خبر نامہ نمبر 1367/2019
کوئٹہ 15اپریل ۔ گورنر بلوچستان امان اللہ خان یاسین زئی نے کہا ہے کہ بلوچستان اپنے جغرافیائی محل وقوع کی وجہ سے منفرد حیثیت کا حامل صوبہ ہے ۔ افغانستان او ر ایران کے ساتھ طویل سرحدوں کی وجہ سے یہاں امن و امان کی صورتحال پر قابو پانا خاصا مشکل ہے لیکن یہ بات خوش آئند ہے کہ افواج پاکستان اور دیگر سیکیورٹی اداروں کی قربانیوں اور خدمات کی وجہ سے ملک و صوبے میں امن و امان کی صورتحال میں کافی بہتری آئی ہے ۔ انہوں نے افغان مہاجرین سے متاثرہ علاقوں میں تعلیم اور صحت کی سہولیات کی فراہمی اور جدید مہارتوں کو سیکھانے سے متعلق یو این ایچ سی آر کی کاوشوں کو سراہا ۔ یہ بات انہوں نے پیر کے روز گورنر ہاؤس کوئٹہ میں یو این ایچ سی آرکی کنٹری نمائندہ (MS.RUVENDRINI MENIKDIWELA) کی قیادت میں ایک وفد سے بات چیت کرتے ہوئے کیا ۔ ملاقات کے دوران خطے کی مجموعی صورتحال ، پاک افغان بارڈر مینجمنٹ اور افغان مہاجرین کی رجسٹریشن پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔ اس موقع پر گورنر نے کہا کہ امن پورے خطے کی اشد ضرورت ہے ۔غیر رجسٹرڈ افغان مہاجرین کی مکمل رجسٹریشن سے نہ صرف امن و امان کی صورتحال پر مثبت اثرات مرتب ہوں گے بلکہ اس سے مستقبل کی منصو بہ بندی کیلئے بھی مدد ملے گی ۔ یو این ایچ سی آر کی کنٹری نمائندہ نے پاکستان کی حکومت اور عوام کا شکریہ ادا کیا کہ وہ پچھلے تقریباً چار عشروں سے افغان مہاجرین کی دیکھ بھال کر رہے ہیں۔ یو این ایچ سی آر کی نمائندہ نے حالیہ ہزار گنجی بم دھماکے میں بے گناہ شہریوں کی شہادت پر تعزیت کی اور ان کے سوگوار خاندانوں سے یکجہتی و ہمدردی کا اظہا ربھی کیا۔ 
()()()
خبر نامہ نمبر 1368/2019 
کوئٹہ 15اپریل ۔ گورنر بلوچستان امان اللہ خان یاسین زئی نے کہا ہے کہ کسی بھی شعبہ زندگی میں ہم جدید تعلیم کے بغیر ترقی نہیں کرسکتے ۔ تخلیقی صلاحیتوں میں نکھار پیدار کرنے کیلئے نوجوان میں تنقید ی شعور اجاگر کرنے ، نیا سوال اٹھانے کا جذبہ ابھارنے اور جدیدعلم و تحقیق سے بھرپور استفادہ حاصل کرنا ہوگا۔ ان خیالا ت کا اظہار انہوں نے سو موار کے روز گورنر ہاؤس کوئٹہ سہیل خٹک کی تخلیقیت اور قیادت کے اوصاف پر پر یزنٹیشن کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ گورنرامان اللہ خان یاسین زئی نے کہا کہ نئی تحقیق و تخلیق کے ثمرات کومعاشرے کے عام لوگوں تک پہنچانا ہی لائق تحسین عمل ہے ۔ انہوں نے صوبے کے تمام محققین اور پی ایچ ڈی اسکالرز پر زور دیا کہ وہ اپنے علم و تجربے کو معاشرے میں معاشی و سماجی تبدیلی کیلئے بروئے کار لائیں ، نوجوانوں کی پوشیدہ صلاحیتوں کو اجاگر کریں تاکہ وہ عملی زندگی میں پل پل بدلتی دنیا کے نئے چیلنجز کا بھرپور مقابلہ کرنے کی جانب مائل ہوسکیں ۔ اس ضمن میں ضروری ہے کہ حکومت کی جانب سے فراہم کردہ تعلیمی سہولتوں کو عوام کی فلاح و بہبود کیلئے بروئے کار لائیں۔ 
()()()
خبر نامہ نمبر 1369/2019 
کوئٹہ 15اپریل ۔ڈپٹی کمشنر قلات کے ایک اعلامیہ کے مطابق زینت بی بی دختر عبدالصمد قوم علی زئی پتہ کو ہک قلات لوکل سر ٹیفکیٹ نمبر 205/7(1)LC/98 تاریخ اجراء 31 مارچ 1998 انکی اپنی درخواست پر منسوخ کیا جاتا ہے ۔
()()()
خبر نامہ نمبر 1370/2019 
کوئٹہ 15اپریل ۔ چیئرمین قائمہ کمیٹی برائے زراعت و کو آپریٹو سوسائٹی حیوانات ، ڈیری ڈیو یلپمنٹ ، ماہی گیری و خوراک میر یو نس عزیز زہری نے کہا ہے کہ وزیر اعلیٰ بلوچستان کی ہدایت کی روشنی میں قائمہ کمیٹیوں کو فعال بنایا جارہا ہے اس کیلئے ضروری ہے کہ متعلقہ محکموں کے سربراہ اپنے محکموں کی کارکردگی کو بہتر بنائیں ۔ ان خیالات کا اظہا ر انہوں نے کمیٹی کے تعارفی اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا ۔ اجلاس میں رکن صوبائی اسمبلی نصیر احمد شاہوانی ، اصغر خان ترین ، شکیلہ قاضی ، لیلیٰ ترین اور متعلقہ محکموں کے سربراہوں اور نمائندوں نے شرکت کی ۔ متعلقہ محکموں کے سر براہوں نے اپنے اپنے محکموں کے بارے میں جاری ترقیاتی اسکیموں، درپیش مسائل اورآئندہ کے لائحہ عمل کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دیئے۔ چیئرمین قائمہ کمیٹی نے ہدایت جاری کرتے ہوئے کہا کہ قائمہ کمیٹی کے آئندہ اجلاسوں میں متعلقہ محکموں کے سیکریٹریز اپنی حاضری کو یقینی بنائیں۔ 
()()()
خبر نامہ نمبر 1371/2019 
کوئٹہ 15اپریل ۔ ڈپٹی کمشنر خضدار کے ایک اعلامیہ کے مطابق نگہت نبی ولدیت عبدالنبی قوم تراسانی خضدار لوکل سر ٹیفکیٹ نمبر 2639/LC/TM/13/KZ تاریخ اجراء 24 ستمبر 2002 انکی اپنی درخواست پر منسوخ کیا جاتا ہے ۔ 
()()()
خبر نامہ نمبر 1372/2019
موسیٰ خیل15اپریل ۔ڈپٹی کمشنر منیر احمد خا ن کاکڑ کی خصوصی ہدایت پر حالیہ شدید بارشوں کی وجہ سے کسی بھی ہنگامی صورت حال سے بروقت نمٹنے کیلئے اسسٹنٹ کمشنر ضلع موسی خیل محمد احسن انور مہناس کی زیر نگرانی کنٹرول روم کا قیام عمل میں لایا گیا ہے ،ضلع موسیٰ خیل کے عوام کو مطلع کیا جاتا ہے کہ بارشوں سے ہونے والے نقصانات یا کسی ہنگامی حالت کی صورت میں درج ذیل نمبروں پر فوری اطلاع کریں تاکہ ضلعی انتظامیہ بروقت پہنچ کر مدد فراہم کر سکے ضلع موسیٰ خیل کے عوام درج ذیل نمبروں پر رابطہ کریں،03321325066 ۔03412496687 ۔0828611055۔0828611071۔0828611103۔03337995277 ۔03338176465 ۔0828611049۔03448282406۔03426400023۔03455413858 ۔0828611247۔03327889538
()()()
خبر نامہ نمبر 1373/2019
نصیر آباد 15اپریل۔کمشنر نصیرآباد ڈویژن جاوید اختر محمود کی زیر صدارت بلوچستان عوامی ڈویلپمنٹ پروگرام کے تحت اجلاس منعقد ہوا اجلاس میں ڈپٹی کمشنر نصیرآباد ظفر بلوچ ڈپٹی کمشنر صحبت پور محمدیونس سنجرانی ڈپٹی کمشنر جعفرآباد آغا شیر زمان خان ڈپٹی کمشنر جھل مگسی محمدرمضان پلال ڈپٹی کمشنر کچھی سلطان احمد بگٹی ایس ای ایریگیشن ریاض بلوچ بی اینڈ آر کے فاروق ترین، احمد نواز جتک سمیت دیگر آفیسران نے شرکت کی اجلاس میں تمام ڈپٹی کمشنر نے اپنے اپنے اضلاع کی عوامی اسکیمات کے متعلق کمشنر نصیر آباد ڈویژن کو آگاہ کیا۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کمشنر نصیرآباد ڈویژن جاوید اختر محمود نے کہا کہ نصیر آباد ڈویژن میں 700 ملین روپے کی لاگت سے عوامی ترقیاتی کام کرائے جائیں گے تمام اضلاع میں ڈپٹی کمشنرز کو ترقیاتی کاموں کا پروجیکٹ ڈائریکٹر بنایا گیا ہے تاکہ عوام کے مسائل احسن طریقے سے حل ہوں ترقیاتی کاموں میں کسی قسم کی کوتاہی یا لاپرواہی ہرگز برداشت نہیں کی جائے گی عوام کے مفاد میں ترقیاتی کام کرائے جائیں گے اجتماعی نوعیت کے کاموں کو زیادہ فوقیت دی جائے انہوں نے کہاکہ صحت، تعلیم، آبنوشی، نکاسی آب جیسے دیگر عوامی مسائل پر کام کرائے جائیں انہوں نے کہا کہ ہم سب کی اولین ذمہ داری ہے کہ عوام کیلئے بہتر سے بہتر انداز میں ترقیاتی کام کرائیں کمشنر نصیرآبادنے کہا کہ ترقیاتی کاموں کی مد میں فراہم کی جانے والی رقوم میں کسی قسم کی خیانت کرنے کی کسی کو اجازت نہیں دی جائے گی ڈویژن بھر میں عوام کی ضروریات کو مدنظر رکھتے ہوئے ترقیاتی اسکیمات شامل کی جائیں ترقیاتی کاموں میں صحت اور تعلیم کے شعبے میں خصوصی دلچسپی لی جائے تاکہ صحت مندانہ زندگی کی فراہمی میں پیش آنے والی دشواریوں کا ازالہ کیا جا سکے عوام کو بہتر انداز میں صحت کی سہولیات کی فراہمی انفراسٹرکچر کی بحالی اور آبنوشی جیسے بے ہنگم بنیادی مسائل کا تدارک کیا جا سکے۔
()()()
پریس ریلیز 
کوئٹہ15اپریل ۔پرنسپل مکران میڈیکل کالج تربت کے پریس ریلیز کے مطابق سیکنڈ ایئر ایم بی بی ایس کے طلباء و طالبات کو ہدایت کی جاتی ہے کہ انکی باقاعدہ کلاسز کا آغاز مورخہ 08 اپریل 2019 بروز سوموار سے ہو چکا ہے لہٰذا تمام طلباء و طالبات اپنی حاضری کو یقینی بنائیں۔ 
()()()