خبرنامہ نمبر242/2020
کراچی22جنوری:۔وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے گذشتہ روز کراچی شپ یارڈ کا دورہ کیا اور شپ یارڈ کے مختلف شعبوں کا معائنہ کیا، صوبائی وزیر سماجی بہبود میر اسد بلوچ وزیراعلیٰ کے ہمراہ تھے، شپ یارڈ پہنچنے پر مینیجنگ ڈائریکٹر شپ یارڈ ریئر ایڈمرل اطہر حسین نے وزیراعلیٰ کا استقبال کیا اور انہیں شپ یارڈ کے بارے میں بریفنگ دی، اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے وزیراعلیٰ نے کہا کہ وزارت دفاعی پیداوار صوبائی حکومت کے اشتراک سے پسنی میں شپ یارڈ قائم کررہی ہے اور ان کے کراچی شپ یارڈ کے دورے کا مقصد تربیتی سہولتوں اور یہاں جہازوں کی تیاری کا جائزہ لینا ہے، انہوں نے کراچی شپ یارڈ میں بلوچستان کے نوجوانوں کو تربیت کی فراہمی کی خواہش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ہم اپنے نوجوانوں کو تربیت فراہم کرکے پسنی شپ یارڈ میں روزگار کے حصول کے قابل بنانا چاہتے ہیں، مینیجنگ ڈائریکٹر کراچی شپ یارڈ نے وزیراعلیٰ کو شپ یارڈ میں دستیاب تربیتی سہولتوں کے بارے میں آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ ان کے تربیتی ادارے میں بلوچستان کے نوجوانوں کو بھی داخلہ دیا جائے گا۔ اس موقع پر تربیتی امور کو حتمی شکل دینے کا فیصلہ کیا گیا۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر 243/2020
تربت22جنوری:۔ وزیراعلیٰ پنجاب سردار محمد عثمان بزدار نے کہا ہے کہ بلوچستان ان کا دوسرا گھر ہے، وہ وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کے ساتھ مل کر بلوچستان کی ترقی کے لئے بھرپور مدد اور تعاون کریں گے، وزیراعلیٰ بلوچستان کی قیادت میں صوبائی حکومت تربت سمیت بلوچستان کی ترقی کے لئے قابل تحسین اقدامات کررہی ہے، تربت آکر انہیں بے حد خوشی ہوئی ہے اور وہ تربت کی ترقی دیکھ کر متاثر ہوئے ہیں، ان خیالات کا اظہار انہوں نے اپنے اعزاز میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا، وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان، صوبائی وزیر میر ظہور احمد بلیدی، رکن صوبائی اسمبلی عبدالرشید بلوچ اور علاقے کے قبائلی وسیاسی عمائدین بھی تقریب میں موجود تھے، وزیراعلیٰ پنجاب نے بلوچی زبان میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم بلوچستان کے لوگوں کو پنجاب میں خوش آمدید کہتے ہیں خاص کر بلوچستان کے طلباءکو پنجاب کے تعلیمی اداروں میں تعلیم حاصل کرنے اور بلوچستان کے لوگوں کو پنجاب میں کاروبار کرنے کی دعوت دیتے ہیں تاکہ ہمارے بلوچ بھائی بھی دوسرے صوبوں کے لوگوں کے ہم پلہ ہوسکیں۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب ایک بڑا صوبہ ہے اور بڑے بھائی کی حیثیت سے یہ ہمارا فرض ہے کہ چھوٹے صوبوں کو آگے بڑھنے میں معاونت فراہم کریں، انہوں نے کہا کہ پنجاب کی صوبائی حکومت صوبے کی ترقی کے لئے وسیع پیمانے پر اقدامات کرہی ہے اور صوبے کے پسماندہ علاقوں کو خصوصی توجہ دی جارہی ہے، جنوبی پنجاب کے پسماندہ علاقوں کے لئے اس سال کے بجٹ میں ریکارڈ 35فیصد فنڈز مختص کئے گئے ہیں تاکہ جنوبی پنجاب کے پسماندہ علاقے بھی ترقیافتہ علاقوں کے برابر پہنچ سکیں، وزیراعلیٰ پنجاب نے کہا کہ جلد لاہور میں چاروں صوبوں کی ثقافتی سرگرمیوں کو اجاگر کرنے کے لئے پروگرام کا انعقاد کیا جائے گا جس سے بین الصوبائی روابط میں اضافہ اور ثقافتی تبادلوں کو فروغ ملے گا۔ انہوں نے کہا کہ وہ پنجاب کے پہلے وزیراعلیٰ ہیں جنہوں نے تربت کا دورہ کیا جو ان کے لئے خوشی کا باعث ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر 244/2020
تربت22جنوری:۔ وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے کہا ہے کہ بلوچستان رقبہ کے لحاظ سے پاکستان کا سب سے بڑا صوبہ ہے جو 44فیصد سے زائد رقبے پر محیط ہے، صوبے کی زیادہ تر آبادی دیہی علاقوں میں رہتی ہے، صوبائی حکومت دیہی علاقوں کی ترقی کے لئے کام کررہی ہے، بلدیاتی اداروں کو مالی اور انتظامی طور پر بااختیار بنانے کے لئے لوکل گورنمنٹ ایکٹ میں ترامیم کے ذریعہ اختیارات نچلی سطح تک منتقل کئے جائیں گے تاکہ عوام کے مسائل ان کی دہلیز پر حل ہوسکیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے وزیراعلیٰ پنجاب سردار محمد عثمان بزدار کے اعزاز میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا، وزیراعلیٰ بلوچستان نے کہا کہ وہ وزیراعلیٰ پنجاب کو ضلع کیچ کے شہر تربت کا دورہ کرنے پر خوش آمدید کہتے ہیں اور ہمیں خوشی ہے کہ آج اس قدیم تاریخی شہر میں وزیراعلیٰ پنجاب ہمارے درمیان موجود ہیں، انہوں نے کہا کہ وزیراعلیٰ پنجاب کے اس دورہ سے صوبائی ہم آہنگی اور صوبوں کے مابین روابط کو مزید فروغ ملے گا اور دونوں صوبوں کے عوام کے درمیان برادرانہ تعلقات میں اضافہ ہوگا، صوبائی حکومت کے ترقیاتی اقدامات اور پالیسی پر روشنی ڈالتے ہوئے وزیراعلیٰ نے کہا کہ صوبائی کابینہ کے فیصلے کی روشنی میں صحت، تعلیم اوردیگر محکموں کو بھی مرحلہ وار ڈویژنل اور ضلعی سطح پر فعال کیا جائے گا جس سے اختیارات نچلی سطح تک منتقل ہوں گے، وزیراعلیٰ نے کہا کہ ضلع کیچ کے عوام باشعور اور پڑھے لکھے ہیں، بلوچستان کی تعمیروترقی میں مکران کے لوگوں کو بنیادی کردار ہے، تقریب سے خطاب کرتے ہوئے صوبائی وزیر میر ظہور احمد بلیدی نے وزیراعلیٰ پنجاب کو خوش آمدید کہتے ہوئے کہا کہ ان کا دورہ مکران کے لوگوں کے لئے باعث عزت و اعزاز ہے، انہوں نے کہا کہ مکران ڈویژن کو بلوچستان میں ایک خاص مقام حاصل ہے، یہاں کی سرزمین نے عطاشاد اور سید ظہور شاہ ہاشمی جیسے شاعر اور ادیب پیدا کئے، انہو ں نے کہا کہ وزیراعلیٰ جام کمال کی قیادت میں صوبائی حکومت صوبے کے دیگر علاقوں کی طرح مکران کی ترقی میں بھی بھرپور کردار ادا کررہی ہے، یہاں یونیورسٹیاں، میڈیکل، انجینئرنگ اور لاءکالج کے علاوہ سپورٹس کمپلیکس کے منصوبوں پر کام جاری ہے،قبل ازیں کمشنر مکران ڈویژن طارق قمر بلوچ نے وزیراعلیٰ پنجاب کے اعزاز میں سپاسنامہ پیش کرتے ہوئے انہیں مکران ڈویژن کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی، سرکٹ ہا¶س پہنچنے پر دونوں وزراءاعلیٰ کو لیویز کے چاک وچوبند دستے نے سلامی پیش کی جبکہ تربت آمد پر وزیراعلیٰ پنجاب کا علاقے کے عمائدین اور عوام کی جانب سے والہانہ استقبال کیا گیا، وزیراعلیٰ بلوچستان نے وزیراعلیٰ پنجاب کو روایتی پگڑی پہنائی، بعدازاں وزیراعلیٰ پنجاب کے اعزاز میں پرتکلف ظہرانہ دیا گیا، دونوں وزراءاعلیٰ نے بذریعہ ہیلی کاپٹر میرانی ڈیم اور بارشوں سے متاثرہ علاقوں کا فضائی جائزہ لیا۔ وزیراعلیٰ پنجاب نے برف اور بارشوں سے متاثرہ علاقوں کے عوام کی امدادوبحالی کے لئے پنجاب حکومت کی جانب سے بھرپور معاونت کی یقین دہائی کرائی۔ تربت کا دورہ مکمل کرکے دونوں وزراءاعلیٰ گوادر روانہ ہوگئے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر245/2020
تربت22جنوری:۔ وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نواب خالد گچکی مرحوم کی رہائش گاہ پر گئے جہاں انہوں نے مرحوم کے بھائیوں سے نواب خالد گچکی کی وفات پر تعزیت کا اظہار کیا اور مرحوم کے ایصال ثواب کے لئے فاتحہ خوانی کی۔ صوبائی وزیر میر ظہور بلیدی، رکن صوبائی اسمبلی عبدالرشید بلوچ اور وزیراعلیٰ کے کوآرڈینیٹر عبدالر¶ف رند بھی اس موقع پر موجود تھے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر246/2020
کوئٹہ 22جنوری :۔صوبائی وزیر داخلہ میرضیاءاللہ لانگو نے کہا کہ اجتماعی مسائل کے سامنے انفرادی نوعیت کے مسائل کی کوئی اہمیت نہیں وقت اور حالات کا تقاضا ہے کہ تمام مسائل کا حل باہمی افہام و تفہیم سے نکالنا چاہیے جس کے انتہائی دوررس نتائج برآمد ہوتے ہیں۔ موجودہ صوبائی حکومت موجودہ مسائل کا حل تمام متعلقہ اسٹیک ہولڈرز کی مشاورت سے حل کرنے پر کاربند ہے یہ بات انہوں نے صوبے کے دور دراز علاقوں سے آئے ہوئے مختلف وفود سے ملاقات اور موقع پر احکامات جاری کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر اپوزیشن لیڈر ملک سکندر ایڈوکیٹ صوبائی مشیر لائیواسٹاک مٹھا خان کاکڑ بھی انکے ہمراہ موجود تھے انہوں نے کہا کہ جدید دنیا بہت وست اختیار کرچکا ہے ہمیں اپنے آپ کو جدید ٹیکنالوجی سے بہرہ مند کر کے جدید دنیا کے روبرو جانا ہوگا انہوں نے کہا کہ عوام کے ساتھ ہیں نوجوان نسل کے روشن اور بہتر مستقبل کیلئے خدمت کا جذبہ رکھتے ہیں تاکہ ہم اپنی نوجوان نسل کو بہتر مستقبل اور ہنر سکھا کر بے روزگاری کا خاتمہ کریں بلوچستان کو ترقی کی راہ پر گامزن کر دیا ہے میرٹ پر یقین رکھنا ہوگا ہم ترقی کی طرف جا رہے ہیں پاکستان اپنے پاو¿ں پر کھڑا ہے اقوام عالم میں پاکستان کو اہم مقام حاصل ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر247/2020
کوئٹہ22جنوری:۔محکمہ خزانہ حکومت بلوچستان کے اعلامیہ کے مطابق محمد عرفان (ٹی اے/بی ایس -18) ڈسٹرکٹ اکاو¿نٹس آفیسر قلعہ سیف اللہ کا تبادلہ کرکے انھیں ڈسٹرکٹ اکاو¿نٹس آفیسر موسی خیل جبکہ عبدالمالک (ٹی اے/بی ایس-17 ( ڈسٹرکٹ اکاو¿نٹس آفیسر مستونگ کا تبادلہ کرکے انھیں اسسٹنٹ ڈسٹرکٹ اکاو¿نٹس آفیسر قلعہ سیف اللہ تعینات کردیا گیا ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر248/2020
کوئٹہ 22جنوری: ۔صوبائی وزیر زراعت انجینئر زمرک خان اچکزئی نے کہا ہے کہ بلوچستان گیس کی نعمت سے مالامال ہونے اورملک کے دیگر حصوں کو گیس فراہم کرنے کے باوجودیہاں کے لوگ شدید سردی میں بغیر گیس کے رہنے پر مجبور ہیں جس سے لوگوں میں احساس محرومی اور بے چینی میں اضافہ ہو رہا ہے، صوبائی حکومت وفاق سے گیس کی عدم فراہمی غیر ضروری اور غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا مسئلہ کو ترجیحی بنیادوں پر اٹھائے گی،شدید برف باری اور بارشوں سے متاثرین کو حکومت ہر ممکن تعاون فراہمی کریگی۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ایک وفد سے بات چیت کرتے ہوئے کیا جنہوں نے بدھ کے روز ان سے ملاقات کی۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ شدید سردی اور برف باری کے باوجود عوام کو گیس اور بجلی جیسی بنیادی ضروریات سے محروم رکھنا سراسر نا انصافی ہے جس سے صوبے میں احساس محرومی میں مزید اضافہ ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی حکومت کو چاہئے کہ وہ وفاقی اداروں بلخصوص سوئی سدرن گیس کمپنی اور کیسکو کو ہدایت جاری کریں کہ وہ بلوچستان جیسے پسماندہ صوبے کو نظرانداز کرنے کی بجائے اس پر زیاد ہ سے زیادہ توجہ مرکوز کریں لیکن اس کے برعکس شدید سردی میں لوگوں کو گیس اور بجلی کی فراہمی میں غیر معمولی کمی کردی جاتی ہے جس سے لوگوں میں مایوسی بڑھ رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت وفاقی اداروں کابلوچستان کے ساتھ اس غیر ذمہ دارانہ روایہ کا سختی سے نوٹس لے اور صوبائی حکومت اس ناانصافی کے خلاف ہر فورم پر احتجاج کریگی اورصوبے کے عوام کو ان کا جائز حقوق دلانے کے لئے تمام جمہوری طریقے استعمال کریگی۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ حالیہ شدید برف باری اور بارشوں سے متاثرین کی بحالی کے لئے صوبائی حکومت تمام دستیاب وسائل بروئے کار لائیگی اور مشکل کی اس گھڑی میں متاثرین کے ساتھ ہر ممکن مدد اور تعاون کیا جائے گا۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر249/2020
کوئٹہ22جنوری:۔محکمہ خزانہ حکومت بلوچستان کے ایک اعلامیہ کے مطابق غلام حیدر (ٹی اے/ بی ایس-17 ( قائمقام سینئر ڈسٹرکٹ اکاو¿نٹس آفیسر سبی کو پنشن کیس نمٹانے جانے سے متعلق سنجیدہ عوامی شکایت سے پیدا ہونے والی صورتحال کی بنا پر انکی ذمہ داری تفویض کی گئی ہے اور انہیں ہدایت کی گئی کہ وہ محکمہ خزانہ میں رپورٹ کریں۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر250/2020
کوئٹہ22جنوری:۔محکمہ خزانہ حکومت بلوچستان کے ایک اعلامیہ کے مطابق تعیناتی کے منتظر ذیشان مہرکو اسسٹنٹ ڈسٹرکٹ اکاو¿نٹس آفیسر کوئٹہ، علی اصغر کو اسسٹنٹ ڈسٹرکٹ اکاو¿نٹس آفیسر جعفرآباد بمقام ڈیرہ اللہ یار، جہا نزیب کواسسٹنٹ ڈسٹرکٹ اکاو¿نٹس آفیسر چاغی بمقام دالبندین، میر گہرام کو اسسٹنٹ ڈائریکٹر ٹریڑری اینڈ اکاو¿نٹس ڈپارٹمنٹ کوئٹہ، محمد عالم اسسٹنٹ ڈائریکٹر ٹریڑری اینڈ اکاو¿نٹس ڈیپارٹمنٹ کوئٹہ، جہانزیب پالیزئی اسسٹنٹ ڈسٹرکٹ اکاو¿نٹس آفیسر خاران جبکہ یوسف علی اسسٹنٹ ڈسٹرکٹ اکاو¿نٹس آفیسر صحبت پور تعینات کر دیا گیا ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر251/20520
کوئٹہ22جنوری:۔محکمہ لائیوا سٹاک اینڈ ڈیری ڈویلپمنٹ حکومت بلوچستان کے مختلف اعلامیہ کے مطابق سینئر ویٹرنری آفیسر بی بی ایس -18(انیمل ہیلتھ ونگ ) ڈاکٹر عبدالعلی، ڈاکٹر محمد اسماعیل، ڈاکٹر نور حسن، ڈاکٹرخالق داد اور ڈاکٹرمحمد موسی ،ڈاکٹر شمس الحق ،ڈاکٹر سعید احمد،ڈاکٹر خیر محمد جعفر ،ڈاکٹر فیاض احمد،ڈاکٹر منظور احمد رند،کو ایڈیشنل پرنسپل ویٹرنری آفیسر ( بی پی ایس-19) کے عہدے پر ترقی دیدی گئی ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
پریس ریلیز
کوئٹہ22جنوری :۔محکمہ تعلقات عامہ آفیسرز ویلفیئر ایسوسی ایشن نے محکمے کے افسران محمدانورکھیتران، فیض محمد کھیتران اور کامران اسد کو ڈائریکٹر تعلقات عامہ اور فلک شہر کو اسسٹنٹ ڈائریکٹر کے عہدے پر ترقی ملنے پر مبارکباد دیتے ہوئے اپنے بیان میں کہا کہ ترقی پانے والے افسران محکمہ کی نیک نامی اور ترقی کے لئے ہر ممکن اقدامات کریں گے اس سلسلے میں انہوں نے صوبائی سیکرٹری انفارمیشن شاہ عرفان غرشین اور ڈی جی پی آر شہزاد فرحت احمد زئی کا بھی شکریہ ادا کیا جن کی بروقت کوششوں ، کیس کی تیاری اور صوبائی سلیکشن بورڈ میں جمع کروانے جیسے اقدام سے یہ ممکن ہوا ۔بیان میں کہا گیا کہ محکمہ تعلقات عامہ آفیسرز ویلفیئر ایسوسی ایشن محکمے کی ترقی اور افسران کی فلاح و بہبود کے لئے ہرممکن اقدامات کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایسوسیشن کی دن رات محنت اور لگن سے افسران کے مسائل حل ہو رہے ہیں اور محکمے میں کام بھی بہتر انداز میں جاری ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Post comment