خبرنامہ نمبر 548/2019
پشین 17فروری :۔میجر سیکٹر نارتھ عبدالصمد کاکڑ نے کہا کہ جنگلات کسی بھی ملک کی معیشت کا لازمی جز ہیں ملک کی متوازن معیشت کیلئے ضروری ہے کہ اس کے 25فیصد رقبے پرجنگلات ہوں جنگلات قدرتی وسائل کا بہت بڑا ذریعہ ہیں ایک درخت لگانے کے کئی فوائد ہیں کاربن ڈائی آکسائیڈ جذب اور آکسیجن مہیاء کرتا ہے ساتھ ہی درجہ حرارت میں کمی لانے سمیت ماحول کو خوبصورت بناتا ہے درخت شدید دھوپ میں ہمیں سایہ فراہم کرتا ہے ضلع پشین کو سرسبزوشاداب بناکر دم لیں گے وہ سیکٹر ہیڈ کوارٹرنارتھ پشین کے زیر اہتمام بند خوشدل خان ڈیم کے قریب پودے لگانے کے موقع پر خطاب کررہے تھے اس موقع پر رکن صوبائی اسمبلی حاجی اصغر ترین رینج فارسٹ آفیسر اجمل خان کاکڑ بی ار ایس پی کے آر پی ایم سردار اکبر خان ترین قبائلی رہنما حاجی ملک نعمت اللہ ترین(علی زئی) جے یو آئی کے سرپرست اعلیٰ مولوی حبیب اللہ آغا تحصیل جنرل سیکرٹری سلیم شاکر حاجی عبدالواجد ترین ڈی ایف اے کے صدر ملک حمید اللہ ترین انجمن تاجران کے جنرل سیکرٹری سید عبدالباری غرشین متحدہ ترین قومی موومنٹ کے صوبائی جنرل سیکرٹری ملک حسام الدین ترین محبوب ترین پاکستان مسلم لیگ (ن)کے سعد اللہ ترین دولت ترین تحریک نوجوانان پاکستان کے ضلعی صدر بشیر خانزادہ تحریک نوجوانان نظریاتی کے سرکردہ نجیب ترین نوجوانان ایکشن کمیٹی کے رہنماء شمس ترین سماجی رہنما حاجی حسن بٹے زئی اور محب ترین سمیت بڑوں اور بچوں کی بڑی تعداد موجود تھی انہوں نے کہا کہ کمانڈنٹ سیکٹر نارتھ بریگئیڈئیر لیاقت علی کی خصوصی ہدایت کی روشنی میں پشین شہر اور انکے اطراف میں پودے لگارہے ہیں درختوں کے بے تحاشہ فوائد ہے جیسا کہ ہمارے روزمرہ کے استعمال کاغذ میں بھی درخت استعمال ہورہے ہیں اور زمینوں کا کٹاؤروکتا ہے طوفانی سیلاب میں رکاوٹ بنتا ہے شدید سردی سے بچاو کیلئے درخت ایندھن کے طور پر استعمال ہوتا ہے اس لئے جتنا ممکن ہوسکیں ہمیں درختوں کی پیداوار بڑھانی ہوگی انہوں نے کہا کہ درخت ایک قدرتی نعمت ہے جس کے فوائد سے ہمیں فائدہ لینے کی اشد ضرورت ہے سرسبز پاکستان اور سرسبز بلوچستان میں ہم سب کی ذمہ داری بنتی ہے کہ ہم ملک و قوم کو صاف شفاف رکھنے سمیت جگہ جگہ پودے لگائیں تاکہ حب الوطنی کا ثبوت دے سکیں تقریب کے دوران مقامی بچوں نے ہاتھوں میں قومی پرچم اٹھائے رکھے تھے اورمختلف ٹیبلوز پیش کئے تقریب کے شرکاء میں انعامات بھی تقسیم کئے گئے۔
()()()
خبرنامہ نمبر549/2019 
پشین 17فروری :۔ڈپٹی کمشنر میجر(ر)اورنگزیب بادینی نے کہا کہ معذور افراد معاشرے کا حصہ ہے جنھیں ہمیشہ قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں پشین میں آباد تمام قبائل آپس میں متحد ہوکر پشین کی تعمیر وترقی میں ہمارا ساتھ دیں حاکم نہیں عوام کی خدمت عزیز ہیں کسی بھی ملازم کی ڈیوٹی میں غفلت برداشت نہیں کی جائیگی قبائلی معتبرین رنجشوں کے خاتمے کیلئے کردار ادا کریں معاشرے کے سرکردہ افراد اپنی زندگی تعلیم اور شعور کے فروغ کیلئے وقف کردیں انتظامیہ اپنی عوام کیساتھ ملکر قیام امن کیلئے تمام وسائل بروئے کار لارہی ہیں ضلع پشین میں مزید بہتری لانے کیلئے سب کردار ادا کریں وہ ڈی سی کمپلیکس میں معذور افراد میں تقسیم ویل چیئرز کی ایک تقریب سے خطاب کررہے تھے رکن صوبائی اسمبلی حاجی اصغر ترین قاضی مولوی ہمایوں مولوی حبیب اللہ آغا مولوی عزیز اللہ محمد سلیم شاکر اور محب ترین بھی موجود تھے انہوں نے کہا کہ انسان بہت قیمتی ہے ہمیں بلاتعصب انسانیت کی خدمت پر ترجیح دینی ہوگی وقت و حالات کو مدنظر رکھتے ہوئے نادار اور غریب لوگوں کو اپنی خوشیوں میں شامل کرنے کو اپنی ذمہ داری سمجھتے ہیں ضلع پشین کو ترقی کی دوڑ میں ہمیشہ کامیاب ہونا دیکھنا چاہتے ہیں عوام کے جائز توقعات پر پورا اترنا ہمارا فرض ہے معذور افراد معاشرے کے آنکھ وکان کی حیثیت رکھتے ہیں جنھیں ترقی کے میدان میں مایوس نہیں دیکھنا چاہتے انہوں نے کہا کہ سرکاری محکوں میں معذور کوٹہ اس بات کی عکاسی کرتا ہے کہ حکومت معذوروں کو اپنا سمجھتے ہیں اور انہیں روزگار کے مواقع فراہم کرنے میں اہم کردارادا کررہے ہیں دورجدید میں بشری لحاظ سے معذورافراد نے ملک و قوم کیلئے جتنی خدمات کئے ہیں وہ کسی سے ڈھکی چھپی نہیں انسانیت کی بلاتریق خدمت میں اللہ تعالیٰ کی رضامندی شامل ہے ۔ 
()()()
خبرنامہ نمبر550/2019 
واشک17فروری :۔ڈسٹرکٹ سپورٹ منیجر پی پی ایچ آئی واشک سمیع عطا بلوچ نے کہا ہے کہ عوام کو ان کے دہلیز پر صحت کے بنیادی سہولیات کی فراہمی کے لیئے کوشاں ہیں اس سلسلے میں پی پی ایچ آئی بلوچستان کے سی ای او کے خصوصی ہدایت کے پیش نظر دیہی علاقوں کے لوگوں کو بروقت طبی امداد دینے کے لئے بیسک ہیلتھ سینٹر میں عملے کے حاضری کو یقینی بنانے کے علاوہ ادویات کی فراہمی کو ممکن بنانے کے لیے اقدامات کی جارہی ہیں ان خیالات کا اظہار انہوں نے واشک کے مختلف بنیادی مراکز صحت کے دورے کے موقع پر کیا بی ایچ یوز کے بنیادی مسائل کے حل کی یقین دہانی کرانے سمیت کمونیٹی کے تعاون اور تجاویز سے جتنی ممکن ہوسکے مریضوں کو ان کے دہلیز پرصحت کے سہولیات دی جاسکے۔انھوں نے کہا کہ عملے کے حاضری کو یقینی بنانے کے لیے کوئی کوتائی برداشت نہیں کی جائے گی۔غیر حاضر عملے کے خلاف قانونی کارروائی کی جائیگی۔انھوں نے کہا کہ ضلع واشک کے اکثریتی آبادی دیہی علاقوں میں آباد ہیں اسی وجہ سے دیہی علاقوں میں قائم بی ایچ یوز کے ذریعے ڈاکٹرز اور پیرامیڈیکل اسٹاف اپنی خدمات بہتر طور پر سرانجام دینے میں کوئی کسر نہ چھوڑیں۔
()()()
خبرنامہ نمبر551/2019 
بارکھان17فروری :۔صوبائی وزیر خوراک وبہبود آبادی سردار عبدالرحمن کھیتر ان نے یونین کونسل چھپر کا دورہ کیا صوبائی وزیر کا رکنی پہنچنے پر یونین کونسل چھپرکے قبائلی معتبرین جن میں وڈیرہ عبداللہ وگہ ،حاجی سید خان وگہ،حاجی جلال خان مہمہ،سردار محمد خان مہمہ،بزدارقبائل کے سردار رفیق بزدار،وڈیرہ ظاہر خان بزدار،ملک یار محمد،فاروق بزدار ودیگر معتبرین اور عوام نے ان کا شاندار استقبال کیااور ایک بڑے قافلے کی شکل میں یونین کونسل چھپر گئے ،ان کے ہمراہ سردار ذادہ طاہر شاہ کیھتران،سردار ذادہ سلام شاہ کیھتران ،پی ایچ ای کے ایکسین ملک نسیم زرکون ،ایریگیشن کے ایس ڈی او امیر محمد کیھتران ودیگر محکموں کے آفیسران بھی ان کے ہمراہ تھے ۔اس موقع پر صوبائی وزیر نے کہا کہ میرے دورے کا مقصد گھر گھر جا کر لوگوں سے مسائل پوچھنا ہے اور وسائل کے اندہ مسائل حل کرنے کی کوشش کروں گا،صوبائی حکومت عوام کے مسائل حل کرنے میں سنجیدہ ہے جس میں تعلیم،صحت،پینے کے صاف پانی سر فہرست ہے اور حکومت اجتماعی سکیمات کو ترجیح دے رہی ہے تاکہ زیادہ سے زیادہ لوگ اس سے مستفید ہو ں ،صوبائی وزیر نے اپنے دورے کا آغاز بزدار علاقے سے کیا اور وہاں خدا بخش بزداراور علی گل بزدار کو پرائمری سکول کی بلڈنگ دینے کا اعلان کیا ،بستی یار محمد لنڈ کیلئے لائیوسٹاک ہسپتال اور سول ڈسپنری دینے کا اعلان کیا ۔صوبائی وزیر نے مہمہ صمد خان مین روڈ سے کرڑ بزدار تک 6کلو میٹر پختہ روڈ بنانے اور مہمہ پختہ روڈ جو ٹوٹ پوٹ کا شکار تھا کو بھی مرمت کرنے کا اعلان کیا ۔بیروزگاری کے مسئلے پر صوبائی وزیر نے کہا کہ حکومت نے تقریباً 25ہزار ملازمتیں میرٹ پر دینے کا اعلان کیا ہے جس سے بیروزگاری میں کافی حد تک کمی آئی گی بزدار علاقے میں وٹ والی ڈیم کا اعلان اور ذمینداروں میں ڈوزر کے گھنٹے تقسیم کئے اور آخر میں وڈیرہ عبداللہ وگہ کی طرف سے ان کے اعزاز میں دئیے گئے عشائیہ میں شرکت کی ۔
()()()

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Post comment