خبرنامہ نمبر1600/2019
کوئٹہ 05مئی :۔وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے کہا ہے کہ الحمداللہ محکمہ تعلیم میں 12000خالی آسامیا ں مشتہر کردی گئی ہیں وزیراعلیٰ بلوچستان نے اپنے ایک ٹوئیٹ میں کہا ہے کہ محکمہ تعلیم میں مزید 5000آسامیاں جلد مشتہر ہونگی آسامیوں کے منتظر افراد خالی آسامیوں پرفوری درخواستیں دیں۔وزیراعلیٰ کا مزید کہنا ہے کہ بلوچستان میں نوکریوں سمیت کچھ بھی جام نہیں۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر 1601/2019
کوئٹہ 05مئی :۔حکومت بلوچستان کے ترجمان لیاقت شاہوانی نے بلوچستان میں امن و امان کی بہتری کیلئے بی ایریا کی اے ایریا میں تبدیلی کے موضوع پر بی این پی کے رہنما ثناءبلوچ کی جانب سے کی جانے والی تنقید کو بلا جواز اور نامناسب قرار دیا ہے ترجمان نے اس بات پر حیرت کا اظہار کیا ہے کہ سینئر رکن پارلیمنٹ نے قرار دیا ہے کہ اس انتظامی فیصلے کا اختیار صوبائی کابینہ کو نہیں ہے حقیقت یہ ہے اور فاضل رکن اسمبلی بھی اس سے واقف ہونگے کہ چیف ایگزیکٹیو وزیراعلی بلوچستان کی سربراہی میں صوبائی کابینہ انتظامی فیصلوں کا مکمل اختیار رکھتی ہے ترجمان کا کہنا ہے کہ صرف مخصوص شہری علاقوں کو ضرورت کے مطابق اے ایریا میں شامل کیا گیا ہے ان علاقوں میں پولیس فورس یکسوئی سے امن کی بہتری پر توجہ دے سکتی ہے کوئٹہ لسبیلہ اور گوادر کو جدید شہروں کی حیثیت سے ترقی دی جا رہی ہے اور ضروری ہے کہ ان علاقوں میں جدید تربیت اور اسلحہ کے ساتھ پولیس فورس کو بروئے کار لایا جائے ترجمان نے اس الزام تراشی کو بھی حقیقت کے برعکس قرار دیا ہے کہ صوبائی حکومت فورسز کی بہتری پر توجہ دیتے ہوئے عوامی مسائل کو نظرانداز کررہی ہے ترجمان نے وضاحت کی کہ صوبے کے تمام علاقوں کی ترقی بنیادی ڈھانچے کی فراہمی اور مقامی آبادی کو بنیادی سہولتیں مہیا کرنے کے متعدد منصوبوں پر کام جاری ہےاور رواں مالی سال میں گذشتہ حکومت کے شروع کیے گئے 450 سے زائد منصوبے مکمل ہوں گے جبکہ بے روزگاری کے خاتمے کے لیے اقتصادی زونزقائم کئے جارہے ہیں اور نوجوانوں کو پیشہ ورانہ تربیت فراہم کرنے کے لیے بھی اقدامات کیے جارہے ہیں۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1602/2019
لورالائی05مئی :۔ماہ رمضان المبارک کے دوران عوام کو سستے داموں اشیائے خوردونوش کی فراہمی یقینی بنائی جائے گی۔گراں فروشی کرنے والے کسی رعایت کے مستحق نہیں ان کے خلاف سخت قانونی کاروائی کی جائے گی۔افطار سے قبل ٹریفک رش کے پیش نظرخصوصی ٹریفک پلان شکیل دیا جائے گا ۔پرامن فضا کو برقرار رکھنا اولین ذمہ داری ہے۔رمضان المبارک کے سیکورٹی پلان پر عملدرامد کو یقینی بنایا جائے گا۔ان خیالات کا اظہار ڈپٹی کمشنر لورالائی کاشف نبی نے رمضان المبارک کے دوران پرائس کنڑول،امن امان اور شہرمیں صفائی کے لیے کیے گیے اقدامات کا جائزہ لینے کے حوالے سے منعقدہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ ماہ صیام ہمیں صبراور اپس میں بھلائی رواداری کا درس دیتا ہے ۔تاجر برادری عوام کو سستے داموں اشیاءخوردونوش کی فراہمی کو یقینی بنائیں۔گراں فروشی کرنے والوں کے خلاف سخت کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔عوام کی سہولت کے پیش نظر لورالائی شہر میں دو مقام پر سستا بازار لگایا جائے گا۔انہو ں نے کہا کہ ماہ رمضان المبارک کے دوران ٹریفک کو رواں دواں رکھنے کے لیے خصوصی اقدامات کیے جائیں خصوصاافطار سے قبل ٹریفک رش کے پیش نظرخصوصی ٹریفک پلان شکیل دیا جائے تاکہ عوام کو پرشانی کا سامنا نہ کرنا پڑے اور وہ اپنا روزہ بروقت گھر پہنچ کر افطار کر سکیں۔انہوں نے کہا کہ امن وامان کی فراہمی حکومت کی اولین ذمہ داری ہے ۔ماہ رمضان المبارک کے دوران پرامن فضا کو برقرار رکھنے کے لیے ضروری ہے کہ سیکورٹی پلان پر عملدرآمد کو یقینی بنایا جائے۔اجلاس میں لیویز کنٹرول روم اور پولیس کنٹرول روم کے قیام کا بھی فیصلہ کیا گیا۔ اجلاس میں ایس ایس پی لورالائی عطاالرحمان خان ، اسسٹینٹ کمشنر بوری جمعدادخان، میجرعاصم راﺅ ،طیب الرحمان اور دیگر ضلعی افسران نے شرکت کی۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1603/2019
سبی 05مئی :۔ڈپٹی کمشنر سبی سید زاہد شاہ کی خصوصی ہدایت کی روشنی میں ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر سبی رحم?اللہ گشکوری کی صدارت میں پبلک پارک سبی میں چیف منسٹر غلیل نشانہ بازی کپ 2019 کا انعقاد کیا گیا جس میں مہمان خصوصی ڈائریکٹر ترقیات وقار زماں کیانی آرگنائزر ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ریونیو رحم اللہ گشکوری ڈپٹی آرگنائزر علی محمد بزدار کے علاوہ لوگوں اور بچوں کی کثیر تعداد موجود تھی غلیل نشانہ بازی میں پہلی پوزیشن پرویز دوسری پوزیشن خان میر جبکہ تیسری پوزیشن محمدندیم نے حاصل کی پوزیشن حاصل کرنے والوں میں مہمان خصوصی وقار الزماں کیانی اور ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر رحمت اللہ گشکوری نے نقدی انعامات بھی تقسیم کئے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1604/2019
کوہلو05مئی :۔ صوبائی وزیر صحت میر نصیب اللہ خان مری اور میر نثار احمد مری سے گزشتہ روز اُن کی گھر پر سیکرٹری ہیلتھ حافظ عبدالماجد، ممبر بلوچستان پبلک سروس کمیشن ممبر کمیشن نسیم لہڑی ، ایم ایس بی ایم سی ڈاکٹر فہم ،ڈپٹی کمشنر کوہلو عبداللہ کھوسہ ،ڈپٹی کمشنر بارکھان ، اسسٹنٹ کمشنر میر ایوب مری ،ڈاکٹر ارباب کانسی ،ڈاکٹر خالد قمبرانی ،ڈاکٹر امین مندوخیل،ڈاکٹر فضل بگٹی،ڈاکٹر امداد اچکزائی،ڈاکٹر اعظم بگٹی ،ڈاکٹر کمالان کچکی ، ڈاکٹر دین محمد بزدار ،عبدالروف رند،سابق ڈی سی سرمند خان، اسسٹنٹ ڈی سی کوہلو حاجی قادر قیصرانی ،سیدکمال شاہ، سید گل شاہ ،وڈیرہ محمد بخش بگٹی ،وڈیرہ شیر حمد مسوری،میر فیض حمد مری ، ملک روز محمد مری ،سردار شفیق ترین،سردار افضل ناصر،سردار معصوم خان ترین ، سردار رشید ناصر ،حاجی سید خان حیدرآباد، وڈو میر ہزار خان مری، میر باز محمد مری ،حاجی میر بہار خان مری، پریس کلب کوہلو کے صحافیوں و سیکڑوں کی تعداد میں سرکاری آفیسران،قبائلی معتبرین اورلوگوں نے صوبائی وزیر صحت کے والد کی وفات پر فاتحہ خوانی کی اور تعزیت کا اظہار کیا ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1605/2019
کوئٹہ 05مئی :۔محکمہ تعلیم بلوچستان میں پندرہ ہزار نئی آسامیوں پر بھرتی کا عمل ایک ہفتہ کے اندر شروع کر دیا جائےگا، گریڈ 17 اور 16 کی 2200 خالی آسامیاں بلوچستان پبلک سروس کمیشن جبکہ گریڈ 9 سے 15 کی نو ہزار آسامیاں ٹیسٹنگ سروس اور کلاس فور کی 3500 آسامیاں محکمانہ کمیٹیوں کے ذریعے پر کی جائیں گی، صوبائی سیکریٹری تعلیم محمد طیب لہڑی نے کہا ہے کہ محکمہ تعلیم میں پہلی مرتبہ اتنی زیادہ خالی آسامیوں پر بھرتی کی جا رہی ہے ، یہ تمام بھرتیاں میرٹ کی بنیاد پر ہوںگی، انہوں نے کہا کہ نئی بھرتیوں کے بعد صوبے میں غیر فعال سکولوں کا مسئلہ حل ہو جائے گا اور تمام سکول فعال ہو جائیں گے۔سیکریٹری تعلیم نے کہا کہ صوبے میں غیر حاضر اساتذہ کے خلاف بھرپور انداز میں کاروائی عمل میں لائی جا رہی ہے، چھ سو اساتذہ کو غیر حاضری کی بنیاد پر معطل کیا جا چکا ہے جبکہ دو ہزار اساتذہ کے خلاف محکمانہ انکوائری کی جا رہی ہے، انہوں نے کہا کہ رواں سال بلوچستان بھر میں ساڑھے تین ہزار اساتذہ سرکاری ملازمت سے ریٹائر ہو جائیں گے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر1606/2019
کوئٹہ 04مئی :۔بلوچستان خصوصا”مہرگڑہ انسانی تہذیب و تمدن کے حوالے سے امام کی حیثیت رکھتا ہے۔دنیا کی قدیم تہذیبوں میں مہرگڑہ اور فلسطین میں جیرینکو سب سے قدیم انسانی سرگرمی کے نشان ہیں مگر مہرگڑہ کو یہ سبقت حاصل ہے کہ یہاں انسان نے باقائدہ تمدنی زندگی کی بنیاد رکھی اور زراعت کے ساتھ ساتھ جانوروں کو پالتو بنانے کا باقائدہ آغاز کیا اور اضافی زرعی پیداوار کو جمع کرکے محفوظ رکھنے کی ابتدا کی۔مہر گڑہ اس حوالے سے بھی جیرینکو سے آگے ہے کہ مہرگڑہ کی تہذیب میں انسانی سرگرمی جدید سائنسی انداز سے تھی اور وہ اپنے ہز اروں سالوں کے تسلسل کو برقرار رکھ سکی۔ان خیالات کا اظہار ممتاز دانشور و ادیب ایوب بلوچ نے انٹیٹیوٹ آف بلوچستان اسٹڈیز کے زیر اھتمام ایک توسیعی لیکچر کے موقع پر کیا۔صوبائی سیکریٹری ثقافت و آثار قدیمہ ظفر علی بلیدی مہمان خصوصی تھے۔ایوب بلوچ نے کہاکہ بلوچستان میں ہر طرف بکھرے ثقافتی آثار کی حفاطت اس وقت ممکن ہے جب عام آدمی ان آثار کو اپنی وراثت کے طور پر قبول کرے اور اس کی حفاظت کا بیڑا اٹھائے۔اس سلسلے میں ایک آگاھی مہم اور تسلسل کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ دنیا میں مہرگڑہ کی قدامت اور مستند حیثیت کے بارے میں کوئی ابہام موجود نہیں صرف ھم ہی ہیں جنہیں ھماری تاریخ کے ان مدفون خزانوں کی اھمیت کا احساس نہیں۔انہوں نے کہا کہ فرانسیسی ٹیم جس کے سربراہ مسٹر جیریج تھے مہرگڑہ کے بارے میں ان کی سائنسی کھوج اور دریافت سے پہلے یہ سمجا جا رہا تھا کہ بلوچستان میں پائے جانے والے آثار انڈس سولائزیشن کا تسلسل ہیں مگر مہر گڑہ کی دریافت کے بعد بلوچستان ثقافتی تناظر میں بہت آگے نکل گیا ہے۔سیکریٹری ثقافت و آثار قدیمہ میر ظفر علی بلیدی نے اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکومت بلوچستان صوبے کی آثار قدیمہ کی حفاظت اور دیکھ بھال کے لئے عملی اقدامات کر رہی ہے۔بلوچستان یونیورسٹی کے تعاون سے صوبے میں جدید میوزیم کے قیام کا کام جلد مکمل کیا جا رہا ہے۔اس کے علاوہ آثار قدیمہ کے تحفظ کے لئے ایک منصوبہ پر عمل درآمد کیا جا رہاہے۔ حکومت سندھ کے تعاون سے بلوچستان کے مختلف علاقوں سے کھدائی کے دوران برآمد ہونے والی نوادرات جو محکمہ سندھ کے پاس تھیں انھیں بلوچستان لایا جا چکا ہے۔سائنسی عمل کے بعد انہیں مختلف میوزیمز میں سجایا جائے گا۔اس موقع پر مختلف سوالات کے جوابات بھی دیئے گئے۔تقریب میں نورخان محمد حسنی۔سرور جاوید۔محمد نسیم لہڑی۔ وحید زھیر۔یار جان بادینی۔ڈاکٹر علی دوست بلوچ۔اور دیگر احباب اور طلباءنے شرکت کی۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر 1607/2019
کوئٹہ 05مئی :۔صوبائی وزیر داخلہ میر ضیاءاللہ لانگو نے اپنے آبائی علاقہ خالق آباد کا گزشتہ روز دورہ کیا، صوبائی وزیر سے ان کی رہائش گاہ کوٹ لانگو میں مختلف سیاسی و قبائلی شخصیات اور قلات کے دور دراز علاقوں سے آئے ہوئے وفود نے ملاقات کی ۔قلات کے سیاسی و قبائلی شخصیات نے صوبائی وزیر سے باہمی امور پر تبادلہ خیال کرتے ہوئے صوبائی وزیر کو درپیش بنیادی مسائل سے بھی آگاہ کیا- صوبائی وزیر سے ان کے حلقہ انتخاب قلات کے مختلف علاقوں سے آئے ہوئے سائلین نے بھی ملاقات کی- صوبائی وزیر نے نہایت اطمینان اور دلجمعی سے سائلین سے ان کے مسائل سنے اور سائلین کو درپیش مسائل کی دادرسی کی یقین دہانی بھی کرائی- دریں اثنائ صوبائی وزیر نے خالق آباد میں وفات پانے والے مختلف افراد کے لواحقین کے گھروں میں جا کر انسے تعزیت اور فاتحہ خوانی کی جن میں مرحوم محمد ہاشم لانگو اور مرحوم میر نیال خان کلوئی شامل ہیں- صوبائی وزیر نے میر محمد عالم کلوئی کے گھر جاکر موصوف کے بھابھی کی وفات پر بھی انسے تعزیت اور فاتحہ خوانی کی۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
پریس ریلیز
کوئٹہ 05مئی :۔صوبائی مشیر وزیراعلیٰ برائے لائیوسٹاک مٹھا خان کاکڑ نے صوبائی وزیر صحت میر نصیب اللہ مری کے والد بزرگ قبائلی رہنما میر نور احمد مری کے انتقال پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے دعا کی ہے کہ اللہ تعالیٰ مرحوم کو اپنی جوار رحمت میں جگہ عنایت فرمائیں اور پسماندگان کو یہ عظیم صدمہ برداشت کرنے کی ہمت دے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
پریس ریلیز
کوئٹہ 05مئی :۔مدینہ مسجد نزد ایوب اسٹیدیم میں ہر سال کی طرح اس رمضان المبارک میں بھی شبینہ(چھ تراویح) کا اہتمام کیا گیا ہے جو کہ 6 مئی 2019 پیر سے رات 09.15 منٹ پر شروع اور 11 مئی کو آخری تراویح یعنی ختمِ قرآن ہو گا۔ مدینہ مسجد میں تراویح پڑھنے کی سعادت حاصل کرنے کی غرض سے آنے والوں کی خدمت اور رہنمائی کے لیے مسجد انتظامیہ اور رضاکار ہمہ وقت تیار رہتے ہیں۔اس بابرکت موقعے پر ہر سال کی طرح مسجد انتظامیہ اور رضاکاروں کی جانب سے اس سال بھی گاڑی، موٹر سائیکل اور سائیکل پارکنگ، لائٹنگ اور سیکیورٹی کا باقاعدہ انتظام بھی کیا گیا ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Post comment