خبرنامہ نمبر74/2019 
کوئٹہ 09جنوری :۔وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے نیشنل سیکیورٹی ورکشاپ کے شرکاء سے بدھ کے روز یہاں خطاب کیا جس کا موضوع ’’گورننس، چیلنجز اورسی پیک پراسپیکٹس ‘‘تھا، وزیراعلیٰ نے اپنے جامع ومفصل خطاب میں بلوچستان کے مسائل، وسائل، گورننس، ترقیاتی عمل سمیت اہم صوبائی امور کا احاطہ کیا، وزیراعلیٰ نے گورننس کی بہتری، وسائل کی ترقی، صوبے کودرپیش حقیقی مسائل کے حل کے لئے اپنی حکومت کی ترجیحات اور تعلیم، صحت، ماحولیات، زراعت، پانی، سرمایہ کاری، صنعتکاری اور توانائی سمیت دیگر شعبوں کی ترقی اور اختیارات کی ضلع کی سطح تک منتقلی کے لئے گذشتہ چار ماہ میں کئے گئے اقدامات اور حکومتی کارکردگی پر تفصیلاً روشنی ڈالی جبکہ انہوں نے سی پیک کے حوالے سے بلوچستان کے موقف کو بھی اجاگر کیا، وزیراعلیٰ نے اس موقع پر شرکاء کی جانب سے پوچھے گئے سوالات کے تفصیلی جوابات بھی دیئے۔ 
()()()
خبرنامہ نمبر 75/2019
کوئٹہ 09جنوری :۔صوبائی حکومت کی کاوشوں کے نتیجے میں گروک ڈیم خاران کے منصوبے کے آغاز میں حائل رکاوٹیں دور ہوگئی ہیں اور جلد منصوبے پر کام کا آغاز کردیا جائے گا، یہ اہم منصوبہ 2009ء سے تعطل کا شکار تھا، منصوبے کا آغاز رخشاں ڈویژن بالخصوص خاران کو درپیش پانی کے سنگین مسئلے کے حل کی جانب ایک اہم پیشرفت ہے، منصوبے پر لاگت کا تخمینہ دس ارب روپے ہے جس کے لئے وفاقی حکومت 90فیصد اور صوبائی حکومت 10فیصد فنڈ فراہم کرے گی۔ 
()()()
خبرنامہ نمبر 76/2019
کوئٹہ 09جنوری :۔گورنر بلوچستان امان اللہ خان یاسین زئی نے کہا کہ جمہو ریت او رمعیشت کے استحکام کیلئے نصف آبادی پر مشتمل خواتین کی بھر پور شرکت او ر شمولیت اشد ضروری ہے کیونکہ زند گی کہ تمام شعبوں میں خواتین برابر کے شریک ہیں ۔گورنر نے اس یقین کا اظہارکرتے ہوئے کہا کہ معاشی خو د انحصاری سے ہی وہ اپنے تمام حقوق کی پاسداری کو محفوظ بنانے کے قابل ہو سکتی ہیں تمام سیا سی او رمعاشی سرگرمیوں میں خو اتین کی شرکت سے ہی ہم کامیابی اور سر خروکی راہ پر گامزن ہوسکتے ہیں ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے حر مت نسواں ویلفیئر سو سائٹی کی صدر حمیدہ علی ہزارہ کی قیادت میں وفد سے بات چیت کرتے ہوئے کیا وفد سجاد حسین ، محمد علی ،ذوالفقار ،سید مزمل رضو ی اور منظور حسین پرمشتمل تھا ۔وفد سے گورنر نے کہا کہ موجودہ حکومت صوبے میں یکساں او رمتو ازن ترقی پریقین رکھتی ہے ۔انہوں نے اس بات پرافسوس کا اظہار کیا کہ با لخصو ص عو رتوں کی ایک بڑی تعداد بنیادی سہولتوں سے محروم ہے اور صوبے کے مختلف ا ضلاع میں آج بھی خواتین گھر یلو استعمال کیلئے اپنے سروں پر پانی لا نے پر مجبو رہیں جو ایک المیہ ہے گورنر نے تمام سرکاری محکموں با لخصوص نیو ٹک اور بے نظیر انکم سپو رٹ اسکیم کے حکام پر زور دیا کہ وہ صوبے میں خواتین کی بہبوداور جدید تقاضوں سے ہم آہنگ کرانے کیلئے مختلف قسم کی مہارتیں سکھانے کیلئے بھرپور کردار اداکریں۔
()()()
خبرنامہ نمبر77/2019 
نصیرآباد09جنوری :۔ڈی آئی جی پولیس نصیر آبا رینج راؤ منیر احمد ضیاء کی زیر صدارت اجلاس منعقدہوا۔اجلاس میں نصیر آباد رینج کے پانچوں اضلاع میں نئے قائم کئے گئے شکایتی سیل انچارج نے شرکت کی۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ڈی آئی جی پولیس نصیر آباد راؤ منیر احمد ضیاء کا کہنا تھا کہ تمام اضلاع میں شکایتی سیل قائم کرنے کا مقصد عوام کے مسائل کو ترجیہی بنیادوں پر سننا اور ان کی فوری داد رسی ہے۔ شکایتی سیل کے ذریعے عوام کی پولیس تک رسائی میں بھی آسانی ہو گی۔تمام تر موصول ہونے والی درخواستوں پر فوری کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔گم نام اور بے نام موصول ہونے والے درخواستوں کی بھی مکمل چھان بین اور حقائق پر مبنی درخواستوں پر سخت کاروائی کی جائے گی۔اس کے ساتھ ساتھ کسی بھی خفیہ،درخواست دہندہ کا نام بھی صیغہ راز میں رکھا جائے گاشکایتی سیل کے انچارج اور ان کے رابطہ نمبر ذیل ہیں انسپکٹر محمد داؤد کھوسو انچارج شکایتی سیل رینج آفس نصیر آباد،رابطہ نمبر03458997379انسپکٹر منظور احمد سیال، انچارج شکایتی سیل ضلع نصیر آباد، رابطہ نمبر03337234857انسپکٹر رشید گل،انچارج شکایتی سیل ضلع جعفرآباد، رابطہ نمبر 03337860209انسپکٹر عبدالرشید مینگل،انچارج شکایتی سیل ضلع صحبت پور، رابطہ نمبر03026897557انسپکٹر نبی وارث، انچارج شکایتی سیل ضلع جھل مگسی، رابطہ نمبر03334562582انسپکٹر گل گہنور،انچارج شکایتی سیل ضلع کچھی(بولان)، رابطہ نمبر 03458864897عوام کسی بھی قسم کی شکایت یا کسی بھی قانونی معاملے میں دادرسی کے لئے اپنے متعلقہ ضلع کے شکایتی سیل انچارج سے رابطہ کر سکتے ہیں۔
()()()
خبرنامہ نمبر78/2019 
کوئٹہ 09جنوری :۔صوبائی مشیر ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن ملک محمد نعیم خان بازئی نے کہا کہ ہماری منزل میں عوامی خدمت ہماری اولین ترجیح ہے یہ بات انہوں نے اپنے آفس میں آئے ہوئے مختلف قبائلی عمایدین اور اپنے حلقے سے آئے ہوئے لوگوں اور وفود سے بات چیت کرتے ہوئے کیا ۔اس مو قع پر اے این پی کے رہنما نوبزادہ عمر فاروق کاسی ،رہنما نصراللہ کاکڑ ،حاجی افضل بازئی او رملک محمد شاہ خان کا کڑ ، نصیب اللہ کاکڑ بھی موجود تھے وفود سے بات چیت کرتے ہوئے مشیرایکسا ئز اینڈ ٹیکسیشن ملک محمد نعیم خان بازئی نے کہا کہ عوام کے مسائل انکی دہلیز پر حل کرنا ہماری اولین ترجیح ہے۔ اقتدار اور وزرات ہماری منزل نہیں عوام کی خدمت کرنا ہماری اولین ترجیح ہے ۔ہم سے جو ہو سکاوہ عوام کی ترقی اور خوشحالی کے لیے کرینگے مسائل کا ختم ہونا ایک دن کی بات نہیں بلکہ ان کو ختم ہونے میں وقت لگے گا۔ موجودہ حکومت وزیر اعلیٰ جام کمال خان کی قیادت میں ہر وقت کو شاں ہے اوراپنے عوام کو بھی نہیں چھو ڑ یں گے او رمسائل کا انبار بھی نہیں چھوڑ یں گے بلکہ مسائل ختم کرنے کے لیے دن رات کو شش کر ینگے ۔
()()() 
خبرنامہ نمبر79/2019 
کوئٹہ 09جنوری :۔ صوبائی وزیر ٹرانسپورٹ محمد عمر جمالی نے کہا ہے کہ صوبے میں ٹرانسپورٹ کے شعبے کو جدید خطوط پر استوار کرنے کے لئے ہر ممکن اقدامات کر رہے ہیں۔ اس سلسلے میں کمپیوٹرایزڈ روٹ پرمٹ کے اجرا کا عمل شروع ہونے سے جعل سازی کا خاتمہ اور سرکاری ریونیو میں خاطر خواہ اضافہ ہو گا اس کے علاوہ ٹرانسپورٹ کے تمام ریکارڈ اور ریونیو کے نظام کو کمپیوٹرائزڈ کرنے کے لئے بھی علی ا قدامات کئے جا رہے ہیں جبکہ تمام ٹرانزٹ ڈویژ ن ریکارڈز کو قانون کے مطابق اورحکومت کے فیصلے پر عمل درآمد کو یقینی بناتے ہوئے جلدازجلد منتقل کئے جائیں گے ان خیالات کا اظہار انہوں نے پرویشنل ٹرانسپورٹ اتھارٹی بلوچستان کے دفتر میں کمپیوٹرائز روٹ پرمٹ کے اجراء اور دورے کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کیا اس موقع پر صوبائی سیکرٹری ٹرانسپورٹ صالح محمد بلوچ اور سیکرٹری پرویشنل ٹرانسپورٹ اتھارٹی بلوچستان ظفربلوچ بھی موجود تھے اس موقع پر صوبائی وزیر نے کمپیوٹر ائزڈ روٹ پرمٹ کے اجرا کا نظام کا بھی افتتاح کیا انہوں نے کہا کہ صوبے میں ٹرانسپورٹ کا شعبہ تیزی سے بدل رہا ہے اس سلسلے میں جدید طرز پر روٹ پرمٹ کا اجراء تمام گاڑیوں کا ریکارڈ اورریونیو کے نظام کو کمپیوٹرائز کیاجا رہے ہیں انہوں نے کہا کہ ریونیو میں اضافہ کے لئے ہر ممکن وسائل بروئے کار لائے جا رہے ہیں اور ریکارڈ اورریونیو کے نظام میں خامیوں کو دور کرکے تمام ریکارڈ اور ریونیو میں اضافہ کے لیے فوری اقدامات کیے جائیں گے انہوں نے کہا کہ ٹرانزٹ ڈویڑنل ریکارڈ جو کہ دیگر ڈویڑن کے پاس ہے وہ قانون کے مطابق جلدازجلد پرویشنل ٹرانسپورٹ اتھارٹی منتقل کئے جائیں اس سلسلے میں قانونی کارروائی میں مداخلت کرنے کا عمل کسی صورت برداشت نہیں کی جائیگی کیونکہ ریونیو میں اضافہ کیلئے تمام ریکارڈ کا ایک جگہ منتقلی ناگزیر ہوچکا ہے اس موقع پر صوبائی وزیر نے پرویشنل ٹرانسپورٹ اتھارٹی کے مختلف سیکشنز اور کام کا بھی معائنہ کیا۔
()()()
خبرنامہ نمبر80/2019 
کوئٹہ 09 جنوری:۔صوبائی وزیر خوراک و سماجی بہبود آبادی سردار عبدالرحمن کھیتران نے کہا کہ آج کے جدید دور میں محکموں کو جدید تقاضوں سے ہم آہنگ کرنے کی اشد ضرورت ہے اور اس حوالے سے موجود صوبائی حکومت وذیراعلی بلوچستان جام کمال خان کی سربراہی میں تمام دستیاب وسائل کو بروئے کار لارہی ہے تاکہ عوام کی روزمرہ زندگی میں مشکلات کو کم کیا جاسکے یہ بات انہوں نے سیکرٹری خوراک غلام علی بلوچ سے محکمے کی کارکردگی کے حوالے سے دی جانے والی بریفنگ کے موقع پر کہی۔ انہوں نے کہا کہ محکمے میں بدعنوانی کو ختم کرنے کے لیے اقدامات کیے جائیں اور بدعنوانی کو کسی صورت قبول نہیں کیا جائے گا اس ضمن میں مختلف تجاویز پر غور بھی کیا گیا انہوں نے کہا کہ محکمے میں بہت زیادہ مسائل ہیں لیکن ہم ان مسائل کو چیلنج سمجھ کر محکمے کی کارکردگی کو بہتر بنانے کے لئے مل کر کام کریں گے بریفنگ میں محکمے کی کارکردگی کا تفصیلی جائزہ لیا گیا اور مختلف تجاویز زیر غورآ ہیں اور فیصلہ کیا گیا کہ محکمہ خوراک کی کارکردگی کو فوری ومستقل طور پر بڑھانے کے لئے وزیراعلی جام کمال خان کو بھی تفصیلی بریفنگ دی جائے گی اس موقع پر ڈائریکٹر جنرل خوراک عبدالطیف کاکڑ بھی موجود تھے۔
()()()
خبرنامہ نمبر81/2019 
کوئٹہ09 جنوری۔ جاری زرعی ترقیاتی اسکیموں کو ہر صورت پورا کیا جائے گاتاکہ زرعی شعبے میں جاری ترقیاتی کاموں کے خاطر خواہ نتائج حاصل ہوسکیں ۔ ان خیالات کا اظہار صوبائی وزیر زراعت و کو آپریٹو انجینئرزمرک خان اچکزئی نے زرعی ترقیاتی اسکیموں کے حوالے سے منعقدہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا ۔ اس موقع پر سیکریٹری زراعت خلیق نذر کیانی اور زراعت کے چاروں ونگز کے سربراہان بھی موجود تھے ۔ اجلاس کے دوران محکمہ پی اینڈ ڈی کے چیف آف سیکشن محمد عامر نے صوبائی وزیر زراعت کو جاری ترقیاتی اسکیموں کے حوالے سے جاری کردہ فنڈز پربریفنگ دی اور اس عزم کا اظہار کیا گیا کہ اس حوالے سے فنڈز کا اجراء کسی صورت نہیں روکا جائیگا اور جاری ترقیاتی اسکیموں کی جلد تکمیل کی بھر پور کوشش کی جائیگی ۔ 
()()()
خبرنامہ نمبر82/2019 
کوئٹہ09 جنوری۔نوجوان نسل ہماری تاریخ اور ثقافت کے محافظ ہیں نوجوانوں کو ثقافت ، اقدار اورتہذیب و تمدن کے حوالے سے آگہی اور تعلق فراہم کیا جانا چاہیئے اپنی تاریخ اور ثقافت سے جڑی قومیں آج ترقی کی منازل طے کرچکی ہیں روایات اور ثقافت سے کنارہ کشی اختیار کرنے والی قوموں کے نقوش دیرپا نہیں رہتے ان خیالات کا اظہار صوبائی مشیر کھیل و ثقافت عبدالخالق ہزارہ نے مختلف وفود سے بات چیت کے دوران کیا ۔ انہوں نے کہا کہ نئے بلوچستان میں مذہبی انتہا پسندی ، شدت پسندی اور کسی بھی تعصب کی کوئی گنجائش نہیں صوبے کو مذہبی ، نسلی اور لسانی پسندی کا خاتمہ کھیل وثقافت اور مثبت سر گرمیوں کو اجاگر کرنے سے ہی ممکن ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کھیل کے میدان آباد کرکے نوجوانوں کو مثبت سر گرمیوں کی طرف راغب کیا جائے ہمیں معاشرے میں مذہبی شدت پسندی انتہا پسندی اور دیگر تفرقات کے خاتمے کیلئے کھیلوں کی سر گرمیوں کو بھر پور انداز میں فروغ دینا ہوگا صوبائی مشیر کا مزید کہنا تھا کہ صوبے میں ٹیلنٹ کی کوئی کمی نہیں کھلاڑیوں کی حوصلہ افزائی کے لئے حکومت ہر ممکن اقدامات کریگی کیونکہ کھیل کے میدان آباد کرکے ہی ایک صحت مند معاشرہ تشکیل دے سکتے ہیں ہم ہر صورت ٹیلنٹ کو سامنے لائیں گے کھیلوں کے مقابلے سمیت ثقافتی پروگراموں کو نہ صرف فروغ دیا جائے گا بلکہ ان میں جدت بھی لائیں گے انہوں نے کہا کہ صوبے کے مفاد پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا حکومت کا وژن ہے کہ عوام کی ترقی کیلئے دیرپا اور مؤثر اقدامات کیئے جائیں تاکہ ان کے ثمرات سے عوام مستفید ہوسکیں ۔ 
()()()
خبرنامہ نمبر83/2019 
خضدار 9 جنوری۔وزیر اعلی بلوچستان جام کمال خان کی خصوصی ہدایت پر صوبائی کابینہ کی سب کمیٹی کے اراکین صوبائی وزیر ہائر ایجوکیشن و اطلاعات میرظہور احمد بلیدی ،صوبائی وزیر سماجی بہبود میر اسد اللہ بلوچ اور صوبائی وزیر داخلہ میر ضیاء لانگو نے گزشتہ روز خضدار کا دورہ کیا وزیر اعلی کے صوبائی مشیر رامین محمد حسنی سیکریٹری تعلیم عبدالصبور کاکڑ ،ڈائریکٹر جنرل تعلقات عامہ محمد نعیم بازئی بھی ان کے ہمراہ تھے انہوں خضدار میں زیر تعمیر شہید سکندر زہری یونیورسٹی کی زیر تعمیر عمارت کا معائنہ کیا اس موقع پر دی جانے والی بریفنگ کے دورا ن صوبائی وزیر ہائر ایجوکیشن و اطلاعات میرظہور بلیدی نے کہا کہ صوبائی حکومت صوبے میں معیاری تعلیم کے فروغ کے لیئے ترجیحی بنیادوں پر کام کر رہی ہے اور معیاری تعلیم اور تعلیم کی شعبے کی ترقی کے لیئے اپنے اہداف سے کسی صورت بھی پیچھے نہیں ہٹیں گے اور ان اہداف کی تکمیل کے لیئے متعلقہ منصوبوں کو بروقت اور معیار کے مطابق مکمل کرنے کی ہدایت کی ہے انہوں نے کہا کہ اب صرف خالی باتیں کرنے کا زمانہ گزر چکا صوبے کو ترقی یافتہ بنانے کا واحد حل اپنے جوانوں کو معیاری تعلیم سے آراستہ کرنا ہے اس کے لیئے ہمیں عملی کام کرنے کی ضرورت ہے انہوں نے کہا کہ صوبائی مخلوط حکومت اس حوالے سے کافی سنجیدہ ہے صوبائی حکومت اپنی ذمہ داریاں پوری کررہی ہے اور متعلقہ محکموں کے افسران و اہلکاروں کو بھی اپنی ذمہ داریاں پوری کرنی چاہیں ہم ایک ٹیم ہیں اور ہم سب کا مقصد صوبے کی ترقی و لوگوں کو بنیادی سہولتوں کی فراہمی ہے اس موقع پر بات چیت کرتے ہوئے صوبائی وزیر سماجی بہبود میر اسد اللہ بلوچ نے کہا کہ صوبے میں تعلیم کے شعبے کی ترقی ہماری سب سے پہلی ترجیح ہے فروغ تعلیم ہمارا وژن ہے ہم پسماندہ ہیں اور ہمیں ترقی کے لیئے تعلیم کی ترقی اور معیاری تعلیم ضروری ہے اس لیئے جدید اور معیاری تعلیم کا حصول اور اپنے نوجوانوں کو تعلیم سے آراستہ کرنا ہمارے لیئے جینے مرنے کا سوال ہے اگر اب بھی ہم اپنے اہداف حاصل کرنے میں کامیاب نہ ہوسکے تو ہماری نسلیں ہمیں معاف نہیں کرینگی ہم اور ہماری حکومت صوبے میں اعلی تعلیمی اداروں کو کامیاب دیکھنا چاہتی ہے اس کے لیئے عوام کا تعاون اشد ضروری ہے ہم اس مقصد کے حصول کے لیئے ہر صورت میں فنڈز فراہم کریں گے اور ان فنڈز کو ایمانداری سے انہی منصوبوں پر خرچ کرنے اور ان کی تکمیل چاہتے ہیں تاکہ تعلیم کے فروغ کا مقصد تسلسل سے جاری ہے اور ہماری آنے والی نسلیں ان اداروں کی ثمرات سے جلد سے جلد مستفید ہوں تعمیراتی منصوبے کے پراجیکٹ ڈائریکٹر انجینئر رحمت اللہ زہری اور ڈپٹی پراجیکٹ ڈائیریکٹر وسیم حیدر نے صوبائی وزرا ء کو بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ یونیورسٹی کا تعمیراتی کام تسلسل سے جاری ہے جس کے پہلے مرحلے میں ایڈمن بلاک ، لیکچرز روم لائبریری ،آڈیٹوریم ،و ٹیچنگ فیکلٹی اور رہائشی بنگلوز کی تعمیر شامل ہے جب کہ جدید طرز کی جامعہ مسجد بنک بھی منصوبے کا حصہ ہیں اس منصوبے پر دو ارب چراسی کروڑ روپے خرچ کرنے تخمینہ ہے اگر فنڈز بروقت فراہم ہوتے رہے تو یہ منصوبہ اپنے مقررہ وقت پر تکمیل کو پہنچ جائے گا انہوں نے بتایا کہ منصوبے کا بیالیس فیصد کام مکمل ہو چکا ہے اور باقی ماندہ کام تکمیل کے مراحل میں ہے جسے مقررہ وقت پر مکمل کرلینگے اور اس سال مارچ سے باقائدہ کلاسز کا آغاز کیا جائے گا بعد ازاں صوبائی وزرا نے منصوبے کا معائنہ کیا انہوں نے کام کی رفتار اور معیار پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس سال مارچ میں کلاسز کے آغاز کو یقینی بنایا جائے اس موقع پر کمشنر قلات ڈویژن بشیر احمد بنگلزئی ڈپٹی کمشنر میجر ریٹائرڈ محمد الیاس کبزئی ڈی آئی جی آغا محمد یوسف سمیت تمام ڈویژنل و ضلعی افسران موجود تھے۔
()()()
خبرنامہ نمبر84/2019 
خضدار9 جنوری ۔صوبائی کابینہ کی سب کمیٹی کے اراکین صوبائی وزرا ء میر ظہور احمد بلیدی ،میر اسد اللہ بلوچ اور میر ضیاء لانگو نے گزشتہ روز خضدار کا دور کیا اس موقع پر انہیں کمشنر قلات ڈویژن بشیر احمد بنگلزئی کی جانب سے خضدار میں تعلیمی اداروں سمیت ترقیاتی منصوبوں کے بارے میں بریفنگ دی گئی۔ بریفنگ کے دوران صوبائی وزرا ء نے ہدایت دی کہ لوگوں کو بنیادی سہولیات جن میں تعلیم اور صحت کو اولیت حاصل ہے کی فراہمی کے لیئے حکومت تیزی سے کام کررہی ہے اس ضمن میں متعلقہ محکموں کا یہ فرض بنتاہے کہ وہ ان ترقیاتی منصوبوں کو بروقت اور معیار کے مطابق مکمل کریں تاکہ لوگ ان منصبوں سے جلد ازجلد مستفید ہو سکیں اس سلسلے میں کوئی کوتاہی برداشت نہیں کی جائیگی انہوں نے کوئٹہ کراچی قومی شاہراہ پر بڑھتے ہوئے حادثات پر تشویش کا اظہارکیا اوراس کی روک تھام کے لیئے اقدامات پر زور دیا انہوں نے ہدایت دی کہ فوری طور پر قومی شاہراہ پرکیمرے نصب کیئے جائیں تاکہ ٹریفک اسپیڈ کو کنٹرول کیا جا سکے اور اس کے لیئے میکنز م تیار کرکے اس پر فوری عمل در آمد شروع کرکے حادثات کو روکا جاسکے انہوں نے بتایا کہ قومی شاہراہ پر خضدار یا کسی مناسب جگہ پر فوری طور پر ٹراما سینٹر قائم کیا جائے تاکہ دوران حادثات زخمیوں کو فوری طبی امدد دی جاسکے بریفنگ کے دوران صوبائی وزیر داخلہ میر ضیاء لانگو نے کہا کہ عوام کے تحفظ کے لیئے حکومت اپنی ذمہ داریاں پوری کر رہی ہے اور ہم امن و امان کو سب سے زیادہ اہمیت دے رہے ہیں انہوں نے کہا کہ منشیات و دیگر سماجی جرائم کے خاتمے کیلئے عوام کا تعاون درکار ہے ہم اپنی نوجوان نسل کو تباہ ہونے نہیں ہونے دینگے صوبائی وزیر نے بریفنگ کے دوران ڈویژن میں کام کرنے والے تعلیمی اداروں خصوصا جھالان میڈیکل کالج ،ایس بی کے وومن یونیورسٹی سب کیمپس ،انجینئرنگ یونیورسٹی خضدار میرین یونیورسٹی اوتھل ،بی آرسی خضدار ،گرلز و بوائز ڈگری کالجز خضدار سمیت دیگر تعلیمی اداروں کے حوالے سے کہا کہ ان اداروں کو معیاری بناکر نظم و ضبظ و معیاری و فنی تعلیم پر بھر پور توجہ دی جائے ہم ہر صورت ان اداروں کو کامیاب بنائینگے اور ان کی تمام ضروریات کوپورا کیا جائے گا اس موقع پر وزیر اعلی ٰکے مشیر رامین محمد حسنی ،سیکریٹری ہائر ایجو کیشن عبدالصبور کاکڑ ،ڈائریکٹر جنرل تعلقات عامہ محمد نعیم بازئی ،ڈپٹی کمشنر محمد الیاس کبزئی ڈی آئی جی محمد یوسف بھی موجود تھے بعد ازاں خضدار کی آل پارٹیز کے وفد نے صوبائی وزرا ء سے ملاقات کی اور شہریوں کو درپیش مسائل سے آگاہ کیا صوبائی وزراء نے ان کے مسائل کو حل کرنے کی یقین دہانی بھی کرائی وفد کی قیادت چیئرمین مولانا عنایت اللہ رودینی کر رہے تھے۔
()()()
خبرنامہ نمبر85/2019 
خضدار09جنوری ۔و زیر اعلی بلوچستان جام کمال خان کی خصوصی ہدایت پر صوبائی کابینہ کی سب کمیٹی کے اراکین صوبائی وزیر ہائر ایجوکیشن و اطلاعات میرظہور احمد بلیدی ،صوبائی وزیر سماجی بہبود میر اسد اللہ بلوچ اور صوبائی وزیر داخلہ میر ضیاء لانگو نے گزشتہ روز خضدار کا دورہ کیا۔ شہید سکند یونیورسٹی کی تعمیراتی کام کے معائنے کے دوران متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ علاقے کو ماحولیاتی تبدیلیوں سے بچانے کے لیئے پوری یونیورسٹی کے احاطے میں دس ہزار سے زائد پودے لگائے جائیں اور ان کی باقائدہ نگہداشت بھی کی جائے بعد ازاں انہوں نے کمشنر قلات کی جانب سے دی گئی بریفنگ میں بھی تمام ڈویژنل و ضلعی محکموں کے سربراہوں کوہدایت کی کہ وہ اپنے اپنے دفاتر کی حدود میں پودے لگائیں انہوں نے کہا کہ گرین پاکستان کی طرز پر گرین بلوچستان کے لیئے ہم سب کو سرکاری وغیر سرکاری سطح پر کام کرنا ہوگا ۔
()()()
پریس ریلیز
کوئٹہ 09جنوری:۔نیشنل بینک آف پاکستان کے چوہدری المجید گزشتہ روزبقضائے الٰہی سے انتقال کرگئے ۔وہ حاجی سعید مرحوم ،محمد طاہر کے بھائی میجر سلیمان علی،اویس چوہدری کے سسر تھے ۔انکی رسم قل آج 10جنوری بروز جمعرات کو انکی رہائش گا ہ مسجد سٹیلائٹ ٹاؤن بلاک نمبر 02میں بعدازنمازظہر اداکی جائے گی ۔تمام دوستوں سے شرکت کی درخواست ہے ۔
()()()

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Post comment