HomeNews14-01-2020 Tuesday (File No.2)

14-01-2020 Tuesday (File No.2)

14-01-2020 Tuesday (File No.2)

خبرنامہ نمبر132/2020
کوئٹہ14جنوری:۔وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کی ہدایت پر موسم کی حالیہ صورتحال اور ریلیف سرگرمیوں کی نگرانی کے لئے وزیراعلیٰ سیکریٹریٹ میں کنٹرول روم قائم کردیا گیا ہے، وزیراعلیٰ کے اسپیشل سیکریٹری اسفندیار بلوچ کو کنٹرول روم کا فوکل پرسن مقرر کیا گیا ہے، کنٹرول روم کے ذریعہ برفباری اور بارشوں سے متاثرہ علاقوں میں امداد وبحالی کی سرگرمیوں کو مانیٹر کرنے کے علاوہ متاثرہ اضلاع کی انتظامیہ کو رہنمائی اور معاونت فراہم کی جائے گی اور امدادوبحالی کی سرگرمیوں کو مربوط کیا جائے گا۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر 133/2020
کوئٹہ14جنوری:۔وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے مسلم باغ اور کان مہترزئی شاہراہ پر ریسکیو آپریشن کی کامیاب تکمیل پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے آپریشن میں ریسکیو ٹیموں کی کارکردگی کو سراہا ہے اور انہیں مبارکباد پیش کی ہے۔ وزیراعلیٰ کی جانب سے آپریشن میں حصہ لینے والی ٹیموں ڈی جی پی ڈی ایم اے اور ان کی ٹیم ، کمشنر ژوب، ڈی سی لورالائی، ڈی سی قلعہ سیف اللہ، ڈی سی پشین، لیویز فورس اور ایف سی بلوچستان کی بہترین کارکردگی کی تعریف کی گئی ہے، وزیراعلیٰ کا کہنا ہے کہ ریسکیو ٹیموں نے مشکل ترین آپریشن کامیابی سے مکمل کیا اور اپنی جانیں خطرے میں ڈال کر بہت سی قیمتی زندگیوں کو محفوظ بنایا، ان کی یہ خدمات قابل فخر ہیں، وزیراعلیٰ بلوچستان ریسکیو آپریشن کی تکمیل تک متعلقہ حکام سے مسلسل رابطے میں رہے اور انہیں ہدایات اور رہنمائی فراہم کی جبکہ وزیراعلیٰ سیکریٹریٹ کے افسران بھی رات بھر اپنے دفاتر میں موجود رہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر 134/2020
کوئٹہ14جنوری:۔وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کی ہدایت پر برفباری اور بارشوں سے متاثرہ علاقوں میں ریلیف کی سرگرمیوں کا بھرپور آغاز کردیا گیا ہے اور متاثرہ علاقوں تک زمینی رسائی یقینی بنانے کے ساتھ ساتھ ہیلی کاپٹر کے ذریعہ بھی خوراک اور دیگر ضروری اشیاءمتاثرہ افراد تک پہنچائی جارہی ہیں، گذشتہ تین دن بعد موسم میں بہتری آنے پر حکومت بلوچستان کے ہیلی کاپٹر کے ذریعہ دشت، لکپاس، شعبان، کان مہترزئی اور دیگر ملحقہ علاقوں میں 3300کلوگرام پر مشتمل خشک اشیائے خوردونوش کے پیکٹ اور چھوٹے اور بڑے سائز کے خیمے متاثرہ افراد تک پہنچائے گئے جبکہ پی ڈی ایم اے مزید پیکٹ تیار کررہا ہے جنہیں فضائی اور زمینی راستوں سے متاثرہ علاقوں میں پہنچایا جائے گا اور یہ آپریشن ہر متاثرہ خاندان تک خوراک کی فراہمی کو یقینی بنانے تک جاری رہے گا، وزیراعلیٰ نے ہدایت کی ہے کہ ریلیف آپریشن ،قومی شاہراہوں اور رابطہ سڑکوں کی بحالی کے لئے تمام وسائل بروئے کار لاتے ہوئے ہر متاثرہ علاقے، گا¶ں اور دیہات تک رسائی ممکن بنائی جائے، قومی شاہراہوں اور رابطہ سڑکوں کی بحالی کے کام کو مزید تیز کردیا گیا ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر135/2020
کوئٹہ14جنوری :۔صوبائی وزیرخزانہ میر ظہوراحمدبلیدی نے کہا کہ صوبائی حکومت صوبے کے دور دراز علاقوں کی یکساں پر یقین رکھتی ہے ۔ضلع کیچ کے قریب و جو ر میں مواقع علاقے ہو مثاپ بالیگتر ودیگر گا وں کو بجلی کی سپلائی کو یقینی بنانے کیلئے گراسسٹیشن کی تعمیر کیلئے حالیہ بجٹ میں خطیر رقم مختص کردی تھی اور اس کی تعمیر کو یقینی بناکر علاقے کے عوام سے کئے گئیے ایک اور وعدے کی تکمیل ہوئی۔ ان خیالات کا اظہار انہوںنے ھو شاب میں با لگیتر فیڈر کے افتتاح کے موقع پر کیا اس موقع پر سابق سینیٹر میر محمد اسلم بلیدی ،کمشنر مکران طارق قمر ،سابق ڈسٹرکٹ وائس چیئر مین شے نسیم بلیدی ،ڈی ایچ او کیچ ڈاکٹر رحیم بلیدی ،ایس ڈی اورواپڈا عقیل زہری ،سپر نٹنڈ نٹ واپڈا ظفر بلوچ علاقے کے معززین میرعلی محمد ،میر عارف کلو ائے ،ند یم چار شبنے ،ڈاکٹر فضل کریم ھوشاب کے ھیڈ ماسٹر احمد علی ،احمد جان بلوچ ودیگر بھی موجود تھے ۔صوبائی وزیر نے کہاکہ بجلی کی سپلائی سے علا قے میں زراعت کوفروغ ملے گا اور علاقے کے عوام خو شحال ہونگے انہوں نے کہاکہ علاقے کے عوام کو درپیش دیگر مسائل کو بھی تر جیحی بنیادوں پر حل کرنے کی بھر پور کوشش جاری ہے یادر ہے کہ ھو شاب بالگیتر فیڈر کی تکمیل سے علاقے کے 15گاوں کو بجلی کی سپلائی دی جائے گی جس میں سر فہر ست محمد دبازار بالگیتر عبداللہ بازار ،فضل بازار ،احمد بازار ،دل مرا دبازار ،جمعہ بازار ،سعید آباد کیلکوساقی بالگیتر شامل ہیں ۔صوبائی وزیر خزانہ ظہوراحمد بلیدی نے میرانی ڈیم کا بھی دورہ کیا اور ڈیم کے حکام کو ہدایات دیں کہ ڈیم سے علاقے کو پانی کی سپلائی کو یقینی بنایا جائے تاکہ زراعی سرگرمیوں کو فروغ مل سکے اور صوبے کو درکار زرعی اجناس کی دستیابی کو بھی یقینی بنایا جاسکے ایسا کرنے سے علاقے کے عوام کو روزگار کے مواقع میسر اسکیں گے ۔صوبائی وزیر نے ھو شاب انٹر کالج کابھی دورہ کیا اور زیر تعمیر بلاک کے کام کامعائنہ کیا اس موقع پر انہوں نے کہا کہ کالج کے تعمیر کا ادھو رہ کام کو آنے والے بجٹ میںمکمل کردیا جائے گا ۔علاقے کے عوام نے مختلف گاوں کو بجلی کی سپلائی کیلئے صوبائی وزیر کے فنڈ سے تعمیر ہونے والے گراسسٹیشن پر صوبائی وزیر کا شکر یہ ادا کیا اور کہا کہ ان کا دیر ینہ مسلہ حل ہوگیا۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر136/2020
نصیرآباد14جنوری :۔صوبائی سیکریٹری انفارمیشن ٹیکنالوجی یاور حسین نے ڈیرہ مراد جمالی کا دورہ کیا جہاں پر زیرتعمیر آئی ٹی انسٹیٹیوٹ کی بلڈنگ کے تعمیراتی کام کا معائنہ کیا ایکسین سی اینڈ آر اکبر علی لاشاری نے صوبائی سیکریٹری کو تعمیراتی کام کے متعلق بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ 83 لاکھ سے زائد رقم سے آئی ٹی انسٹیٹیوٹ کا تعمیراتی کام آخری مراحل میں داخل ہوچکا ہے 80 فیصد سے زائد کام مکمل کرلیا گیا ہے یہ اسکیم16 -2015 کی تھی مگر زمین نہ ملنے کی وجہ سے تعمیراتی کام شروع نہیں ہو سکا بالآخر کمشنر نصیرآباد جاویداخترمحمود اور ڈپٹی کمشنر نصیرآباد کی خصوصی دلچسپی کی بدولت 2019 میں شروع ہوا اور ان شائ اللہ جون 2020 تک تعمیراتی کام مکمل کر لیا جائے گا اس موقع پر ڈویڑنل ڈپٹی ڈائریکٹر آئی ٹی عبدالرحیم بلوچ آئی ٹی آفیسر عطااللہ بنگلزئی ایس ڈی او بی اینڈ آر عابدعلی پہنور محمد امین مری سمیت دیگر موجود تھے صوبائی سیکریٹری انفارمیشن اینڈ ٹیکنالوجی یاور حسین نے جلدازجلد تعمیراتی کام کو مکمل کرنے کے احکامات دیتے ہوئے کہا کہ صوبائی حکومت ٹیکنالوجی کے شعبے میں مزید بہتری لانے کے لئے بھرپور انداز میں اقدامات کو عملی جامعہ پہنا رہی ہے بلوچستان بھر میں آئی ٹی انسٹیٹیوٹ کا قیام عمل میں لایا جارہا ہے تاکہ سرکاری ملازمین کو آئی ٹی کے شعبے میں مزید مہارت دی جائے یہ شعبہ دور حاضر کا بہترین شعبہ ہے پوری دنیا ٹیکنالوجی کے ہی ذریعے انقلابی تبدیلیاں لارہی ہے ہمیں بھی اس جدید دور سے مستعفید ہونا ہوگا اسی میں ہماری کامیابی وابسطہ ہے انہوں نے کہاکہ اس آئی ٹی انسٹیٹیوٹ سے سرکاری ملازمین سمیت دیگر افراد کو بھی کمپیوٹر کورسز کرائے جائیں گے اور انہیں اس شعبے میں مہارت سکھائی جائے اور کورسز کرنے والے بچوں کو وظیفہ بھی دیا جائے گا انہوں نے کہاکہ بلوچستان میں آئی ٹی کے شعبے میں انقلابی تبدیلی لا ناگزیر بن چکا ہے موجودہ جدید دور کے تقاضوں کو پورا کرنے کے لئے ہم تمام اقدامات کو بروئے کار لا رہے ہیں جبکہ گزشتہ روز بھی صوبائی سیکریٹری انفارمیشن ٹیکنالوجی یاور حسین نے ضلع جعفر آباد میں زیر تعمیر آئی ٹی انسٹیٹیوٹ کا دورہ کیا ڈویڑنل ڈپٹی ڈائریکٹر آئی ٹی عبدالرحیم بلوچ نے انہیں زیرتعمیر آئی ٹی انسٹیٹیوٹ کے متعلق تفصیل سے بریفنگ دی۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر137/2020
نصیرآباد14جنوری :۔بلوچستان عوامی پارٹی کے صوبائی مشیر اقلیتی اموررکن صوبائی اسمبلی دھنیش کمارپلیانی نے کہا ہیکہ اقلیتی برادری بھی معاشرے کااہم حصہ ہے جن کو صوبے میں مکمل آزادی اور یکساں حقوق حاصل ہے اقلیتی برادری ملک اور قوم کی ترقی و خوشحالی میں مثبت کردار ادا کرتی آرہی ہے اور وہ ہر مشکل اور نامساعد حالات میں قوم کے ساتھ شانہ بشانہ کھڑی ہے صوبائی حکومت نے اقلیتوں کے حقوق کے تحفظ اور فلاح و بہبود کے لیے اقدامات کر رہی ہے صوبائی حکومت نے مالی سال 2019 – 2020 میں ایک ارب تیس کروڑ روپے تر قیا تی کاموں کے لیئے مختص کیے ہیں اقلیتی برادری کے عبادت گاہوں کے تحفظ اور سرویلینس نظام کو بہتر کرنے کے لیے بھی رقم مختص کی گئی ہے ان خیالات کا اظہار انہوں ڈیرہ مرادجمالی کے دورے کے موقع پر ہندوبرداری کے مختلف وفودسے بات چیت کرتے ہوئے کیا اس سے قبل صوبائی مشیراقلیتی اموردھنیش کمار پلیانی نے سنجے کمار پنجوانی کے والدشلومل کے انتقال پر اظہارہمدردی کی اوربعدازاں مندر اور گردوارہ کا بھی دورہ کیا ان کے ہمراہ ڈیرہ مرادجمالی ہندوبرادری کے سرکردہ رہنماو¿ں سیٹھ تاراچند،سیٹھ مانک لعل،سنجے کمار پنچوانی،مکھی نام چند ، ڈاکٹر گوردن داس اداسی، ہرپال داس،سترام داس ،راجیش کمار،سنیل کمار،سونوکمار،ہپل داس اجوانی،بابودلیپ ،ساجن لعل،اجیت کمار،سترام داس، راجیش کمار، خان چندسمیت دیگر بھی موجودتھے بلوچستان عوامی پارٹی کے صوبائی مشیر اقلیتی اموررکن صوبائی اسمبلی دھنیش کمارپلیانی نے ڈیرہ مرادجمالی گردوارہ کیلئے دس لاکھ روپے دینے کا بھی اعلان کیاانہوں نے کہاکہ بلوچستان بھرمیں اقلیتی ملازمتی کوٹے پر مکمل طورپرعملدآمدکرایا جارہا ہے کوئی محکمہ اگر کسی اقلیتی شخص کو ملازمت نہیں دیتا تو وہ اس آسامی کو خالی چھوڑ دے گا جسے ہم بعد میں پرکردیں گے انہوں نے کہاکہ اقلیتی برداری کے مسائل معلوم کرنے کے لئے میں نے بلوچستان کے 22اضلاع کے دورے کئے ہیں ان دوروں کا مقصد بھی یہی ہے کہ اقلیتی برداری کے مسائل معلوم کرکے انہیں فوری طورپرحل کیا جائے انہوں نے کہاکہ بلوچستان عوامی پارٹی وزیراعلیٰ جام کمال خان کی قیادت میں مزید مضبوط ہورہی ہے صوبے کی عوام کی خدمت کرنے کاہم نے تہیہ کررکھا ہے ایک مثبت سوچ کے ساتھ عوام کے مسائل حل کررہے ہیں
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر138/2020
نصیرآباد 14جنوری :۔وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کی خصوصی ہدایت پرکمشنر نصیر آباد ڈویڑن جاوید اختر محمود کی کی نگرانی ضلعی انتظامیہ کی جانب سے غریب افراد کے لیے پناہ گاہ قائم کر دی گئی جہاں پر بے گھر اور غریب افراد کے لیے گرم رضائیاں کمبل وغیرہ فراہم کر دی گئی جبکہ پناہ گاہ میں انہیں کھانا بھی فراہم کیا گیا اس طرح کے اقدامات سے نہ صرف غریب افراد مستفید ہونگے بلکہ ان سخت سردیوں میں ان کے لیے ایک آشیانہ بھی دستیاب ہوگیا ہے وزیراعظم پاکستان عمران خان کے ان اقدامات سے غریب لوگ براہ راست مستفید ہو رہے ہیں اور دور دراز کے علاقوں سے شہروں کی جانب آنے والے لوگوں کو مشکلات سے نجات مل رہی ہے وہ مہنگے ہوٹلوں میں رہائش کے بجائے لوگ حکومتی پناہ گاہ کو ترجیح دے رہے ہیں شہریوں نے حکومتی اقدامات کو سراہتے ہوئے ہوئے اسے خوش آئند قرار دیا ہے جو حکومت کی غریب عوام دوست پالیسی کا واضح مظہر ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر139/2020
پشین14جنوری:۔ڈپٹی کمشنر پشین قائم خان لاشاری برفباری سے متاثرہ تحصیل برشور کا تفصیلی دورہ کیا اور امدادی سرگرمیوں کا جائزہ لیا ڈپٹی کمشنر نے گزشتہ روز برفباری کی وجہ سے مکان کی چھت گرنے کے واقعے میں جابحق ہونے والی خاتون کے گھر جاکر ان کے لواحقین سے فاتحہ خوانی کی اور متاثرہ خاندان کو امدادی سامان اور معاوضہ بھی قبل ازیں۔ ڈپٹی کمشنر قائم لاشاری نے تحصیل برشور پہنچنے پر متعلقہ انتظامیہ کے افسران سے برف باری کی وجہ سے برشور کے لنک سڑکوں پر جاری سرگرمیوں کی رپورٹ اور نقشہ طلب کیا جس پر متعلقہ انتظامیہ نے ڈپٹی کمشنر کو تحصیل برشور میں برفباری سے پیدا ہونے والی صورتحال اور امدادی سرگرمیوں سے متعلق تفصیلی بریفنگ دی تحصیل برشور میں ڈپٹی کمشنر خان لاشاری سے رکن صوبائی اسمبلی عبدالواحدصدیقی اور وزیر اعلی بلوچستان کے فوکل پرسن محمد عظیم کاکڑسے الگ الگ ملاقاتیں کئے اس موقع پر ڈی سی پشین قائم خان لاشاری نے کہا کہ برف باری سے متاثرہ علاقوں کی بحالی کے لیے سرگرمیوں کرامات تیزی سے جاری ہیں۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر140/2020
کوئٹہ 14جنوری :۔وزیر اعلیٰ بلوچستان کے مشیر برائے ثانوی تعلیم حاجی محمد خان لہڑی نے کہا ہے کہ بلوچستان بورڈ آف انٹرمیڈیٹ اینڈ سیکنڈری ایجوکیشن محکمہ ثانوی تعلیم کی اہم ترین شعبوں میں سے ایک ہے۔ بورڈ کے ساکھ کی بحالی اور مو¿ثر کارکردگی پر کسی قسم کا سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا۔ امتحانات کے عمل اور پرچوں کی چیکنگ میں شفافیت یقینی بنانے کے لیے سخت حکمت عملی پر عمل پیرا ہیں۔ بورڈ کا عملہ مو¿ثر انداز میں اپنے فرائض کے انجام دہی کو یقینی بنائے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے یہاں بلوچستان بورڈ آف انٹرمیڈیٹ اینڈ سیکنڈری ایجوکیشن کے اچانک دورے کے موقع پر کیا۔ صوبائی مشیر نے عملے کی موجودگی پر اطمینان کا اظہار کیا اس موقع پر صوبائی مشیر نے پرچہ جات کے چیکنگ کے عمل کے معائنہ سمیت بورڈ کے مختلف حصوں کا دورہ بھی کیا۔ مشیر تعلیم نے کنٹرولر امتحانات عبدالنبی ساسولی کے ہمراہ بورڈ کے لیے بننے والی نئی عمارت کے مختلف حصوں کا دورہ کیا اور عمارت کی جلد تکمیل کو یقینی بنانے کے ہدایات جاری کرتے ہوئے متعلقہ حکام کو فوری رپورٹ جمع کرانے کی ہدایت کی۔ اس موقع پر محمد خان لہڑی نے کہا کہ بلوچستان بورڈ کی توسیع کا عمل جلد از جلد مکمل کیا جائے تاکہ ادارے کی کارکردگی کو مزید بہتر بنائی جاسکے۔ انہوں نے بورڈ میں موجود طلباءکے شکایات بھی سنے اور ان کے حل کی یقین دھانی بھی کروائی۔ انہوں نے چیئرمین بورڈ اور کنٹرولر امتحانات کو امیدواروں کے شکایات کے ازالے کی ہدایات بھی جاری کیے۔ صوبائی مشیر نے کہا کہ امتحانات کےلیے رجسٹریشن کے عمل کو مزید موثر اور شفاف بنائی جائے تاکہ امیدواروں کے شکایات کا ازالہ کیا جاسکے۔ انہوں نے تمام شعبہ جات میں عملے کی موجودگی پر مسرت کا اظہار کرتے ہوئے امید ظاہر کی کہ بورڈ کا عملہ اپنی فرائض کی انجام دہی میں کوہی کوتائی نہیں بھرتے گی۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر141/2020
سبی 14جنوری :۔ ڈپٹی کمشنر سبی کے دفتر سے جاری کیے گئے ایک اعلامیے کے مطابق ضلع سبی میں کل سے شروع ہونے والی پانچ روزہ پولیومہم حالیہ بارشوں کی وجہ سے منسوخ کر دی گئی ہے اب پولیومہم 13 جنوری کے بجائے 15 جنوری سے شروع ہوگی۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر142/2020
پشین14جنوری :۔تحصیل برشور کی سڑکیں ٹریفک کے لیے مکمل طور پر کھول دی گئی ہیں۔ڈسٹرکٹ میں بارشوں اور برف باری سے متاثرہ خاندانوں کو کسی صورت تنہا نہیں چھوڑیں گے ڈپٹی کمشنر پشین برشور میں برف باری کے دوران بھسنی گاڑیوں کو لیویز اہلکاروں کی مدد سے نکال کر بچوں اور خواتین میں ڈرائی فروٹس کے پیکٹس بھی تقسیم کئے ڈپٹی کمشنر پشین قائم لاشاری نے پشین کے علاقے کلی منزکی میں بجلی کی تاریں گرنے کی اطلاع پر فورا علاقے کا دورہ کیا اور صورتحال دیکھنے کے بعد پشین واپڈا حکام متاژہ دیہات میں پہنچ کر تار اٹھانے اور بجلی فراہم کرنے کی ہدایت کی اسی طرح ڈپٹی کمشنر پشین نے نیو کلی اسیڑان میں برف باری سے متاثرہ ایک مکان کی چھت کا جائزہ لیا اور متاثر ہ خاندان کے سربراہ کو امدادی سامان بھی فراہم کیا درا ثنا د ڈی سی نے ممکنہ برفباری کے پیش نظر یاروکے مقام پر پشین سے کراچی جانے والی مسافر بس کو روک کر انہیں غیر ضروری سفر نہ کرنے کی تاکید کرتے ہوئے مسافر بس کو واپس بھجوا دیا۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿

Share With:
Rate This Article
No Comments

Leave A Comment