خبرنامہ نمبر216/2020
کوئٹہ20جنوری۔گورنر بلوچستان امان اللہ خان یاسین زئی نے کہا ہے کہ چائنا پاکستان اقتصادی راہداری پورے خطے کے لیے ایک اہم ترقیاتی منصوبہ ہے اور اس کی تکمیل سے خاص طور پر بلوچستان میں ترقی کے نئے دور کا آغاز ہو گا انہوں نے کہا کہ ہماری کوشش ہے کہ دوست ممالک سی پیک کے مختلف منصوبوں میں سرمایہ کاری کریں تاکہ روزگار کے نئے مواقع پیدا کرنے نے اور صوبے کی پسماندگی دور کرنے میں مدد ملیں۔یہ بات انہوں نے پاکستان میں تعینات یورپی یونین کی سفیر(Androulla Kaminara)سے بات چیت کرتے ہوئے کہی۔جنہوں نے گورنر ہاؤس میں ان سے ملاقات کی گورنر نے ان کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ حالیہ برفباری اور بارشوں سے طویل خشک سالی سے پیدا ہونے والی صورتحال میں بہتری آنے کی توقع ہے۔ انہوں نے اس بات کا خیرمقدم کیا کہ یورپی یونین بلوچستان میں مختلف شعبوں میں تعاون کرتی رہی ہے اور توقع ظاہر کی کہ آئندہ بھی تعلیم صحت توانائی استعداد کار بڑھانے کے شعبے میں یورپی یونین کا تعاون رہے گا انہوں نے کہا کہ نوجوانوں کو جدید مہارتیں سکھانے،ٹیکنالوجی سے واقفیت پیدا کرنے اور ہونہار طلباء و طالبات کے لیے وظائف مہیا کرنے میں یورپی یونین ہماری بھرپور مدد کر سکتی ہے یورپی یونین کے سفیر نے کہا کہ آئندہ بھی بلوچستان میں مختلف شعبوں میں تعاون جاری رہے گا اور اس سلسلے میں متعدد منصوبے پہلے ہی زیر غور ہیں۔
()()()
خبرنامہ نمبر217/2020
صوبائی وزیر داخلہ میر ضیاء اللہ لانگو نے کہا کہ مسئلہ کشمیرکے سنگین صورتحال کا جائزہ لینے کے لیے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کا اجلاس کا خیر مقدم کیاانہوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر کا مسئلہ 1965 کے بعد یہ پہلا موقع ہے کہ جب اجلاس میں صرف ایک ہی تنازعے پر توجہ دی گئی صوبائی وزیر داخلہ نے اقوام متحدہ کے جنرل سیکرٹری انتونیو گریس اور جنرل اسمبلی کے صدرتجانی محمد باند سے اپنے ایک پیغام میں کشمیر کی موجودہ صورتحال کے حوالے سے کہا کہ خطے میں کشمیر تنازعہ کسی بڑے تنازعے کا سبب بن سکتا ہے اقوام متحدہ مسئلہ کشمیر کو حل کرنے کے لیے اپنا کردار ادا کرے۔ صوبائی وزیر نے چین کے سفیر رینگ جون اور چین کے موقف کا بھی خیرمقدم کیا کہ چین کشمیر اور بھارت اور پاکستان کے درمیان ایک متنازعہ علاقہ سمجھتا ہے اور واشگاف الفاظ میں آسلام آ بادکے اس مطالبے کی حمایت کرتا کہ کشمیری عوام کو اپنے مستقبل کا فیصلہ خود کرنے کے لیے حق خودارادیت دی جائے انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کے حل وقت کا اہم تقاضا ہے۔ہم اہل کشمیر کی اخلاقی سیاسی اور سفارتی حمایت اس وقت جاری رکھیں گے جب تک انہیں ان کا بنیادی حق خودارادیت مل نہیں جاتا ہے۔
()()()
خبرنامہ نمبر218/2020
کوئٹہ20جنوری:۔ڈپٹی کمشنر کوئٹہ میجر (ر) اورنگزیب بادینی کی زیر صدارت یوم پاکستان 23 مارچ کے حوالے سے بلوچستان میلے اور دیگر انتظامات کے سلسلے میں اجلاس منعقد ہوا۔اجلاس میں ڈائریکٹر جنرل تعلقات عامہ شہزادہ فرحت احمدزی ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر کوئٹہ (جنرل) ثاقب کاکڑ ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر (ریونیو) ثانیہ صافی کے علاوہ محکمہ سپورٹس،محکمہ تعلیم،محکمہ ثقافت اور دیگر محکموں کے آفسران اور نمائندے موجود تھے۔اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ صوبائی حکومت صوبے بھر میں گزشتہ سالوں کی طرح اس سال بھی یوم پاکستان 23 مارچ کوقومی جوش وخروش، جذبے اور شایان شان طریقے سے منائے گی۔ اس سلسلے میں یوم پاکستان کے حوالے سے اسپورٹس فیسٹیول،کلچرل شوز، محفل مشاعرہ،میوزیکل پروگرام، نمائشی اسٹالز اور دیگر سرگرمیوں کا انعقاد کیا جائے گا۔ بلوچستان میلے میں صوبائی حکومت کے مختلف محکموں کے اسٹال لگائیں گے۔ جبکہ اسکولوں اور کالجز کی سطح پر طلبا طالبات میں غیر نصابی سرگرمیاں اور کھیلوں کے مقابلوں کا انعقاد کیا جائے گا اجلاس میں کہا گیا کہ اسپورٹس فیسٹیول میں طلبا و طالبات کے لئے فٹ بال،کرکٹ،مارشل،آرٹس،بیڈمنٹن اوردیگر کھیلوں کے مقابلے ہونگے۔ کلچرل شو میں صوبے میں بسنے والی تمام اقوام کے نمائندگی کرتے ہوئے اپنی اپنی ثقافت،رسم ورواج کو اُجاگر کرتے ہوئے بلوچستان کے روشن چہر کو ہ سامنے لائیں گی۔ اس کے علاوہ طلباء وطالبات کے درمیان سکولوں اور کالجوں میں تقریری مقابلہ ملی نغمے،مجسمہ سازی اور پینٹنگ کے مقابلے ہوں گے جبکہ عوام کے لئے پولو گراؤنڈ پر نمائشی اسٹال لگائے جائیں گے۔ جس میں تمام صوبائی محکمے اپنی مصنوعات کا اسٹال لگائیں گے اس موقع پر فضائی مظاہرہ بھی کیا جائے گا ان پروگراموں میں مختلف اضلاع سے تعلق رکھنے والے علاقائی فنکاروں کے ساتھ ساتھ ملکی سطح کے نامور فنکاروں کو بھی مدعو کیا جائے گا۔تقاریری مقابلوں اور دوسری سرگرمیوں کا آغاز یکم مارچ سے شروع کردیا جائیں گا اور 23مارچ کو ان مقابلوں اور دیگر سرگرمیوں میں نمائیں کامیابی حاصل کرنے والوں کو نقد انعامات اور اعزازی شیلڈوں سے نوازہ جائے گا۔
()()()

خبرنامہ نمبر219/2020
کوئٹہ20جنوری:۔بلوچستان ہائی کورٹ کے ایک اعلامیہ کے مطابق منیراحمدخان نے کوئٹہ میں موجودہ گیس پریشر کے حوالے سے ایک آئینی درخواست جمع کروائی جس پر کارروائی کرتے ہوئے جسٹس روزی خان بڑیچ نے سوئی گیس حکام کو 23 جنوری کو کیس کے حوالے سے نوٹسز جاری کر دیے ہیں۔
()()()
خبرنامہ نمبر220/2020
نصیر آباد 20جنوری:۔چیف انجینئر بلڈنگز سبی زون محمد الیاس لاشاری نے ایکسین بی اینڈ آر بلڈنگز اکبر علی لاشاری کے ہمراہ نصیرآباد میں مختلف زیرتعمیر اسکیمات کا جائزہ لیا انہوں نے آئی ٹی انسٹیٹیوٹ دارالامان پروڈکشن یونٹ لائیو سٹاک ضلع بھر کے مختلف شیلٹر لیس سکول بیت الخلاء ڈویژن کی سطح پر تعمیر ہونے والی پناہ گاہ اور نصیرآباد میں ڈسٹرکٹ جیل کی پرانی عمارت کا جائزہ لیااس موقع پر ایس ڈی او عابد علی پہنور بھی موجود تھے جبکہ ایکسین بی اینڈ آر بلڈنگز اکبر علی لاشاری نے چیف انجینئر ز کو زیر تعمیر تمام اسکیمات کے متعلق تفصیل سے بریفنگ دی اور جاری ترقیاتی کاموں کے متعلق آگاہی فراہم کی انہوں نے بتایا کہ ترقیاتی کام جاری ہیں ہماری کوشش ہے کہ معیاری کام اپنے تعمیر کی مدت کو مکمل ہوں کام کی نوعیت پر کوئی سمجھوتہ قبول نہیں کیا جارہا تمام اسکیمات کے کام کا جائزہ لینے کیلئے خود دورہ کرتا رہتا ہوں تاکہ صاف اور شفاف طریقے سے کام مکمل ہوں اس موقع پر چیف انجینئر سبی زون محمد الیاس لاشاری نے کہاکہ محکمہ بی اینڈ آر بلڈنگز عوام کی فلاح و بہبود کے لئے ہمیشہ کوشاں ہے عوامی مفادات کی اسکیمات جلدازجلد پایہ تکمیل تک پہنچائی جائیں تاکہ ان کی تکمیل سے عوام بھرپور انداز میں استعفادہ حاصل کرسکیں انہوں کہاکہ حکومت عوام کو چھت فراہم کرنے کیلئے مختلف اسکیمات پر زور وشور سے کام کررہی ہے شیلٹر لیس سکولوں کی تعمیر سے طالب علموں کو پڑھائی میں حائل دشواری کا تدارک کیا جاسکے گا اور انہیں مشکلات سے نجات ملے گی حکومت نے طالبعلموں کی سہولیات کی فراہمی کیلئے مختلف سکولوں میں بیت الخلاء بھی تعمیر کرارہی ہے انہوں نے کہاکہ محکمہ بی اینڈ آر بلڈنگز عوام کی خدمت میں پیش پیش ہے عوام کی خدمت میں کوئی کسر نہیں چھوڑی جائے گی انہوں نے ایکسین بی اینڈ آر بلڈنگز اکبر علی لاشاری کو ہدایت دی کہ وہ ڈسٹرکٹ جیل ڈیرہ مراد جمالی کی مرمت کیلئے تخمینہ لاگت مجھے بھجوائیں تاکہ مرمت کا کام جلد ازجلد شروع کیا جاسکے۔
()()()
خبرنامہ نمبر221/2020
کوئٹہ20جنوری:۔صوبہ بھر میں محکمہ مواصلات وتعمیرات کے ریسٹ ہاوسیز کی تعمیرو مرمت،تزئین وآ سا ئش پر فوری طور پر کام شروع کیا جائے گا۔ محکمہ کے ایکس این ریسٹ ہاوسیزکی تخمینہ فوری طور پر چیف انجینئر کے پاس جمع کردیں ان خیا لا ت کا اظہار صوبائی وزیر مواصلات،تعمیرات حکومت بلوچستان میر محمد عارف محمد حسنی نے محکمہ کے چیف انجینئر،سپر ٹینڈ نٹ انجینئر زکے اجلاس سے خطاب کے دوران کیا۔اجلاس میں محکمہ مواصلات وتعمیرات کے ٹیکنیکل ایڈ وائزر مختیاراحمد کاکڑ بھی موجود تھے۔ اجلاس میں چیف انجینئر ز نے صوبے بھر کے تمام ریسٹ ہاوسز کی مخدوش حالت اور انجینئر کی کمی اور ریسٹ ہاوسیز میں مختلف اداروں کے بارے میں مکمل بریفنگ دی صوبائی وزیر اس بات پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ک ہ چیف انجینئر ز تمام قابضین کو نو ٹیسز جاری کردیں تاکہ وہ فوری طور پر محکمہ مواصلات کے ریسٹ ھا وسز کو خالی کر کے محکمہ کے حوالے کریں تاکہ اُن کی مرمت کی جاسکے۔انہوں نے کہاکہ محکمہ مواصلات تعمیرات میں کام کے معیار کو بہتر بنانے کیلئے متعلقہ اضلاع کے ایکس ای این اپنی مانٹیرنگ سخت کردیں تاکہ معیاری کا م ہو سکے۔انہوں نے کہا کہ محکمہ کے انجینئر ز اس بات کا براہ راست ذ مہ د ار ہونگے کہ سرکاری فنڈز میں مقصد کیلئے مختص کی گئی ہے کہ اس مقصد کیلئے خرچ ہونگے اور کام کے معیار پر کسی قسم کی کوتاہی برداشت نہیں کی جائے گی۔
()()()

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Post comment