HomeNews07-01-2020 Tuesday (File No.2)

07-01-2020 Tuesday (File No.2)

07-01-2020 Tuesday (File No.2)

خبرنامہ نمبر59/2020
کوئٹہ07جنوری:۔وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے کہا ہے کہ صوبے کے مختلف کھیلوں کے باصلاحیت کھلاڑیوں کو کوچنگ اور ٹریننگ کے لئے متحدہ عرب امارات، چین اور دیگر دوست ممالک بھجوایا جائے گا، اس حوالے سے ان کی جانب سے ان ممالک کے سفیروں کو خطوط ارسال کئے جائیں گے، اسپورٹس کیلنڈر کے مطابق مختلف کھیلوں کے مقابلوں کے انعقاد کے لئے فنڈز مختص کئے گئے ہیں، محکمہ کھیل بلوچستان اسپورٹس فیسٹیول اور ڈویژنل سطح پر اسپورٹس گالا کا انعقاد کر ے اور مقامی کھیلوں کے مقابلوں کا بھی انعقاد کیا جائے، ان خیالات کا اظہار انہوں نے بلوچستان میں کھیلوں کی ترقی وترویج سے متعلق جائزہ اجلاس کے دوران کیا جس میں سیکریٹری کھیل اور امور نوجوانان عمران گچکی نے وزیراعلیٰ کو بریفنگ دی، وزیراعلیٰ نے کہا کہ ضلعوں کی سطح پر سپورٹس کمپلیکس کی تعمیر کا مقصد بلوچستان کے کھلاڑیوں کو کھیلوں کی سہولیات فراہم کرکے ان کا ٹیلنٹ اجاگر کرنا ہے، انہوں نے کہا کہ بلوچستان میں باصلاحیت کھلاڑیوں کی کمی نہیں، صرف انہیں مناسب تربیت ، کوچنگ اور سہولیات فراہم کرنے کی ضرورت ہے، اس ضمن میں دوست ممالک کا تعاون حاصل کرکے تیراکی اور دیگر کھیلوں میں صوبے کے کھلاڑیوں کے لئے کوچنگ اور ٹریننگ کا اہتمام کیا جائے گا۔ وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ چیف منسٹر ٹیلنٹ ہنٹ پروگرام کا جلد آغاز کیا جائے اور اسکولوں کی سطح پر بھی کھیلوں کی کوچنگ کی سہولت فراہم کی جائے، انہوں نے کہا کہ پاکستان کی آبادی کا ساٹھ فیصد نوجوانوں پر مشتمل ہے لہٰذا ان کی صحیح سمت میں رہنمائی اور انہیں تعلیم اور تربیت کے ساتھ ساتھ کھیلوں کی سہولیات فراہم کرکے شاندار نتائج حاصل کئے جاسکتے ہیں، وزیراعلیٰ نے تھرو بال میں بلوچستان کی خواتین اور مردوں کی ٹیموں کی شاندار کارکردگی کو سراہتے ہوئے ہدایت کی کہ تھرو بال کو ڈویژنل اور خاص طور سے ساحلی علاقوں میں بھی متعارف کرایا جائے، وزیراعلیٰ نے کالج برائے فزیکل ایجوکیشن کے نصاب میں بہتری لانے اور ڈویژنل سطح پر بھی فزیکل ایجوکیشن کالجوں کے قیام کی ہدایت کی، وزیراعلیٰ نے سیکریٹری کھیل کو محکمہ کھیل کو وسعت دینے اور ڈویژن اور ضلع کی سطح پر مزید اسامیوں کے لئے ایس این ای تیار کرنے کی ہدایت بھی کی۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر60/2020
کوئٹہ07جنوری:۔وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے کہا ہے کہ ماضی کے غلط ترقیاتی فیصلوں پر عملدرآمد عملی طور پر ممکن نہیں، ایسے منصوبوںپر نظر ثانی کرتے ہوئے انہیں قابل عمل بنانے کی ضرورت ہے تاکہ ان کے ثمرات عوام تک پہنچ سکیں، ان خیالات کا اظہار انہوں نے صحت کے شعبہ کے مختلف اہم منصوبوں کے متعلق امور کا جائزہ لے کر انہیں حتمی شکل دینے کے لئے منعقدہ اجلاس کے دوران کیا، صوبائی وزیر خزانہ میر ظہور بلیدی، سیکریٹری صحت، سیکریٹری مواصلات، سیکریٹری خزانہ، سیکریٹری ہائر ایجوکیشن اور دیگر متعلقہ حکام بھی اجلاس میں شریک تھے، اجلاس کو خضدار میڈیکل کالج اور تربت میڈیکل کالج کی اراضی، لورالائی میڈیکل کالج اور کوئٹہ ڈینٹل کالج کی عمارتوں کے سمارٹ ڈیزائن اور ان اداروں کے تحت علاقوں کی آبادی کے لئے فراہم کی جانے والی سہولیات کا جائزہ لیا گیا، وزیراعلیٰ نے کہا کہ امور کو وسیع تناظر میںدیکھنے کی ضرورت ہے اور مستقبل کے تقاضوں کو مدنظر رکھتے ہوئے فیصلے لینے چاہئیں تاکہ خاطر خواہ اور دوررس نتائج برآمد ہوں، میڈیکل کالجز کے قیام میں تمام تکنیکی پہلو¶ں کو مدنظر رکھ کر اساتذہ اور دیگر سٹاف کی حاضری کو یقینی بناتے ہوئے داخلہ لینے والے طلباءوطالبات کی تعداد کو ہائر ایجوکیشن کے معیار کے مطابق یقینی بنانا چاہئے تاکہ حکومت کی جانب سے اس شعبہ میں ہونے والی سرمایہ کاری کے مثبت اثرات اور نتائج سے عوام مستفید ہوسکیں، وزیراعلیٰ نے کہا کہ صوبے میں موجود یونیورسٹیوں کو بہتر کرنے کی ضرورت ہے، جبکہ صوبے میں مزید میڈیکل کالجز کے قیام سے بلوچستان کے طلباءوطالبات کو طب کے شعبے میں اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوانے کا موقع مل سکے گا، وزیراعلیٰ نے میڈیکل کالجز کے بہترین معیار کو یقینی بنانے کی ہدایت کی۔اجلاس کو 1395.86ملین روپے کی لاگت سے تعمیر ہونے والے کوئٹہ ڈینٹل کالج کی مجوزہ عمارت کی پریذنٹیشن دی گئی، اجلاس میں خضدار میڈیکل کے جاری منصوبے کے حولے سے ایڈیشنل چیف سیکریٹری منصوبہ بندی وترقیات کی سربراہی میں کمیٹی بنانے، لورالائی میڈیکل کالج اور پانچ سو بیڈ ہسپتال کے منصوبوں کے لئے بھی کمیٹی تشکیل دینے کا فیصلہ کیا گیا جبکہ سیکریٹری صحت کو کوئٹہ ڈینٹل کالج کے ڈیزائن کا ازسرنو جائزہ لینے کی ہدایت کی گئی، وزیراعلیٰ نے کہا کہ ان منصوبوں کو مستقبل میں وسعت دیتے ہوئے نرسنگ اداروں اور دیگر ضروری طبی سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے گا۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر61/2020
کوئٹہ06جنوری:۔وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے ڈپٹی چیئرمین سینٹ سلیم مانڈوی والا کے صاحبزادے کے انتقال پر دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے، اپنے ایک تعزیتی بیان میں وزیراعلیٰ نے دعا کی ہے کہ اللہ تعالیٰ مرحوم کی مغفرت فرمائے اور سوگوار خاندان کو یہ صدمہ صبروہمت سے برداشت کرنے کا حوصلہ عطا کرے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿

خبرنامہ نمبر62/2020
کوئٹہ06جنوری:۔وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے میکانگی روڈ بم دھماکے کی مذمت کرتے ہوئے واقعہ کی رپورٹ طلب کرلی ہے، وزیراعلیٰ نے دہشت گردی کی بزدلانہ کاروائی میں قیمتی جانوں کے ضیاع پر دکھ اور افسوس کا اظہارکرتے ہوئے کہا ہے کہ بزدل دہشت گرد ایک مرتبہ پھر شہر اور صوبے کا امن خراب کرنا چاہتے ہیں تاہم دیرپا امن کے قیام کو ہرصورت یقینی بنایا جائے گا اورمعصوم اور بے گناہ شہریوں کو دہشت گردی کا نشانہ بنانے والے عناصر کو قانون کے کٹہرے میں لایا جائے گا۔ وزیراعلیٰ نے پولیس اور قانون نافذ کرنے والے دیگر اداروں کو ہدایت کی ہے کہ شہر میں سیکیورٹی کے اقدامات کو مزید موثر اور سخت بنایا جائے تاکہ دہشت گردوں کو دوبارہ سے سر اٹھانے کا موقع نہ مل سکے، وزیراعلیٰ نے زخمیوں کو علاج معالجہ کی بہترین سہولیات فراہم کرنے اور سیکریٹری صحت کو خود نگرانی کرنے کی ہدایت کی ہے، وزیراعلیٰ نے دھماکے میں جاں بحق ہونے والے افراد کے لواحقین سے تعزیت اور ہمدردی کا اظہارکرتے ہوئے جاں بحق افراد کی مغفرت اور زخمیوں کی جلد صحت یابی کی دعا کی ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر63/2020
کوئٹہ07جنوری :۔چیف سیکرٹری بلوچستان کیپٹن (ر) فضیل اصغر کی زیر صدارت وزیر اعلیٰ بلوچستان کی ترجیحی 77اسکیموں سمیت کوئٹہ ڈیو یلپمنٹ پیکج سے متعلق اجلاس منعقدہوا ۔اجلاس میں ترقیاتی منصوبوں پر کام کی رفتار کا بھی جائزہ لیا چیف سیکرٹری نے اجلاس کے شرکاءسے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ صوبائی حکومت عوام کو بنیادی ضرورت کی فراہمی پر یقین رکھتی ہے جس کیلئے تمام ترممکنہ اقدامات اُ ٹھا ئے جارہے ہیں ۔انہوں نے تمام متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ متعلقہ حکام ترقیاتی منصوبوں کی بروقت تکمیل اور منصوبوں کے معیا ر پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیاجائیگا۔اور عوام کی فلاح و بہبودکے منصوبوںمیں تافر برداشت نہیں کی جائیگی ۔اجلاس کو متعلقہ حکام نے بریفنگ دیتے ہوئے کہاکہ صوبے میں پانی ذخیرہ کرنے کیلئے چیک ڈیمز ،تما م اضلاع میں اسپورٹس کمپلیکس کی تعمیر ،ساحلی علاقوں میں ایکو ٹورزم کے فروغ کے منصوبوں کے ساتھ ساتھ بلوچستان گرین بوٹ اسکیم ،سیاحتی مقامات کے فروغ سمیت مختلف منصوبوں کے بارے میں بھی آگاہ کیاگیا ۔چیف سیکرٹری نے تمام سیکرٹریز کے مقر رہ وقت تک کارکردگی رپورٹ پیش کرنے کی بھی ہدایت کی علاو ہ ازیں چیف سیکرٹری بلوچستان نے کہاکہ صوبائی حکومت کوئٹہ شہر کی خوبصورتی اور ترقی پر خصوصی توجہ دے رہی ہے اور کوئٹہ شہر میں سڑکوں کی تعمیر و سپورٹس کمپلیکس گرین بیلٹ ،صفائی کے بہترنظام سمیت مختلف ترقیاتی منصوبوں پر کام کررہے ہیں ۔انہوں نے کمشنر کوئٹہ کو ہدایت کی کہ تمام ترقیاتی منصوبوں کی بر وقت تکمیل کو یقینی بنائیں جس سے عوام کی معیار زندگی بلند ہو سکے ۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر64/2020
کوئٹہ 07جنوری :۔چیف سیکرٹری بلوچستان کیپٹن (ر) فضیل اصغر نے کہا کہ صوبائی حکومت عوام کیلئے سستا گندم اور آٹا کی خریداری یقینی بنا رہی ہے جس کیلئے ٹھوس اقدامات اُٹھائے جائیں گے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گندم اور آٹے کی خریداری سے متعلق اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا اجلاس میںسیکرٹری انڈسٹری ،سیکرٹری خوراک ،کمشنر کوئٹہ او ر فلور ملز ایسو سی ایشن کے نمائند ے بھی موجودتھے ۔چیف سیکر ٹری نے کہاکہ صوبائی حکومت ، فلور ملز ایسو سی ایشن کے ساتھ مفا ہتمی یا داشت پر دستخط کرئے گی جس کے مطابق فلور ملز ایسو سی ایشن PASCOسے براہ راست گندم خرید کر بیچیں گے انہوں نے کہاکہ 20کلو تعیلے کی قیمت 900جبکہ 100کلو تھیلے کی قیمت 4500ہوگی تاکہ عوام کو ان کی دہلیزپر ریلیف مل سکے انہوں کہا کہ گندم اور آٹے کی ترسیل تقسیم محکمہ خوراک کے ملازمین اور ضلع انتظامیہ کی زیر نگرانی میں ہوگی۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر65/2020
کوئٹہ 07جنوری :۔صوبائی وزیر آبپاشی نوابزادہ طارق مگسی سے ڈپٹی اسپیکر بلوچستان صوبائی اسمبلی سردار بابر خان مو سیٰ خیل ،صوبائی وزیر ریو نیو میر سلیم احمد کھوسہ ،مشیر تعلیم حاجی محمد خان لہڑی اور پارلیمانی سیکرٹری بی ڈی اے میر سکندار اعمرانی نے یہاں اُن کے دفتر میں ملاقات کی ۔ملاقات کے دوران صوبائی وزراءنے صوبے میں جاری ترقیاتی منصوبوں سمیت دیگر امور سے متعلق تبادلہ خیال کیا۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿

خبرنامہ نمبر66/2020
کوہلو07جنوری:۔ ڈپٹی کمشنر عبداللہ خان کھوسہ کے مطابق 9جنوری بروز جمعرات کو ضلع کوہلو کے تحصیل کاہان میں فری میڈیکل کیمپ کا انعقاد کیا جارہا ہے جس میں یرقان ، امراض چشم ، قلب ،کان ،گلہ ، سینہ،ملیریا،ٹی بی سمیت مختلف امراض کا اعلاج ماہر اسپیشلسٹ کریں گے اور مفت ادویات فراہم کئے جائیں گے لوگوں کو فری میڈیکل کیمپ کی اطلاع دی جاتی ہے ۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر67/2020
کوئٹہ 07جنوری :۔صوبائی مشیر تعلیم حاجی محمد خان لہڑی نے کہا ہے کہ رواں سال سکولوں سے باہر بچوں کی کثیر تعداد کو سکولوں تک لایا جائے گا۔ محکمہ تعلیم درست سمت میں گامزن ہے۔ سرکاری سکولوں کی کارکردگی میں بتدریج بہتری آرہی ہے۔ حکومت کی ٹھوس اور بہتر حکمت عملی کے باعث نظام میں عوام کا اعتماد بحال ہورہا ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے یہاں کوئٹہ میں آنے والے مختلف وفود سے ملاقات کے دوران کیا۔ صوبائی مشیر نے کہا کہ دہائیوں پر محیط ناانصافیوں کا ازالہ اتنی جلدی ممکن نہیں۔ موجودہ حکومت طویل معاشی ناہمواریوں کے سدباب کے لیے مثبت انداز میں کام کررہی ہے۔ گزشتہ ادوار میں تعلیم سمیت دیگر شعبوں کو یکسر نظر انداز کیا گیا۔ جس سے برائے راست صوبے کے مستقبل پر منفی اثرات پڑے۔ مشیر تعلیم نے کہا کہ موجودہ حکومت طویل المدتی منصوبوں کے اجراءپر عمل پیرا ہے۔ تعلیم سمیت دیگر شعبوں میں اصلاحات کے دورس نتائج برآمد ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ تعلیم کو جدید خطوط پر استوار کیا جارہاہے۔ گزشتہ ادوار میں مو¿ثر قانون سازی نہ ہونے کی وجہ سے محکمے کو بہت نقصان پہنچا موجودہ حکومت نے قلیل مدت میں شعبہ تعلیم میں مو¿ثر قانون سازی عمل میں لاتے ہوئے محکمے سے وابستہ لوگوں کےلیے آسانیاں پیدا کی ہیں۔ سروسز رولز کے علاوہ دیگر قوانین کا فائدہ برائے راست محکمے کے ملازمین کو ہوگا۔ اسکے علاوہ نظام تعلیم میں بہتری کے ساتھ ساتھ احتساب کے عمل میں بھی آسانیاں ہوں گی۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
خبرنامہ نمبر68/2020
گوادر 07جنور ی:۔ گوادر پورٹ پر ایل پی جی گیس کمپنی کا افتتاح کردیا گیا افتتاحی تقریب میں چین کا کونسل جنرل سمیت پاکستانی اور چینی اعلی حکام نے شرکت کی اس موقع پر پاکستان اور چینی حکام نے کہا کہ عالمی بندرگاہ صحار سے آبی جہاز چار ہزار ایل پی جی گیس لے کر بندرگاہ پر لنگر انداز ہوگیاہے اس موقع پرچیئر مین گوادر پورٹ نے کہا کہ ایل پی جی گیس ٹرمینل کمپنی کے زریع ملک کے دیگر شہروں میں گیس سپلائی کی جائے گی.جبکہ چینی کونسل جنرل نے بتایا کہ ایل پی جی گیس ٹرمینل منصوبے کے قیام سے ہزاروں لوگ برسر روزگار ہونگے ۔ گوادر بندرگاہ ا ور سی پیک منصوبے کی تکمیل سے نئے دور کا آغاز ہوگا اور یہاں کے مقامی لوگوں کو روزگار کے بہترین موقع فراہم ہونگے چین پاکستان کو ایک مضبوط معاشی ملک دیکھنا چاہتا ہے۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿
پریس ریلیز
ٹھیکیدار حاجی عبدالقیوم کاکڑ کی اہلیہ، ٹھیکیدار گل جان کاکڑ ،امیرجان کاکڑ ، نصیب اللہ کاکڑ اور موسم خان کاکڑ کی والدہ، ٹھیکیدارحاجی محمد دین کاکڑ کی بھاوج۔ حاجی محمدحسین کاکڑ اور سید نور کاکڑ کی ہمشیرہ، ٹھیکیدار پائندخان کاکڑ کی ساس، ٹھیکیدارحاجی علی احمد جان کاکڑ اور ٹھیکیدار کرامت اللہ کاکڑ کی ، ڈپٹی ریسرچ آفیسر ہدایت اللہ کاکڑ کی ،ٹھیکیدار عبدالحمید کاکڑ کی ممانی گزشتہ ر وزضائے الہٰی سے انتقال کر گئیں انکی تدفین زیارت شہر کی قبرستان نو گزا بابا میں ہوگی جبکہ فاتحہ خوانی سفر مسجد پہلا اسٹاف نواں کلی نزد سحر بیکری میں لی جائے گی۔
﴾﴿﴾﴿﴾﴿

Share With:
Rate This Article
No Comments

Leave A Comment