HomeNews19.03.2020 Thursday (File No.1)

19.03.2020 Thursday (File No.1)

19.03.2020 Thursday (File No.1)

خبرنامہ نمبر1107/2020
لورالائی19مارچ:۔کمشنر ژوب ڈویژن سہیل الرحمن بلوچ نے کہاکہ کورونا وائرس جیسی مہلک بیماری سے بچاو کیلئے احتیاطی تدابیر ناگزیز ہیں ان خیالات کااظہار انہوں نے گزشتہ روز یہاں کورونا وائرس کوروکنے کیلئے کئے گئے اقدامات کے حوالے سے کمشنر آفس میں اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہا اجلاس میں ڈپٹی کمشنر لورالائی۔اسداللہ کاکڑ ڈی ایچ او شبیر احمد مینگل، ڈاکٹرمنیراقبال، پی پی ایچ آئی کے آفیسر اختر محمد،اور دیگر نے شرکت تھے ڈسٹرکٹ ٹاسک فورس کوروناوائرس کمیٹی کے ڈاکٹر منیر اقبال بتایاضلعی انتظامیہ کی ہدایت پر محکمہ صحت کے زیر اہتمام ڈی ایچ کیو اہسپتال میں قائم کئے گئے ائسولیشن وارڈ میں تمام تر سہولیات اور عملہ ہمہ وقت موجود ہے ڈاکٹرز اور عملے کی چھٹیوں پر پابندی لگائی گئی ہے بعدازان کمشنر ژوب ڈویژن سہیل الرحمن بلوچ نے ڈپٹی کمشنر اسد اللہ خان کاکڑ، ضلعی ناظم صحت ڈاکٹرشبیر احمد مینگل،ایم ایس سول ہسپتال،واحدبلوچ، ڈاکٹرمنیر اقبال اور دیگر کے ہمراہ ائسولیشن وارڈ کادورہ کیا انہوں نے کہا کہ ایران اور افغانستان میں کورونا وائرس کے خطرے کے پیش نظر صوبائی حکومت نے بلوچستان میں حفاظتی انتظامات اورایمرجینسی اقدامات شروع کررہے ہیں ضلع لورالائی کے اس ائسولیشن وارڈ میں پانچ کمرے شامل ہیں اس سلسلے میں ماسک ا سپرے اور دیگر ضروری احتیاطی اقدامات کئے جارہے ہیں انہوں نے کہا کہ لوگوں میں شعورآگاہی مہم میں این جی اوز،میڈیا،علماء کرام اورسول سوسائٹی کے افراد کو بھی حصہ لینا چاہیئے انہوں نے کہا کہ یہ بات اپنی جگہ درست ہے کہ ہاتھ ملانا اوربغل گیر ہونا ہماری روایت  میں شامل ہیں لیکن درپیش صورت حال میں اس سے گریزکیا جا ئے تو بہتر ہے انہوں نے کہا کہ محدود وسائل کے باوجود صوبائی حکومت نے کوروناوائرس کے خلاف بھر پورا اقدامات کئے ہیں جن کے مثبت نتائج برآمد ہوں گے ہم سب کواس مہلک وائرس کے خاتمے کیلئے احتیاطی تدابیرپر عمل کرنا ہوگا۔
()()()
خبرنامہ نمبر1108/2020
کوئٹہ 19مارچ:۔ایڈمنسٹریٹر طارق جاوید مینگل کے ہدایات کے مطابق انچارج اینٹی انکروچمنٹ سیل قاسم خان کی سربراہی میں میونسپل مجسٹریٹ (بلڈنگ کوڈ) مصور احمد اور میونسپل مجسٹریٹ عبدالباسط بزدار نے عوامی شکایات، بلڈنگ کوڈ کی خلاف و رزی اور ٹریفک کی روانی کو برقرار رکھنے کے لیے بھوسیٰ منڈی، سیٹلائٹ ٹاؤن سبی روڈ اور ملحقہ علاقوں میں غیر قانونی طور پر تعمیر کئے گئے سیوریج لائن کو نوٹس کے باوجود درستگی نہ کرنے پر مسمار کر دیا، متعدد زیر تعمیر عمارتوں کو بلڈنگ کوڈ کی خلاف ورزی کرنے پر سیل کر دیا گیا اور سڑک پر پڑا ہوا تعمیراتی مٹیریل ضبط کر لیا گیا۔ کارروائی متعلقہ تھانے کے ڈیوٹی آفیسر امان اللہ خان، میونسپل مجسٹریٹ ریڈر عمران خان کاکڑ و دیگر متعلقین کی نگرانی میں ہوئی۔
()()()
خبرنامہ نمبر1109/2020
پشین 19مارچ:۔ وزیر اعلیٰ بلوچستان کی خصوصی ہدایت پر ڈپٹی کمشنر پشین قائم لاشاری نے کورونا وائرس کی ممکنہ خدشات اور صورتحال کے پیش نظر عالمی وباء کی روک تھام اور شکایات کے لئے ڈپٹی کمشنر آفس پشین میں کنٹرول روم قائم کردیا گیا ہے۔ ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر (جنرل) امین اللہ ناصر فوکل پرسن جبکہ ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر احمد ذمان جمالی اور میڈیکل سپرنٹنڈنٹ عبدالحنان کو ممبر مقرر کردیا گیا ہے۔ کورونا وائرس سے متعلق شکایات لینڈ لائن نمبرز 0826-421311اور  0826-420200پر درج کی جائیگی۔
()()()
خبرنامہ نمبر1110/2020
پشین 19مارچ:۔ڈپٹی کمشنر پشین قائم لاشاری نے جمعرات کے روز سرانان روڈ پر واقع فوڈ گوام کا اچانک دورہ کیا اور کورونا وائرس سے متعلق جاری ہدایات کیخلاف ورزی اور گندم کی سپلائی پر اسسٹنٹ کمشنر پشین حضرت ولی کاکڑ،تحصیلدار بہادر خان اور اسسٹنٹ فوڈ کنٹرولر پشین انچارج ظفر احمد اور ظاہر کاسی کو طلب کرکے موقع پر گودام کو بند کرنے کا حکم دیا۔ ڈپٹی کمشنر نے مذکورہ گودام میں گاڑیوں میں گندم کی جاری سپلائی کو روکتے ہوئے درجنوں بوریاں گاڑیوں سے اتارکر واپس گودام میں رکھوادیئے۔ اس موقع پر ڈپٹی کمشنر قائم لاشاری نے اسسٹنٹ ڈائریکٹر فوڈ کنٹرولر کو مذکورہ فوڈ گودام میں ذخیرہ گندم اور اسٹاک کی تفصیلات طلب کرتے ہوئے ڈسٹرکٹ کے تمام فوڈ گوداموں سے فلورملز کو گندم کی فروختگی پر 31مارچ تک پابندی لگانے کا حکم دیا۔ اسسٹنٹ فوڈ کنٹرولر پشین نے ڈپٹی کمشنر کو سرانان روڈ پر واقع فوڈ گودام سے متعلق تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ مذکورہ گودام میں تقریباً1798 گندم کی بوریاں پڑی ہیں۔  
()()()
خبرنامہ نمبر1111/2020
پشین 19مارچ:۔ ڈپٹی کمشنر پشین قائم لاشاری کی خصوصی ہدایت پر اسسٹنٹ کمشنر پشین حضرت ولی کاکڑ نے شہر میں مہنگائی اور تجاوزات کیخلاف کارروائی کرتے ہوئے مختلف ملک شاپس میں صفائی کی ناقص صورتحال اور دکانوں سے سامنے تجاوزات پر متعدد دکانداروں کو ہزاروں روپے جرمانہ کیا۔قبل ازیں اسسٹنٹ کمشنر نے غیر قانونی اور غیر معیاری آئس یونٹ کو کیمیکل سے قلفیاں اور آئسکریم بنانے پر کارخانہ سیل کردیا۔اسسٹنٹ کمشنر پشین حضرت ولی کاکڑ نے کہا کہ ملک میں ایک طرف کورونا وائرس شدت اختیار کرتا جارہا ہے دوسری طرف غیرقانونی آئس یونٹ کے مالکان اور دکاندار عوام کی قیمتی جانوں سے کھیل رہے ہیں انہوں نے کہا کہ مضر صحت اور غیر معیاری کھانے پینے کی اشیاء بنانے اور فروخت کرنے والوں کیخلاف کریک ڈاؤن جاری رئیگا۔ 
()()()
خبرنامہ نمبر1112/2020
کوہلو19مارچ:۔کوہلو میں تحصیلدار عبدالصمد مری،رسالدار میجر شیر محمد مری نے پولیس و لیویز فورس کی بھاری نفری کے ہمراہ شہر میں غیر معیاری اشیاء کے خلاف کریک ٹاؤن کیا ہے کارروائی کے دوران ہوٹلوں،دوکانوں،بیکریوں،فیکٹریوں سمیت مختلف دوکانوں پر چھاپے کے دوران غیر معیاری اور و زائد المیاد اشیاء بسکٹ،گھی،بوتل، دودھ، جوس،بسکٹ کے کیمیکل،پکوڑے،اوئل،آٹا سمیت دیگراشیاء کو برآمد کرکے دوکانداروں کو بھاری جرمانے عائد کئے گئے۔جبکہ بعض دکانوں کو غیر معیاری اشیاء فروخت کرنے پر سیل کردیا گیا ہے ایسی موقع پر گفتگو کرتے ہوئے تحصیلدار عبدالصمد مری اور رسالدار میجر شیر محمد مری کا کہنا تھا کہ ڈپٹی کمشنر عبداللہ کھوسہ کی خصوصی ہدایت پر کروناوائرس کے پیش نظر ہوٹلوں اور مارکیٹوں کوبند کررہے ہیں جبکہ شہر میں کھانے پینے کی چیزیوں کو باریک بینی سے دیکھ رہے ہیں جہاں صفائی ستھرائی کا فقدان ہوگاانہیں فوری بند کریں گے جبکہ آج سے شہر کے ہوٹلز،بڑی دوکانوں،مارکیٹوں سمیت ایسی جگہوں کو مکمل بند کررہے ہیں جہاں شہریوں کا رش رہتا ہوکیونکہ کروناوائرس جس تیزی کے ساتھ پھیل رہا ہے اس کیلئے بروقت ہنگامی نوعیت کے اقدامات اٹھارہے ہیں کسی کو حفظان صحت کے خلاف اشیاء خوردونوش فروخت کرنے نہیں دیں گے اور ہماری اولین کوشش ہے کہ شہری کروناوائرس سمیت دیگر بیماریوں سے بچ سکیں جس کے لئے ڈپٹی کمشنر کی سربراہی میں ضلعی انتظامیہ فی الفور انتظامات کررہی ہے بعدازاں کارروائی کے دوران برآمد کئے گئے غیر معیاری اشیاء کو شہر سے دور آگ لگا کر تلف کردیاگیا اس موقع پر ایس ایچ او پولیس غلام فرید،میونسپل کمیٹی کے آفیسر جلال خان، پٹواری احمد شاہ،خان محمد سمیت ضلعی آفیسران بھی ر موجود تھے۔
()()()
خبرنامہ نمبر1113/2020
لسبیلہ 19مارچ:۔ڈپٹی کمشنر لسبیلہ حسن وقار چیمہ کی ہدایت پرمحکمہ صحت کی جانب سے ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال اوتھل اور گورنمنٹ جام غلام قادر ہسپتال حب میں  کورونا وائرس سے آگاہی کیلئے انفارمیشن ڈیسک قائم کردیے گئے ہیں اور انسداد کرونا پروگرام کے تحت قائم کئے گئے آئیسولیشن وارڈ اور رومز میں اسپرے کا عمل بھی شروع کردیا گیا ہے۔ڈپٹی کمشنر لسبیلہ حسن وقار چیمہ کے جاری کردہ ہینڈ آؤٹ میں کہا گیا ہے کہ وزیر اعلیٰ بلوچستان اور چیف سیکریٹری کی ہدایت پر لسبیلہ میں ہیلتھ ایمرجنسی پلان کے تحت انسداد کرونا پروگرام کے تحت اوتھل شہر میں اسپرے کیلئے چھ ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں میونسپل کارپوریشن کا عملہ ضلعی محکمہ صحت کی ٹیموں کی معاونت کیلئے خدمات سرانجام دے رہی ہیں،ڈپٹی کمشنر لسبیلہ کی ہدایت پر ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر لسبیلہ ڈاکٹر آصف انور شاہوانی نے ڈی ایچ کیو ہسپتال اوتھل کی لیبارٹری اور انفارمیشن سیل کا افتتاح کیا اور لوگوں میں کورونا وائرس سے بچاؤکے پمفلٹس تقیسم کئے،واضح رہے کہ ڈی ایچ کیو ہسپتال اوتھل، آر ایچ سی بیلہ اور جام غلام قادر ہسپتال حب کی لیبارٹریز فنکنشل نہیں تھیں ڈپٹی کمشنر لسبیلہ حسن وقار چیمہ نے آرایچ سی بیلہ،ڈی ایچ کیو ہسپتال اوتھل اور گورنمنٹ جام غلام قادر ہسپتال حب کی لیبارٹریزکو فوری طور پر فنکشنل کرنے اور مشینری فراہم کرنے کے احکامات جاری کی تھیں ڈی ایچ او نیضلعی انتظامیہ کیاحکامات پرعمل کرتے ہوئے لیبارٹریز کو آپریشنل کردیا ہے لسبیلہ کے عوامی حلقوں نے حکومت بلوچستان اور ضلعی انتظامیہ کے اقدامات پر انکا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا ہے کہ لیبارٹریز کے آپریشنل ہونے سے لوگوں کو اپنے علاقوں میں ٹیسٹ کی سہولیات میسر ہو گئی اب انہیں ٹیسٹ کرانے کیلئے دیگر شہروں کا رخ کرنے کی ضرورت  پیش نہیں آئیگی،ڈپٹی کمشنر لسبیلہ حسن وقار چیمہ کا کہنا ہے کہ سندھ اور بلوچستان کی سرحدی پٹی پر واقع لسبیلہ حساس ضلع ہے۔انشاء اللہ ہماری کوشش ہے کہ لسبیلہ کو کوروناوائرس سے ہرصورت محفوظ رکھا جائے جسکے لیے محکمہ صحت لسبیلہ پی پی ایچ آئی لسبیلہ اور دیگر اداروں سے ملکر اپنے تمام دستیاب وسائل کو بروئے کار لارہے ہیں  انہوں نے کہاکہ ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال اوتھل اور حب  میں انفارمیشن سیل قائم کرنے کا مقصد لوگوں میں کورونا وائرس سے متعلق زیادہ سے زیادہ آگاہی فراہم کرنا ہے کیونکہ کورونا وائرس سے بچنے کیلئے احتیاطی تدابیر لازمی ہیں اس انفارمیشن سیل میں محکمہ صحت کے نمائندگان ہمہ وقت موجود اورہسپتال میں آنے والے ہرشخص کو کورونا وائرس کے متعلق آگاہی اور احتیاطی تدابیر اپنانے کی ترغیب دی جائے گی۔
()()()
پریس ریلیز
کوئٹہ19مارچ:۔بلوچستان قدرتی حوالے سے ایک قدیم تہذیب کا حامل خطہ ہے جہاں زبان ادب ثقافت، تہذیب و تمدن اور رسوم و رواج کے امین لوگ رہتے ہیں۔مہرگڑھ کا بلوچستان اپنی روایتی تہذیبی اور راہ رسم کے ساتھ قائم دائم ہے علاوہ ازیں یہاں کے لوگ زبان و ادب ثقافت تہذیب و تمدن کی ترویج میں اپنا مثبت کردار ادا کر رہے ہیں۔ یہاں مقامی زبانوں میں بلوچی براہوئی، پشتو اور فارسی کے علاوہ قومی زبان کے ادبا، شعراء اور دانشور اپنی بساط کے مطابق کام کر رہے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار ماہر آثار قدیمہ و سیکرٹری ادارہ تحقیق پاکستان پرویز صادق نے  اکادمی ادبیات پاکستان کوئٹہ کے دورے کے موقع پر کیا اس موقع پر ادبا، شعراء اور دانشوروں کے درمیان پرویز صادق سے آثارقدیمہ زبان و ادب ثقافت تہذیب و تمدن کے مختلف پہلوؤں پر گفتگو ہوئی اس موقع پر ریجنل ڈائریکٹر  اکادمی ادبیات پاکستان کوئٹہ افضل مراد تربت یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر عبدالرزاق صابر چیئرمین براہوئی ادبی سوسائٹی عبدالقیوم بیدار تجزیہ نگار،ادیب وشاعر نورخان محمد حسنی، اور بلوچی زبان کے ادیب محمدپناہ بلوچ اور حمید جمال بلوچ موجود تھے اس موقع پر تربت یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر عبدالرزاق صابر نے کہا کہ علم و ثقافت کو جاننے کے لیے ہمیں آثارقدیمہ کے حوالے سے کام کی ضرورت ہے اور بلوچستان میں اس شعبے میں بہت سارے پہلوؤں سے تحقیق کی ضرورت ہے ادارہ تحقیق پاکستان اس سلسلے میں ابتدائی کام کیا ہے اور توقع ہے کہ اس شعبے پر زیادہ سے زیادہ توجہ دی جائے گی۔
()()()
پریس ریلیز
کوئٹہ 19مارچ:۔عبدالحق ولد عبد اللہ خان کلی مر غہ زرکزئی سوری پشین انتقال کرگئے۔ انہیں مکا می قبرستان میں سپرد خاک کردیا گیا ہے۔فاتحہ خوانی کلی سوری پشین میں جاری ہے 
()()()

Share With:
Rate This Article
No Comments

Leave A Comment