خبر نامہ نمبر 186/2019
خضدار18جنوری۔ ایڈیشنل کمشنر قلات ڈویژن امیر فضل اویسی نے کہا ہے کہ پولیو ایک موذی مرض ہے جسے ہر صورت میں ختم کیاجائے اور یہ تب تک ممکن ہے جب تمام اداروں کے سربراہان اس سلسلے میں ایک دوسرے کے ساتھ تعاون اورمشترکہ حکمت عملی میں اپنا کردار اد اکریں کیونکہ یہ ایک قومی مقصد ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے خضدار میں پولیو سے متعلق تشکیل کردہ ڈویژنل ٹاسک فورس کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کے دوران کیا اس موقع پر نیشنل اسٹاپ آفیسر وزیر اعظم سیکرٹریٹ برائے انسداد پولیومہم ڈاکٹر شفیع دانش نے گزشتہ پولیو مہم اور 21تا24 جنوری 2019کو قلات ڈویژن میں شروع ہونے والے پولیو مہم سے متعلق تیاریوں کے حوالے سے ا جلاس کو بریفنگ دی اور بتایا کہ قلات ڈویژن میں 4لاکھ 44ہزار966 پانچ سال سے کم عمر بچوں کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلوانے کا حدف مقررہے اجلاس میں ڈویژنل ڈائریکٹر ہیلتھ ڈاکٹر محمد مراد مینگل ڈپٹی کمشنر شہید سکندر آباد سوراب ڈاکٹر خدائے رحیم میروانی اے ڈی آئی جی پولیس قلات رینج محمد حسن رند اے سی ریونیو قلات ڈویژن انجینئر عائشہ زہری اے ڈی سی خضدار عبدالقدوس اچکزئی اے ڈی سی اے سی مستونگ محمد مدثراے ڈی سی لسبیلہ بادل خان دشتی اے سی قلات محمد ایوب مری ڈویژنل فارسٹ آفیسر محمد اقبال زہری ایس ایس پی قلات دوستین دشتی ایس پی شہید سکند رآباد سوراب منظور احمد بلیدی ایس پی مستونگ عنایت اللہ بگٹی ایس پی آواران کمال خان ڈی ایس پی خضدارمحمد علی کاسی نمائندہ ڈبلیو ایچ اوخضدار ڈاکٹر محمد عمر مینگل نمائندہ ڈبلیو ایچ او قلات ڈاکٹر نصرت اللہ ڈاکٹر ارشاد بلوچ ڈی ایس ایم پی پی ایچ آئی خضدارمجیب بلوچ اے سی پی خضدارعبدالغنی مینگل ڈپٹی ڈائریکٹر لائیو اسٹاک ڈاکٹر محمد انور زہری ڈویژنل ڈائریکٹر لوکل گورنمنٹ حمید اللہ بلوچ ڈی ایچ او خضدار ڈاکٹر سومار خان ڈی ایچ او سوراب ڈاکٹر عبدالحمید ڈی ایچ او قلات ڈاکٹر قمراللہ ڈی ایچ او لسبیلہ ڈاکٹر احمد علی ڈی ایچ او آواران ڈاکٹر نور بخش بزنجو ڈی ایچ او مستونگ ایکسیئن ایریگیشن خضدارشیر محمدنے اجلاس میں شرکت کی ڈپٹی کمشنرز وڈی ایچ اوزنے اپنے اپنے اضلاع میں شروع ہونے والے پولیو مہم کی تیاریوں اور اپنے مسائل و مشکلات سے آگاہ کرتے ہوئے پولیوکے موذی مرض کو قلات ڈویژن سے مکمل ختم کرنے کا عہد کیا ایڈیشنل کمشنر قلات ڈویژن امیر فضل اویسی نے کہا کہ یہ ہم سب کی مشترکہ ذمہ داری ہے کہ ہم پولیو سے مقابلہ کرکے ان سے نجات حاصل کریں ایڈیشنل کمشنر قلات ڈویژن نے محکمہ صحت کے افسران کو ہدایت کی کہ وہ پانچ سال سے کم عمر ننھے بچوں کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلوانے کے ساتھ حفاظتی ٹیکے ہر صورت لگوائیں اور اس بات کا خاص خیال رکھا جائے کہ کو ئی بھی بچہ باقی رہ نہ جائے اس سلسلے میں کسی قسم کی غفلت برداشت نہیں کی جائے گی اور پولیو ٹیموں کی مانیٹرنگ کو بھی یقینی بنایا جائے انہوں نے ڈپٹی کمشنرز کو ہدایت کی کہ وہ پولیو مہم کی از خود نگرانی کریں اس موقع پر ایڈیشنل کمشنر قلات ڈویژن امیر فضل اویسی نے کہا کہ ملک بھر کی طرح قلات ڈویژن سے بہت جلد موذی مرض پولیو کا خاتمہ کردیا جائے گا حکومت تمام دستیاب وسائل بروئے کار لاتے ہوئے پولیو کے خاتمے کے لئے بھر پور کردار اداکررہی ہے تاہم اس قومی مہم میں علماء کرام بلدیاتی نمائندے میڈیا قلم کاروں کا تعاون ہمیں درکار ہوگا ۔
()()()
خبر نامہ نمبر 187/2019
پشین18جنوری۔ ڈپٹی کمشنر میجر (ر) اورنگزیب بادینی نے پشین کے عوام کو پبلک لائبریری کی شکل میں سال نو کا تحفہ دیدیا۔ڈپٹی کمشنر نے پانچ کمروں اور ہزار سے زائد کتابوں پر مشتمل پبلک لائبریری کا افتتاح کردیا اس موقع پر شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ پبلک لائبریری کے قیام کا مقصد محققین ،مورخین دانشوروں اور عوام الناس کی پشتو اور اردو زبان میں مطلوبہ تحقیقی مواد تک رسائی کو سہل بنانا ہے۔ کتاب انتہا پسندی سے لڑنے کا بہترین ہتھیار ہے ہمیں کتاب سے دوستی اپنانی ہوگی جدید دور میں بھی کتابوں کی اہمیت کبھی کم نہیں ہوسکتی انہوں نے کہا کہ ڈی سی پبلک لائبریری کے قیام پر تقریباً پچیس لاکھ روپے لاگت آئی ہے لائبریری کو کتب کی فراہمی میں بلوچستان رورل سپورٹ پروگرام کے نادر گل اور علاقے کے ادیب و شعرا نے کافی معاونت کی ہے کتاب کی اہمیت کو اجاگر کرنے اور مطالعے کی عادت کو اپنانے کیلئے طلباء ،آفیسران ، ملازمین ،نوجوان اور تعلیم یافتہ طبقہ کو مطالعے کے لئے لائبریری میں بہتر ین ماحول فراہم کردیا گیا ہے انہوں نے کہا کہ طالبعلموں کیلئے ڈی سی پبلک لائبریری میں سی ایس ایس اور پی سی ایس کے سمینار ز بھی منعقد کرائے جائیں گے لائبریری کیلئے مزید اسلامک اور ادب سمیت سی ایس ایس اور پی سی ایس کی کتابیں فراہم کریں گے ۔افتتاحی تقریب میں ڈپٹی کلکٹر کسٹمز بلوچستان امان اللہ ترین،اسسٹنٹ کمشنر ندا سیدہ کاظمی، ڈسٹرکٹ چیئرمین محمد عیسیٰ روشان ، ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر سید کلیم اللہ شاہ ، بی آر ایس پی کے ریجنل جنرل منیجر سردار اکبر خان ترین کوارڈنیٹر غلام محمد،زراعت آفیسر فضل الرحمن ترین ، ممتاز ادیب شاعر کریم بریالئی ، پشتانہ مترقی لیکوال کے صوبائی صدر عصمت زہیر ، ڈاکٹر عبداللہ ناشناس، ایپکا کے صدر ضلعی صدر محمد رسول وفا کاکڑ ،انجمن تاجران کے ضلعی جنرل سیکرٹری عبدالباری غرشین صدر نیشنل پریس کلب سمیع ترین اور دیگر شریک تھے ۔افتتاحی تقریب کے شرکاء نے ڈی سی پبلک لائبریری کے قیام پر ڈپٹی کمشنر اورنگزیب بادینی کے اقدام کو سہراتے ہوئے کہا کہ لائبریری کے قیام سے نہ صرف ان کا دیرینہ مسئلہ حل ہوا بلکہ کتب دوستی کے کلچر کو بھی فروغ ملے گا معاشرے کے ہر فرد کا فرض بنتا ہے کہ وہ پبلک لائبریری کیلئے کتابیں فراہم کریں ۔
()()()
خبر نامہ نمبر 188/2019
گوادر 18جنوری :۔انسداد پولیو مہم کے حوالے سے ایک اجلاس منعقد ہوا اجس میں انسداد پولیوکے صوبائی کوآرڈینٹر گیدی محمد صوبائی ایمرجنسی آپریشن سینٹر کے کوآرڈینٹر راشد رزاق ڈپٹی کمشنر کیپٹن ر محمد وسیم ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر جنرل انیس طارق محکمہ صحت کے ڈاکٹر آصف شاہوانی و ایم ایس سول ہسپتال ڈاکٹر عبدالطیف ڈبلیو ایچ او کے ڈاکٹر نوروز بلوچ اور دیگر افسران بھی موجود تھے، اجلاس میں انسداد پو لیو مہم کے مختلف امور پر تبادلہ خیال کیا گیا اجلاس میں افسر صحت ڈاکٹر محمد آصف شاہوانی نے بتایاکہ ضلع بھر کے تمام داخلی اور خارجی راستوں پر پولیو ٹیمیں 5 سال سے کم عمر بچوں کو پولیو کے قطرے پلانے پر معمور ہیں،اس کے علاوہ رومنگ ٹیمیں بھی تشکیل دی گئیں ہیں جو گھرگھر جا کر بچوں کو پولیو کے قطرے پلائے گئیں۔ اجلاس میں اس امر پر زور دیا گیا ہے کہ انسداد پولیو مہم میں مختلف طبقہ فکر کے لوگوں کی شرکت کو یقینی بنایاجائے تاکہ ہم پولیو سے پاک معاشرے کی تشکیل دینے میں کامیاب ہوسکے اجلاس میں عوام سے اپیل کی گئی ہیکہ وہ محکمہ صحت اور ڈبلیو ایچ او کے ساتھ بھرپور تعاون کریں اور پو لیو کے خاتمے میں اپنا کردار ادا کریں۔
()()()
خبر نامہ نمبر 189/2019
کوئٹہ 18جنوری :۔صوبائی سیکرٹری ٹرانسپورٹ اور کمشنر کوئٹہ ڈویژن کی خصوصی ہدایت پر سیکرٹری آر ٹی اے کی نگرانی میں سرچ لائٹس اور لوڈنگ تیز رفتاری کا مظاہرہ کرنے اور اضافی سیٹ لگانے والی گاڑیوں کے خلاف میاں غنڈی چیک پوسٹ کوئٹہ کراچی قومی شاہراہ پر کاروائی کرتے ہوئے 5کوچز ،8 ٹرک،10پک آپ اور 30 ویگنوں کو اضافی سیٹ لگانے پر چالان کئیے اس کے علاوہ پبلک اور مال بردار گاڑیوں پر لگی295 سرچ لائٹس بھی اتار دیے گئے اس موقع پر سپرنٹنڈ نٹ آ ر ٹی اے کے علاوہ ٹریفک پولیس ڈسٹرکٹ پولیس ایکسائز اور لیویز کا عملہ بھی موجود تھا۔سپرنٹنڈنٹ آر ٹی اے کوئٹہ نے کہا کہ عوامی شکایات اور حادثات کی روک تھام کے سلسلے میں پبلک گاڑیوں پر لگی سرچ لائٹس اور اضافی سیٹس کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جا رہی ہے انہوں نے کہا کہ ویگن مالکان اضافی سیٹس لگا کر عوام کو دوران سفر مشکلات سے دو چار کر رہے ہیں اس لیے قانون کے مطابق اضافی سیٹس جلدازجلد ہٹائی جائے وگرنہ گاڑیوں کے مالکان کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی کرتے ہوئے ان کے روٹ پرمٹ منسوخ کیے جائیں گے انہوں نے مزید کہا کہ قومی شاہراہ پر سرچ لائٹس کے خلاف کارروائی میں تیزی لائی جا رہی ہے جبکہ اور لوڈنگ اور تیز رفتاری کا مظاہرہ کرنے والوں کے خلاف بھی کارروائی کاعمل جاری رہے گا۔
()()()
خبر نامہ نمبر 190/2019 
نصیرآباد18جنوری :۔گورنمنٹ آف بلوچستان پہلا آل ڈسٹرکٹ نصیرآباد اسپورٹس کلچرل فیسٹول 2019کرکٹ ٹورنامنٹ رنگا رنگ تقریبات کے ساتھ شہید عبدالغفار کرکٹ اسٹیڈیم میں شروع ہوگیا ڈپٹی کمشنر نصیرآباد قربان علی مگسی نے شاٹ لگا کر فیسٹول کا باقاعدہ افتتاح کردیا افتتاحی تقریب میں چیئرمین میونسپل کمیٹی میر غلام نبی عمرانی ،قبائلی شخصیت سخی عبدالروف لہڑی ،اے ایس پی فہد کھوسہ،اسسٹنٹ کمشنر ڈیرہ مرادجمالی غلام حسین بھنگر،ڈی ایچ او نصیرآباد ڈاکٹر عبدالمنان لاکٹی ،ایم ایس ڈاکڑ ایاز جمالی، سپورٹس آفیسر رحیم بخش جویا سمیت دیگر آفیسران اور اسپورٹس مین نے شرکت کی افتتاحی تقریب سے ڈپٹی کمشنر نصیرآباد قربان علی مگسی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کھلاڑی کسی بھی ملک کے سفیر ہوتے ہیں جہاں کھیل کے میدان آباد ہیں وہاں ہسپتال ویرا ن ہوجاتے ہیں وزیراعلی بلوچستان جام کمال خان نے اسپورٹس جیسی صحت بخش سرگرمیوں کے انعقاد کے لئے فنڈز فراہم کیئے ہیں جن کو مدنظر رکھکر ہم نے فیصلہ کیا ہے کہ چندکلبوں کو ساما ن دینے کے بجائے ایک منفرد اور معیاری اسپورٹس کلچر فیسٹول کا انعقاد کریں جس میں تمام کھلاڑیوں کو کھیلنے کا اور اپنا ٹیلنٹ اجاگرکرنے کا موقع ملے اور یہ یقیناًاس طرح کے فیسٹیول یہاں کے کھلاڑیوں کی دیرینہ خواہش تھی نصیرآباد اسپورٹس کلچرل اپنی نوعیت کا ضلع کی سطح پر پہلا ایونٹ ہے جس میں ہم نے کوشش کی ہے کہ تمام کھیل کے رجسٹرڈ کلب وکھلاڑیوں کو کھیلنے کا موقع دیں اس فیسٹیول میں ،بیڈ منٹن ،کراٹے ،ایتھلیٹس ،اور رسہ کشی لوکل سطح کے رویتی کھیل ملاکھڑا ،کبڈی بھی شامل ہیں ان تمام کھیلوں کے مقابلے 10دنوں تک جاری رہیں گے اس کے علاوہ اختتامی تقریب میں میوسیقی ،مشاعرہ اور کتب میلہ بھی ہمارے فیسٹیو ل کا حصہ ہوں گے۔
()()()

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Post comment