خبرنامہ نمبر871/2019
کوئٹہ 8مارچ: ۔وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے صوبائی سیکریٹری محکمہ سوشل ویلفیئر کو پنجاب چائلڈ پروٹیکشن بیورو کی طرز پر بلوچستان چائلڈ پروٹیکشن بیورو قائم کرنے کی فوری ہدایت کی ہے، اس حوالے سے محکمہ سوسل ویلفیئر کو بیورو کے قیام سے متعلق تمام ضروری اقدامات کو فوری طور پر مکمل کر کے دو ہفتے کے اندر سمری تیار کر کے منظوری کے لی وزیراعلیٰ بلوچستان کو پیش کرنے کی بھی ہدایت کی گئی ہے۔
()()()
خبرنامہ نمبر 872/2019
کوئٹہ 08مارچ:۔صوبائی سیکرٹری ثقافت و سیاحت ظفر علی بلیدی نے کہا ہے کہ کئی دہائیوں سے صوبہ سندھ میں بلوچستان سے منتقل ہونے والے قدیم قیمتی نوادرات واپس حاصل کر لئے گئے ہیں جنہیں رواں سال بلوچستان یونیورسٹی میں قائم ہونے والے میوزیم میں نمائش کے لئے رکھ دیا جائے گا جس سے نہ صرف ان قدیم نوادرات کی حفاظت ممکن ہوگی بلکہ عوام کو بھی ان کے بارے میں جاننے کا موقع ملے گا۔انہوں نے کہا کہ گزشتہ کئی دہائیوں سے بلوچستان کے مختلف آثار قدیمہ کے مقامات سے دریافت ہونے والے قدیم نوادرات کراچی کے نیشنل میوزیم کے ایکسپلوریشن برانچ میں موجود تھے جن کوزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال خان اور صوبائی مشیر کھیل و ثقافت عبدالخالق ہزارہ کی کاوشوں اور حکومت سندھ کے تعاون سے بحفاظت کوئٹہ منتقل کر دیا گیا ہے۔تقریبا 2سے 6 ہزار سال قبل کے نوادرات کی تعداد تقریبا 20 ہزار 675 ہے جن میں قدیم خوبصورت برتن پتھر کے اوزار مورتیاں شامل ہیں جو قیام پاکستان کے بعد مختلف ادوار میں صوبے کی قدیم ترین مقامات سے دریافت کیے گئے تھے سیکرٹری نے کہا کہ وادی بلوچستان اپنے دامن میں دنیا کا قدیم ترین تہذیبی ورثہ اور ثقافت سموئے ہوئے ہے بدقسمتی سے گذشتہ حکومتوں کی جانب سے ثقافتی ورثے اور قدیم نوادرات کو محفوظ رکھنے کے لئے عملی اقدامات نہیں کیے گئے اس کے برعکس محکمہ ثقافت سیاحت و آرکائیو کو موجودہ حکومت کی بھر پور سرپرستی اور تعاون حاصل ہے اور محکمہ صوبے کے تاریخی ورثے کو زندہ رکھنے اور عوام کو قدیم تہذیب و تمدن، تاریخ، رہن سہن، مقامی فن و ہنر اور نامور ہستیوں کے حوالے سے آگاہی کے لئے اقدامات کر رہی ہے۔سیکرٹری ثقافت و سیاحت نے قیمتی نوادرات کی واپس بلوچستان منتقلی کے لئے سندھ حکومت کے تعاون کا تہہ دل سے شکریہ اداکیا ۔
()()()
خبرنامہ نمبر873/2019 
دوبئی08مارچ:۔ صوبائی مشیر وزیراعلی برائے لائیوسٹاک مٹھا خان کاکڑ نے کہا ہے کہ سمندر پار پاکستانی بیرونی ممالک میں پاکستان کے سفیر ہیں انہوں نے کہا عالمی برادری میں ملک کا نام روشن کرنے میں آپ کا کردار نہایت اہمیت کا حامل ہے انہوں نے ان خیالات کا اظہار دوبئی میں سمندر پار پاکستانیوں کی ایک وفد سے ملاقات میں کیا۔ انہوں نے کہا کہ ملکی ترقی اور خوشحالی میں اورسیز پاکستانی بھائیوں کا بہت بڑا کردار ہے اور سالانہ بیس ارب ڈالر کے قریب قیمتی زرمبادلہ ہمارے پر ون ملک مقیم پاکستانی کما کر ملک میں بھیجتے ہیں جو ملک کی معاشی ترقی اورخو شحالی میں اہم کردار ادا کر رہا ہے۔صوبائی مشیر نے اور سیز پاکستانیوں سے کہا کہ وہ ملک میں سرمایہ کاری اور انڈسٹریلائزیشن میں بھی کردار ادا کر ے کیونکہ پاکستان سرمایہ کاری کے لئے ایک اہم ملک ہے صوبہ بلوچستان معدنیات سے بھری ہوئی ہے اور یہاں سرمایہ کاری کے لئے بہت سے مواقع موجود ہیں۔انہو ں نے بیرون سرمایہ کاروں کو یقین دلایا کہ موجود حکومت وفاقی اور صوبائی سطح پر مقامی اور بیرونی سرمایہ کاروں کے مسائل کو ترجیح بنیادوں پر حل کرنے کی ہر ممکن کوشش کر رہے ہیں۔
()()()
خبرنامہ نمبر874/2019 
کوہلو08مارچ :۔ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر حفظ اللہ نے کہا ہے کہ تعلیم کے بغیر ترقی ممکن نہیں ہے کسی بھی معاشرے میں تعلیم کے بغیر ترقی کا سفر طے نہیں کیا جاسکتا ہے صوبائی حکومت تعلیم کے لئے صوبے میں ہنگامی بنیادوں پر اقدامات کررہی ہے تمام والدین سے کہتے ہیں کہ وہ اپنے بچوں کو سرکاری سکولوں میں داخل کروائیں ان خیالات کا اظہارانہوں نے گزشتہ روز کوہلو میں سکول داخلہ مہم کے حوالے سے ڈسٹرکٹ آفیسر ایجوکیشن جعفرخان ،ڈپٹی ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر شمس مری کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہاہے اُن کا مزید کہنا تھا کہ بلوچستان سیکنڈری ایجوکیشن نے صوبے میں تعلیم عام کرنے کے لئے متعداد اقدامات کیے ہیں اس سلسلے میں بچوں کو سکولوں میں داخل کرنے کے لئے شعور آگاہی کی مہم پورے صوبے میں شروع ہوچکی ہے کوہلوڈسٹرکٹ میں بھی اسکا باقاعدہ آغاز کیا گیا ہے رواں سال 2019میں پورے ضلع کے 8000 بچوں کوسکولوں میں داخل کرنے کا ہدف ہے جسکے حصول کے لئے محکمہ تعلیم اور ضلعی انتظامیہ مکمل طورپر کوشاں ہیں۔
()()()
خبرنامہ نمبر875/2019 
کوئٹہ 7 مارچ:۔صوبائی وزیر پی ایچ ای اینڈ واسا حاجی نور محمد دمڑ نے کہاہے کہ صوبے میں زیارت ایک تاریخی پرفضااور سیاحتی مقام ہے ملک کے دوردارز علاقوں سے لوگ سیاحت اور تفریح کیلئے گرمیوں میں زیارت کارخ کرتے ہیں ز یارت کو ماڈل سٹی بنانے کیلئے ماسٹر پلان پر ترجیحی بنیادوں پرعمل درآمد کرایا جائے ان خیالات کا اظہار انہوں نے ایڈ یشنل چیف سیکریٹری سے زیارت کے حوالے سے میٹنگ کے دوران کیا صوبائی وزیر نے کہا کہ زیارت میں جونیپر کے جنگلات کے تحفظ کیلئے جامع منصوبہ بندی ہونی چاہئے تاکہ زیارت کی قدرت خوبصورتی برقرار رہ سکے ۔انہوں نے کہاکہ زیارت کی سٹرکوں کو پختہ کرنے کیلئے بھی فنڈ مختص ہونا چاہئے اور یہاں آنے والے سیاحوں کیلئے بڑے اور جدید طرز کے ہوٹل بھی تعمیرکرنے کی ضرورت ہے میٹنگ کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے ایڈیشنل چیف سیکریڑی سجاد احمد بھٹہ نے کہاہے کہ زیارت سٹی کو جدید طرز پر سیاحتی مقام بنانے ، جنگلات کے تحفظ ،نئے درخت اور پودے لگانے چاہئے جوکہ موسمی اثرات سے محفوظ ہو۔ ملک بھر اور خصوصاًصوبے کے مختلف علاقوں سے آئے ہوئے سیاحوں کیلئے فوڈ پوائنٹس اور ہوٹلوں کی تعمیر اشد ضروری ہے ایڈیشنل چیف سیکریڑی نے ضلع زیارت کے مختلف محکموں کے آفیسرو ں سے کہا کہ وہ جلد از جلد اپنی تجاویز ضلعی سطح پر ڈسٹرکٹ کمشنر کے پاس جمع کرائیں اور اس میٹنگ میں ڈی سی زیارت قادر بخش اور دیگر محکموں کے آفیسران نے بھی شرکت کی ۔
()()()
خبرنامہ نمبر876/2019 
کوئٹہ 08 مارچ :۔کمشنر کوئٹہ ڈویژن عثمان علی خان نے کہا کہ تعلیم کے بغیر کوئی بھی معاشرہ ترقی نہیں کر سکتا ہے لہذا تعلیم کے فروغ اور شرح خواندگی میں اضافے کے لئے تمام اکائیوں کو مل کر اپنا کردار ادا کرنا ہوگا اسکولوں میں غیر حاضر اساتذہ کی حاضری کو یقینی بنانا اور غیر فعال ا سکولوں کو فوری طور پر بحال کرنے کے لئے تمام تر اقدامات اٹھائے جائیں گے یہ بات انہوں نے ڈسٹرکٹ ایجوکیشن افسران سے اجلاس کے دوران کیا اجلاس میں کوئٹہ پشین اور قلعہ عبداللہ کے ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفسران اورمتعلقہ آفسران نے بھی شرکت کی کمشنر کوئٹہ ڈویژن نے کہا کہ اسکولوں میں تعلیمی حوالے سے جو مشکلات درپیش ہیں ان کو حل کرنے کے لئے ہرممکن اقدامات کی کوشش کریں گے اور تمام ایسے سکول جو غیر فعال ہے انہیں فعال کرنے کے لئے تمام موجودہ سہولیات کو بروئے کار لایا جائیگا اور اسکولوں میں غیر حاضر اساتذہ کے خلاف بھی سخت کاروائی عمل میں لائی جائے گی انہوں نے کہا کہ ہمارا ویژن ہے کہ تعلیم کے زیور سے ہر ایک کو آراستہ کیا جائے کیونکہ ملک و قوم میں ترقی بغیر علم کی نہیں آ سکتی ہیں لہذا تعلیمی نظام میں بہتری لانے کیلئے ہم سب کو مل کر ایک ٹیم کی صورت میں ایک مؤثر کردار ادا کرنا پڑے گا اور ہر فرد کوا پنے حصے کے کام کو ایمانداری ،دلجوئی اور نیک نیتی کے ساتھ کرنا ہوگا کمشنر کوئٹہ ڈویژن نے کہا کہ وہ ذاتی طور پر ایسے تمام تعلیمی اداروں کے دورے کر رہے ہیں جہاں سہولیات کا فقدان پایا جارہا ہے وہاں پر تعلیمی ماحول کی فراہمی اور سہولیات مہیا کرنے کو یقینی بنایا جائے گا۔اجلاس میں تعلیمی اداروں کی فعالیت اورسہولیات کے فراہمی کے سلسلے میں دی گئی تجاویز پر غور وغوص ہوا۔اور اس حوالے سے اہم فیصلے بھی کئے گئے۔
()()()
خبرنامہ نمبر877/2019 
کوئٹہ 08مارچ:۔محکمہ ترقی نسواں حکومت بلوچستان یواین ویمن کی باہمی اشراک سے عالمی یوم خواتین کے دن کے موقع پر دوسری سالانہ کا نفر نس برائے قیادت وخو د مختیار ی نسواں کے عنوان سے تقریب کاانعقاد کیاگیا ۔ تقریب میں سیکرٹری ترقی نسواں سائرہ عطاء عائشہ ودود ،خو رشید بروچہ سمیت بڑی تعداد میں پیشہ ور خواتین نے شرکت کی شرکاء نے خواتین کے عالمی دن کی مناسبت سے خیالات کا اظہار کیا ۔ تقریب سے سیکرٹری ترقی نسواں سائزہ عطاء نے کہا کہ ہمیں عورتوں کے بنیادی حقوق اور معاشرے میں برابری کیلئے جدوجہد کرنا ہو گی ۔محکمہ ترقی نسواں2009ء سے صوبے کی خواتین کی بہترین ضلاح وبہبو د کیلئے کو شاں ہے کوئی جد وجہد اس وقت تک پایہ تکمیل تک نہیں پہنچا سکتی جب تک خواتین ،مرد وں کے شانہ بشانہ کھڑی نہیں ہونگی ۔یواین وویمن ہیڈ عائشہ وددونے کہاکہ بنیادی حقوق کے حوالے سے سب سے اہم خواتین کے حقوق ہیں ۔لیکن اسکے برعکس ہمیں ایسا راستہ اپنا نا ہوگا جس میں عورت اور مرد کے شانہ بشانہ کھڑی ہو ۔ملک کے 52%آبادی خواتین پر مشتمل ہے ۔خواتین کی تمام شعبہ ہائے زندگی میں شرکت کو یقینی بنانا ہوگا ۔خواتین کے حقوق کے تحفظ اور انہیں ملکی ترقی میں اپنی کردار ادا کرنے کیلئے معاشرے کے تمام اکا ئیوں کو مثبت سوچ اپنا نا پوگا ۔خواتین کا معاشرے اور ملک کی ترقی میں اہم کردار رہا ہے ۔اُن کی صلا حتوں سے استفادہ حاصل کرنے کیلئے ہر ممکن اقدامات کیا جائیں گے ۔
()()()
پریس ریلیز 
کوئٹہ 08مارچ :۔گورنمنٹ بوائز کالج بروری روڈ کوئٹہ کے ایک پریس ریلیز کے مطابق تمام طلباء کو بذرایعہ نوٹس اطلاع دی جاتی ہے کہ فرسٹ ائیر اور سکنڈائیر کے پریکٹیکل امتحانات مورخہ 11مارچ 2019ء بر وزسوموار کو کالج میں ہونگے پر یکٹیکل شیڈول کالج کے نوٹس بورڈ پر چسپاں کردی گئی ہے لہذا تمام طلباء شیڈ ول کے مطابق اپنی حاضری کو یقینی بنائیں تاکہ ان کے پریکٹیکل شیڈول کے مطابق بروقت ہوسکیں جبکہ پر یکٹیکل شیڈول کے مطابق غیر حاضر طلباء کا پر یکٹیکل امتحان دوبارہ نہیں لیاجائیگا۔
()()()

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Post comment