمارے ملک کے مستقبل کا سوال ہے پولیو کے ورکرز اس مہم کو کامیاب بنانے کے لیے کوئی کسر نہ چھوڑیں حکومتی سطح پر ان کی بھرپور حوصلہ افزائی کی جائے گی بعد ازاں کمشنر نصیرآباد ڈویژن جاوید اختر محمود نے سول ہسپتال ڈیرہ مراد جمالی کے مختلف شعبہ جات کا دورہ کیا ایم ایس سیول اسپتال ڈاکٹر ایاز حسین جمالی نے انہیں اسپتال کے درپیش مسائل کے متعلق آگاہ کیا کمشنر نے کہا کہ صحت کی سہولیات کی فراہمی کے لیے کوئی کسر نہ چھوڑی جائے نصیرآباد ایک علاقہ ہے دور دراز علاقوں سے آنے والے مریضوں کو مکمل طبی سہولیات فراہم کی جائیں انہیں ادویات کی فراہمی میں کوئی کوتاہی نہ برتی جائے ڈاکٹرز اور پیرا میڈیکل اسٹاف عوام کی خدمت میں کوئی کسر نہ چھوڑی جائے ہمیں یہاں عوام کی خدمت کے لیے متعین کیا گیا ہے تاکہ ہم عوام کو بہتر انداز میں طبی سہولیات سے مستفید کراسکیں انہوں نے کہاکہ صحت کی سہولیات پر کوئی سمجھوتا نہیں کیا جائے اور اسپتال میں صفائی کے نظام کو مزید بہتر بنایا جائے تاکہ مریضوں کو صاف ستھرا ماحول فراہم کیا جاسکے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر 1475/2019
نصیر آباد 22اپریل۔ڈپٹی کمشنر جعفرآباد آغا شیر زمان خان نے بچوں کو پولیو کے قطرے پلا کر تین روزہ انسداد پولیو مہم کا افتتاح کر دیا اس موقع پر ڈی ایچ او جعفرآباد ڈاکٹر سرفراز احمد جمالی سمیت دیگر ڈاکٹرز اور پیرا میڈیکل اسٹاف موجود تھا ڈپٹی کمشنر جعفرآباد آغا شیر زمان خان نے ڈاکٹرز اور پیرا میڈیکل اسٹاف سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ پولیو کا خاتمہ ہم سب پر لازم ملزوم ہے کہ ہم مل کر اس جہاد میں عملی جدوجہد کریں تاکہ اس مرض کوختم کیا جا سکے اور بلوچستان کو پولیو سے پاک کیا جائے پولیو کے خاتمے کے لیے کوئی کسر نہ چھوڑی جائے پولیو مہم میں کسی قسم کی غفلت ہرگز برداشت نہیں کی جائیگی پولیو کے قطرے نہ پلانے والے افراد کے خلاف کارروائی عمل میں لائی جائے اس موقع پر ڈی ایچ او جعفرآباد ڈاکٹر سرفراز احمد جمالی نے بتایا کہ تین روزہ انسداد پولیو مہم کے دوران ایک لاکھ سینتالیس ہزار چھ سو نوے بچوں کو قطرے پلائے جائینگے جس کےلئے 340 ٹیمیں۔ 18فکسڈسینٹرز جبکہ 35 ٹرانزٹ پوائنٹ بنائے گئے ہیں جو گھر گھر جاکر بچوں کو پولیو کے قطرے پلائیں گے عوام اس قومی فریضے میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں تاکہ ملک کے بچوں کو اپاہج ہونے سے بچایا جاسکے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر 1476/2019
خضدار 22اپریل۔ ڈپٹی کمشنر خضدار ریٹائرڈ میجر محمد الیاس کبزئی نے کہا ہے کہ پولیو ایک مہلک مرض ہے اس مرض میں مبتلا بچہ معذوری کا شکار ہوکرزندگی بھر اپاہج ہوکر بیساکھی کا محتاج ہوجا تاہے اپنے مستقبل کے نو نہالوں کو پولیو کے قطرے پلاکر انہیں زندگی بھر اپاہج ہونے سے بچائیں یہ اس صورت میں ممکن ہے کہ زندگی کے تمام شعبوں سے تعلق رکھنے والے افراد جنگی بنیادوں پر نہ صرف اپنے بچوں کو پولیو سے حفاظتی قطرے پلائیں بلکہ اپنے اہل محلہ کے بچوں کو بھی حفاظتی قطرے پلوائیں ان خیالات کا اظہار انہوں نے ٹیچنگ ہسپتال خضدار میں انسداد پولیو مہم کے سلسلے میں بچوں کو پولیو سے بچاو¿ کے حفاظتی قطرے پلاکر چار روزہ مہم کا باقائدہ افتتاح کے موقع پر کیا اس موقع پر میڈیکل سپرنٹنڈٹٹ ٹیچنگ ہسپتال خضدار ڈاکٹر محمد اسماعیل باجوئی ،ڈاکٹر شفیع دانش ،ڈاکٹر محمد عمر مینگل اور دیگر بھی موجود تھے ڈپٹی کمشنر خضدار میجر ریٹائرڈ محمد الیاس کبزئی نے کہا کہ پولیو مہم کے دوران ڈیوٹی پر موجود ڈاکٹرز اور طبی عملہ اپنی ذمہ داریاں نہایت جانفشانی اور دیانت داری سے سرانجام دیں تاکہ کوئی بھی بچہ پولیو قطرے پینے سے محروم نہ ہوں اس موقع پر ڈاکٹر شفیع دانش نے بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ پیدائش سے لے کر پانچ سال تک کے ایک لاکھ ساٹھ ہزار سے زائد بچوں کو پولیو کے قطرے پلانے کا ہدف مقرر ہے انشا ءاللہ ماضی کی طرح اس بار بھی ہم اپنا ہدف مکمل کرینگے انہوں نے کہا ہے کہ یہ معصوم بچے ہمارا مستقبل ہیں انہیں پولیو کے قطرے پلواکر اپنا قومی فریضہ ادا کریں تاکہ ایک صحت مند معاشرے کی تکمیل میں آسانی ہو ان کا کہنا تھا کہ گزشتہ عرصہ سے خضدار میں پولیو کا کوئی کیس سامنے نہیں آیا تاہم اپنی ذمہ داریوں سے غافل نہیں علماءکرام بلدیاتی نمائندے صحافی برادری اس قومی مہم میں اپنے حصہ کا کردار ادا کریں واضح رہے کہ بائیس اپریل سے انسداد پولیو کا چار روزہ مہم پچیس اپریل تک جاری رہے گی اس دوران محکمہ صحت کی چار سو سے زائد موبائل ٹیمیں ضلع بھر میں بچوں کو پولیو سے حفاظتی قطرے پلائیں گی جب کہ مختلف محکموں کے آفیسر ز بھی اس مہم کی باقائدہ نگرانی کرینگے اور ڈپٹی کمشنر خضدار نگراں ٹیموں کی نگرانی کرینگے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر 1477/2019
لسبیلہ22اپریل ۔ بلوچستان کے دیگر اضلاع کی طرح لسبیلہ میں تین روزہ انسداد پولیو مہم کا آج سے آغاز ہو گیا سہ روزہ انسداد پولیو مہم کے دوران لسبیلہ کی تمام تحصیلوں میں پانچ سال تک کی عمر کے ایک لاکھ پندرہ ہزار تین سو سے زائد بچوں کو پولیو سے بچاو¿کے قطرے پلانے کا ہدف مقرر کیا گیا ہے۔اس مہم کے دوران 320کے قریب ٹیمیں حصہ لے رہی ہیں۔جن میں موبائل ٹیمیں،30فکسڈسائٹ اور 18ٹرانزٹ پوائنٹس شامل ہیں لسبیلہ کے صنعتی شہر حب ٹاﺅن میں کمشنر قلات ڈویژن حافظ محمد طاہر کاکڑ ،ڈپٹی کمشنر شبیر احمدمینگل اسسٹنٹ کمشنر کیپٹن مہراللہ بادینی،ٹیم لیڈراین اسٹاپ بلوچستان ڈاکٹر آفتاب کاکڑ، ڈی ایچ او ڈاکٹر احمد بلوچ اور پی ای او ڈبلیو ایچ او ڈاکٹر عبدالحمید اور اے ڈی ایچ او ڈاکٹر عارفہ نے ای پی آئی سینٹر حب میں پانچ سال سے کم عمر کے بچوں کو پولیو سے بچاﺅ کی ویکسین پلا کر پولیومہم کا افتتاح کیا، اس موقع پر ڈبلیو ایچ او کے ایریڈکشن آفیسر پولیو ڈاکٹر عبدالحمید بھی موجود تھے انہوں نے بتایا کہ پاکستان سے بیرون ملک سفر کرنے سے پہلے عالمی ادارہ صحت کی جانب سے پولیو ویکسینیشن کو لازمی قرار دیا جا چکا ہے اور ہمارے تمام ایئرپورٹس پر پولیو ویکسینیشن بوتھ قائم کر دئیے گئے ہیں ڈبلیو ایچ او کی جانب سے ضلعی انتظامیہ کے تعاون سے 26 اپریل سے شروع ہونے والے ہنگلاج میں پولیو مہم کے انتظامات کئے جارہے ہیں ہنگلاج میلے میں پاکستان بھر سے ایک لاکھ یاتریوں کی متوقع آمد کے پیش نظر انکے پانچ سال سے کم عمر کے بچوں کو پولیو ویکسین پلانے کیلئے تمام تر انتظامات کو حتمی شکل دے دی گئی ہے اس سلسلے میں ہنگلاج میلے کی پولیو کیلئے 8ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں ضلعی انتظامیہ سییکیورٹی پلان کے تحت پولیو ویکسین پلانے والی ٹیموں کو تحفظ فراہم کررہی ہے ڈپٹی کمشنر لسبیلہ شبیر احمد مینگل نے پولیو کی خصوصی مہم کے حوالے اپنے پیغام میں کہا ہے کہ والدین سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ اپنے بچوں کو انسداد پولیو کے قطرے پلائیں ہم نے گزشتہ انسداد پولیو مہم میں نوے فیصد سے زائد بچوں پر قابو پالیاہے لیکن اس میں مزید بہتری کی گنجائش موجود ہے اور وزیر اعلی بلوچستان جام کمال کا خصوصی وژن ہے کہ بلوچستان کو پولیو فری زون بنایاجائے لسبیلہ کی ضلعی انتظامیہ تمام تر دستیاب وسائل بروئے کار لائے جارہے ہیں پولیو کنٹرو ل روم بھی ڈسٹرکٹ سطح پر فعال ہے اور مانیٹرنگ کامﺅثر سسٹم موجود ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
پریس ریلیز
کوئٹہ22اپریل ۔ ملینیم مال سپرنگ فیسٹیول کی آرائش گل کے مقابلے کوئٹہ کے مختلف کالجز اور اسکولوں کے مابین منعقد ہوں گے ۔ جس میں گورنمنٹ گرلز ڈگری کالج سیٹلائٹ ٹا¶ن نے دوسری پوزیشن حاصل کی ۔ جو ادارے کیلئے اعزا ز ہے ۔ پرنسپل پروفیسر محترمہ محمودہ امین صاحبہ نے مقابلے میں شریک اساتذہ اور طالبات کی بھرپور رہنمائی کی اور مکمل تعاون کیا آپ نے اس کامیابی پر آرگنائزر اسسٹنٹ پروفیسر کو ثر بٹ اور انکی ٹیم کو مبار کباد دی اور کہا کہ امید کرتی ہوں کہ آپ آئندہ بھی اسی ٹیم سپرٹ کے ساتھ تمام نصابی اور ہم نصابی سر گر میوں میں حصہ لیتی رہیں گی ۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
پریس ریلیز
کوئٹہ 22اپریل ۔ ایف ایف سی کے زیر انتظام کھاد کے ڈیلروں کے لیے تربیتی پروگرام کا انعقاد کیا گیا۔ جس میں علاقے کے کھاد ڈیلروں نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔اس تقریب میں ایف ایف سی سا¶ تھ زون کے منیجر جناب محمد انور مہمان خصوصی تھے۔شرکاءسے خطاب کر تے ہوئے محمد انور نے کہا کہ جہاں ایف ایف سی بلوچستان میں کاشتکاروں تک معیاری کھادیں پہنچانے کا فرض ادا کر رہی ہے وہیں کاشتکاروں کو باغات اور فصلات کی بہتر پیداوار حاصل کرنے کے لیے جدید زرعی ٹیکنالوجی سے بھی روشناس کر رہی ہے۔لہٰذا کاشتکار ایف ایف سی کی ان خدمات سے فائدہ اٹھا کر اپنی فصلات اور باغات کی پیداوار میں اضافہ کریں۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ایف ایف سی سکھر ریجن کے منیجر جناب نعیم اختر نے کہا کہ کمپنی کے لیے کاشتکاروں اورکمپنی کے درمیان ایک پل کی حیثیت رکھتا ہے۔ ڈیلر کا علاقے کے کاشتکاروں سے گہرا رابطہ ہوتا ہے لہٰذا ڈیلر کھادوں کے انتخاب میں کاشتکاروں کی رہنمائی کریں تا کہ کاشتکار معیاری اور سستی کھادوں کا استعمال کر کے فصلوں اور باغات کی پیداوار میں مناسب اضافہ کر سکیں۔ زرعی ماہر ڈاکٹر محمد ارشاد نے مارکیٹ میں موجود کھادوں کی خصوصیات سے شرکاءکوآگاہ کیا۔ انہوں نے کھادوں کے متوازن استعمال کی اہمیت پر روشنی ڈالی اور اس سے حاصل ہونے والے فوائد سے کاشتکاروں کوآگاہ کیا۔ڈاکٹر ارشاد نے مزید کہا کہ متوازن کھادوں کے استعمال کے لیے ضروری ہے کہ زمین کا تجزیہ کرواےا جائے تاکہ معلوم ہو سکے کہ زمین میں کن غذائی اجزاءکی کمی ہے اور اس کمی کو کیسے پورا کیا جا سکتا ہے۔ ایف ایف سی پورے ملک کے کاشتکاروں کو زمین اور پانی کے تجزیہ کی سہولت مفت باہم پہنچا رہی ہے۔ہمارے زرعی ماہرین خود زمین کے نمونے لے کر ایف ایف سی کی جدید کمپوٹرازڈ لیبارٹریوں سے تجزیہ کر وا کر رپورٹ بھی کاشتکاروں کو ان کے گھر پہنچاتے ہیں تا کہ وہ اس پر عمل کر کے پیداوار میں اضافہ کر سکیں۔ تقریب سے کوئٹہ اور ڈیرہ اللہ یار میں ایف ایف سی کے ہیڈز خالد محمود لونی اور باز محمد کاکڑ نے بھی ڈیلروں سے خطاب کیا۔ آخر میں محمد انور اور نعیم اختر نے سال ۸۰۰۲ میں بہتر کار کردگی کا مظاہرہ کرنے والے ڈیلروں میںانعامات بھی تقسیم کیئے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Post comment