خبرنامہ نمبر 448/2019
نصیرآباد09فروری :۔شجری کاری مہم کے سلسلے میں ڈپٹی کمشنر نصیرآباد قربان علی مگسی نے پلانٹ فارپاکستان کے حوالے سے ڈگری کالج نصیرآباد میں پودے لگا کر مہم کا آغازکردیا ماحولیات آلودگی کے خاتمے کیلئے درخت لگا نا ناگزیربن چکاہے عوام بڑھ چڑھ کر پلانٹ فارپاکستان کے دن کے موقع پر بڑھ چڑھ کر حصہ لیں تاکہ پاکستان کو ماحولیات آلودگی سے پاک کیا جاسکے بصورت دیگر ہماری آنے والی نئی نسلوں کو انتہائی مشکلات کا سامنا کرناپڑے گااس قومی فریضے کی ادائیگی کے ہم سب کو ملکرکام کرنا ہوگاپودے لگانے کے موقع پر ڈپٹی کمشنر نصیرآباد قربان علی مگسی نے آفیسران اورعوامی نمائندوں سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر ڈویژنل کنزیویٹرجنگلات محمدا مین مینگل،ڈپٹی کنزیویٹرنصیرآباد نعیم جاوید ، پرنسپل ڈگری کالج پروفیسررانجھاخان پندرانی ،ایم ایس سول ہسپتال ڈاکٹرایازحسین جمالی،آرایف اوزغلام سرورپرکانی،محمد عمرڈومکی، شیردل خان ڈومکی سمیت دیگر آفسیران وعوامی نمائندے موجودتھے اس موقع پر دیگرآفیسران نے بھی پودے لگائے ڈپٹی کمشنر نصیرآباد قربان علی مگسی نے کہاکہ سرسبز ماحول ہماری بقاء کیلئے ناگزیر ہے نصیر آباد ڈویژن کو سرسبز بنانے کیلئے تمام وسائل کو استعمال کیا جارہا ہے جنگلات کی افادیت اور اہمیت انتہائی اہمیت کی حامل ہے جنگلات ہمارے ماحول کو بہتر بنانے میں اہم کردار ادا کرتے ہیں درخت لگانا صدقہ جاریہ ہے کیونکہ جب تک درخت لگارہے گا آپ کو سایہ بھی دیتا رہے گا ساتھ ہی آپ کو ثواب بھی ملتا رہے گا ماحول سے آلودگی کا خاتمہ بھی ہوگا جب ماحول صاف ہوگا تو صحت مند معاشرہ وجود میں آئے گا ۔
()()()
خبرنامہ نمبر 449/2019
گوادر 09فروری :۔ ڈپٹی کمشنر گوادر کیپٹن (ر) محمد وسیم نے کہا ہے کہ درخت لگانے سے موسمیاتی تبدیلی کے اثرات، الودگی پر قابو پانے میں مدد ملنے کے ساتھ، ان اقدامات سے نئی نسل کوماحولیاتی تبدیلی اورالودگی سے تحفظ ملے گی جبکہ درخت لگانے سے بارشیں بھی ذیادہ ہونگے ان خیالات کا اظہار انہوں نے پلانٹ فار پاکستان ڈے کے شجرکاری مہم کے افتتاحی تقریب کے موقع پر بات چیت کرتے ہوئے کیا اس موقع پر اسٹنٹ کمشنر باز خان مری سمیت محکمہ جنگلات صحت، مواصلات تعمیرات تعلیم زراعت ادارہ ترقیات گوادر کے ضلعی افسران اور فوجی افسران و مختلف شعبے سے تعلق رکھنے والے لوگوں کی ایک بڑی تعداد نے شرکت کی اس موقع پر ڈپٹی کمشنر نے ادارہ ترقیات گوادر کے پارک کے حاطے میں پودا لگا کر موسم بہار کی شحرکاری مہم کا باقاعدہ آغاز کیااور کہا کہ آج دن ہر شخص ایک پودا لگا کر شجرکاری میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں ضلعی افسران کو ہدایت کی کہ تمام سرکاری ادارے نہ صرف اس مہم کا باقاعدہ حصہ بنیں بلکہ اس نیک کام میں متعلقہ حکام کی بھر تعاون کریں انہوں نے کہا کہ مشاہدہ میں آیا ہے کہ پودے تو شوق سے لگائے جاتے ہیں لیکن بعدازاں ان کی پرورش اور دیکھ بھال پر توجہ نہیں دی جاتی ہے جس کے سبب بشتر تعداد میں پودے ضائع ہوجاتے ہیں شجرکاری اور اس کی حفاظت ایک فریضہ ہے اگر ادارے اور عوام مل جل کر اس فریضہ کو انجام دیں وہ دن دور نہیں پورا ضلع گوادر سرسبز و شاداب ہو گا۔
()()()

خبرنامہ نمبر 450/2019
ژوب 09فروری:۔درخت لگانا صدقہ جاریہ ہے شجر کاری مہم کے دوران لگائے گئے درختوں کی حفاظت بھی ضروری ہے ۔ درختوں کی حفاظت کرکے ہی شجر کاری مہم کوبا مقصدبنایاجا سکتا ہے ان خیالات کا اظہار صوبائی مشیر لائیو سٹاک حاجی مٹھا خان کاکڑ نے بلوچستان ریذیڈنشل کالج ژوب میں محکمہ جنگلات کے زیر اہتمام شجر کاری مہم کے سلسلے میں پودا لگانے کے موقع پر بات چیت کرتے ہوئے کیا اس موقع پر ایڈیشنل سیکرٹری کالجز( ایڈمن) محمد فاروق کاکڑ ، پرنسپل بلوچستان ریذیڈنشل کالج ژوب داد محمدکاکڑ ، اے سی محمد عارف کاکڑ، ڈی ای او لعل جان موسیٰ خیل ، ڈپٹی کنزرویٹو جنگلات شراف الدین ، جنگلات افیسر اشرف علی ، ڈپٹی ڈائریکٹر لائیو سٹاک ڈاکٹر داد خان بابر، سماجی و سیاسی رہنما ڈاکٹر خیر محمد مندوخیل ،پی ٹی سی ایل افیسر شربت خان مندوخیل ، پرو فیسر زکریا خان بابر قبائلی رہنما حاجی ماشک بابڑ اور دیگر نے بھی شجر کاری مہم کے سلسلے میں پودے لگائے صوبائی مشیر لائیو سٹاک حاجی مٹھا خان کاکڑ نے بی آر سی کالج میں شجرکاری مہم کے سلسلے میں پودے لگانے کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ بی آر سی ژوب کا ایک اہم اثاثہ ہے انہوں نے کہا کہ درخت لگانا صدقہ جاریہ ہے ژوب میں زیادہ سے زیادہ درخت لگائے جائینگے صوبائی حکومت صوبے بھر کو سرسبز بنانے کیلئے پانچ سالہ منصوبے کے تحت 25 کروڑ پودے لگائیگی رواں مہم کے دوران صوبے بھر میں 12 لاکھ پودے لگانے کا ہدف مقرر کیا گیا ہے انہوں نے کہا کہ درخت لگانے کے بعد درختوں کی آبیاری اور حفاظت سب سے زیادہ ضروری ہے درختوں کی حفاظت کرکے ہی شجر کاری مہم کوبا مقصدبنایاجا سکتا ہے انہوں نے کہا کہ تمام سرکاری عمارات اور سکولوں میں لازمی طور پر زیادہ سے زیادہ درخت لگائے جائیں انہوں نے کہا کہ عالمی سطح پر گلوبل وارمنگ ہونے کے بعد درجہ حرارت کو کم سطح پر لانے کیلئے ضروری ہے کہ جنگلات کی حفاظت اور زیادہ سے زیادہ درخت لگانے کو یقینی بنایا جائے اس موقع پر پرنسپل داد محمد کاکڑ اور بلوچستان کانسٹیبلری کے انچارج انسپکٹر نے کالج اور سیکورٹی سے متعلق بریفنگ دی صوبائی مشیر نے کہا کہ حالات کے پیش نظر سیکورٹی پر کوئی سمجھوتہ نہ کیا جائے سیکورٹی اور ضروریات کی ترجیحی بنیادوں پر فراہمی کو یقینی بنائینگے اور اس سلسلے میں حکام بالا سے بھی بات کرینگے ۔
()()()
خبرنامہ نمبر451/2019 
زیارت09فروری :۔ ڈپٹی کمشنر زیارت قادر بخش پرکانی ،ڈپٹی کنزرویٹر جنگلات زیارت عبدالحسیب کاکڑ ،اسسٹنٹ کمشنر عبدالمجید، ڈی ایف او افراسیاب خان ،ایکسین محمد حسین ،میجر رسالدار روزے محمد نے پودا لگاکر وزیراعظم پاکستان کی ہدایت پر آج ،پلانٹ فار پاکستان ڈے،شجر کاری مہم کا افتتاح کیا ،شجر کاری مہم کے سلسلے میں محکمہ جنگلات زیارت کی طرف سے ریلی بھی نکالی گئی۔محکمہ جنگلات زیارت نے پلانٹ فار پاکستان ڈے کے موقع پر 250درخت لگادئیے اور 750درخت تقسیم کئے گئے۔یکم اپریل تک ضلع زیارت میں پانچ ہزار سے زائد درخت لگائیں جائیں گے۔اس موقع رینج فاریسٹ آفیسران نصیب اللہ ،محمد ہاشم ،ملک نور الدین بھی موجود تھے ۔ڈپٹی کمشنر قادر بخش پرکانی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ درخت لگانا سنت نبوی ﷺ ہے ،معاشرے کا ہر فرد ایک ایک درخت ضرور لگائیں اور شجر کاری مہم میں بھرپور حصہ لیں،درخت لگانے کے ساتھ درخت کی آبیاری بھی ضروری ہے ۔
()()()

خبرنامہ نمبر452/2019 
پشین09فروری :۔ڈپٹی کمشنر میجر (ر)اورنگزیب بادینی نے پلانٹ فارپاکستان ڈے کے موقع پر آفیسر ز کلب میں پودے لگاکر شجرکاری مہم کا افتتاح کرتے ہوئے کہا کہ کئی عرصوں سے موسمیاتی تبدیلی سے پیدا ہونیوالے شدید خطرات کے پیش نظر جگہ جگہ پودے لگانا اولین ذمہ داری سمجھتے ہیں پشین ہمارا گھر ہے جس کو سرسبزوشاداب بنانے کیلئے تمام مکتبہ فکر کو کردار ادا کرنا ہوگا آج کے دن ضلع پشین میں مجموعی طور پر پچیس سو پودے لگا دئیے گئے جبکہ مہم کے اختتام تک ضلع پشین کو پینتیس ہزار پودے لگانے کا ہدف دے دیا گیا ہے رود ملازئی اور توبہ کاکڑی میں جلد جنوبرکے درخت لگا دئیے جائیں گے گھر گھر درخت اور پودے لگانیکی ضرورت ہے کیونکہ درخت لگانا صدقہ جاریہ ہے افتتاحی تقریب میں میجر عبدالصمد کاکڑڈویژنل فارسٹ آفیسر سید نادر علی شاہ رینج فارسٹ آفیسر اجمل خان کاکڑسپرٹنڈنٹ لائیو اسٹاک ڈاکٹر شیراحمد ترین ڈپٹی ڈی او ثناء اللہ ترین انفارمیشن ٹیکنالوجی آفیسر سید نصیب اللہ ایپکا کے ضلعی صدر محمد رسول وفا کاکڑبھی موجود تھے انہوں نے کہا کہ ضلع پشین کے تمام علاقوں کی خوبصورتی کیلئے اقدامات کررہے ہیں ماحولیاتی آلودگی سے بچنے کیلئے ہمیں زیادہ سے زیادہ درخت لگانے ہونگے صاف سبز پاکستان کے تحت ہر گھر میں شجرکاری بلوچستان کیلئے ہریالی اور عوام کیلئے خوشحالی ثابت ہوگی عوام کو چائیے کہ وہ بلوچستان کو سرسبز بنانے کیلئے حکومت کا ساتھ دیتے ہوئے شجرکاری مہم میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال کی خصوصی ہدایت پر سرسبز بلوچستان کے مشن کو بھرپور طریقے سے سرانجام دینگے شجرکاری مہم کا یہ سلسلہ بیس مارچ تک جاری رہیگاانہوں نے کہا کہ مہم کے دوران نرسری اسٹال لگادیا گیا ہے جس سے لوگ مفت پودے لیں سکیں گے۔
()()()
خبرنامہ نمبر453/2019 
کوئٹہ 09فروری :۔ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی قاسم خان سوری اور صوبائی وزیر صحت میر نصیب اللہ مری نے گزشتہ روز سنڈیمن ہسپتال کوئٹہ کا اچانک دورہ کیا اس موقع پر ان کا کہنا تھا کہ شعبہ صحت انتہائی اہمیت کا عامل ہے اور خدمت انسانیت کا سب سے بڑا ذریعہ بھی ہے ہماری کوشش ہے کہ عوام کو بہترین بنیادی اور عصر حاضر سے ہم آہنگ صحت کی تمام سہولیات ان کی دہلیز پر فراہم کی جاسکے اس تناظر میں حکومت تمام دستیاب وسائل کو بروئے کار لارہی ہے اس دورے میں ایم ایس سول اسپتال ڈاکٹر محمد سلیم آبڑو، پاکستان تحریک انصاف کی صوبائی رہنما سید ظہور آغا، عبدالباری بڑیچ ،بسم اللہ آغا و دیگر حکام بھی ان کے ہمراہ تھے ان کے اس دورے کے دوران انہوں نے مختلف شعبوں ٹراما سینٹر، نیوٹریشن سنٹر،شعبہ اطفال و قلب،آئی سی یو ،شعبہ ایمرجنسی اور مختلف وارڈ کا تفصیلی معائنہ کیا اور حکام سے تفصیلی بریفنگ لی گئی مریضوں کی عیادت کی اور ان کے مسائل بھی سنے۔ انہوں نے کہا کہ ہماری کوشش ہے کہ تمام مریضوں کو سو فیصد مفت اور بہترین علاج فراہم کر سکیں جس کے لیے تمام دستیاب وسائل کو استعمال میں لایا جا رہا ہے انہوں نے کہا کہ مزید بہتری کے لئے بھی اقدامات کئے جارہے ہیں کیونکہ بہتری کی گنجائش ہمیشہ ہوتی ہے اس موقع پر صوبائی وزیر صحت میر نصیب اللہ مری نے کہا کہ زیر تعمیر پیٹڈ سینٹر کی فوری تکمیل کے لئے بہت جلد درکار فنڈز بھی جاری کردیئے جائیں گے۔
()()()

خبرنامہ نمبر454/2019 
کوئٹہ 09فروری :۔بلوچستان کے صوبائی وزیر محنت و افرادی قوت سردار سرفراز چاکر ڈومکی سے یورپی یونین کے اینی کوفاڈ ,سعدیہ عین الدین جرمنی کے ادارہ جی۔ائی۔ذیڈ کے قاضی فرید, فیصل احسان, حفیظ اللہ جوگیزئی پر مشتمل وفد نے ملاقات کی۔ اس موقع پر سیکرٹری لیبر اینڈ مین پاور محمد بلال جمالی اور ڈائریکٹر بلوچستان ٹیوٹا شاہ ڈنہ مگسی بھی موجود تھے۔ یورپی یونین کے وفد نے صوبائی وزیر محنت و افرادی قوت کو بتایا۔ کہ ٹیکنکل ایحوکیشن اینڈ ووکیشنل ٹریننگ پر یورپی یونین نے 2017 سے کام شروع کیا ہے۔ جو دسمبر 2021 تک جاری رہیگا۔ اس پروگرام کا مقصد بلوچستان سمیت ملک بھر کے نوجوانوں کو ٹیکنکل اینڈ ووکیشنل تربیت دیکر ہنرمند بنانا ہے۔تاکہ یہ نوجوان سی پیک سمیت دیگر جگہوں میں اپنا روزگار خود ڈھونڈ کر اس سے مسفید ہو سکیں۔ یورپی یونین کے نمائندہ وفد نے مزید بتایا۔ کہ وہ بلوچستان کی پسمانگی اور غربت کو مدنظر رکھتے ہوئیدیگر صوبوں کی نسبت اس صوبہ کو ذیادہ فنڈنگ دی جا رہی ہے۔ تاکہ اس صوبے میں بڑھتی ہوئی بیروگاری اور غربت کی شرح کم کرنے مدگار ثابت ہوں۔اس موقع پر سردار سرفراز چاکر ڈومکی نے یورپی یونین کے کاوشوں کو سراہتے ہوئے کہا کہ وہ یورپی یونین کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔ کہ وہ بلوچستان سمیت ملک کے چاروں صوبوں میں ٹیکنکل اینڈ ووکیشنل تربیت کرنے میں نہایت اہم کردار ادا کر رہی ہے جسکا ہمیں اشد ضرورت ہے صوبائی وزیر سرفراز چاکر ڈومکی کا کہنا تھا۔ کہ بلوچستان کے نوجوانوں میں ٹیلنٹ کی کوئی کمی نہیں۔ انہیں صرف مواقع فراہم کرنے کی کمی ہے۔ جس کیلیے محکمہ محنت و افرادی قوت ویلڈنگ, الیکٹریشن,الیکٹرونکس, ووڈ ورکس ویگر کئی پیشہ وارانہ تعلیم دینے میں اپنی خدمات پیش کر رہی ہے۔ صوبائی وزیر محنت و افرادی قوت سردار سرفراز چاکر ڈومکی کا مزید کہنا تھا۔ کہ انکی کوشش ہے۔ بلوچستان کے نوجوانوں کو اس قابل بنایا جاسکیں۔ کہ انہیں ہنر مند بناکر وہ اپنا روزگار اپنی مدد اپکے تحت کہیں بھی پیدا کرسکیں۔ اسی طرح وہ اپنی معاشی خوشحالی کے ساتھ ساتھ ملکی ترقی میں بھی اپنا کردار ادا کر سکیں گے۔ ملاقات کے دوران سردار سرفراز ڈومکی نے بتایا۔کہ یورپی یونین کا بلوچستان کے لوگوں کو پیشہ وارانہ تعلیم دلانے کے حوالے اٹھائے جانے والے قابل ستائش ہیں۔ جو یقنناً صوبے کی ترقی میں کلیدی کردار ادا کرینگے۔ 
()()()

خبرنامہ نمبر 455/2019
بارکھان ۔صوبائی وزیر خوراک وبہبود آبادی سردار عبدالرحمن کیھتران نے کہا کہ درخت زمین کی خوبصورتی اور موسم کو خوشگوار رکھنے کا سبب ہیں ،بارشیں برسنے کا ذریعہ بنتے ہیں ان خیالات کا اظہار انہوں نے ڈپٹی کمشنر بارکھان کے دفتر میں شجر کاری مہم افتتاح کے موقع پر بات چیت کرتے ہوئے کیا ،اس موقع پر ڈپٹی کمشنر بارکھان سہیل انور ہاشمی ،ڈسٹرکٹ فارسٹ آفیسر محمد سہیل،سردار ذادہ غفور جان،میر ایوب کیھتران ،ایکسین بی اینڈ آر محمد قاسم ،اسسٹنٹ ڈائریکٹر انفارمیشن لونی اور دیگر سرکاری آفیسران اور قبائلی معتبرین موجود تھے ۔صوبائی وزیر اور ڈپٹی کمشنر نے درخت لگا کر ضلع بارکھان میں شجر کاری مہم 2019ء کا باقاعدہ افتتاح کیا ،فارسٹ آفیسر زبیر خان کاکڑ نے اس موقع پر بتایا کہ ضلع میں 25سو درخت لگانے کا حدف مقرر کیا گیا ہے جس میں پلو،بیراور دیگر اقسام کے درخت شامل ہیں ،یہ پودے عوام میں مفت تقسیم کئے جائیں گے ،9فروری کا دن پورے ملک میں گرین پاکستان ڈے کے حوالے سے منایا جا رہا ہے اس حوالے سے آج کے دن ضلع بارکھان میں 22سو درخت لگائیں جائیں گے ،5 سومحکمہ جنگلات کی جانب سے جبکہ 15سو عوام میں تقسیم کئے جائیں گے ۔صوبائی وزیر نے اس موقع پر کہا کہ ضلع بارکھان کی آ ب و ہوا درختوں اور فصلات کے حوالے سے نہایت موضوع ہے ،ضلع بھر کے لوگ شجر کاری مہم 2019ء کے حوالے سے بڑھ چڑھ کر زیادہ سے زیادہ درخت لگائیں جس سے معیشت میں بہتری آئی گی اور موسم بھی خوشگوار ہوگا انہوں نے کہا کہ پورے صوبے میں لوگ گرین پاکستان شجر کاری مہم 2019ء کے حوالے سے حکومت کی خصوصی ہدایات پر تیزی سے عمل درآمد کر رہی ہیں اور جس کے مثبت نتائج برآمد ہونگے اور زیادہ سے زیادہ درخت اگانے میں مدد ملے گی۔
()()()
خبرنامہ نمبر 456/2019
لورالائی09فروری :۔وزیر اعظم پاکستان عمران خان کی ہدایت پر صوبہ بھر کی طرح ضلع لورالائی میں پلانٹ فار پاکستان کے حوالے سے تقریب منعقد ہوئی ،ڈپٹی کمشنر لورالائی حبیب الرحمن کاکڑ نے ڈپٹی کمشنر دفتر کے احاطہ میں پودہ لگا کر پلانٹ فار پاکستان شجر کاری مہم کا آغاز کیا اس موقع پر چیف کنزروئیٹر فارسٹ ژوب ڈویژن یارمحمد ،ایم ایس ڈاکٹر فہیم اتمانخیل ،ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر عبدالرشید خان ،ڈسٹرکٹ فارسٹ آفیسر لورالائی ثاقب،کیسکو ایکسین امان اللہ خان ،ایکسین بی اینڈ آر IIقاضی نورالحق،جی ایم بی ڈی اے احمد جان ناصر،ڈپٹی ڈائریکٹر ایگریکلچر نور محمد،ڈی ایس پی ہیڈ کوارٹر لورالائی محمد آصف رسالدار لیویز ہیڈ کوارٹر لورالائی حاجی روزالدین کدیزئی ودیگر آفیسران نے شرکت کی اور درخت لگائے۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر لورالائی نے کہا درخت قدرت کا انمول تحفہ ہے درختوں کا لگانا اور ان کی حفاظت ہر شہری کی قومی ذمہ داری ہے ،انہوں نے کہا کہ پوری قوم کو شجر کاری مہم میں بھرپور حصہ لینا چاہیے کیونکہ درخت نہ صرف آمدن کا ذریعہ ہیں بلکہ اس سے ماحول میں پائی جانے والی آلودگی ختم ہوتی ہے اور صحت مند ماحول میسر آتا ہے انہوں نے کہا کہ موسمی تبدیلی جیسے مسائل سے نمٹنے کیلئے شجر کاری سے زیادہ کوئی عمل موثر نہیں ہوسکتا ،ڈپٹی کنزرویٹر یارمحمد نے بتایا ہے کہ مہم کے دوران ضلع لورالائی کے تمام سرکاری دفاتر ،تعلیمی اداروں اور مراکز صحت میں 10ہزار درخت لگانے کا حدف مقرر کیا گیا ہے ۔
()()()

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Post comment