خبر نامہ نمبر 340/2019
کوئٹہ یکم فروری۔ محکمہ ملازمتہائے عمومی نظم و نسق حکومت بلوچستان کے ایک اعلامیہ کے مطابق محمد صدیق مندوخیل ( بی سی ایس / بی ایس ۔ 20) سیکریٹری وومن ڈیو یلپمنٹ ڈیپارمنٹ کا تبادلہ کرکے ممبر وزیر اعلیٰ مانیٹرنگ ٹیم، سائرہ عطاء ( بی سی ایس / بی ایس ۔20) ڈائریکٹر جنرل انڈسٹریز و کامرس بلوچستان کا تبادلہ کرکے سیکریٹری وومن ڈیویلپمنٹ ڈیپارٹمنٹ ، بالا چ عزیز( بی سی ایس /بی ایس ۔ 20)کو ڈائریکٹر جنرل کوئٹہ ڈیو یلپمنٹ اتھارٹی، طارق قمر بلوچ ( بی سی ایس /بی ایس ۔ 19) ڈائریکٹر جنرل کوئٹہ ڈیو یلپمنٹ اتھارٹی کا تبادلہ کرکے ڈائریکٹر جنرل سائنس و آئی ٹی ڈیپارٹمنٹ اور داؤد بازئی ( بی ایس ایس / بی ایس ۔ 19) ڈائریکٹر جنرل سائنس و آئی ٹی ڈیپارٹمنٹ کا تبادلہ کرکے انہیں ڈائریکٹر جنرل انڈسٹریز اینڈ کامرس بلوچستان تعینات کردیا گیا ہے ۔ 
()()()
خبر نامہ نمبر 341/2019 
کوئٹہ یکم فروری:۔کچھی کینال منصوبہ ملکی ترقی اور معیشت میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتا ہے بلوچستان کے عوام کی اکثریت زرعی شعبے سے وابستہ ہوکر اپنے معاشی مسائل حل کرسکتے ہیں ان خیالات کا اظہار صوبائی وزیر زراعت و امداد باہمی امور انجینئر زمرک خان اچکزئی نے کچھی کینال پروجیکٹ ڈیرہ بگٹی میں بلوچستان کے پہلے لیموں اور امرود کے باغ کا افتتاح کرتے ہوئے کیا۔ان کا مزید کہنا تھا کہ ایسے پھلوں اور فصلوں کی افزائش کی جائے گی جو کم پانی میں بہتر نشونما کی صلاحیت رکھتے ہو انہوں نے مزید کہا کہ کچھی کینال پروجیکٹ اس سلسلے میں نہایت اہمیت کا حامل ہے جس کے ذریعے ہم اپنے آبی مسائل حل کرسکتے ہیں اور صوبے کے زراعت کو مزید ترقی دے سکتے ہیں اسطرح صوبہ زرعی خودکفالت کی منزل حاصل کر سکے اور صوبے کی زراعت دن دوگنی رات چوگنی ترقی کر سکے لیموں بیر اور امرود کی کاشت ان علاقوں میں کی جائے گی جو آب و ہوا سے مطابقت رکھتے ہوں اور بلوچستان کے چار ماحولیاتی زون میں قابل افزائش فصلوں اور پھلوں کی افزائش پر زور دیا جائے گا وہ علاقے جہاں پانی کم ہے وہاں ڈرپ ایریگیشن ٹنل فارمنگ ایریگیشن کو فروغ دیا جائے گا اور اس کے ساتھ ساتھ کچھی کینال منصوبے سے بھرپور استفادہ کیا جائے گا تاکہ بلوچستان کی پسماندگی کو خوشحالی اور ترقی میں تبدیل کیا جائے اس موقع پر سیکرٹری زراعت خلیق نظر کیانی سیکٹر کمانڈر بریگیڈیئرذوالفقار باجوہ ڈی جی واٹر مینجمنٹ علی رضا جمالی ڈی سی ڈیرہ بگٹی یاسر بازئی بھی موجود تھے اس موقع پر موجود صوبائی سیکرٹری زراعت خلیق نظر کیا نی نے صوبائی وزیر زراعت اور موجودہ حکومت کی خدمات کو سراہا اور ان خیالات کا اظہار کیا کہ موجودہ وزیر زراعت زرعی شعبے میں خاطر خواہ ترقی اور مقررہ زرعی اہداف کے حصول میں سنجیدہ ہیں اس موقع پر موجود ڈی جی واٹر مینجمنٹ علی رضا جمالی نے زرعی شعبے میں پانی کی اہمیت پر خصوصی زور دیا اور کہا کہ جو فصلیں کم پانی میں بھی بہتر نشوونما کی صلاحیت رکھتی ہیں ان کی افزائش پر ترغیب دینے کی فوری ضرورت ہے صوبے کے پہلے لیموں بیر اور امرود کا یہ باغ اس بات کی نشاندہی کرتا ہے کہ یہاں مختلف ماحولیاتی زون سے بھرپور استفادہ حاصل کرنے کی ضرورت ہے۔
()()()

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Post comment