خبر نامہ نمبر 162/2019
کوئٹہ 16جنوری:۔گورنر بلوچستان امان اللہ یاسین زئی نے کہا کہ معاشرے میں روشنی بکھیر نے ،نا خو اندگی کی شرح کا خاتمہ کرنے اور ایک پسماندہ و فر سودہ معاشرے کو روشن خیال اور ترقی یافتہ معاشرے کی جانب راغب کرنے میں اساتذہ اکرام کا کلیدی کردار ہے لہذا ضروری ہے کہ پڑھے لکے او رمتعدل افراد کو آگے بڑھ کر ایک صحت مند معاشرے کے قیام کیلئے بھرپور کردار ادا کرنا چا ئیے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے ڈپٹی سپیکر بلوچستان اسمبلی سردار بابر موسیٰ خیل کی قیادت میں بلوچستان ایجوکیشن فا ونڈ یشن کے اساتذہ اکرام کت وفد نے ملاقات کی ۔ گورنر نے کہا کہ معاشی طور پر آسودہ اُستا د ہی طلباء وطلبات کے ازہان کوجدید عملی جہاں کی روشنی سے روشن کرسکتا ہے اس ضمن میں موجود حکومت تمام سرکاری اور نجی تعلیمی اداروں کو جدید خطوط پر استو ار کرنے کیلئے پرعزم ہے ۔ وفد نے کنڈیکٹ کی بنیاد پربلوچستان ایجو کیشن فا ونڈیشن کیلئے فرائض سر انجام دینے والے اساتذہ اکرام کے درپیش مشکلات سے آگاہ کیا ۔گورنر نے ان کے مسائل ومشکلات کو بڑ ے غور اور توجہ سے سُنا اور ان کے حل کیلئے ہر ممکن تعاون کا یقین دلایا ۔
()()()
خبر نامہ نمبر 163/2019
کوئٹہ16جنوری :۔وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے کہا ہے کہ صوبے کے نوجوانوں اوربچوں میں کھیل اور دیگر شعبوں میں آگے بڑھنے کا عزم اور صلاحیتیں موجود ہیں اور سہولتوں کی کمی کے باوجود اپنی بہترین کارکردگی اورصلاحیتوں کا مظاہرہ کررہے ہیں، حکومت انہیں اپنی صلاحیتوں کے اظہار کے بھرپور مواقع فراہم کرے گی، ان خیالات کا اظہار انہوں نے دکی سے تعلق رکھنے والے ننھے فٹبالر احسان اللہ سے ملاقات کے دوران بات چیت کرتے ہوئے کیا، صوبائی وزراء، رکن قومی اسمبلی سردار اسرار ترین اور اراکین صوبائی اسمبلی بھی پر موجود تھے، ننھے فٹبالر نے اس موقع پر فٹبال کو ککس لگانے کا مظاہرہ پیش کیا۔ وزیراعلیٰ اور صوبائی وزراء نے سات سالہ احسان اللہ کے فن کو سراہتے ہوئے انہیں صوبے کا فخر قرار دیا جبکہ وزیراعلیٰ نے کہا کہ حکومت احسان اللہ کو تربیت کی فراہمی کے لئے کراچی بھجوائی گی، انہوں نے فٹبالر بچے کو فٹبال کٹ، جوتے اور سووینیئر کے علاوہ ایک لاکھ روپے نقد انعام دیا اور ننھے فٹبالر کے ساتھ فٹبال بھی کھیلی۔ واضح رہے کہ احسان اللہ متواتر دو منٹ میں فٹبال سے 221ککس لگاکر ہوا میں رکھنے کی صلاحیت رکھتا ہے اور مستقبل میں فٹبال کے کھیل میں ملک اور صوبے کا نام روشن کرنے کا خواہشمند ہے۔ 
()()()
خبر نامہ نمبر 164/2019
کوئٹہ16جنوری :۔وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان سے چینی کمپنی چائنا کنسٹرکشن اینڈ انجینئرنگ کارپوریشن کے پاکستان میں ڈائریکٹر مسٹر جاؤ فان (Mr. Gao fan)نے بدھ کے روز یہاں ملاقات کی جس میں سی پیک کے تناظر میں بلوچستان میں تعمیرات، بنیادی ڈھانچہ، مواصلات اور صنعتی شعبہ میں شراکت داری کی بنیاد پر ترقیاتی منصوبوں میں تعاون کے فروغ پر بات چیت کی گئی، صوبائی وزراء اور اراکین اسمبلی بھی اس موقع پر موجود تھے، چینی کمپنی کے ڈائریکٹر نے سی پیک منصوبے میں بلوچستان کی اہمیت سے اتفاق کرتے ہوئے مختلف شعبوں میں منصوبے شروع کرنے میں دلچسپی کا اظہار کیا اور بتایا کہ ان کی کمپنی سی پیک میں شامل ایسٹرن کوریڈور کے ایم 5سیکشن کی تعمیر کا کام کررہی ہے جو تکمیل کے مراحل میں ہے، انہوں نے سی پیک کے مجوزہ منصوبے نوکنڈی، ماشکیل، پنجگور شاہراہ پر کام کرنے میں دلچسپی ظاہر کی اور کہا کہ منصوبے پر چین کے سوفٹ لون یا بی او ٹی کی بنیاد پر کام کا آغاز کیا جاسکتا ہے،انہوں نے کہا کہ ان کی کمپنی گوادر ماسٹر پلان کے تحت گوادر میں بنیادی ڈھانچہ کی فراہمی کے منصوبوں پر بھی کام کرنے میں دلچسپی رکھتی ہے، اس موقع پر بات چیت کرتے ہوئے وزیراعلیٰ نے کہا کہ صوبائی حکومت بلوچستان کے مفاد کے مطابق مختلف شعبوں میں شراکت داری کے تحت منصوبے شروع کرنے کا خیرمقدم کرے گی، خاص طور سے سی پیک کی مجوزہ مغربی راہداری، بلوچستان کی حکومت اور عوام کے لئے بے پناہ اہمیت رکھتی ہے اور وزیراعظم نے ا س منصوبے پر کام شروع کرنے اور ژوب تا کراچی دورویہ شاہراہ کی تعمیر کی یقین دہانی کرائی ہے، وزیراعلیٰ نے چینی کمپنی کو نوکنڈی، ماشکیل، پنجگور شاہراہ اور منرل کوریڈور کے علاوہ بوستان، چمن، کوئٹہ، حب اور گوادر میں انڈسٹریل اور ایکسپورٹ پروسیسنگ زونز کے قیام کے منصوبوں پر کام کرنے کی دعوت دی، چینی کمپنی کے ڈائریکٹر نے کہا کہ جلد ان کی کمپنی کے ماہرین بلوچستان کا دورہ کرکے مجوزہ منصوبوں کی سٹڈی کریں گے اور فزیبیلیٹی رپورٹ تیار کی جائے گی، چینی کمپنی کے ڈائریکٹر نے اس موقع پر وزیراعلیٰ کو چیئرمین ماؤ کا مجسمہ پیش کیا۔ 
()()()
خبر نامہ نمبر 165/2019 
کو ئٹہ 16جنوری:۔صوبائی مشیر وزیراعلیٰ برائے لائیوسٹاک مٹھا خان کاکڑ نے کہا ہے کہ عوام کی بلاامتیاز خدمت ہمارا اولین فرض ہے علاقے کی یکساں ترقی اور مسائل کے حل پر یقین رکھتے ہیں کسی کی حق تلفی نہیں کریں گے ہماری کوشش ہے ۔ انہوں نے کہا ہے کہ عوام کی بلاامتیاز خدمت ہمارا اولین فرض ہے علاقے کی ترقی اور مسائل کے حل پر یقین رکھتے ہیں کسی کی حق تلفی نہیں کریں گے ہماری کوشش ہے کہ عوام کے مسائل ان کی دہلیز پر حل ہو سکے صوبائی مشیر نے ان خیالات کا اظہارژوب آئے ہوئے مختلف وفود سے ملاقات کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا ہے کہ حکومت صحت تعلیم پانی بجلی اور عوام کو روزگار کی فراہمی کیلئے تیزی سے اقدامات اٹھا رہی ہے لیکن بدقسمتی سے سابقہ حکومتوں نے تعلیم صحت اور روزگار کی طرف کوئی توجہ نہیں دیا جس کی وجہ سے آج زندگی کا ہر شعبہ مفلوج ہے انہوں نے کہا کہ وہ زیلی خیلی پر کوئی یقین نہیں رکھتا ہے اور عوام کی بلاامتیاز خدمت کرتا اہو نگا حلقے میں تمام علاقوں کی یکساں ترقی ہماری ترجیح ہے عوام کو مایوس نہیں کریں گے ان کی خلوص نیت سے خدمات کریں گے ان شاء اللہ تبدیلی لا کر رہیں گے عوام کے مسائل ان کی دہلیز پر حل ہو سکے ۔
()()()
خبر نامہ نمبر 166/2019 
کوئٹہ 16جنوری:۔صوبائی وزیر لیبر اینڈ مین پاور سردار سرفراز ڈومکی نے کہا ہے کہ بلوچستان لیبر فیڈریشن کے تمام مسائل جلد از جلد حل کئے جائینگے۔ اور ان کے جو بھی جائز مطالبات ہیں۔ ان کو حل کرنے کی بھر پور کوشش کرینگے۔ یہ بات انہوں نے بلوچستان لیبر فیڈریشن کے وفد سے ملاقات کے موقع پر کیا۔ وفد میں کوئٹہ ڈویلپمنٹ اتھارٹی کے لیبر یونین کے صدر خان زمان, ایریگیشن کے حاجی عزیزاللہ خان, بلوچستان ڈویلپمنٹ اتھارٹی کے سیف اللہ ودیگر شامل تھے ۔انہوں نے کہا کہ لیبر یونین سمیت تمام ملازمین کے فلاح وبہبود کیلیے بلا امتیاز اقدامات اٹھانے کی کوشش کر رہے ہیں۔ صوبائی وزیر لیبر اینڈ مین پاور نے اس موقع پر ڈائریکٹر جنرل لیبر ڈیپارٹمنٹ کو ہدایت جاری کرتے ہوئے کہا۔ کہ بلوچستان لیبر فیڈریشن کے مسائل کا ممکنہ حل نکالا جائے۔ تاکہ انکے حقوق کی پامالی نہ ہویں۔اس پر بلوچستان لیبر فیڈریشن کے وفد نے سردار سرفراز ڈومکی کی تعاون کا شکریہ ادا کیا۔ 
()()()
خبر نامہ نمبر 167/2019 
کوئٹہ 16جنوری:۔صوبائی وزیر ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن ملک نعیم خان بازئی نے کہا کہ عوامی مسائل ا ن کی دہلیز پر حل کرنا ہمارا فر ض ہے مسائل کے حل کرنے کے لیے جہاں تک جانا ہوا اس سے دریغ نہیں کریں گے۔ یہ بات انہوں نے کیسکو چیف عطا اللہ بھٹہ سے کچلاک ،اغبرگ اور نو حسار کے بجلی کے مسائل کے بارے میں ملاقات کرتے ہوئے کہی اس موقع پر صوبائی مشیر کے ہمراہ کچلاک، اغبرگ اورنو حسار کے قبائلی عماہدین جمال ا لدین رشتیا ،ملک منطور بھی موجو دتھے ۔انہوں نے کچلاک ،ا غبر گ اور نو حسار میں بجلی کے کم لوڈ ،لو ڈ شیڈ نگ کے طویل دورا ینہ اور نا قص ٹر انسفارمر جیسے مسائل کے بارے میں کیسکو چیف کو آگاہ کیا ۔ اس موقع پر کیسکو چیف عطاء اللہ اسد بھٹہ نے تمام مسائل کے حل کی یقین دہانی کراتے ہوئے کہاکہ انشاء اللہ جلد ازجلد ان علاقوں میں بجلی کے مسائل حل کے لیے مو ثر اقدامات اٹھا ئے جائیں گے تاکہ علاقے میں بجلی جیسے لازمی عنصر کی فراہمی ممکن ہو سکے۔ کیسکو چیف نے کچلاک و غبرگ اور نو حسارکے عوام سے بھی اپیل کی کہ وہ بجلی چور ی جیسے گھمبیر مسلہ میں کیسکو حکام سے تعاون کرئے۔
()()()
خبر نامہ نمبر 168/2019 
کوئٹہ 16جنوری :۔صوبائی وزیر خزانہ میر محمد عارف محمد حسنی سے ان کے دفتر میں بلوچستان بے روز گار ویٹر نری ڈاکٹرز ایسو یشن (BBVDA) کے وفد نے ڈائر یکٹر ثناء ز رکوں کی قیادت میں ملاقات کی اس موقع پر وفدمیں شامل، ڈ اکٹر ساجد ، ڈاکٹر صفد ار ، ڈاکٹر حبیب الر حمان اور ڈاکٹر ظفر نے صوبائی وزیر کو اپنے مسائل کے بارے میں آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ اس وقت پورے ملک کے مختلف کا لجوں سے فارغ اتحصیل بلوچستان کی ویٹر نری ڈاکٹروں کی تعد اد سے بھی زیادہ ہے ۔جن میں پچاس یو سٹوں کی سمری فنانس ڈیپارٹمنٹ میں انتظامی منظوری کیلئے بجھو ائی گئی ہے جس سے عمل در آمد نہیں ہوا ۔انہوں نے بتایا کہ ملک کے مختلف کا لجوں سے صوبے کے فارغ طلباء کی تعداد سالانہ ایک سو پچاس سے لے کر ایک سو اسی تک ہے ۔او ر ان ڈاکٹروں کی پرمو شن سے خالی والے 56پو سٹوں کو ایس این ای میں ڈال دئیے جائیں تقریباً ایک سو چھ ڈاکٹروں کو روزگار ملے گا ۔صوبائی وزیر نے وفد کو یقین دلایا کہ وہ اس حوالے سے وزیر اعلیٰ کی مشاور ت سے اس ا ہم مسلہ کے لیے ضروری اقدامات کریں گے ۔
()()()
خبر نامہ نمبر 169/2019 
کوئٹہ 16جنوری ؛۔صوبائی محتسب بلوچستان عبدالغنی خلجی نے تعمیرنو ٹر سٹ بلوچستان کوماہانہ فیس کے ساتھ 500/-روپے جرمانہ لینے سے روک دیا ۔تفصیلات کے مطابق شکایت کنندہ میر محمد ایوب نے صوبائی محتسب سے گزارش کی کہ اُنکی تین بیٹیاں تعمیر نو گرلز پبلک سکول سمنگلی روڈ کو ئٹہ میں پڑ ھ رہی ہیں ۔او وہ باقا عد گی سے ماہانہ فیس جمع کررہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ اکتوبر 2018ء سے تعمیر نو ٹر سٹ نے ہرماہ کی 15تاریخ کے بعدجمع ہونے والے فیس کے ساتھ 500/-روپے غیر قانونی طور پر جرمانہ وصولی شروع کی ہے جوکہ طالبات اور والدین دینے سے قاصر ہیں ۔ صوبائی محتسب نے فوری کا روائی کرتے ہوئے تعمیرنو ٹرسٹ بلوچستان کے سیکرٹری سے وضا حت طلب کرتے ہوئے کہا کہ کسی قانون کے تحت ایڈ وانس ماہانہ فیس کے ساتھ جرمانہ وصول کیا جا سکتا ہے ۔جس پر سیکر ٹریوں تعمیر نو ٹرسٹ بلوچستان تسلی بخش وضا حت دینے میں ناکام رہے ۔بعدازاں صوبائی محتسب نے مذکورہ جرمانہ کو غیر قانونی قرادئیے ہوئے تعمیر نو ٹر سٹ بلوچستان کو ایڈ وانس ما ہانہ فیس کے ساتھ 500/-روپے جرمانہ لینے سے روک دیااور مزید ہدایات دی کہ اگر کسی سے اسی ضمن میں جرمانہ وصول کیا گیا ہے تو اُسے واپسی یا اگلے ماہ کے فیس میں ایڈ جسٹ کیا جائے ۔
()()()
خبر نامہ نمبر 170/2019 
کوئٹہ 16 جنوری :۔کمشنر کوئٹہ ڈویژن اور سیکریٹری صوبائی ٹرانسپورٹ کی خصوصی ہدایت پر ریجنل ٹرانسپورٹ اتھارٹی کوئٹہ، ٹریفک پولیس، ایکسائز اور موٹروہیکل ایگزامنر پر مشتمل چیکنگ ٹیم نے درخشاں نا کہ سبی روڈ،قومی شاہراہ کوئٹہ جیکب آباد پر نان کسٹم پیڈ گاڑیوں، کالے شیشوں ،سرچ لائٹس ، کاغذات ا ور روٹ پرمٹ نہ رکھنے والی پبلک اور مال برادر گاڑیوں کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے 11عدد ٹرک ،22عدد کوچ اور منی بسوں کواوور لوڈنگ پر چالان کیں اس کے علاوہ مختلف گاڑیوں پر سے 213 سرچ لائٹس بھی اس کاروائی کے دوران اتار دی گئیں اس موقع پر سپریٹنڈنٹ آرٹی اے کوئٹہ حمید اللہ محمد حسنی ،انسپکٹر ایکسائز عبدالکریم ،موٹر وہیکل ایگزامنر لیاقت علی بگٹی، ٹریفک پولیس اور لیویز عملہ بھی موجود تھے سپریٹنڈنٹ آر ٹی اے کوئٹہ نے کہا کہ کمشنر کوئٹہ ڈویژن و سیکرٹری صوبائی ٹرانسپورٹ ڈیپارٹمنٹ بلوچستان کوئٹہ کی خصوصی ہدایت پر کوئٹہ شہر اور قومی شاہراہوں پر نان کسٹم پیڈ،کالے شیشے والی ،سرچ لائٹس اور کاغذات پرمٹ نہ رکھنے والی گاڑیوں کے خلاف سخت کریک ڈاؤن جاری ہے اس سلسلے میں روزانہ کی بنیاد پر قومی شاہراہوں اور شہر کے مختلف علاقوں میں کاروائی کر رہے ہیں انہوں نے کہا کہ ٹرانسپورٹ کی حالات زار بہتر بنانے اور عوام کی جان و مال کے تحفظ کے لئے ہر ممکن اقدامات کئے جا رہے ہیں جبکہ قومی شاہراہوں پر حادثات کی روک تھام کے سلسلے میں پبلک اور مال برادر گاڑیوں میں لگی سرچ لائٹس اتارنے کا عمل بھی جاری ہے اس کے علاوہ نان کسٹم پیڈ گاڑیوں کے خلاف کارروائی میں مزید تیزی لائی گئی ہے انہوں نے کہا کہ قومی شاہراہوں پر اوور لوڈنگ اور تیزرفتاری کا مظاہرہ کرنے والے ڈرائیوروں کے خلاف بھی سخت اقدامات کیے جا رہے ہیں انہوں نے کہا کہ شہر میں فینسی نمبر پلیٹ اور کالے شیشے والی گاڑیوں کے خلاف بھی کاروائیاں جاری ہیں لہذا عوام الناس ٹریفک پولیس کے قانون کے مطابق نمبر پلیٹ لگائیں اور اپنی گاڑیوں پر سے کا لے شیشے جلد از جلد ہٹا دیں انہوں نے کہا کہ تمام گاڑی مالکان اپنی گاڑیوں میں اصل کاغذات اور پرمٹ کی موجودگی کو یقینی بنائیں وگرنہ کارروائی کے دوران جن گاڑیوں کے مالکان کے پاس کاغذات نہ ہوئے ان کی گاڑیاں بند کر دی جائیں گی۔
()()()
خبر نامہ نمبر 171/2019 
کوئٹہ16 جنوری۔ منشیات و با کی صورت اختیار کر چکی ہے ۔ نوجوان نسل سے قلم کتاب چھین کر تعلیمی اداروں میں منظم طریقے سے منشیات پھیلائی جارہی ہے ۔علماء کرام ، اساتذہ ، والدین اور قانون نافذ کرنے والے ادارے مسئلے کی نوعیت کا احساس کرتے ہوئے اس زہر قاتل کے خلاف اکھٹے ہوکر موثر طریقے سے آواز بلندکریں۔ ان خیالات کا اظہار محکمہ سماجی بہبود حکومت بلوچستان کے ادارہ برائے علاج و بحالی مریضان منشیات میں منعقدہ تقریب سے ادارے کے ڈائریکٹر جاوید بلوچ ڈپٹی ڈائریکٹر سماجی بہبود محمد اکرم کاکڑ ، ڈاکٹر پرویز بلوچ اور آفیسر سماجی بہبود شگفتہ ناز نے خطاب کرتے ہوئے کیایہ تقریب ادارے میں علاج و بحالی کی مدت پوری کرنے والے مریضوں اور ان کے خاندان کے افراد کو رہنمائی فراہم کرنے کے بعد از علاج منشیات سے بچاؤ کے تدا بیر اور خاندان کے افراد کے کردارکے حوالے سے منعقد کی گئی۔ شرکاء نے منشیات کے عادی مریضوں کے خاندان کے افراد کو بتایا کہ محکمہ سماجی بہبود حکومت بلوچستان کایہ ادارہ جدید طریقہ علاج اور مریضوں کے ذہنی ، جسمانی ، مذہبی اخلاقی تربیت کے ساتھ ساتھ انہیں معاشرے میں فعال بنانے کے لئے ہنر بھی سکھا رہا ہے یہ ادارہ منشیات کے عادی مریضوں کو معاشرے کا ایک ذمہ دار شہری بنانے میں ہر ممکن اقدامات کررہا ہے تقریب کے شرکاء نے کہاکہ منشیات کی روک تھام کیلئے موثر طریقے سے آگاہی مہم شروع کی جائے اور اس زہر قاتل سے نوجوان نسل اور طالب علموں کو بچانے کیلئے اسکول ، کالج ، یونیورسٹی اور یونین کونسل کی سطح تک تواتر کے ساتھ آگاہی مہم کا آغاز کیا جائے ۔ 
()()()
خبر نامہ نمبر 172/2019 
گوادر 16جنوری ۔سینیٹ کی اسٹینڈنگ کمیٹی برائے میرین ٹائم افیئرز کا ایک اہم اجلاس کمیٹی کے چیئرپرسن نزہت صادق کی زیر صدارت منعقدہ ہوا اجلاس میں سینیٹر کہدہ محمد اکرم بلوچ ،سینیٹر محمود الحسن رانا ،خوش بخت شجاعت سمیت میرین ٹائم افیئرز کے جوائنٹ سیکرٹری مس شازیہ رضوی گوادر پورٹ اتھارٹی کے چیئرمین دوستین خان جمالدینی ادارہ ترقیات گوادر کے ڈی جی ڈاکٹر سجاد حسین بلوچ ڈپٹی کمشنر گوادر کیپٹن( ر )محمد وسیم سمیت دیگر اعلی حکام نے شرکت کی ۔اجلاس میں گوادر بندرگاہ سی پیک منصوبے گوادر ماسٹر پلان سمیت مقامی ماہی گیروں کے منصوبوں سے متعلق مختلف امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔اجلاس میں اس امر پر زور دیا گیا کہ سی پیک کے حوالے سے پاک چائنا اورسعودی عرب دیگر ممالک سے گوادر میں سرمایہ کاری کے متعلق تمام امور کو بروقت نمٹانے پر زور دیا گیاتاکہ سرمایہ کاری کرنے والے اداروں کو یہاں پر تمام ضروری انفراسٹرکچر میسر آسکے اور مقامی لوگوں کو ہرممکن سہولتوں سمیت روزگار کے مواقع فراہم کیئے جاسکیں نیز یہاں کے مقامی آبادی کو جدید سہولیات جن میں پینے کے صاف پانی صحت ، ماہی کے منصوبے سمیت دیگر منصوبوں کی بروقت تکمیل پر زور دیاہے اجلاس میں بتایا گیا ہے کہ گوادر بندرگاہ سی پیک منصوبوں کی ترقی سے اس پورے خطے کو فائدہ ہوگاسی پیک پاکستان اور چین ہی نہیں بلکہ پورے خطے کے لیے گیم چینجثابت ہوگا سینٹکی قائمہ کمیٹی برائے میرین ٹائم افیئرز کو گوادر بندرگاہ کیچیئرمین دوستین خان جمالدینی چائنہ اوورسیز پورٹ ہولڈنگ کمپنی کے چیئرمین زانگ باؤڑنگ سمیت ادارہ ترقیات گوادر کے ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹر سجاد حسین بلوچ نے اپنے اداروں اور اب تک جاری ترقیاتی منصوبوں کی پیش رفت سے متعلق بریفنگ دی دریں اثناء ماہی گیروں کے ایک نمائندہ وفد نے بھی سینٹ کی قائمہ کمیٹی برائے میرین ٹائم افیئرز سے ملاقات کی اور ماہی گیروں کے مسائل سے انہیں آگاہ کیا۔
()()()

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Post comment