Download

خبرنامہ نمبر 3114/2018
کوئٹہ14نومبر ۔وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے کہاہے کہ پاکستان اور ترکی کے مابین گیرے برادرانہ تعلقات ہیں جو وقت کے ساتھ مزیدمضبوط ہو رہے ہیں جبکہ دونوں ممالک کے عوام کے درمیان پیار و محبت کا رشتہ بھی بڑھ رہا ہے، حکومت بلوچستان ترک سرمایہ کاروں کو صوبہ کے مختلف شعبوں میں سرمایہ کاری کرنے کے لئے ہرممکن معاونت فراہم کرے گی۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پاکستان میں تعینات ترکی کے سفیر آئی مصطفی یرڈیکلMr. I Mustafa Yurdakulسے بات چیت کرتے ہوئے کیا جنہوں نے بدھ کے روز یہاں ان سے ملاقات کی۔وزیرا علیٰ نے ترکی کے سفیر سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ پاک ترک تعلقات میں مزید گہرائی آتی جارہی ہے اور دونوں ممالک کے مابین عوامی تعلقات فروغ پار ہے ہیں جس سے دونو ں ممالک کے باہمی تعلقات کو مزید فروغ حاصل ہوگا، انہوں نے کہا کہ ترکی مسلمان ممالک کے لئے ایک روڈ ماڈل کی حیثیت رکھتا ہے ، وزیر اعلیٰ نے ترکی کے سفیر کو صوبے کے مختلف شعبوں بالخصوص معدنیات، ماہی گیری اور سیاحت کے شعبوں میں ترقی اور سرمایہ کاری کے روشن امکانات سے آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ بلوچستان میں مختلف قیمتی معدنیات کے وسیع ذخائر موجود ہیں اور یہاں معدنی صنعت کے فروغ کی بہت گنجائش موجود ہے ، وزیر اعلیٰ نے کہاکہ سی پیک اس خطہ کی ترقی اور غربت کے خاتمے میں اہم کردار ادا کریگاجس سے تمام ممالک منافع اٹھاسکتے ہیں تاہم اس سلسلے میں حکومت تکنیکی ماہرین اور افرادی قوت کی تربیت کے لئے کوششیں کر رہی ہے اور اس سلسلے میں دوست ممالک سے بھی تعاون جاری ہے، وزیر اعلیٰ نے کہا کہ بلوچستا ن کے شعبہ ماہی گیری اور ساحلی علاقوں کی ترقی کے شعبہ میں بھی بہترین سرمایہ کاری کی جاسکتی ہے،جبکہ بلوچستان کا ساحل سیاحت کے حوالے سے بھی انتہائی اہمیت کا حامل ہے اور سیاحت کے فروغ کے لئے حکومت اقدامات اٹھارہی ہے اوراس سلسلے میں ترک حکومت کی معاونت کا خیر مقدم کریگی ، امن وامان کی صورتحال کے حوالے سے وزیراعلیٰ نے کہاکہ گذشتہ کچھ سالوں میں بلوچستان کو مشکل حالات کا سامنا کرنا پڑا ہے تاہم اب امن وامان کی صورتحال میں نمایاں بہتری آئی ہے اور سرمایہ کاروں کے لئے سازگار ماحول موجود ہے،حکومت افغانستان سے منسلک سرحد پر باڑ لگا رہی ہے جس سے دہشت گردی اور غیر قانونی آمدو رفت میں نمایاں کمی آئے گی۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ بلوچستان میں اتنے وسائل موجود ہیں جس سے نہ صرف یہ صوبہ بلکہ پورا ملک ترقی کرسکتا ہے تاہم ان وسائل کو بروئے کار لانے کے لئے صوبائی حکومت دوست ممالک کے سرمایہ کاروں کو ہر سطح پر خوش آمدید کہے گی اور انہیں بہتر سے بہتر سرمایہ کاری کے مواقع فراہم کریگی۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ ترکی کے ساتھ بذریعہ سڑک اور ریل کے تجارتی روابط کو مزید بڑھایا جاسکتا ہے اس سلسلے میں مزید بہتر حکمت عملی طے کرنے کی ضرورت ہے، اس موقع پر ترکی کے سفیر نے وزیر اعلیٰ بلوچستان کی ترقی کے وژن کو سراہتے ہوئے ترک حکومت کی طرف سے ہرممکن تعاون اور سرمایہ کاری کے فروغ میں کردار ادا کرنے کی یقین دہانی کراتے ہوئے کہا کہ بلوچستان میں سرمایہ کاری کے وسیع امکانات موجودہیں جس سے ترک سرمایہ کار منافع بخش سرمایہ کاری کر سکتے ہیں،ترک سفیر نے وزیر اعلیٰ بلوچستان کی کامیابی کے لئے نیک خواہشات کا اظہار کرتے ہوئے تہذیبی وثقافتی روابط کو مزید بہتر بنانے پر زور دیا۔ بعدازاں وزیر اعلیٰ اور ترک سفیر نے یادگاری شیلڈ کا تبادلہ کیا۔ 
()()()
خبرنامہ نمبر 3115/2018 
کوئٹہ 14نومبر۔محکمہ محنت و افرادی قوت حکومت بلوچستان کے اعلامیہ کے مطابق انور حسین رند سپرنٹنڈنٹ ( بی ۔ 17)ڈائریکٹوریٹ جنرل لیبر ویلفیئر بلوچستان کوئٹہ اپنی عمر کی بالائی حد 60 سال کو پہنچنے پر 29 نومبر2018 کو سرکاری ملازمت سے ریٹائرڈ ہوجائیں گے۔ 
()()()
خبرنامہ نمبر 3116/2018 
کوئٹہ14نومبر ۔وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان سے کوریا ریپلکن کے سفیرMr.Kwak Sung-kyuنے بدھ کے روز یہاں ملاقات کی۔ ملاقات کے دوران بلوچستان اور کوریا کے درمیان مختلف شعبوں میں تعاون کے فروغ پر بات چیت کی گئی۔ وزیراعلیٰ نے کورین سفیر کو صوبے کے مختلف شعبوں بالخصوص ماہی گیری اور معدنیات کے شعبوں میں ترقی اور سرمایہ کاری کے امکانات سے آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ بلوچستان میں طویل ساحلی پٹی رکھنے کا حامل صوبہ ہے جس کا پانی اور درجہ حرارت فش فارمنگ کے حوالے سے انتہائی موزوں خیال کیا جاتا ہے اور اس شعبہ میں سرمایہ کار منافع بخش سرمایہ کر سکتے ہیں، وزیر اعلیٰ نے کہا کہ بلوچستان کو قدر ت نے بے شمار معدنیات سے نوازا ہے ، کانکنی کے شعبہ میں سرمایہ کاری کے وسیع اور روشن امکانات موجود ہیں ، صوبائی حکومت ان شعبوں میں سرمایہ کار کمپنیوں کو ہر ممکن سہولیات کی فراہمی کے ساتھ ساتھ صوبے میں فش پروسسینگ یونٹس کے قیام کے لئے اقدامات اٹھارہی ہے جس سے ماہی گیری کے شعبہ میں مزید بہتری آئے گی۔ کورین سفیر نے وزیر اعلیٰ بلوچستان کو بتایا کہ کورینز کمپنی آئی سیکٹر میں بلوچستان سمیت پاکستان کے دیگر حصوں میں کام کر رہے ہیں جبکہ ماہی گیری کے شعبہ میں کورین کمپنیز اور سرمایہ کاروں کو اس طرف راغب کرنے کے لئے اقدامات کئے جائیں گئے۔ انہوں نے بتایا کہ بلوچستان میں سرمایہ کاری کے وسیع امکانات موجود ہیں کورین حکومت سرمایہ کاری کے فروغ کے ساتھ ساتھ بلوچستان اور کوریا کے مابین عوامی ،سماجی اور ثقافتی روابط کے فروغ کیلئے بھی اقدامات کئے جائیں گے ۔ کوریا کے سفیر نے وزیر اعلیٰ بلوچستان کے ترقی کے وژن کو سراہتے ہوئے ان کی کامیابی کے لئے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔ بعدازاں وزیر اعلیٰ بلوچستان اور کورین سفیر نے یادگاری شیلڈ کا تبادلہ کیا۔ 
()()()
خبرنامہ نمبر 3117/2018 
کوئٹہ 14نومبر۔ صوبائی وزیر برائے آئی ٹی و محکمہ سماجی بہبود آبادی سردار عبدالرحمن کھیتران کو بدھ کے روز سیکریٹری سماجی بہبود آبادی محمد عمران گچکی نے محکمہ کی کارکردگی کے حوالے سے بریفنگ دی ۔ بریفنگ میں بتایا گیا کہ محکمہ قلیل بجٹ میں عوام کو بہترین خدمات فراہم کرنے کی کوشش کررہا ہے بریفنگ میں محکمہ کے جاری تمام پروگراموں کی تفصیلات بتائی گئیں ان پروگراموں میں وہ پروگرام بھی شامل تھے جو مختلف این جی اوز کے اشتراک سے جاری ہیں اس موقع پر صوبائی وزیر سماجی بہبود آبادی سردار عبدالرحمن کھتیران نے بریفنگ میں گہری دلچسپی لی اور محکمہ کی کار کردگی کو مزید بہتر بنانے کی ہدایت بھی کی انہوں نے کہا کہ موجودہ صوبائی حکومت عوام دوست حکومت ہے اور تمام دستیاب وسائل کو بروئے کار لاکر عوام کی ہر ممکن خدمت کی جائیگی تقریب کے آخر میں انہوں نے محکموں کے سوشل میڈیاپیج کا افتتاح بھی کیا اس موقع پر محکمہ کے اعلیٰ آفیسران بھی موجود تھے۔
()()()
خبرنامہ نمبر 3118/2018 
کوئٹہ 14نومبر۔ محکمہ محنت و افرادی قوت حکومت بلوچستان کے اعلامیہ میں محمد ہاشم ولدمحمد ابراہیم سینئر انسٹرکٹر ( بی۔ 16) ٹیکنیکل سینئر حب کی ناگہانی وفات پر گہرے رنج و غم کا اظہار کیا گیا ہے ۔ اعلامیہ میں مرحوم کی سرکاری خدمات کو سراہتے ہوئے دعا کی گئی ہے کہ اللہ تعالیٰ مرحوم کے درجات بلند فرمائے اور پسماندگان کو صبر و جمیل عطا کرے ۔ 
()()()
خبرنامہ نمبر 3119/2018 
کوئٹہ 14نومبر ۔ صوبائی وزیر جنگلات و جنگلی حیات میر ضیا اللہ لانگو کی تجویز پر گزشتہ روز محکمہ جنگلات و جنگلی حیات کے زیر اہتمام ایک روزہ ورکشاپ کا انعقا د کیا گیا ورکشاپ میں محکمہ جنگلات و جنگلی حیات بلوچستان کے تمام سینیر افسران کے ساتھ ساتھ ضلعی افسران نے بھی شرکت کی۔ ناظم منصوبہ بندی محکمہ جنگلات و جنگلی حیات علی عمران نے جامع بریفنگ دی۔ جبکہ ناظم اعلیٰ محکمہ جنگلات و جنگلی حیات (جنوبی) تاج محمد اور عبدالجبار ناظم اعلیٰ محکمہ جنگلات و جنگلی حیات بلوچستان(شمالی) نے تقریب سے خطاب کیا۔سیکریٹری محکمہ جنگلات و جنگلی حیات بلوچستان ڈاکٹر محمد سعید جمالی نے گزشتہ روز دس ارب سونامی شجرکاری مہم کے اجلاس کا انعقاد کرتے ہوئے کہا کہ دس ارب سونامی شجرکاری مہم جوکہ پورے ملک میں وزیر اعظم پاکستان کی جانب سے شروع کی گئی ہے ،کا اطلاق صوبہ بلوچستان میں بھی ہوتا ہے جس کے تحت پورے ملک میں پانچ سالوں کے دوران دس ارب درخت لگائے جائیں گئے اور اس ضمن میں صوبہ بلوچستان کا ہدف پچیس کروڑمختص کیا گیا ہے۔یہ اجلاس اسی سلسلے کی ایک کڑی ہے۔ انہوں نے کہا کہ صوبہ بلوچستان میں جنگی بنیادوں پر شجر کاری مہم کا آغاز ہو نے جا رہا ہے جس کا ظاہری مقصد توملک میں جنگلات کے رقبہ کی موجودہ سطح یعنی 4.5%کو بڑھا کر عالمی معیار یعنی 25%تک لیجانا ہے ، در اصل اس مہم کو بنیادی طور پر موسمی تغیرات اور گلوبل وارمنگ کے انسانی زندگی پر مرتب ہونے والے منفی اثرات کو زائل کرنے کے لئے عمل میں لا یا جا رہا ہے۔بد قسمتی سے فی الوقت ملک عزیز کی طرح صوبہ بلوچستان کو بھی قدرتی آفات کا سامنا ہے جن میں سر فہرست بارشوں کا بروقت نہ ہونا، گرمی کا بڑھ جانا اور زیر زمین پانی کا خطرناک حد تک گر جانا شامل ہیں۔ ان عوامل کی بنیادی وجوہات میں جنگلات کا کم رقبہ پر محیط ہونا بھی شامل ہے اور اس پر ستم ظریفی یہ کہ ایسے نا مساعد حالات کے باوجود جنگلات کی بے دریغ کٹائی بھی کی جار ہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ صوبہ بلوچستان کو ماضی میں نظر انداز کیا گیا ہے لیکن بلوچستان حکومت اور وزیر اعظم پاکستان نے ملک بھر میں خصوصی توجہ دیتے ہوئے جنگلات کی کمی اور اس کے نتیجے میں درپیش مسائل کو حل کرنے کا مصمم ارادہ کیا ہے جس کے تحت محکمہ جنگلات و جنگلی حیا ت بلوچستان کو بلحاظ رقبہ دس ارب سونامی شجرکاری مہم میں سے 250 ملین شجر کاری کا پانچ سالہ ہدف ملا ہے اور امیدہے کہ اس پروگرام کے تحت بلوچستان کو سرسبزبنایا جا سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس منصوبے کے ذریعے نہ صرف صوبہ بلوچستان میں پہلے سے موجود قدرتی و غیر قدرتی جنگلات کی حفاظت اور ان کی حالت کو بہتر بنایا جائے گا بلکہ بہت سے جگہوں پر از سر نو شجر کاری کر کے جنگلات کو فروغ بھی دیا جائے گا۔ اس طرح سے گلوبل وارمنگ کو کم سے کم کر کے منفی موسمی تغیرات کا سد باب کرنا ممکن ہو گا۔ اجلاس کے آخر میں انہوں نے محکمہ کے افسران کو تجاویز دیتے ہوئے ہدایات دیں کہ تمام افسران لگن اور محنت سے شجر کاری مہم کو سر انجام دیں اوراپنے تجربات کو مد نظر رکھتے ہوئے اور اپنی تکنیکی صلاحیتوں کو بروئے کار لاتے ہوئے دس ارب شجر کاری مہم کو کامیابی سے ہمکنار کریں۔ محکمہ جنگلات کے افسران کی لگن اور دلچسپی سے ہی جنگلات و جنگلی حیات صحیح معنوں میں ترقی کی راہ پر گامزن ہوسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح کے سیمینار کا انعقاد ہر تین ماہ میں ہونا چاہے تا کہ حاصل شدہ نتائج کا اعادہ کیا جا سکے اور بہتری کے لئے تجاویز کی روشنی میں آئندہ کا لائحہ عمل تیار کیا جا سکے۔
()()()
خبرنامہ نمبر 3120/2018 
کوئٹہ 14نومبر۔ بلوچستان پبلک سروس کمیشن کے پریس ریلیز کے مطابق مختلف محکموں میں خالی آسامیوں کے لئے ایم سی کیوز ( MCQs) اور تحریری امتحانات کے شیڈول کا اعلان کردیا گیا ہے آسامیوں میں اسسٹنٹ ( بی ۔ 16) محکمہ پی اینڈ ڈی ، چائلڈ پروٹیکشن آفیسر ( بی ۔ 17) محکمہ سوشل ویلفیئر اسپیشل ایجو کیشن ، اکاؤنٹنٹ آفیسر ( بی۔ 17) بلوچستان صوبائی اسمبلی ، کیئرٹیکر( بی۔ 8) بلوچستان پبلک سروس کمیشن ، اسسٹنٹ آپٹو میتھا لوجسٹ ( بی ۔ 17) محکمہ صحت ، ویٹر نری آفیسر ( بی۔ 17) محکمہ لائیواسٹاک ، اسسٹنٹ اکاؤنٹس آفیسر ( بی ۔ 16) محکمہ ایکسائز اینڈ نارکو ٹیکس ، اکاؤنٹنٹ ( بی۔ 16) محکمہ سوشل ویلفیئر اسپیشل ایجو کیشن ، پیرول آفیسر ( میل ) ( بی ۔ 16) محکمہ داخلہ و قبائلی امور ، پیرول آفیسر ( فی میل) ( بی۔ 16) محکمہ داخلہ و قبائلی امور ، پرو بیشن آفیسر ( میل ) ( بی ۔16) محکمہ داخلہ وقبائلی امور ، پرو بیشن آفیسر ( فی میل ) ( بی۔ 16) محکمہ داخلہ و قبائلی امور ، میڈیکل آفیسر (بی ۔ 17) محکمہ صحت ، لیڈی میڈیکل آفیسر ( بی ۔ 17) محکمہ صحت ، ڈینٹل سرجن ( بی۔ 17)محکمہ صحت ، اسسٹنٹ کمپیو ٹر آپریٹر ( بی ۔12) بلوچستان پبلک سروس کمیشن ، سٹینو گرافر ( بی۔ 14) بلوچستان پبلک سروس کمیشن ، ریسر چ آفیسر ( بی۔ 17) محکمہ پی اینڈ ڈی ، اسسٹنٹ ڈائریکٹر سمال انڈسٹریز ونگ ( بی ۔ 17) محکمہ انڈسٹریز اینڈ کامرس ، اسسٹنٹ انجینئر / ایس ڈی او ( بی ۔ 17) محکمہ ایریگیشن ،ڈیٹا انٹری آپریٹر( بی ۔ 12) بلوچستان پبلک سروس کمیشن، انویسٹگیٹر ( بی ۔ 14) بلوچستان پبلک سروس کمیشن ، جونیئر کلرک ( بی ۔ 11) بلوچستان پبلک سروس کمیشن ، اسسٹنٹ ڈائریکٹر ( لیگل) ( بی ۔ 17) بلوچستان پبلک سروس کمیشن اور لائبریرین ( بی ۔ 17) بلوچستان پبلک سروس کمیشن شامل ہیں امید واروں کورول نمبر سلپ / ایڈ میشن سرٹیفکیٹ ان کے ایڈریس پر بھیج دیئے گئے ہیں اگر کسی امیدوار کو رول نمبر سلپ موصول نہیں ہوئے ہیں توہ وہ شیڈول تاریخوں سے دوروز قبل دفتر ی اوقات کار میں ایگز ا منیشن برانچ بلوچستان پبلک سروس کمیشن سے رابطہ کرسکتے ہیں ۔ 
()()()
خبرنامہ نمبر 3121/2018 
نصیر آباد 14نومبر ۔ڈپٹی کمشنر صحبت پورمحمد یونس سنجرانی نے کہا ہے کہ تعلیم کے بغیرکوئی بھی قوم ترقی کی منازل طے نہیں کرسکتی ،علم کی بدولت آج دنیاتیزی سے ترقی کررہی ہے بلوچستان میں بھی جہالت کے خاتمے کیلئے حکومت ہنگامی بنیادوں پر اپنے وسائل بروئے کارلارہی ہے سکولوں کے بنیادی مسائل کو حل کیا جارہا ہے اورتعلیمی ڈھانچے میں مزید نکھارلانے کے ساتھ ساتھ بچوں میں تعلیم کے حصول کیلئے ایک نئی امنگ پیداکی جارہی ہے انہوں نے کہا کہ والدین اپنے بچوں کی بہترین نشوونماکیلئے انہیں تعلیم کے زیورسے آراستہ کروائیں تاکہ وہ آگے چل کر ملک وصوبے کو ترقی اورخوشحالی کی راہ پرگامزن کرنے میں اپنا کرداراداکرسکیں اساتذاہ کرام بھی ملک کے نونہاروں کو بہترین تعلیم سے آراستہ کریں اس ضمن میں کسی قسم کی کوتاہی برداشت نہیں کی جائے گی ان خیالات کا اظہار انہوں نے ضلع صحبت پورکے علاقے بالوپور گورنمنٹ مڈل بوائز،گرلزپرائمری سکول جبکہ گورنمنٹ پرائمری سکول سکندرجروارکے دورے کے موقع پر اساتذہ سے خطاب کرتے ہوئے کیا ڈپٹی کمشنرنے اس موقع پر کلاس رومز کا بھی فرداً فرداً معائنہ کیا اوربچوں سے سبق بھی سنا اس موقع پر اساتذاہ نے سکول کے مسائل کے متعلق انہیںآگاہی بھی فراہم کی ڈپٹی کمشنرصحبت پور نے کہاکہ ضلعی انتظامیہ سکولوں کے مسائل حل کرنے کیلئے اپنی تمام کوششوں کو بروئے کارلارہی ہے بچوں کے بنیادی مسائل انشاء اللہ بہت جلد حل کرلئے جائیں گے اساتذاہ کرام اپنی پیشہ ورانہ ذمہ داریاں احسن طریقے سے سرانجام دیں تاکہ ایک پڑھا لکھامعاشرہ تشکیل دیا جاسکے عمل کی شمع کو مزید روشن کرنے کیلئے حکومت کے ساتھ ساتھ تمام مکتبہ فکر سے تعلق رکھنے والے افرادپر بھی بھاری ذمہ داری داری عائد ہوتی ہے کہ وہ اس علم کے مشن میں اپنے بھرپورکرداراداکریں تاکہ روشنیوں کے اس سفرکو مزید تیزی کے ساتھ اپنی منزل تک پہنچایا جاسکے والدین کو بھی چاہئے کہ وہ اپنے بچوں اوربچیوں کو سکولوں میں داخل کروائیں تاکہ جہالت کا مکمل خاتمہ کیا جاسکے۔
()()()
خبرنامہ نمبر 3122/2018 
کوئٹہ 14نومبر ۔ حکومت بلوچستان کے اعلامیہ کے مطابق 15 نومبر 2018 بروز جمعرات کو ضلع دکی میں دوبارہ انتخابات کے سلسلے میں عام تعطیل کا اعلان کیا گیا ہے۔
()()()
خبرنامہ نمبر 3123/2018 
کوئٹہ 14نومبر:۔کمشنر کوئٹہ ڈویژن کی ہدایت پر سیکرٹری ریجنل ٹرانسپورٹ اتھارٹی کوئٹہ حبیب اللہ خان کی نگرانی میں کوئٹہ شہر کی لوکل بسوں کی کنڈیشن کے حوالے سے مہم جاری ہے ۔اس سلسلے میں آر ٹی اے کے عملہ نے سپر نٹنڈ نٹ حمید اللہ محمدحسنی کی سربراہی میں سرکی روڈ اور پشتون آباد روٹ کی لوکل بسوں کی کنڈیشن کامعائنہ کیا۔ اس موقع پرٹرانسپورٹروں کی جانب سے تعداد سے کم لوکل بسوں کے معائنہ کرانے پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ لوکل بسوں کی کنڈیشن کی درستگی کے حوالے سے ہونے والے اجلاس میں ٹرانسپورٹروں کی جانب سے تمام لوکل بسوں کی کنڈیشن کا معائنہ کرانے کا فیصلہ ہوا تھا لیکن معائنہ کے موقع پر چند لوکل بسیں لانے اور پرانی اور خستہ حال بسیں موجود نہ ہونے سے انتظامیہ کی رٹ چیلنج ہورہی ہے۔ جوکہ کسی صورت برداشت نہیں ہوگی انہوں نے کہاکہ خراب کنڈیشن اور خستہ حال ہونے کی وجہ سے لوکل بسوں کے پرمٹ کینسل کئے جارہے ہیں ۔اگر ٹرانسپورٹرز حضرات انتظامیہ کے ساتھ تعاون نہیں کریں گے تو خستہ حال اور خراب کنڈیشن والی بسوں کو سٹرکوں پر چلانے کی اجازت نہیں دی جاے گی جبکہ ان کے خلاف سخت کارروائی بھی عمل میں لائی جائے گی اس سلسلے میں تمام ٹرانسپورٹرز انتظامیہ کے ساتھ تعاون کرتے ہوئے معائنہ کے موقع پر اپنی گاڑیوں کی موجودگی کو یقین بناتے ہوئے کنڈیشن درست کریں۔انہوں نے کہاکہ لوکل بسوں کی حالت بہتر بنانے کے لئے سخت فیصلے کئے جائیں گے۔تاکہ عوام کوبہتر سہولیات مہسر آسکیں۔
()()()
خبرنامہ نمبر 3124/2018 
کوئٹہ 14نومبر :۔ڈپٹی کمشنر کچھی بمقام ڈھا ڈر کے اعلامیہ کے مطابق محمد بخش ولد گلز ار احمد سکنہ قوم بھٹی سکنہ باغ سٹی تحصیل باغ ڈسٹرکٹ کچھی کالوکل سرٹیفیکٹ ان کی اپنی درخواست پر منسوخ کردیا گیا ہے ۔
()()()
خبرنامہ نمبر3125/2018 
کوئٹہ14نومبر :۔محکمہ محنت وافرادی قوت حکومت بلوچستان کے اعلامیہ کے مطابق عبدالسلام کرد ڈپٹی ڈائریکٹر لیبر ( بی 18-) ڈائر یکٹو ریٹ جنرل لیبر ویلفیئر بلوچستان اپنی عمر کی بالائی حد 60سال کو پہنچنے پر 11جنوری 2019 ء کو سرکاری ملازمت سے ریٹا ئر ہو جائیں گے ۔
()()()
خبرنامہ نمبر3126/2018 
کوئٹہ 14نومبر :۔محکمہ محنت وا فرادی قوت حکومت بلوچستان کے اعلامیہ کے مطابق جمیل الرحمن رسیرچ آفیسر (B-17) ڈائر یکٹوریٹ جنرل لیبرویلفیئر بلوچستان کوئٹہ اپنی عمر کی بلائی حد 60سال کو پہنچنے پر یکم مارچ 2019ء کو سرکاری ملازمت سے ریٹا ئر ہو جائیں گے ۔
()()()
خبرنامہ نمبر 3127/2018
دکی14نومبر :۔ڈپٹی کمشنر دکی عبدالناصر دوتانی نے کہاہے کہ حلقہ پی پی5دکیNA258دکی لورالائی میں ری پولنگ کے حوالے سے تمام تر انتظامات مکمل کر لئے گئے ہیں۔ امن وامان کی صورت حال کو برقراررکھنے کیلئے فورسزکی بڑی تعدادتعینات کی گئی ہے ضلع بھر کو مختلف سیکٹروں میں تقسیم کیا گیاہے۔ جس میں ژوب ڈویژن کے دیگر اضلاع سے بھی انتظامی آفیسران کی ذمہ داری لگائی گئی ہیں انہوں نے کہا کہ فور سزکی موبائل ٹیمیں بھی گشت کرتی رہیں گی بم ڈسپوزل کا عملہ ہر پولنگ اسٹیشن کی چیکنگ کرکے کلیئرنس سرٹیفیکٹ جاری کرئیگا ۔ان خیالات کااظہار انہوں نے ری پولنگ کے انتظامات کے حوالے سے ژوب ڈویژن کے دیگر اضلاع سے آئے ہوئے اسسٹنٹ کمشنروں اور دیگر آفیسران نے پرزیڈینگ آفیسران میں پولنگ میٹریل تقسیم کرنے کے موقع پربات چیت کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر یڈننگ آفیسر PB5دکی نذیر شاہ،SPoدکی سردار محمد ہاشم درانی، اوراسسٹنٹ کمشنر دکی مہران خان بلوچ بھی موجودتھے ۔ڈپٹی کمشنر دکی عبدالناصر دوتانی نے کہا کہ حق رائے دہی ہرمرد عورت کابنیادی حق ہے ۔جس کے پاس اصلی قومی شناختی کارڈ ہوگااور اس کانام ووٹر لسٹ میں درج ہوگا تو وہ اپنا ووٹ کاسٹ کرسکتا ہے انہوں نے کہا کہ اگر کسی بھی شخص سے جعلی شناختی کارڈبرآمد ہوااسے موقع پھرگرفتار کرکے اسکے خلاف مقدمہ درج کیا جائے گا انہوں نے کہا کہ دکی کے تمام پولنگ اسٹیشنوں کو حساس قرار دیاگیا ہے اور ان پرC.C.Tvکہمر ے لگائے جارہے ہیں ریڑ ینگ آفیسر نذیر شاہ نے اس موقع پر کہا کہ ضلع دکی میں دوبارہ الیکشن کوصاف وشفاف بنانے کے لئے ہر ممکن کوشش کی گئی ہے پولنگ عملہ باہر کے اضلاع سے تعینات کیا گیا ہے۔ SP دکی سردار محمد ہاشم درانی نے کہا کہ ضلع دکی میں ری پولنگ کے دوران پولیس فورس کو پوری طرح الرٹ کیا گیا ہے ۔ تاکہ کسی بھی ناخوشگوار واقعہ سے بر وقت نمٹا جاسکے، اسپیشل برانچ کے اہلکاروں اور بم ڈسپوزل اسکواڈ کی بھی ڈیوٹی لگائی گئی ہے ڈپٹی کمشنر ضلع دکی نے کہا کہ تمام پارٹیوں کے امیدوار اپنے کارکنوں کو پر امن رہنے کی تلقین کر یں اور وہ خود بھی موجود رہتے ہوئے الیکشن کو صاف وشفاف بنانے میں ضلعی انتظامیہ اور الیکشن کمیشن کے عملے سے تعاون کریں ۔تاکہ الیکشن صاف وشفاف ہو۔اور آئندہ بھی یہ روایت قائم رہے۔ کیونکہ کسی بھی حلقے میں دوبارہ الیکشن ہونے سے سرکاری خزانے یہ بوجھ پڑ تا ہے انہوں نے ری پولنگ 15نومبر 2018ء کوضلع دکی میں تمام تعلیمی اداروں اور سرکاری محکموں میں عام تعطیل کااعلان کیا ہے۔
()()()
خبرنامہ نمبر3128/2018 
لورالائی14نومبر ۔ ڈپٹی ڈائریکٹر سول ڈیفنس ژوب ڈویژن تاج محمد کاکڑ نے کہا کہ ژوب ڈویژن میں امن و امان کے حوالے سے حفاظتی اقدامات کئے گئے ہیں ۔ حلقہ پی بی 5ضلع دکی اور این اے 258 میں ری پولنگ کے حوالے سے بم ڈسپوزل کی ٹیمیں روانہ کر دی گئی ہیں انہوں نے کہا کہ پر کرائسز مینجمنٹ آفسیر کی رہنمائی میں بم ڈسپوزل کی مختلف ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں جوکہ بی۔ایریا میں ہر پولنگ اسٹیشن کا معائنہ کرنے کے بعد اے۔ایریا میں پولیس اسپیشل برانچ کے ساتھ تعاون کریں گے۔بم ڈسپوزل کا عملہ ہر پولنگ اسٹیشن کی چیکنگ کرکے کلئیرنس سرٹیفیکٹ جاری کریگا۔جبکہ ڈپٹی کمشنر ضلع دکی کے دفتر میں کنٹرول روم کا اہتمام بھی کیا جائیگا ۔حلقہ پی بی5 دکی اور این۔اے258میں ری پولنگ کے دوران بم ڈسپوزل کا عملہ بم اور دیگر خطرناک آوزارکو ناکارہ بنانے کے لیے جدید طرز کے آلات استعمال میں لا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ سول ڈیفنس کے آفسران اور عملہ مشکلات سے نمٹنے کیلئے تیار ہیں۔
()()()
خبرنامہ نمبر 3129/2018 
سبی 14نومبر۔ ڈائریکٹر بلوچستان ہائر ایجوکیشن ربابہ حمید درانی نے کہا ہے کہ کرپشن زدہ معاشرے کو صاف کرنے کیلئے نوجوان نسل کو اپنا کردار ادا کرنا چاہیے کیونکہ آنے والا وقت ہماری نوجوان نسل کا ہے نوجوان نسل کو چاہیئے کہ وہ قائداعظم محمد علی جناح اور علامہ اقبال کے افقار کو اپنا آئیڈیل بنا کر ملک کی تعمیر و ترقی میں بھرپور کردار ادا کریں ان خیالات کا اظہار انہوں نے نیب بلوچستان کے تعاون سے ڈائریکٹر کالجز کے زیر اہتمام گورنمنٹ گرلز ڈگری کالج سبی میں ڈویژنل سطح پر مقابلہ تقاریر ،پوسٹر سازی، کیلیگرافی کے حوالے سے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر ڈپٹی ڈائریکٹر کالجز حسین علی شاہ،فوکل پرسن امان اللہ جعفر ،ڈپٹی فوکل پرسن نور الدین رئیسانی ، مسسز بریگیڈےئر اویس مجید، مسسز کرنل آصف 34میڈیم، کیپٹن محمد عثمان 34میڈیم، پرنسپل گرلز کالج سبی در شہوار ،وائس پرنسپل مسسز شاہدہ شبیر، پرنسپل بوائیز ڈگری کالج حضور بخش سومرو،پرنسپل انٹر کالج مٹھڑی پروفیسر طاہر بشیر، مسسز رخسانہ ضمیر، پروفیسر شازیہ درانی،پروفیسر زینت خجک ،پرنسپل گرلز ہائی سکول ریلوے کالونی مسسز رومانہ احمد،پرنسپل مسسز نغمانہ راحیل کے علاوہ طلباء و طالبات کی بڑی تعد اد موجودتھی۔ نیب بلوچستان کے زیر اہتمام تقریب میں گورنمنٹ بوائیزڈگری کالج سبی، گورنمنٹ گرلز ڈگری کالج سبی،ڈگری کالج کوہلو، بوائیز ڈگری کالج ہرنائی ،کے طلباء و طالبات کے مابین بدعنوانی سے انکار اور کرپشن ایک ناسور کے عنوان پر تقاریر کا مقابلہ ہوا تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈائریکٹر کالجز مس ربابہ حمید درانی ،ڈپٹی ڈائریکٹر کالجز حسین علی شاہ ، و دیگر نے کہا کہ جو شخص کرپشن کرتا ہے وہ اپنے آپ سے بھی شرمندہ رہتا ہے کیونکہ چوری ایک روپے کی ہو یا لاکھوں کی انسان کا ضمیر اسے ملامت ضرور کرتا ہے انہوں نے کہا کہ ترقی یافتہ ممالک نے جب ترقی کی منازل طے کیں تو اس ملک کے ہر شہری نے یہ عہد کیا کہ ملک کی تعمیر و ترقی اولین فرض ہے اور ان کے انہی فرائض اور دیانتدداری نے ملک کوترقی یافتہ ممالک میں شامل کیا الحمد اللہ پاکستان دنیا کا پہلااسلامی ایٹمی ملک ہے ہماری نوجوان نسل پر یہ ذمہ داریاں عائد ہوتی ہیں کہ وہ ملک کی تعمیر و ترقی میں اپنا بھرپور کردار ادا کرکے ملک سے کرپشن کا خاتمہ کریں انہوں نے کہا کہ جب تک ہر شہری اپنی سوچ تبدیل نہیں کرے گا اس وقت تک ہم ترقی نہیں کرسکتے اس کیلئے ضروری ہے کہ ہمیں اپنی سوچ تبدیل کرنا ہوگی ججز کے فیصلے کے مطابق مقابلہ انگلش تقاریر میں بوائیز کالج سبی کے شاہ زیب ،گرلز ڈگری کالج سبی کی طالبہ ردا نور، نے اول ، دوسری پوزیشن ہرنائی ڈگری کالج کے سید کامران شاہ تیسری پوزیشن کوہلو ڈگری کالج کے واحد علی نے حاصل کی جبکہ مقابلہ اردو تقریر میں گرلز ڈگری کالج سبی کی طالبہ افراء داؤد شمسی، بوائیز ڈگری کالج سبی اورنگزیب نے اول پوزیشن ،ہرنائی ڈگری کالج کے صلاح الدین نے دوسری جبکہ کوہلو ڈگری کالج کے محمد ارشد نے تیسر ی پوزیشن حاصل کی تقریب کے اختتام پر پوزیشن حاصل کرنے والے طلباء وطالبا ت میں مہمانان گرامی نے انعامات تقسیم کیے۔ 
()()()
پریس ریلیز 
کوئٹہ 14نومبر ۔ بلوچستان نیشنل پارٹی کے علاقائی رہنما ٹھیکیدار میر محمد رفیق تو تازئی مینگل کی والدہ ماجدہ ،ٹکری ترک ملی تو تازئی مینگل ، پیپلز پارٹی ضلع بولان کے سابق سیکریٹری جنرل رحمت اللہ مینگل کی چچی ، حفیظ اللہ مینگل ، عطاء اللہ مینگل ، میر محمد حنیف مینگل، محمد انورمینگل ، بسم اللہ مینگل ، ہدایت اللہ مینگل ، ذوالفقار علی مینگل کی دادی انتقال کر گئیں مرحومہ کو ان کے آبائی قبرستان میں سپرد خاک کردیا گیا ہے ۔ مرحومہ کی روح کے ایصال ثواب کیلئے فاتحہ خوانی مینگل ہاؤس کلی عالمو نزد ریلوے پھاٹک میں جاری ہے ۔
()()()

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Post comment